تازہ ترین

کشمیر میں ہاتھ سے بُنے قالینوں کافروغ

شانت منو کا تمام متعلقین کو تال میل بنانے پر زور

تاریخ    28 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


سرینگر//مرکزی وزارتِ برائے پارچہ جات کے ڈیولپمنٹ کمشنر دستکاری شانت منو نے جموںوکشمیر میں ہاتھ سے بنے قالین بافی کی صنعت کی بحالی اور فروغ کے لئے تمام متعلقین بشمول جموں و کشمیر محکمہ دستکاری ، محکمہ دستکاری اور سی ای سی پی سی کے ریجنل دفتر کو قریبی تال میل قائم کرنے کے لئے کہا۔40 ویں اِنڈیا کارپٹ ایکسپوورچیول فیئر کے سلسلے میں اپنے حالیہ سرینگر کے دورے کے دوران شانت منو نے جموںوکشمیر محکمہ دستکاری کو مقامی دستکاری کے فروغ کے لئے حکومت ہند کی جانب سے متعارف کی گئی سکیموں کو بھرپور استعمال کرنے کے لئے کہا۔ انہوں نے مرکزی دستکاری افسروں کو جموںوکشمیر ہینڈی کرافٹس محکمہ کو بھرپور مدد فراہم کرنے کی ہدایت دی۔جموں وکشمیر کی جانب ورچیول میلے میں بھاری پیمانے پر شرکت کو سراہتے ہوئے شانت منو نے کہا کہ کارپوریٹ ایکسپو رٹ پرموشن کونسل وزارت برائے پارچہ جات کے جموں وکشمیر کا ریجنل دفتر جموںوکشمیر کی ہاتھ سے بنائے جانے والے قالین بافی کی صنعت کو فروغ دینے میں اہم کردار ادا کرے گا۔شانت منو کے ہمراہ کارپٹ ایکسپورٹ پروموشن کونسل وزارت برائے پارچہ جات ریجنل دفتر کے اعلیٰ افسران بھی تھے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر سے کارپٹ درآمد کرنے والوں کو ورچیول میلے میں نئے تجربات سے روشنا س ہوں گے اور مرکزی وزارت برائے پارچہ جات سی ای پی سی کی جانب سے منعقد ہونے والے ورچیول میلے میں جموںوکشمیر کی بھاری پیمانے پر شرکت کو زور دیا۔