تازہ ترین

کورونا وائرس| 10فوت، مہلوکین 417

متاثرین میں 390کا اضافہ، 824صحت یاب

تاریخ    5 اگست 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
سرینگر // جموں و کشمیر میں مزید 10افراد کورونا وائرس کی وجہ سے اپنی جان گنوا چکے ۔ متوفین کی تعداد بڑھکر 417ہوگئی ہے۔ ان میں سے 30جموں جبکہ 387افراد کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ منگل کو مزید 390افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں۔ متاثرین کی مجموعی تعداد 22396تک پہنچ گئی ہے جن میں سے 5104جموں جبکہ 17292افراد کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ تازہ 390متاثرین میں سے 99سرینگر،14بارہمولہ، 14پلوامہ، ایک کولگام، 11شوپیان، 37اننت ناگ، 9بڈگام، 20کپوارہ، 5بانڈی پورہ، 28گاندربل، 41جموں، 21راجوری، 4کٹھوعہ، 26ادھمپور، 11سانبہ، 7ڈوڈہ، 14پونچھ اور 28ریاسی سے تعلق رکھتے ہیں۔ 

 10اموات

 جموں و کشمیر میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران مزید 10افراد کورونا وائرس سے فوت ہوگئے۔ مرنے والوں میں سے 3سرینگر، 3بڈگام،2پلوامہ، ایک بانڈی پورہ اور ایک  بارہمولہ سے تعلق رکھتا ہے۔ محکمہ صحت کے ایک سینئر افسر نے بتایا ’’ سرینگر کے خانیار علاقے سے تعلق رکھنے والا ایک 75سالہ شخص کو نمونیا کی وجہ سے 25جولائی کو صدر اسپتال میں منتقل کیا گیا تھا لیکن رپورٹ مثبت آنے کے بعد  مریض کوسی ڈی اسپتال منتقل کیا گیا ‘‘۔ڈاکٹر نے بتایا کہ معمر شخص منگل کی صبح 4بجے سی ڈی اسپتال میں فوت ہوگیا ‘‘۔مذکورہ ڈاکٹر نے بتایا ’’نائیدکدل سرینگر سے تعلق رکھنے والا 65سالہ شخص اور ہمہامہ سے تعلق رکھنے والی ایک 46سالہ خاتون صدر اسپتال سرینگر میں پیر اور منگل کی درمیانی رات کو فوت ہوگئے۔بڈگام میں تعینات محکمہ صحت کے ایک سینئر افسر نے بتایا ’’داری گام بڈگام سے تعلق رکھنے والا ایک 65سالہ شخص سکمز صورہ میں کورونا وائرس کی وجہ سے فوت ہوگیا ‘‘۔مذکورہ افسر نے بتایا ’’ بدرن ماگام سے تعلق رکھنے والی ایک 65سالہ خاتون بھی صدر اسپتال سرینگر میں فوت ہوگیا ‘‘۔سینئر افسر نے بتایا ’’  اٹینہ بڈگام سے تعلق رکھنے والی ایک 60سالہ خاتون بھی سی ڈی اسپتال میں فوت ہوگئی ہے‘‘۔ محکمہ صحت کے ایک سینئر افسر نے بتایا ’’ منگہا ترال سے تعلق رکھنے والا 70سالہ شہری 2اگست کو صدر اسپتال سرینگر میں فوت ہوگیا جبکہ نورپورہ ترال سے تعلق رکھنے والی ایک 55سالہ خاتون بھی یکم اگست کو صدر اسپتال سرینگر میں فوت ہوئی تھی لیکن دونوں کی رپورٹیں منگل کو مثبت آئیں ہیں‘‘۔ محکمہ صحت کے افسر نے بتایاکہ سنبل بانڈی پورہ سے تعلق رکھنے والا 80سالہ معمر شخص کورونا وائرس کی وجہ سے سکمز صورہ میں فوت ہوگیا ‘‘۔جی ایم سی بارہمولہ میں تعینات ایک سینئر افسر نے بتایا ’’  بنڈی پائین سے تعلق رکھنے والا ایک 85سالہ شخص سوموار کو رات دیر گئے فوت ہوگیا‘‘ ۔  انہوں نے کہا کہ معمر شخص نمونیا کی وجہ سے جی ایم سی بارہمولہ میں 3دن قبل داخل ہوا اور 4اگست کوفوت ہوگیا۔ 

حکومتی بیان

حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے390نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے238کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 152کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد22396تک پہنچ گئی ہے۔حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے22396معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے7123 سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک14856اَفراد شفایاب ہوئے ہیں ۔جموں وکشمیر میں کوروناوائرس سے مرنے والوں کی مجموعی تعداد417تک پہنچ گئی ،جن میں سے 387کا تعلق کشمیر صوبہ سے اور30کاتعلق جموں صوبہ سے ہیں۔اِس دوران منگل کومزید824 شفاتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے291اور کشمیر صوبے کے 533اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 671413ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  04؍اگست2020ء کی شام تک 649017نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک376393افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 44229اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔7123کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ43078 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق281546اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔

 824صحت یاب

 جموں و کشمیر میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران مزید 824افراد صحتیاب ہوئے ہیں جن میں سے 229سرینگر، 9بارہمولہ، 49پلوامہ، 12کولگام، 45اننت ناگ، 150بڈگام، 4کپوارہ، ایک بانڈی پورہ، 34گاندربل، 52جموں، 147راجوری، ایک رام بن، 42کٹھوعہ، 2ادھمپور، 17ڈوڈہ، 8پونچھ، 20کشتواڑ، ایک سانبہ اور ایک ریاسی سے تعلق رکھتا ہے۔ 
 
 
 
 
 
 

مرکزی داخلہ سیکریٹری نے اِقدامات کا جائزہ لیا

مثبت معاملات کی شرح 3.3، صحتیابی کی شرح 61.3 اور شرح اموات 1.8 فیصد درج

نیوز ڈیسک
 
سری نگر//مرکزی داخلہ سیکریٹری اجے کمار بھلہ نے جموںوکشمیر یونین ٹریٹری میں کووِڈ ۔19وبا کی روکتھا م سے متعلق اقدامات کا جائزہ لینے کیلئے ایک اعلی سطحی میٹنگ کی صدارت کی۔میٹنگ میں صحت و طبی تعلیم محکمہ نے یوٹی میں موجودہ صورتحال سے متعلق پرزنٹیشن پیش کی۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ جموںوکشمیر کووِڈ۔19وبا سے نمٹنے کے لئے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کر رہا ہے اور فی دس لاکھ کی آبادی میں سے 53,323 کا ٹیسٹ کیا جارہا ہے جبکہ فی دس لاکھ کی آبادی میں سے 1,746کووِڈ ۔19مثبت معاملات درج کئے جارہے ہیں ۔ کووِڈ۔19 مثبت معاملات کی شرح 3.3فیصدجبکہ صحتیابی کی شرح 61.3فیصد اور شرح اموات 1.8 فیصد درج کی گئی ہے ۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ یوٹی میں اب تک 6.5لاکھ ٹیسٹ کئے گئے اور فی الوقت 21,416 کووِڈ ۔19مثبت معاملات درج کئے گئے جن میں سے 7,893فعال مثبت معاملات ہیں جبکہ 13,137 صحتیاب معاملات اور 396اموات درج کی گئیں۔مرکزی داخلہ سیکریٹری نے کووِڈ اموات کی رِپورٹ کا جائزہ لیتے ہوئے نازک مریضوں کی ہسپتال آنے کے 72گھنٹوں میں ہی موت واقع ہوئی ہے ۔اُنہوں نے اس مسئلے سے نمٹنے کی ضرورت پر زور دیا ۔ٹیسٹنگ صلاحیت سے متعلق چیف سیکریٹری نے کہا کہ متعلقہ بنیادی ڈھانچے کو توسیع دی گئی ہے اور ڈبلیو ایچ او کی سفارشات کے برعکس جموںوکشمیر میں اب یومیہ فی دس لاکھ آبادی میں سے 900ٹیسٹ یومیہ کئے جارہے ہیں ۔ اس کے لئے پانچ اضافی ٹیسٹنگ لیبارٹریاں ، چار پی بی این اے اے ٹی سہولیات اور 15 ٹی آر یو پی این اے ٹی لیبارٹریاں سرکاری طبی اداروں میں قائم کی گئی ہیں ۔ اس کے علاوہ آر ٹی پی سی آر ٹیسٹنگ کو بھی توسیع دی گئی ۔ اس کے علاوہ حکومت نے تین سی او بی اے ایس 6800 کے حصول کا عمل شروع کیا ہے جو کہ ایک خود کار نظام ہے تاکہ یومیہ ٹیسٹینگ صلاحیت میں اضافہ کیا جاسکے جس کی تعداد فی الوقت یومیہ 12000 ہیں۔