بھاجپا صدر رویندر رینہ کورونا کاشکار،نارائنہ ہسپتال منتقل

رام مادھو اور ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے خود کوقرنطینہ کیا

تاریخ    15 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


سید امجد شاہ
جموں //بھارتیہ جتناپارٹی کے جموں و کشمیر یونٹ کے صدر رویندر رینہ بھی کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جس کے بعد انہیں علاج کیلئے نارائنہ ہسپتال کٹرہ منتقل کیاگیاہے ۔بانڈی پورہ میں ان کے ہمراہ پارٹی کے دیگر لیڈران بشمول رام مادھو اور ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے خود کو قرنطینہ کرلیاہے ۔رویندر رینہ نے اپنے ٹوئٹر اکائونٹ پر تصدیق کرتے ہوئے لکھا’’ آج مجھے ہلکا سا بخار تھا، ٹیسٹ کرایا تو رپورٹ میں کووڈ 19 آیا، کوئی دوسری علامت نہیں‘‘۔ واضح رہے کہ اتوار کو بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری رام مادھو، وزیر اعظم دفتر میں وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ، بی جے پی کے قومی نائب صدر اویناش رائے کھنہ اور رویندر رینہ نے بانڈی پورہ کا دورہ کر کے وہاں مہلوک بی جے پی لیڈر شیخ وسیم باری کی اہلیہ اور دیگر افراد خانہ سے تعزیت کی تھی۔وہ پانچ روز تک سرینگر میں رہنے کے بعد گزشتہ روز جموں لوٹے ۔جموں ایئرپورٹ پر ان کے نمونے لئے گئے اور ان کے ہمراہ سبھی بھاجپا لیڈران کی رپورٹ منفی آئی ہے ۔تاہم رویندر رینہ کی رپورٹ مثبت آئی جس کے فوری بعد انہیں نارائنہ ہسپتال کٹرہ کے آئیسو لیشن وارڈ منتقل کردیاگیا۔پارٹی ذرائع نے بتایاکہ رینہ کے ہمراہ جن دیگر لیڈران نے کشمیر کا دورہ کیاتھا، انہوں نے احتیاطی اقدامات کے طور پر خود کو قرنطینہ کرلیاہے جبکہ رینہ کے سیکورٹی اہلکاروں کے ٹیسٹ بھی لئے جائیں گے ۔رام مادھو نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا’’میں نے خود کو کچھ دنوں کیلئے قرنطینہ کرلیاہے کیونکہ میرے ساتھی جموں وکشمیر بھاجپا صدر رویندر رینہ کی رپورٹ آج مثبت آئی ہے ،میں 48گھنٹے قبل سرینگر میں ان کے ساتھ تھا، پچھلے 2ہفتوں کے دوران سفر میں میری 4مرتبہ رپورٹ منفی آئی ،اس کے باوجود اپنی اور دوسروں کی حفاظت کیلئے احتیاطی طور پر قرنطینہ کیاہے‘‘۔اسی طرح سے مرکزی وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے بھی ٹوئٹر کے ذریعہ بتایا’’جموں وکشمیر بھاجپا کے صدر رویندر رینہ کی کورونا رپورٹ مثبت آنے کے بعد میں بھی آج شام 4بجے سے قرنطینہ ہوگیاہوں ‘‘۔بھاجپا کے ایک سینئر لیڈر نے بتایاکہ رینہ بانڈی پورہ سے واپسی پر پارٹی کے صدردفترنہیں گئے اور وہ اپنے رہائش گاہ گاندھی نگر میں ہی رہے ۔
 

رابطے میں آئے کارکنوں کا ٹیسٹ ہوگا: بھاجپا

بلال فرقانی
 
سرینگر//بھاجپا کے جموں کشمیر صدر رویندر رینہ کا کرئونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد وادی میں بھاجپا کے لیڈر قرنطین میں چلے گئے ہیں،جبکہ پارٹی کا کہنا ہے کہ جو بھی کارکن رینہ کے رابطے میں آیا،کا کرونا ٹیسٹ کیا جائے گا۔ ذرائع نے بتایا کہ رویندر رینہ کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد وادی میں بھاجپا کے کئی لیڈراں جن میں قانون ساز کونسل کے سابق رکن اور پارٹی کے نائب صدر صوفی محمد یوسف،ترجمان الطاف ٹھاکر،کشمیر کے میڈیا انچارج منظور بٹ سمیت دیگر لیڈراں بھی شامل ہیں ،از خود منگل کو گھریلوں قرنطین میں چلے گئے۔ پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ رویندر رینہ نے گزشتہ دنوں پارٹی کے کافی کارکنوں اور لیڈروں سے ملاقات کی،جس کے پیش نظر لیڈرشپ از خود قرنطین ہوگئی۔انہوں نے تاہم کہا کہ اگرچہ جموں سے پارٹی کے ایک سینئر لیڈر بھی ان کے ہمراہ وادی آئے تھے تاہم انکا ٹیسٹ منفی آیا۔ادھر پارٹی کا کہنا ہے کہ جو لوگ بھی بھاجپا صدر کے رابطے میں آئے انکا ٹیسٹ کیا جائے گا۔پارٹی کے میڈیا انچارج کشمیر منظور بٹ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اس سلسلے میں انتظامیہ کو ایک فہرست سونپی جائے گی،جن کی کرونا سے متعلق جانچ کی جائے گی۔منظور بٹ نے کہا ’’ہم ان کارکنوں کی فہرست تیار کریں گے جو رویند رینہ کے ساتھ رابطے میں آئے،اور اس کو انتظامیہ کو سونپا جائے گا تاکہ انکے ٹیسٹ کئے جائے‘‘۔انہوں نے مزید کہا کہ پارٹی تمام معیاری عملیاتی طریقہ کار کو عملائے گی،اور تب تک تمام عوامی تقاریب کو بند کیا جائے گا جب تک ٹیسٹوں کے نتائج سامنے نہیں آتے۔
 

تازہ ترین