عید الاضحی پر لاک ڈائون میں نرمی کرنے کی ضرورت: ٹریڈ الائنس

تاریخ    25 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//عید الاضحی کے پیش نظر تجارتی سرگرمیاں بحال کرنے پر نظر ثانی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کشمیر ٹریڈ الائنس نے کہا کہ عالمگیر وبا کوڈ۔19کا مقابلہ کرنے کیلئے مضبوط و مستحکم معیشت ضروری ہے۔کشمیر ٹریڈ الائنس کے صدر اعجاز شہدار نے عید سے قبل لاک ڈائون کو سخت بنانے کے انتظامی فیصلے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلائو کے روک تھام کیلئے اصل میں محکمہ صحت اور ماہرین صحت کی جانب سے جاری کئے گئے ضوابط اور گائڈ لائن کو زمینی سطح پر مکمل طور پر نافذ العمل بنانا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف دکانوں کو بند کیاجاتا ہے تو دوسری جانب سماجی فاصلہ نہ عملانے اور ماسک کا استعمال نہ کرنا دیکھاجاسکتا ہے جس سے لاک ڈائون کرنے کا مقصد فوت ہوجاتا ہے۔ شہدارنے کہاکہ اس طریقہ کار سے کشمیری عوام کو دونوں مالی اور جانی نقصانات کا سامنا کرنا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ  عید الاضحی قریب ہونے پر تجارت پیشہ افراد اور مزدور طبقہ کو بڑی امیدیںہوتی ہیںتاہم اگر سب کچھ بند رہے گا تو ان کا اہل و عیال عید کی خوشیوں سے محروم ہوگا۔ اعجاز شہدار نے کہا کہ لاک ڈاون کی وجہ سے تمام سرگرمیاں ٹھپ ہے جبکہ دیگرریاستوں میں جموں کشمیر کے مقابلے میں بہت زیادہ کیس سامنے آرہے ہیں لیکن ان ریاستوں میں لاک ڈاون ختم کیا گیا ہے ۔انہوں سرکار سے مطالبہ کیا ہے کہ عید الاضحی کے پیش نظر اگرچہ سرکار نے 28جولائی سے لاک ڈاون تین روز تک ختم کرنے کا اعلان کا ہے وہی پر انتظامیہ کو چاہئے کہ 26جولائی سے ہی لاک ڈاون میں نرمی کریں۔
 

تازہ ترین