تازہ ترین

راجستھان میں اسمبلی اجلاس کا معاملہ، حکومت اور راج بھون میں ٹکراؤ

تاریخ    28 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


جے پور//راجستھان میں اسمبلی اجلاس بلانے کے مسئلے پر ریاستی حکومت اور راج بھون میں ٹکراؤ ہوگیاہے ۔ذرائع نے بتایا کہ ریاستی کابینہ کے ذریعہ اجلاس بلانے کی تجویز کی فائل راج بھون نے پارلیمانی امور کے محخمے کو واپس بھیج دی ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ راج بھون نے حکومت سے اور بھی کچھ معلومات طلب کی ہیں۔ریاست میں وزیراعلی اشوک گہلوت اپنی حکومت کے پاس اکثریت کے دعوے کے ساتھ اجلاس بلانے پر بضد ہیں لیکن راج بھون سے اس کی منظوری نہیں مل پائی ہے ۔کانگریس نے دباؤ بنانے کے لئے راجستھان کو چھوڑ کر ملک کے سبھی راج بھونوں کا محاصرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔اس کے علاوہ راشٹر پتی بھون تک جانے کی وارننگ دی ہے ۔اجلاس ن بلانے پر وزیراعلی اشوک گہلوت کی قیات میں ارکان اسمبلی نے راج بھون کے سامنے جمعہ کو دھرنا بھی دیا تھا۔اس کے بعد گورنر نے چھ نقائط پر کابینہ کی میٹنگ میں غور کر اطلاع دینے پر اجلاس بلانے کی یقین دہانی کی تھی۔اس مسئلے پر بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) اور کانگریس کا الزام تراشی کا دور بھی چل رہا ہے ۔اس سے پہلے وہپ کی خلاف ورزی کرنے کے معاملے میں اسمبلی اسپیکر کے ذریعہ دئے گئے نوٹس پر نائب وزیراعلی کے عہدے سے برطرف سچن پائلٹ سمیت 19 ارکان اسمبلی کو ہائی کورٹ نے راحت دیتے ہوئے حالات برقرار رکھنے کا حکم دیا تھا۔