تازہ ترین

ریاستی درجہ اور4جی کی بحالی قیام امن سے مشروط:اشوک کول

تاریخ    16 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// بھارتیہ جنتا پارٹی جموں و کشمیر کے جنرل سکریٹری اشوک کول نے ہفتے کے روز بی جے پی کے بغیر دیگرمین اسٹریم لیڈروں کے بارے میں کہاکہ جب چنائو کا اعلان ہوگا تو وہ مینڈکوں کی طرح اچھلتے ہوئے آئینگے۔بھاجپا ہیڈ کواٹر میں15اگست کی مناسبت سے پرچم کشائی کرتے ہوئے بھاجپا کے جنرل سیکریٹری(تنظیم) اشوک کو ل نے کہا’’وزیر اعظم نریندر مودی نے اعلان کیا ہے کہ جموں و کشمیر میں انتخابات ہوں گے اور وہاں وزراء اور وزیر اعلی ہوگا۔ ہم بھی چاہتے ہیں کہ جموں و کشمیر میں انتخابات ہو،جبکہ حد بندی کی مشق پہلے سے ہی جاری ہے اور جب یہ اختتام پذیر ہوگی ، اسمبلی انتخابات ہوں گے ‘‘۔جب ان سے پوچھا گیا کہ کچھ مین اسٹریم لیڈران کا کہنا ہے کہ وہ انتخابات میں شرکت نہیں کریں گے ،تو کول نے کہا جب پنچایتی انتخابات ہوئے تھے ،تو انہوں نے اس وقت بھی یہی کہا تھا۔کول کا کہنا تھا’’ انہوں نے پنچایت انتخابات نہیں لڑے بلکہ پارلیمانی انتخابات میں حصہ لیااورمیں اس بات پر شرط لگا رہا ہوں کہ جب اسمبلی چنائو کے لئے بغل بج جائے گا تو یہ تمام مرکزی دھارے کے لیڈراں اپنے گھروں سے مینڈکوں کی طرح نکلیں گے اور انتخابات میں شامل ہوں گے‘‘۔کول نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے لال قلعہ سے جموں و کشمیر میں اسمبلی انتخابات کروانے کا اعلان کیااورہمیں نئے سیاسی عمل کے بارے میں تیار رہنے کی ضرورت ہے۔ بھاجپا کے جموں کشمیر کے جنرل سیکریٹری(تنظیم) اشوک کول نے کہا’’ جہاں تک اسمبلی انتخابات کا تعلق ہے وہاں اگر اور کیوں کی گنجائش نہیں‘‘۔ریاستی درجے کی بحالی کے بارے میں پوچھے جانے پر ، انہوں نے کہا کہ حکومت ہندجموں و کشمیر کی ریاستی حیثیت کی بحالی کے لئے پرعزم ہے’’لیکن اس کے لئے تمام بندوقیں خاموش ہوجانی چاہے‘‘۔انہوں نے کہا گذشتہ روز دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے ، ان کا کیا قصور تھا؟ کول کے بقول ، مہلوک پولیس اہلکاروں میں سے ایک کی آج منگنی ہونے والی تھی۔ انہوں نے کہاجب لوگ بغیر کسی خوف کے نقل و حرکت شروع کردیں گے ،تو ریاستی درجہ واپس آجائے گا۔بی جے پی کارکنوں کی سلامتی سے متعلق خدشات کے بارے میں ، انہوں نے کہا کہ حکومت اور پولیس نے پہلے ہی کچھ اقدامات اٹھائے ہیں اور آئندہ دنوں میں مزید اقدامات کیے جائیں گے۔ اس موقع پر جب ان سے پوچھا گیا کہ جموں و کشمیر اب مرکزی زیر انتظام والا خطہ ہے تو15اگست کے موقعہ پر انٹرنیٹ سہولیات کو کیوں منقطع کیا گیا تو کول نے کہا ،2جی ٹھیک طرح سے کام کر رہا ہے اور جب جنگجوئوںکی آخری بندوق خاموش ہوجائے گی او جنگجویانہ سرگرمیاں مستقل طور پر رک جائیں گی’’جموں کشمیر کوریاستی درجہ اور 4جی اسی روز بحال ہوجائے گی۔

تازہ ترین