لداخ میں 3روز سے صورتحال میں ٹھہرائو

فیلڈ کمانڈربات چیت،ارونا چل کے 5شہری چھوڑ دیئے گئے

تاریخ    13 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
بیجنگ+نئی دہلی// مشرقی لداخ میں پیگانگ جھیل اور دپسنگ کے علاوہ فنگر ائریا میں پچھلے 3روز سے جوں کی توں پوزیشن برقرار ہے اور طرفین کی جانب سے کوئی ٹکرائو کی صورتحال پیدا نہیں کی گئی ہے۔اس دوران چین نے ارونا چل پردیش کے اغوا کئے گئے 5شہریوں کو بھارت کے حوالے کردیا ہے۔فوجی ذرائع کا کہنا ہے کہ ماسکو میں دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کے درمیان اڈھائی گھنٹے تک میٹنگ میں 5نکات پر اتفاق کرنے کے بعد لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن پر  چین اور بھارت کے فوجیوں کے درمیان صورتحال نے کوئی نئی کروٹ نہیں لی۔ حکام کا کہنا ہے کہ تین دن سے لداخ میں پیگانگ جھیل، فنگر ائریا اور دپسنگ علاقے میں چین کی جانب سے کوئی غیر معمولی نقل و حرکت نہیں دیکھی گئی اور صورتحال پر امن ہے۔جمعہ کو دونوں ملکوں کے فیلڈ کمانڈروں کی میٹنگ بھی منعقد ہوئی جس میں 5نکات پر ہوئے اتفاق پر تبادلہ خیال کیا گیا اور ان اقدامات پر عملدر آمد کرنے کے بارے میں بات چیت ہوئی جس سے لداخ میں ٹکرائو کی صورتحال کو ٹالا جائے۔ حکام نے کہا ہے کہ دونوں ملکوں کی فوجیں آمنے سامنے ہیں لیکن صورتحال میں کوئی کشیدگی نظر نہیں آرہی ہے۔ادھر فوجی حکام نے مزید بتایا کہ 2ستمبر کو اروناچل پردیش میں چینی فوج کی جانب سے اغوا کئے گئے 5نوجوانوں کو چھوڑ دیا گیا اور انہیں اسی علاقے مین بھارتی فوج کے حوالے کیا گیا۔
 

تازہ ترین