محکمہ جل شکتی ملازمین کا سرینگر میں احتجاجی مظاہرہ

ملازمین کو ہراساں کرنے والے افسران کے خلاف کارروائی کی مانگ

تاریخ    13 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// محکمہ جل شکتی میںکے عارضی و مستقل ملازمین نے سرینگر میں احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ واٹر ورکس ڈویژن آلسٹینگ میں ملازمین کو اعلیٰ افسران ہراساں کر رہے ہیں۔ محکمہ کے لالچوک دفتر میںملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے نعرہ بازی کی۔ مظاہرین نے بینئر اور پلے کارڑ بھی اٹھا رکھے تھے۔ کشمیر پی ایچ ای جوائنٹ ایمپلائز ایسوسی ایشن کے صدر سجاد احمد پرے نے اس موقعہ پر الزام عائد کیا کہ فلٹریشن پلانٹ آلسٹینگ میں ملازمین کو نت نئے حربوں سے ستایا جا رہا ہے،جس کو ملازمین برداشت نہیں کرینگے۔ انہوں نے کہا ’’ ایک افسر کو انتظامی منظوری کے بغیر وہاں پر صرف2ماہ کیلئے تعینات کیا گیا،تاہم  انہوں نے اثر رسوخ کا استعمال کرکے وہیں پر پیر جما دئیے،اور اب وہ وہاں پر ملازمین کو عتاب کا نشانہ بنا رہے ہیں‘‘۔سجاد احمد پرے نے کہا کہ اس سلسلے میں محکمہ کے افسران اور ملازمین ایسو سی ایشن کے درمیان ایک فیصلہ بھی ہوا تھا،تاہم مذکرہ افسر نے اس کو تسلیم کرنے سے انکار کیا۔سجاد احمد پرے نے کہا کہ اس کے بعد وہ وہ اس معاملے پر احتجاج کرنے کیلئے مجبور ہوگئے۔انہوں نے محکمہ کے چیف انجینئر اور کمشنر سیکرٹری سے مطالبہ کیا کہ مذکورہ افسر کے خلاف کارروائی کریں۔انہوں نے دھمکی دی کہ اگر افسر کے خلاف کاروائی نہیں کی گئی تو ملازمین نہ صرف احتجاج میں شدت لائیں گے بلکہ کام چھوڑ ہڑتال پر بھی جائیں گے۔

تازہ ترین