حبہ کدل میں پینے کے پانی کی قلت

برہم لوگوں کاچیف انجینئر کے دفتر میں احتجاج

تاریخ    15 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


 سرینگر//  حبہ کدل کے لوگوں نے پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کے خلاف چیف انجینئر پی ایچ ای کے دفتر میں احتجاج کرتے ہوئے  صاف پانی کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔حبہ کدل سے تعلق رکھنے والے لوگوں کا ایک وفد منگل کو پی ایچ ای (جل شکتی) کے چیف انجینئر کے دفتر میں جمع ہوئے اور علاقے میں پینے کے پانی کی عدم دستیابی پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔لوگوں نے اس موقعہ پر اگرچہ چیف انجینئر کی نوٹس میں یہ معاملہ لانے کی کوشش کی تاہم کافی انتظار کے بعد دفتر میں چیف انجینئر پی ایچ ای کی عدم موجودگی سے وہ سیخ پا ہوئے اور متعلقہ افسر کے دفتر کے صحن میں ہی احتجاجی نعرے بلند کئے۔مظاہرین نے کہا کہ حبہ کدل علاقے میں گزشتہ کافی عرصے سے وہ پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی سے سخت مشکلات کا سامنا کررہے ہیں،جبکہ متعلقہ افسران کی نوٹس میں یہ معاملہ لانے کے باوجود ابھی تک زمینی سطح پر یقینی دہانیوں کے علاوہ کچھ نہیں کیا گیا۔ایک احتجاجی نے بتایا کہ مجبوری کی حالت میں وہ چیف انجینئر کی نوٹس میں یہ معاملہ لانا چاہتے تھے،تاہم چیف انجینئر بھی دفتر میں موجود نہیں ہے۔مظاہرین نے فوری طور پر معقول پانی کی سپلائی بحال کرنے کا مطالبہ کیا۔

تازہ ترین