تازہ ترین

لمحہ لمحہ دہشت

کہانی

تاریخ    23 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


رحیم رہبرؔ
اُس کربناک واقعہ کے بعد شازیہ اپنے ہوش و حواس کھو بیٹی۔ وہ دِن کےاُجالے میں اپنے گھر کے بند کمرے میں بیٹھی تھی اور رات شہر کے گلی کوچوں میں بسر کرتی تھی۔ اُس کو رات کا سکوت پسند تھا اور اُجالے کو کوستی تھی! 
اُجالے میں اُس کے اکلوتے بیٹے کو اُس سے جبراً چھینا گیا تھا۔ شازیہ کو ایک مہینے کے بعد اپنے جوان بیٹے کی خون میں لت لت لاش ملی۔ اُس کا صرف اتنا قصور تھا کہ وہ اپنی دھرتی ماں کے ساتھ جنون کی حد تک محبت کرتا تھا۔۔۔۔۔۔!!
آخری بار شازیہ نے اپنے جوان مرگ بیٹے کا چہرہ بھی نہیں دیکھا تھا۔!
شہر میں یہ خبر گشت کر رہی تھی کہ نثار کی قبر کو کئی روز سے کھولنے کی کوشش ہورہی ہے۔ لوگ آپس میں طرح طرح کے خدشات ظاہر کرنے لگے۔ جتنے منہ اُتنی باتیں!!
’’کہیں اس میں چوکیدار کا ہاتھ تو نہیں ہے!؟‘‘ میں نے رؤف سے پوچھا۔
’’بھلا! چوکیدار ایسا کیوں کرے گا۔ قبرستان سے اُس کا روزگار جُڑا ہوا ہے۔ بھلا کوئی اس طرح اپنے ہی پائوں پر کیوں کلہاڑی مارے؟‘‘۔
میں رئوف کے جواب سے مطمئن ہوا۔
’’لیکن ضرور دال میں کچھ کالا ہے۔۔۔ اُس قبرستان میں سینکڑوں قبریں ہیں، پھر نثار کی قبر کو ہی کیوں کھولنے کی کوشش ہورہی ہے!؟‘‘ ۔ میں نے تعجب سے کہا۔
’’حالانکہ نثار صوم و صلوٰۃ کے پابند تھے، شریف النفس ہونے کے ساتھ ساتھ قابل ، محنتی اور غیور بھی تھے۔پھر اُسی کی قبر کو کیوں کھولنے کی کوشش ہورہی ہے!؟‘‘۔
’’آج ہم اس راز سے پردہ اُٹھائیں گے!‘‘۔ میں نے رؤف سے کہا۔
’’پر کیسے!؟‘‘ رئوف نے تعجب سے پوچھا۔
’’آج رات ہمیں قبرستان میں ہی بتاتی ہوگی۔۔۔‘‘
رؤف نے میری تجویز مان لی۔
رات کی تاریکی نے شہر کی آبادی پر اپنی سیاہ چادر پھیلا دی۔ ہم دو دوست قبرستان میں چلے گئے۔۔۔۔!
رات کے دو بجے ایک عورت قبرستان میں داخل ہوکر سیدھے نثار کی قبر کے پاس چلی گئی اور ہاتھوں سے قبر کو کھولنے لگی۔ یہ منظر بہت ہی ڈراونا تھا! ہم نے اُس عورت کے ہاتھ پکڑ لئے اور اُس کو قبرستان سے باہر نکالا۔
’’مجھے صرف ایک بار اپنے بیٹے کا چہرہ دیکھنے دو۔۔۔ میں ۔۔۔ میں ایک ماں ہوں۔۔۔ یہ ۔۔۔ یہ میرا لخطِ جگر ہے! میں اس کے بغیر کیسے جی لوں!؟ میں نثار کی آواز سُننے کو ترس رہی ہوں۔۔۔ اَماں! میں ۔۔ میں آگیا ہوں۔۔۔۔ وہ ۔۔۔ وہ آواز ۔۔۔۔!‘‘
اسی کے ساتھ شازیہ بے ہوش ہوکر زمین پر گر پڑی اور ہمیشہ ہمیشہ کے لئے اُس نے اپنی آنکھیں موند لیں۔ 
���
 آزاد کالونی پیٹھ کا انہامہ،بیروہ،موبائل نمبر؛9906534724