تازہ ترین

چناب برد گاڑی کا کوئی پتہ نہیں چلا ،تلاش جاری | 4 پولیس اہلکاروں اور ماں بیٹے سمیت 8 افراد کی شناخت ہوگئی

تاریخ    2 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


محمد تسکین
بانہال//سرینگر جموں شاہراہ پرسوموار کورام بن کے قریب حادثے کاشکار ہوکر چناب برد ہوئی گاڑی کے مسافروں کامنگل کو بھی کوئی پتہ نہیں چل پایا۔ اس دوران گاڑی میں سوار افراد کی شناخت ہوگئی ہے۔اطلاعات کے مطابق رام بن کے مہاڑ مقام پر پیش آئے حادثے کے بعد شروع کیاگیا بچائو آپریشن منگل شام تک بغیر کسی کامیابی کے جاری رہا۔اس حادثے میں معجزاتی طور بچ نکلے واحد مسافر نے پیر کے روزپولیس کو بتایا کہ گاڑی میں آٹھ یانو افرادسوار تھے جبکہ دوخواتین جائے حادثہ سے دوکلومیٹر پہلے ہی کرول مقام پر گاڑی سے نیچے اُتری ۔عینی شاہدین کے مطابق حادثے کے فوراًبعد دریا برد ہوئی گاڑی میں سوار ایک مسافر چناب کے بہتے پانی میں ہاتھ پائوںماررہاتھالیکن پانی کے تیز بہائو کی وجہ سے وہ کنارے تک نہیں پہنچ پایااور کچھ دور بہہ جانے کے بعد پانی میں سمو گیا۔ادھر ایس ایس پی رام بن حسیب الرحمن نے کشمیرعظمیٰ کو بتایا کہ یہ حادثہ ڈرائیور کی لاپرواہی کی وجہ سے پیش آیااورحادثے میں ڈرائیور سمیت آٹھ افراد دریائے چناب کے پانی میں لاپتہ ہوگئے جن کی شناخت ہوگئی ہے جن میں چار پولیس اہلکار بھی شامل ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پیر کی شام سے جاری تلاشی کارروائیوں کا سلسلہ منگل کو بھی جاری رہا لیکن ابھی تک گاڑی سمیت لاپتہ ہوئے مسافروں کا کوئی پتہ نہیں چل پایا کیونکہ دریائے چناب میں پانی کی سطح بہت زیادہ ہے اور حادثے کے مقام پر چناب کی گہرائی ساٹھ فٹ سے بھی زیادہ ہے جس کی وجہ سے دریا میں لاپتہ گاڑی کی صحیح لوکیشن بھی معلوم نہیں ہو پارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس افسروں کی نگرانی میں دریائے چناب کے کنارے جاری تلاش کارروائیوں کو ٹنگر اور دھرم کنڈ کی طرف مزید وسعت دی گئی ہے اور دریا برد ہوئے مسافروں میں سے کسی کے بچنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلاش کارروائیوں کیلئے فوجی غوطہ خوروں کی مدد بھی طلب کی گئی جو بعض وجوہات کی وجہ سے ابھی تک میسر نہیں ہوسکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس گاڑی میں سوار آٹھ افراد کی تصدیق اور شناخت کی گئی ہے۔ حادثے میں گاڑی سمیت لاپتہ ہوئے مسافروں کی شناخت ہیڈ کانسٹیبل محمد لطیف ولد عبدالسلام ساکن ڈورو اننت ناگ، کانسٹبل آپریٹر عاشق حسین گنائی ولد محمد یاسین گنائی ساکن چاڈورہ بڈگام ، کانسٹیبل آپریٹر الطاف احمد ولد عبد الکبیرساکن شیرپورہ پٹن ، کانسٹیبل محمد حفیظ ساکن اکھنور ، ڈرائیور اجے کمار ساکن پونی ریاسی ، سرینگر میں ارکان کے ملازم ارون کمار ساکن بہار ،چوبیس سالہ کلجیت سنگھ اور انکی چھیالیس سالہ والدہ شیشان دیوی ساکنان اکڑال پوگل پرستان کے طور پر ہوئی ہے۔ پولیس نے اس سلسلے میں ایک کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔