تازہ ترین

ملک بھر میں کورونا متاثرین کی تعداد50لاکھ کے قریب

۔24گھنٹوں میں 92ہزار نئے کیس ِاب تک 80ہزار اموات ریکارڈ

تاریخ    15 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


 نئی دہلی //ملک میں کورونا وبا کے بڑھتے ہوئے قہر کے درمیان گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 92 ہزار سے زائد نئے کیسز سامنے آنے بعد متاثرین کی تعداد 48.46 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے لیکن 77 ہزار سے زائد افراد اس وبا سے صحت یاب بھی ہو ئے ہیں ۔مرکزی وزارت برائے صحت و خاندانی بہبود کی جانب سے پیر کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 92،071 نئے کیسزسامنے آنے سے متاثرین کی تعداد 48،46،427 تک پہنچ گئی جبکہ کورونا انفیکشن سے صحت یاب ہونے والوں کی کی تعداد 77،511 بڑھ کر 37،80،107 ہوگئی۔ اسی دوران 1136 مریضوں کی موت ہو گئی ۔ اب تک ملک میں 79،722 کورونا سے متاثرہ مریضوں کی موت ہو گئی ہے ۔صحت یاب ہونے والوں کے مقابلے میں کورونا کے نئے کیسززائد ہونے سے ایکٹوکیسز کی تعداد 13،423 بڑھ کر 9،86،598 ہوگئی ہے ۔ ملک کی محض 12 ریاستوں اور مرکزی کے زیر انتظام علاقوں میں ہی ایکٹو کیسز کم ہوئے ہیں ، جس میں سب سے زیادہ چھتیس گڑھ میں 1741 اور اس کے بعد تلنگانہ میں 1075 کم ہوئے ہیں۔ملک میں ایکٹو کیسز کی تعداد 20.36 فیصد ہے اور صحت یابی کی شرح 78.00 فیصد ہے جبکہ شرح اموات 1.64 فیصد ہے ۔کورونا وائرس سے سب سے زائد متاثرمہاراشٹر میں ایکٹو کیسز کی تعداد میں زبردست اضافہ ہوا ہے اوریہاں ایکٹو کیسز 10،578 بڑھ 2،90،716 ہو گئے ہیں اور 416 افراد کی موت ہونے سے مرنے والوں کی تعداد 29،531 ہو گئی ہے ۔ اسی دوران 11،549 افراد کے اس وبا سے صحت یاب ہونے سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 7،40،061 ہوگئی ۔ ملک میں سب سے زائد ایکٹو کیسز اسی ریاست میں ہیں۔آندھرا پردیش میں 661 مریضوں کے کم ہونے سے ایکٹو کیسز 95،072 رہ گئے ہیں ۔ ریاست میں اب تک 4912 افراد کی موت ہوئی ہے ۔ وہیں مجموعی طور پر 4،67،139 افراد صحت یاب ہوئے ہیں۔جنوبی ریاست کرناٹک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مریضوں کی تعداد میں 1388 کا اضافہ ہوا ہے اور ریاست میں اب 99،222 ایکٹز کیسز ہیں۔ ریاست میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 7265 تک پہنچ چکی ہے اور اب تک 3،52،958 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔آبادی کے لحاظ سے ملک کی سب سے بڑی ریاست اتر پردیش میں بھی اسی دوران 167 مریضوں کا اضافہ ہوا ، جس سے ایکٹو کیسز 68،122 ہو گئے اور اس وبا سے 4429 افراد کی موت ہوئی ہے جبکہ 2،39،485 مریض صحت یاب ہوئے ہیں ۔تمل ناڈو میں ایکٹو کیسز کی تعداد 47012 ہوگئی ہے اور 8381 افراد کی موت ہوئی ہے ۔ وہیں ریاست میں 4،47،366 افراداس وبا سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔تلنگانہ میں کورونا کے ایکٹو کیسز 30،532 ہو گئے ہیں اور 974 افراد کی موت ہوچکی ہے جبکہ 1،27،007 افراد اس وبا سے صحت یاب ہوئے ہیں۔اڈیشہ میں ایکٹو کیسز کی تعداد 31،539 ہوگئی ہے اور 626 افراد کی موت ہو گئی ہے جبکہ اس وبا سے 1،18،642 افراد صحت یاب بھی ہوئے ۔کیرالہ میں ایکٹو کیسز کی تعداد 30،140 ہوگئی ہے اور 439 افراد کی موت ہوئی ہے جبکہ صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 77،699 ہوگئی ہے ۔دارالحکومت دہلی میں ایکٹو کیسز میں 753 کا اضافے ہونے سے یہ تعداد بڑھ کر 28،812 ہوگئی ہے ۔ وہیں اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 4744 ہوگئی ہے اور اب تک 1،84،748 مریض اس وبا سے صحت یاب بھی ہوئے ہیں ۔مغربی بنگال میں کورونا وائرس کے 23،624 ایکٹوکیسزہیں اور 3945 افراد کی موت ہو گئی ہے جبکہ اب تک 1،75،149 افراد صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔اس کے بعد پنجاب میں ایکٹو کیسز کی تعداد 19،787 ہوگئی ہے اور اس وبا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 57،536 ہوگئی ہے جبکہ اب تک 2356 افراد کی موت ہو گئی ہے ۔گجرات میں 16،407 ایکٹو کیسز ہیں اور 3210 افراد کی موت ہو گئی ہے اور 93،883 افراد بھی اس وبا سے صحت یاب ہوئے ہیں۔بہار میں 14،113 ایکٹو کیسز ہیں اور ریاست میں 822 افراد کی موت ہو گئی ہے جبکہ 1،43،350 افراد اس وبا سے صحت یاب بھی ہوئے ہیں ۔ کورونا سے ابھی تک مدھیہ پردیش میں 1762 ، راجستھان میں 1236 ، ہریانہ میں 975 ، جموں و کشمیر میں 878 ، جھارکھنڈ میں 555 ، چھتیس گڑھ میں 555 ، اتراکھنڈ میں 414 ، پڈوچیری میں 385 ، گوا میں 290 ، تریپورہ میں 200 ، چندی گڑھ میں 93 ، ہماچل پردیش میں 77 ، انڈو مان اور نکوبار جزیروں میں 51 ، منی پور میں 46 ، لداخ میں 40 ، میگھالیہ میں 26 ، سکم میں 14 ، ناگالینڈ اور ٍاروناچل پردیش میں 10 -10 اور دادرا نگر حویلی اور دمن دیو میں دو افراد کی موت ہوگئی ہے ۔
 

وائرس دوسرے ممالک کے مقابلے میں کم: ہرش وردھن

نئی دہلی//مرکزی وزیر صحت ڈاکٹر ہرش وردھن نے پیر کو لوک سبھا میں کہا کہ ہندوستان میں کورونا کے انفیکشن کی شرح دوسرے ممالک کے مقابلے میں کم ہے اور حکومت اس وبا کا مقابلہ اسٹریٹجک طریقے سے کرنے میں کامیاب رہی ہے ۔ڈاکٹر ہرش وردھن نے کہا کہ ان کی حکومت کووڈ- 19 کے ملک میں نئے معاملات اور اس وبا کی وجہ سے وہنے والی ہلاکتوں پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئی ہے ۔ 18 روزہ مان سون اجلاس کے پہلے روز وزیر صحت نے کورونا انفیکشن اور اس سے لڑنے کے لئے حکومت کی حکمت عملی کے معاملات میں ملک کی صورتحال کے بارے میں ایوان کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اس وبا اور اس کے پھیلاؤ سے ہماری ہلاکتوں کی تعداد کم ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی سربراہی میں اٹھائے گئے اقدامات موثر ثابت ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملک میں 13 ریاستوں میں سب سے زیادہ کورونا کے معاملے ہیں لیکن دنیا کے دیگر ممالک کی نسبت یہاں صورتحال بہت بہتر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کی وجہ سے زیادہ تر معاملات اور اموات مہاراشٹرا ، آندھرا پردیش ، تمل ناڈو ، کرناٹک ، اترپردیش ، دہلی ، آسام ، کیرالہ ، مغربی بنگال ، بہار ، تلنگانہ ، اڈیشہ اور گجرات کے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی کاوشوں کی وجہ سے کورونا پر روک لگی ہے ۔مرکزی وزیر نے کہا کہ ہندوستان کورونا انفیکشن کے معاملات میں دنیا میں دوسرے نمبر پر ہے اور اس کی وجہ سے ہونے والی اموات میں تیسرے نمبر پر ہے ، جبکہ ہمارے پاس کورونا کے سب سے زیادہ فعال معاملات ہیں اور دنیا میں اموات کی تعداد میں تیسرے نمبر پر ہے ۔ انہوں نے ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا معاملات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ 24 گھنٹوں میں 94،372 نئے معاملات رپورٹ ہوئے ہیں اور ایک ہزار سے زیادہ افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ کورونا کی وبا سے متاثرہ افراد کی کل تعداد 48 لاکھ کو عبور کرچکی ہے جبکہ اب تک اس وائرس کی وجہ سے 79،000 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ ملک میں کورونا کے 37.7 لاکھ مریض ٹھیک ہوگئے ہیں اور یہاں صحت یابی کی شرح 77.77 فیصد کے قریب ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی تعداد 48 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 92 ہزار 71 افراد کورونا مثبت پائے ۔ اس کے ساتھ ہی اب کورونا متاثرین کی تعداد 48 لاکھ 46 ہزار 428 ہوگئی۔
 
 

پارلیمنٹ اجلاس سے قبل 

۔18 ممبران پارلیمنٹ میں کورونا کی تصدیق

نئی دہلی//پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے آغاز سے قبل لوک سبھا ممبران کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا جس میں کل 18 ممبران پارلیمنٹ کے کورونا پازیٹیو ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔کورونا پازیٹیو ممبران پارلیمنٹ میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے 13،وائی آر ایس کے دو،شیوسینا کے ایک،دروڑ مونیتر کزگم کے ایک اور نیشنل ڈیموکریٹک پارٹی کے ایک ایم پی شامل ہیں۔لوک سبھا ممبران کا کورونا ٹیسٹ 13 اور 14 ستمبر کو پارلیمنٹ ہاوس میں کیا گیا جس میں سے 16 کے 13 ستمبر کو کورونا پازیٹیو ہونے اور بی جے پی رکن پارلیمنٹ روڈمل ناگر کے 14 ستمبر کو کورونا مثبت ہونے کی تصدیق ہوئی۔بی جے پی کی میناکشی لیکھی،پرویش صاحب سنگھ،روڈمل ناگر،ستیہ پال سنگھ،ڈاکٹر رام شنکر کٹھیریا ،پرتاپ راو پاٹل،پردھان برووا،ودیت بارن مہتو،جناردن سنگھ سگریوال،جامیانگ شیرنگ نامگیال،سوکانت مجومدار،سکھبیر سنگھ جونپوریا اور اننت کمار ہیگڑے،شیوسینا کے پرتاپ راو جادو،وائی ایس ا?ر کانگریس کے ایل ریڈیپپا ریڈی اور جی مادھوی،ڈی ایم کے،کے جی سیلوم اور آرایل پی کے ہنومان بینیوال شامل ہیں۔مسٹر ورما اور مسٹر نارائن نے ٹویٹ کرکے یہ اطلاع دی۔مسٹر بینیوال نے بتایا کہ انہوں نے دوبار جانچ کرائی ہے۔ایک پازیٹیو اور ایک منفی آئی ہے۔یواین آئی