تازہ ترین

پوپ فرانسس نے پہلی مرتبہ 6خواتین کو اعلیٰ عہدوں پر تعینات کردیاؤ

تاریخ    13 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
پیرس //کیتھولک چرچ کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے تاریخی اقدام اٹھاتے ہوئے پہلی مرتبہ 6 خواتین کو ویٹی کن کے مالی معاملات کی نگرانی کے لیے مقرر کردیا۔پوپ فرانسس نے کئی کارڈینلز کے ساتھ ویٹی کن کی معاشی کونسل میں 7 افراد کا تقرر کیا جن میں سے 6 خواتین ہیں جو اب اعلیٰ ترین عہدے پر خدمات سرانجام دیں گی۔یہ تاریخی اقدام ایک ایسے وقت میں اٹھایا گیا ہے جب کورونا وائرس کی عالمی وبا اور تباہ کن کساد بازاری نے ویٹی کن کے طویل المدتی مالی مسائل کو مزید پیچیدہ کردیا ہے۔پوپ فرانسس کو اپنے کئی پیش روؤں کے مقابلے میں زیادہ ترقی پسند سمجھا جاتا ہے۔چند ماہ قبل پوپ فرانسس نے اطالوی خاتون وکیل فرانسیسا ڈی گیووانی کو اسٹیٹ سیکریٹریٹ کے کثیرالجہتی امور میں انڈر سیکریٹری تعینات کیا تھا۔اس سے قبل 2017 میں آرٹ کی مورخ اطالوی خاتون کو دنیا کے فن کے اہم مجموعوں میں سے ایک ویٹی کن میوزیم کا ڈائریکٹر بنایا گیا تھا۔فاکس نیوز کی رپورٹ کے مطابق اب پوپ فرانسس نے 15 رکنی معاشی کونسل میں 6 خواتین کو تعینات کیا ہے جس میں پہلے تمام اراکین مرد تھے اور جن خواتین کو شامل کیا گیا ہے ان کا تعلق برطانیہ، جرمنی اور اسپین سے ہے۔ان کے نام برطانیہ کی سابق لیبر پارٹی کی وزیر روتھ کیلی اور لیسلے جین فیرار، جرمنی کی کارلوٹ کریوٹر کرشوف اور ڈاکٹر ماریجا کولاک اور اسپین کی ایوا کاسٹیلو سانز اور ماریہ کانسیپکیون شامل ہیں۔
 
 
 

تازہ ترین