تازہ ترین

قاضی گنڈ حملہ کی مذمت

تاریخ    7 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


تشدد کے استعمال سے  کچھ حاصل ہونے والا نہیں:الطاف بخاری

سرینگر//جموں وکشمیر اپنی پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے ویسو قاضی گنڈ میں سرپنچ سجاد احمد کھانڈے کی ہلاکت کی پرزور مذمت کی ہے۔ ایک بیان میں بخاری نے کہا ہے کہ تشدد سے تباہی کے علاوہ کچھ بھی حاصل ہونے والا نہیں۔ انہوں نے حکومت سے اس واقعہ کا سنجیدہ نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے کہاکہ زمینی سطح کے نمائندے پر آج کے بزدلانہ حملے نے پنچایتی نمائندوں اور دیگر سیاسی کارکنوں میں خوف کا ماحول پیدا کر دیا ہے جنہوں نے پچھلے دس دنوں میں ایسے تین حملے دیکھے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر میں خوشحالی اور امن دشمن عناصر کو اِس طرح کھلی چھوٹ نہیں دی جانی چاہئے، انتظامیہ کو چاہئے اِن حملوں کے پیچھے کارفرما عناصر کی شناخت کر کے اُن کی گرفتاری عمل میں لاکر قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔ ان کا کہنا ہے ’’ہم نے کافی تباہی دیکھی ہے اور اب تشدد کے اِس دور کا خاتمہ ہونا چاہئے تاکہ جموں وکشمیر کے لوگ سکون کی سانس لے سکیں، ہم ایک اور نسل کی تباہی کے متحمل نہیں ہوسکتے‘‘۔بخاری نے سوگوار کنبہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر مسلح سماجی کارکن کو قتل کرنا ایک گھنائونی حرکت ہے جو کسی بھی مہذب معاشرے کے لئے کبھی قابل قبول نہیں ہوسکتی ۔
 

بی جے پی کا  پنچوں وسرپنچوں کیلئے سیکورٹی کا مطالبہ 

سرینگر//بھارتیہ جنتا پارٹی کے کشمیر ترجمان الطاف ٹھاکر نے ویسو قاضی گنڈ میں پارٹی کے ایک سرپنچ کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے سرپنچوں ، پنچوں اور پارٹی کارکنان کیلئے سیکورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے پولیس پر زور دیا کہ وہ پورے کشمیر میں بی جے پی اور دیگر پارٹیوں کے سرپنچوں اور پنچوں کے لئے سیکورٹی کا انتظام کریں۔ انہوں نے سرپنچ کے قتل کو بد قسمتی سے تعبیر کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سجاد کھانڈے کانسچونسی کاصدر تھا۔ٹھاکر نے دائر ایکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ سے اس سلسلے میں مداخلت کی اپیل کی ہے۔

تازہ ترین