تازہ ترین

پینے کے پانی کی عدم دستیابی | وار پورہ سوپور میں جل شکتی محکمہ کیخلاف احتجاجی دھرنا

تاریخ    15 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


غلام محمد
سوپور//شمالی قصبہ سوپور کے وارپورہ میں پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے مقامی آبادی نے ضلع انتظامیہ اور جل شکتی محکمہ کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا۔دھرنے میں شامل خواتین نے سوپوربانڈی پورہ روڑ پر مٹکے لیکر کئی گھنٹوں تک ٹریفک کی نقل وحرکت مسدود کردی۔ دھرنے میں شامل افراد نے کہا کہ ان کے علاقے میں گزشتہ 6ماہ سے پینے کے پانی کی قلت ہے اور لوگ پانی کی بوند بوند کے لئے ترس رہے ہیں اور لوگوں کومختلف مسائل درپیش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جل شکتی محکمہ کو کئی بار آگاہ کیا گیا لیکن وہ ٹس سے مس نہیں ہوئے۔ اس موقع پر پولیس کی ایک ٹیم موقع پر پہنچ گئی اور انہوں نے دھرنے پر بیٹھے افراد کو یقین دلایا کہ ان کے مسائل کو وہ محکمہ کے اعلیٰ افسران تک پہنچائیں گے۔ پولیس کی یقین دہانی کے بعد ٹریفک کی نقل و حرکت بحال ہوگئی ۔جل شکتی محکمہ سوپور کے افسران کا کہنا ہے کہ بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے پانی کی سپلائی میں کمی آئی ہے جس سے کئی علاقوں میں پانی کی سپلائی متاثر رہتی ہے تاہم متاثرہ علاقوں تک جلد پانی کی سپلائی کو  یقینی بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ان علاقوں میں پانی کے ٹینکر بھی سپلائی کئے جائیں گے۔
 
 
 

قطب آباد گوگلوسہ میں لوگو ں کو مشکلات درپیش

اشرف چراغ 

کپوارہ//کپوارہ کے قطب آباد گو گلوسہ میں پینے کے پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے لوگو ں کو سخت مشکلات سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگو ں نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ قطب آباد گوگلوسہ کو زون ریشی واٹر سپلائی سکیم کے تحت پینے کا پانی سپلائی کیا جاتا ہے اورواٹرسلائی سکیم میں خرابی کی وجہ سے وہ پینے کے پانی سے محروم ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں جل شکتی محکمہ کے اعلیٰ حکام سے رابطہ کیا گیالیکن تا حال کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی جس کے باعث لوگ گرمیو ں کے ان ایام میں پانی کی ایک ایک بوند کے لئے ترس رہے ہیں ۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ انہیں اس بات کی فکر ستاتی ہے کہ اگر گرمیو ں کا یہی حال رہا تو ندی نالوں میں پانی کم ہونے کے بعد مذکورہ گائوں میں پینے کے پانی کا بحران کھڑا ہوجائے گا ۔مقامی لوگو ں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ واٹر سپلائی سکیم کو ٹھیک کر کے قطب آباد بستی کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں ۔اس دوران وادی لولاب کے بٹ محلہ اور نور محلہ میں پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے لوگو ں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ علاقہ کی واٹر سپلائی سکیم میں کئی روز قبل خرابی پیدا ہو گئی ہے تاہم محکمہ کے فیلڈ عملہ نے واٹر سپلائی سکیم کو ٹھیک کرنے کے لئے کوئی کوشش نہیں کی جارہی ہے ۔مقامی لوگوں نے متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ حکام سے مداخلت کی اپیل کی ہے۔
 
 
 
 

اراضی کے عوض ملازمت فراہم نہ کرنے کا معاملہ

 پانی کی سپلائی منقطع ،گجر پتی یارمیں پانی کی قلت

ارشاد احمد

گاندربل//سال 2013 میں جل شکتی محکمہ کی جانب سے گجر پتی یارمقام میں فلٹریشن پلانٹ کے لئے حاصل کی گئی اراضی میں تعمیر کئے گئے پلانٹ کو دو سال قبل مکمل کیا گیا تاہم ابھی تک آبادی کو پانی کی بوند بھی فراہم نہیں کی جاسکی جس کے نتیجے میں گجر پتی یارمقام کے مکینوں کو کئی دِنوں سے پینے کے صاف پانی سے محروم کردیا گیا ہے۔ سال 2013 میں محکمہ جل شکتی نے گجر پتی یارمقام گاندربل میں ہزاروں افراد پر مشتمل آبادی کو صاف پانی کی فراہمی کے لئے مقامی شہریوں سے اراضی حاصل کی اور کروڑوں روپے خرچ کرکے چھ سال کے وقفے میں  فلٹریشن پلانٹ تعمیر کیا گیا جو سال 2018 میں مکمل ہوا لیکن دو سال گزرنے کے باوجود بھی ابھی تک اراضی کے مالک نے پانی کی فراہمی منقطع کرکے رکھا ہے۔ مقامی آبادی کے اسے اس وقت اراضی کے عوض سرکاری ملازمت دینے کی یقین دہانی کرائی گئی تھی جبکہ جل شکتی کے اعلیٰ حکام نے بتایا کہ سرکار کی جانب سے ملازمت نہیں بلکہ اراضی کی قیمت دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ سرکار اوراراضی مالک کی آپسی رسہ کشی کا خمیازہ مقامی آبادی بھگت رہی ہے ۔ضلع صدر مقام سے محض 10 کلو میٹر دوری پر واقع علاقہ گجر پتی یارمقام جس کی ہزاروں افراد پر مشتمل آبادی ہے کو ندی نالوں کا گندہ پانی پینے پر مجبور کردیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں جل شکتی محکمہ کے اسسٹنٹ ایگزیکٹو انجینئر نے کہا کہ معاملہ دو تین دن میں حل ہوجائے گا اور پانی کی سپلائی بحال ہوجائے گی۔ 
 
 
 

ٹنگمرگ کا وسیع علاقہ 2روز سے پانی سے محروم

مشتاق الحسن 

ٹنگمرگ //ٹنگمرگ قصبے میں پینے کے پانی کی عدم دستیابی کے نتیجے میں ہاہا کار مچی ہے۔12 انچ پائپ لائن کئی جگہوں پر پھٹ جانے سے ایک وسیع علاقہ گزشتہ دو روز سے پانی سے محروم ہے۔ٹنگمرگ قصبہ کے علاوہ ایک وسیع علاقے کو 12 انچ لائن بوسیدہ ہونے کی وجہ سے یہ کئی جگہ پھٹ گئی ہے۔ اگرچہ محکمہ کے ملازمین پائپ لائن کی مرمت کرنے میں مصروف ہیں تاہم دو روز گزرنے کے باوجود بھی قصبے کے ساتھ ساتھ دیگر علاقہ جات میں پانی کی سپلائی بحال نہ ہوسکی ۔اس سلسلے میں اسسٹنٹ ایگزیکٹیوانجینئرصریر احمد نے بتایا کہ محکمہ کے ملازمین پائپ لائن بحال کرنے میں مصروف ہیں اور کل تک پانی کی سپلائی بحال ہونے کی امید ہے۔
 

تازہ ترین