تازہ ترین

چین کو پہلے ہی کورونا وائرس کا علم تھا: لی مینگ ین

تاریخ    12 جولائی 2020 (30 : 01 AM)   


یو این آئی
ہانگ کانگ// دنیا بھر میں تباہی مچانے والی وبا کووڈ-19 کے تعلق سے ہانگ کانگ کے وائرولوجی سائنسدان لی مینگ ین نے ملک چھوڑنے سے پہلے الزام لگایا کہ چین پہلے سے ہی کورونا وائرس سے واقف تھا اور اس نے یہ معلومات چھپائی ہے ۔ہانگ کانگ کے اسکول آف پبلک ہیلتھ کے وائرولوجی سائنس شعبہ کے سائنسداں اور امیونولوجی کی ماہر ڈاکٹر لی مینگ ین نے ہانگ کانگ چھوڑنے سے قبل فاکس نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے یہ الزام بھی لگایا کہ عالمی ادارہ صحت ( ڈبلیو ایچ او) نے اس سے آگاہ ہونے کے باوجود اس سمت میں کوئی قدم نہیں اٹھایا۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ دسمبر میں ہی معلوم ہوگیا تھا کہ یہ وائرس انسانوں میں پھیل سکتا ہے‘‘۔ ڈاکٹر لی ین نے عالمی ادارہ صحت کے مشیر پروفیسر ملک پیرس پر بھی الزام لگایا کہ یہ جاننے کے باوجود پروفیسر نے اس سلسلے میں کوئی کارروائی نہیں کی۔ وہ ڈبلیو ایچ او کے ذریعہ منظور شدہ ایک لیبارٹری کے شریک ڈائریکٹر بھی ہیں۔ 
 

تازہ ترین