مزید خبرں

تاریخ    7 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک

نئی میڈیا پالیسی کو منسوخ کرنے کاسیاسی جماعتوں کا مطالبہ

 سرینگر// اپنی پارٹی ،کمیونسٹ پارٹی آف انڈیااورپیپلزڈیموکریٹک فرنٹ نے حکومت کی نئی میڈیا پالیسی کی نکتہ چینی کرتے ہوئے صحافیوں کے ساتھ یکجہتی کااظہار کیا ہے اور اس پالیسی کو فوری طور واپس لینے کا مطالبہ کیا۔کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا(مارکسسٹ)کے رہنما یوسف تاریگامی نے نئی میڈیا پالیسی کوآزادی رائے اوراظہار کاگلاگھونٹنے سے تعبیر کیا ہے ۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ نئی میڈیا پالیسی نے صحافیوں میں بے چینی پیداکی ہے کیوں کہ اس کا مقصدجموں کشمیرمیں صحافیوں کی آوازکودبانا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت اور اس پالیسی کو تیار کرنے والوں کو سمجھنا چاہیے کہ ذرائع ابلاغ جمہوریت کاچوتھا ستون ہے اوردیگرستونوں کے ہم پلہ ہے.۔انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کے تیار کرنے والوں نے واضح کیا ہے کہ وہ صحافیوں کو قارئین اور ایڈیٹرس کے سامنے جوابدہ بنانانہیں چاہتے بلکہ افسروں اورسیکورٹی اداروں کے،جن کو اس بات کااختیار ہوگا کہ وہ کسی خبر کو جعلی ،نقلی یاقوم دشمن قراردیں۔انہوں نے صحافی برادری کے ساتھ یکجہتی کااظہار کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ نئی میڈیا پالیسی کوفوری طور منسوخ کیا جائے اورصحافیوں کو ہراساں کرنے کوترک کیاجائے۔ادھرپیپلزڈیموکریٹک فرنٹ کے چیئرمین حکیم یاسین نے جموں کشمیرکی نئی میڈیاپالیسی کوصحافت کی آزادی پرکاری ضرب سے تعبیرکرتے ہوئے اس کی فوری منسوخی کامطالبہ کیا ہے۔ایک بیان میں حکیم یاسین نے کہا کہ جموں کشمیرکیلئے مرتب کی گئی نئی میڈیا پالیسی آئین ہند میں دی گئی اظہار رائے کی آزادی کی ضمانت کے بالکل منافی ہے اوراس پالیسی کے ہوتے صحافیوں کیلئے اپنے فرائض کی انجام دہی مشکل ہوگی۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس میڈیا پالیسی کو فوری طو منسوخ کیا جانا چاہیے۔حکیم یاسین نے کہا کہ نئی میڈیا پالیسی میں محکمہ اطلاعات کو وسیع اختیارات دیئے گئے ہیں کہ وہ ملکی سالمیت کے خلاف کسی بھی خبرکونہ صرف روک سکتا ہے بلکہ ایسے اخبارکی رجسٹریشن کو کالعدم بھی کیاجاسکتا ہے یااس کیلئے اشتہارات کی ترسیل روکی جاسکتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ذرائع ابلاغ پر قدغن لگانالوگوں کے جمہوری حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔ اپنی پارٹی کے سینئرلیڈر اور سابق وزیر غلام حسن میر نے جموں وکشمیر کی صحافتی برادری سے اظہارِ یکجہتی کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ نئی میڈیا پالیسی فوری طور واپس لی جائے۔ ایک بیان میں میر نے جموں وکشمیر حکومت پرزور دیا کہ پرنٹ، آن لائن اور الیکٹرانک میڈیا کے نمائندگان کے ساتھ صلاح ومشورہ کر کے نئی میڈیا پالیسی پر نظرثانی کی جائے ۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے لئے نئی میڈیا پالیسی بنیادی آئینی لوازمات اور آزادی اظہارِ رائے کے حق کو ذہن میں رکھے بغیر تیار کی گئی ہے۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں میڈیا صنعت کی حالتِ زار پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے جوکہ موجودہ حالات میں اپنی بقاء کے لئے جدوجہد کر رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ بجائے میڈیا صنعت بشمول پرنٹ، آن لائن اور الیکٹرانک پلیٹ فارم کو موجودہ اقتصادی صورتحال میں تعاون دینے کے حکومت نے جمہوریت کے چوتھے ستون کا دائرہ ہی محدود کرنا شروع کر دیا ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ اِس بات کو یقینی بنایاجائے کہ میڈیا حکومت کی اُن پالیسیوں کی مخالفت کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرئے جوعوامی فلاح وبہبود کے خلاف ہیں لیکن ایسا کرنے کی بجائے حکومت  انہیں سخت نتائج کے لئے دھمکارہی ہیں۔میر نے زور دیتے ہوئے کہاکہ حکومت کو چاہئے کہ فوری طور مجوزہ پالیسی کوواپس لیاجائے جو کہ مدیران اور ایکریڈیٹیڈ صحافیوں کی ایسو سی ایشن سے صلاح ومشورہ کئے بغیر تیار کی گئی ہے ۔ 
 
 

 تعمیراتِ عامہ ، جل شکتی محکموں کی کارکردگی،مشیربھٹناگر نے جائزہ لیا

حکام کو جاری ترقیاتی کاموں کی رفتارمیں تیزی لانے کی ہدایت

سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر نے یہاں سول سیکرٹریٹ میں تعمیراتِ عامہ اور جل شکتی محکموں کی میٹنگوں کی صدارت کرتے ہوئے متعلقہ محکموں کی جانب سے جاری کام کاج کا مفصل جائزہ لیا۔محکمہ تعمیراتِ عامہ کے کام کاج کا جائزہ لینے کے دوران مشیر موصوف نے متعلقہ حکام کو تمام جاری کاموں میں سرعت لانے کی ہدایت دی تاکہ کووِڈ۔19کے سبب کام میں تعطل کا ازالہ کیا جاسکے۔موجودہ سیزن کے دوران سڑکوں پر تار کول بچھانے کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہوئے مشیر کو بتایا گیا کہ گزشتہ ماہ سے زائد از 170 کلو میٹر سڑک مسافت پر تارکو ل بچھایا گیا ہے ۔اِس کے علاوہ وادی بھر میں سڑکوں میں پڑے گڑھوں اور تجدید و مرمت کا کام شد و مدسے جاری ہے۔مشیر بھٹناگر نے اَفسران کو کام کے معیار کا خاص خیال رکھنے اور صرف اعلیٰ معیار کا تار کول مواد ہی اِستعمال میں لانے کی ہدایت دی۔اُنہوں نے متعلقہ حکام کو جاری کاموں کی رفتار اور معیار کا جائزہ لینے کے لئے کاموں کی باقاعدہ نگرانی کرنے کے لئے کہا۔چیف انجینئر تعمیرات ِعا مہ کشمیر نے مشیر کو بتایا کہ محکمہ نے کوالٹی کنٹرول ٹیمیں تشکیل دی ہیں جو بلیک ٹاپنگ مواد کا تجزیہ کرتی ہے۔ اُنہوں نے میٹنگ کو مزید بتایا کہ وادی بھر میں زائد از 90مقامات پر تار کول بچھانے کا کام جاری ہے اور اِن مقامات پر کام کر رہے کامگاروں کا باقاعدگی سے کووِڈبیماری کا ٹیسٹ کیا جاتا ہے۔مشیر موصوف نے متعلقہ حکام کو تمام اِلتوأ میں پڑے کاموں کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کرنے کو کہا۔ ایک اور میٹنگ کے دوران مشیرراجیو رائے بھٹناگر نے صحت عامہ محکمہ کا جائزہ لے کر محکمہ کی جانب سے جاری کاموں اور وادی میں پانی کی ترسیل کی صورتحال کا تجزیہ کیا۔میٹنگ میں چیف انجینئر صحت عامہ کشمیر اور محکمہ کے دیگر اَفسران موجود تھے۔مشیر نے متعلقہ حکام کو موسم گرما کے دوران عوام کے پانی کی ضرورتوں کو پورا کرنے کے لئے تمام اِقدامات اُٹھانے کی ہدایت دی۔اُنہوں نے اَفسران کو اِس ضمن میں باقاعدگی سے لوگوں کی شکایات کا جائزہ لینے کی ہدایت دی اور عوام سے رائے حاصل کرنے کے لئے ایک مناسب لائحہ عمل مرتب کرنے کے لئے کہا۔ پینے کے پانی کے معیار کو جانچنے کے لئے متعلقہ حکام کو پینے کے پانی کا آبی ذخائر اور پانی کے ترسیلی مقامات پر تجزیہ کرنے کی ہدایت دی گئی ۔مشیر نے تمام اِلتوأ میں پڑے کاموں کو ترجیحی بنیاد پر مکمل کرنے کی ہدایت دی۔دریں اثنا بھٹناگر نے محکمہ آبپاشی اور فلڈ کنٹرول کے کام کاج کا جائزہ لے کر جاری کاموں بشمول دیگر فلڈ کنٹرول اِقداما ت کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں چیف انجینئرآبپاشی و فلڈکنٹرول اور محکمہ کے دیگر اَفسران موجود تھے۔مشیر نے تمام فلڈ سپل چینلوں کی فوری صفائی کی ہدایت دی۔ اُنہوں نے دریا کے کناروں پر باندھوں کی باقاعدگی سے مرمت کرنے اور تمام سوراخوں کی ترجیحی بنیادپر مرمت کرنے کے لئے کہا ۔اُنہوں نے ملہ شاہی باغ پر جاری مرمت کے کام کو فوری طور مکمل کرنے کی بھی متعلقہ اَفسران کو ہدایت دی۔مشیر کو بتایا گیا کہ دریائے جہلم کی صلاحیت 32000 کیوسکس سے بڑھا کر 42000کیوسکس تک بڑھائی گئی اور اگلے سال 60,000 کیوسکس کا ہدف مکمل کیا جائے گا۔
 
 

سوپورکے کاروباریوں کاوفدلیفٹنٹ گورنرکے مشیر سے ملاقی

تاجروں اور باغ مالکان کو درپیش مسائل پر تبادلہ خیال

سرینگر// شمالی کشمیر کے تاجروں، ٹرانسپوٹروں اور کاروباریوںپر مشتمل پلیٹ فارم سوپور اکنامک الائنس نے پیر کو سرینگر میں لیفٹنٹ گونر کے مشیر بصیر خان کے ساتھ ملاقات کی،اور سوپور میں تاجروں،صنعت کاروں اور باغ  مالکان کو درپیش مسائل کے علاوہ قصبے میں بلدیاتی مسائل سے بھی انہیں آگاہ کیا۔سوپور اکنامک الائنس کے چیئرمین حاجی محمد اشرف گنائی کی قیادت میں ایک وفد نے پیر کو لیفٹنٹ گورنر کے صلاح کار سے ملاقات کی۔ اس دوران انہوں نے قصبہ سوپور میں سڑکوںکی لایٹنگ اور بیت الخلائو ںکی عدم دستیابی سے انہیں اگاہ کیا۔الائنس نے بتایا کہ میٹنگ کے دوران کوڈ اسپتال اور صحت ڈھانچوں کی خستہ حالی کے علاوہ دکانداروں کو درپیش مسائل  کے بارے میں بھی انہیں جانکاری دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ لیفٹنٹ گورنر کے مشیر نے موقعہ پر حکام کو ہدایت دی کہ سوپور میں تاجروں کو در پیش مسائل کو ترجیجی بنیادوں پر حل کیا جائے۔
 
 

  کووِڈ- 19معیاری ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی 

سوپور میں 11دکان سربمہر

سوپور//غلام محمد//سوپور کے مختلف علاقوں میں کووِڈ-  19قواعدوضوابط کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں گیارہ دکانوں کو سربمہرکردیاگیا۔حکام کے مطابق میونسپل کونسل سوپور کی ایک ٹیم نے فوڈ انسپکٹر امتیازاحمد پنڈت اورٹیکس کلکٹرغلام محی الدین شاہ کی نگرانی میںسوپور کے مختلف بازاروں کا معائنہ کیااور اس دوران 11دکانوں کو قواعدوضوابط کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں سیل کردیا۔ذرائع کے مطابق قصبے میں متعدددکاندار معیاری ضابطہ اخلاق کی پاسداری نہیں کرتے اور تاجروں نے انتظامیہ کو پہلے ہی یقین دلایاہے کہ وہ کووِڈ-  19معیاری ضابطہ اخلاق کی پاسداری کریں گے اور جوکوئی بھی ان کی خلاف وزری کرے گا اس کے خلاف کارروائی کی جائے۔ 
 
 
 

تیزہوائوں اورآندھی سے نقصان

ڈاکٹر فاروق کا متاثرین کو امداددینے کا مطالبہ 

سرینگر// نیشنل کانفرنس ڈاکٹر کے صدر فاروق عبداللہ نے اتوار کی شام وادی میں تیز ہوائوں اور آندھی سے ہوئے نقصان پر گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے متاثرین کیساتھ اظہارِ یکجہتی کیاہے۔ انہوں نے کہا کہ طوفان سے نہ صرف مکانوں کی چھتیں اُڑ گئیں بلکہ پیڑ پودے یا تو اُکھڑ آئے یا ٹوٹ گئے اور میوہ باغات بھی اس آندھی سے نہیں بچ پائے۔ پھلوں کے درختوں کو نقصان پہنچنے سے پہلے سے ہی معاشی بدحالی کے شکار مالکانِ باغات پر ایک اور مصیبت ٹوٹ پڑی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے ضلع ترقیاتی کمشنروں اور محکمہ مال کے حکام سے تاکید کی کہ وہ متاثرین کی امداد کاری کیلئے فوری اقدامات اٹھائیں اور اس لئے فوری طور پر نقصان کا تخمینہ لگانے کیلئے ٹیمیں تشکیل دی جائیں۔انہوں نے کہاکہ کشمیر کی بیشتر آبادی پہلے ہی 5اگست سے مسلسل لاک ڈائون کے نتیجے میں اقتصادی بدحالی کا شکار ہے اور جو لوگ کل کی تیز ہوائوں سے متاثر ہوئے ہیں اُن میں سے اکثر لوگ ایسے ہیں جو اپنے بل بوتے پر اپنے مکانوں کی مرمت نہیں کرسکتے ہیں۔ اس لئے انتظامیہ کی ذمہ داری بنتی ہے کہ ایسے کنبوں کی راحت کاری کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں۔ اسی دوران اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد اکبر لون ،جسٹس (ر) حسنین مسعودی اور وسطی زون صدر علی محمد ڈار نے بھی صوبائی انتظامیہ پر زور دیا ہے کہ وہ اپنی اولین فرصت میں ان متاثرہ لوگوں کی فوری مالی امداد کریں جو ناگہانی اور سماوی آفات سے متاثر ہوئے ہیں۔ 
 
 
 

کنگن میں غرقآب نوجوان کی لاش برآمد

دوسرے کی تلاش جاری 

کنگن//غلام نبی رینہ//اتوارکو کجپارہ کنگن میں غرقآب ہوئے دو نوجوانوں میں سے ایک کی لاش پرنگ کنگن کے مقام سے برآمدہوئی۔اطلاعات کے مطابق اتوارکے روز نور باغ پالہ پورہ سرینگر کے دو نوجوان کجپارہ کنگن میں نہانے کے دوران غرقآب ہوئے ۔ غرقآب ہوئے نوجوانوں کی لاشوں کو باز یاب کرنے کے لئے انتظامیہ نے پولیس ،مقامی لوگوں اور ماہرغوطہ خوروں کی خدمات حاصل کیں لیکن اتوارکو اندھیرے کے باعث آپریشن کو روک دیا گیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ سوموار کو دوبارہ غرقآب ہوئے نوجوانوں کی تلاش شروع کردی گئی ور اس دوران ایک نوجوان جس کی شناخت 18برس کے زاہد فاروق راتھر کے طور ہوئی ،کی لاش پرنگ کنگن کے مقام پر برآمد ہوئی جبکہ دوسرے نوجوان کی تلاش جاری ہے۔
 

پکھرپورہ میں خاتون مکان سے گرکرلقمہ اجل

سرینگر//چراری پورہ پکھرپورہ میں ایک خاتون کا مکان کی دوسری منزل سے گر کر انتقال ہوگیا۔سی این ایس کے مطابق 60برس کی مغلی زوجہ غلام محمد راتھراپنے مکان کی دوسری منزل سے اچانک نیچے گرگئی اور برآمدے سے ٹکراکرزمین پر گرآئی۔اُس کے سر اور دیگر جگہوں پر چوٹیں آئی تھیں اورگھروالوں نے اُسے فوری طور اسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹروں نے ابتدائی ملاحظہ کے دوران ہی اُسے مردہ قراردیا۔مغلی کی لاش جب اُس کے گھر واپس لائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا۔
 
 
 

تین مثبت رپورٹوں کے بعد

زیارت باباریشی ٹنگمرگ کابازار بند کیاگیا

 ٹنگمرگ//مشتاق الحسن //باباریشی ٹنگمرگ میں تین افراد کے کوروناٹیسٹ مثبت آنے کے بعد مارکیٹ کو بند کیاگیا اور بابا ریشی ؒ کی زیارت پر آنے والے زائرین کو ٹنگمرگ ناکے پر ہی روک کر واپس کیاگیا۔اطلاعات کے مطابق کووِڈ - 19کی لہر بابا ریشی ٹنگمرگ بھی پہنچ گئی اور یہاں مسلم وقف بورڈ کاایک ملازم،ایک سیلزمین اور ایک چھاپڑی فروش کے کورونا ٹیسٹ مثبت آئے،جس کے بعد ان تینوں کو دھوبی ون کے قرنطین مرکز منتقل کیاگیا۔انتظامیہ نے باباریشی بازار کو بند کرکے زائرین کو ٹنگمر گ کے ناکے سے ہی واپس کردیا۔اس دوران بیشتر زائرین نے بچوں کے سرکے بال ٹنگمرگ بازار میں ہی منڈوادیئے۔قابل ذکر ہے کہ 20مارچ کو نافذ کئے گئے ملک گیر لاک ڈائون سے بابا ریشی زیارت کاصدردروازہ زائرین کیلئے بند ہے ۔اس دوران میونسپل کمیٹی ٹنگمرگ نے باباریشی بازار میں دکانوں پرادویات کاچھڑکائوکیا۔ 
 
 
 
 
 

نااہل کی رہبر تعلیم استاد تعیناتی

اینٹی کورپشن بیورونے عدالت میں چالان پیش کیا

سرینگر// انسداد رشوت ستانی ادارے اینٹی کورپشن بیورو نے محکمہ تعلیم کے خلاف ایک نا اہل رہبر تعلیم اساتد کو تعینات کرنے کی پاداش میں چارج شیٹ پیش کیا۔ اے سی بی نے یہ فرد جرم انسداد رشوت ستانی کے خصوصی جج کی عدالت میں پیش کیا۔ بڈگام کے ہرد پنزو علاقے میں12ویں جماعت کی جعلی مارکس سرٹیفکیٹ کی بنیاد پر ایک نااہل رہبر تعلیم کی مستقلی کی شکایت کے بعد یہ کیس درج کیا گیا تھا،جبکہ تحقیقات کے دوران پایا گیا کہ عبدالطیف خان کو سال2000میں پرائمری اسکول بٹہ پورہ میں رہبر تعلیم استاد تعینات کیا گیا تھا اور اس وقت زونل ایجوکیشن افسر کی ملی بھگت سے ملزم کی مدد کی گئی تھی۔ تحقیقات کے دوران پایا گیا کہ رہبر تعلیم تعینات ہونے کے3سال بعد ملزم نے12ویں جماعت کی مارکس سند کو پیش کیا،جو کہ بورڈ آف اسکول ایجوکیشن سے تصدیق ہونے کئے بعد جعلی ثابت ہوئی اور یہ سامنے آیا کہ وہ ابتدائی طور پر رہبر تعلیم استاد تعینات ہونے کے اہل نہیں تھا۔اے سی بی کا کہنا ہے کہ مزید پایا گیا کہ متعلقہ زونل ایجوکیشن افسرکی سفارش پر ملزم کو مستقل کیا گیا۔ بیان میں کہا گیا کہ تمام ملزموں ماسوائے2فوت شدہ افراد کو عدالت میں پیش کیا گیا۔
 

لاک ڈائون کے دوران امتحان کاانعقاد

ڈورومیں اسکول کے خلاف کیس درج

اننت ناگ//عارف بلوچ //ڈورو میں پولیس نے لاک ڈائون کی خلاف ورزی کرنے پر نجی اسکول منتظمین کے خلاف کیس درج کیا ہے۔ اطلاعات کے ماطبق علاقہ میں قائم  ایک نامی گرامی اسکول نے گذشتہ روز عید گاہ ڈورو میں امتحان منعقد کیا ،اس بیچ پولیس جائے موقع پر پہنچی اور امتحان بند کروایا، تاہم اگلے روز اسکول منتظمین نے ایک رہائشی مکان میں امتحان منعقد کیا۔اس بیچ پولیس نے معاملہ کا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے اسکول منتظمین کے خلاف کیس تعزیرات ہندکی دفعات188,269کے تحت درج کیا۔ایس ایچ اوڈورونظیراحمداندرابی نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ پولیس کو شکایت موصول ہوئی کہ نجی اسکول نے عیدگاہ ڈورو میں امتحان کا انعقاد کیا ہے جس کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے امتحان کو بندکروایاتاہم اگلے روزاسکول منتظمین نے امتحان کاسلسلہ جاری رکھااور پولیس نے معاملہ کی نسبت کیس درج کرلیا۔
 
 

 1,92,382درماندہ شہری واپس جموں کشمیر لائے گئے

 جموں//حکومت جموں وکشمیر نے کووِڈلاک ڈاون کے سبب ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ جموںوکشمیر کے     1,92,382شہریوں کو براستہ لکھن پور اور کووِڈخصوصی ریل گاڑیوں اور بسوں کے ذریعے تمام رہنما خطوط اور ایس او پیز پر عمل پیرا رہ کر یوٹی واپس لایا۔سرکاری اعداد و شما ر کے مطابق حکومت نے لکھن پور کے راستے اب تک بیرون ملک سے 750مسافرو ں کویوٹی واپس لایا ہے ۔اِس طرح جموںوکشمیر حکومت نے اب تک 75 کووِڈ خصوصی ریل گاڑیوں اور براستہ لکھن پور بسو ںکے کاروان میں اب تک بیرون یوٹی درماندہ 1,92,382شہریو ں کو کووڈِ۔19 وَبا سے متعلق تمام احتیاطی تدابیر کو مد نظر رکھ کر واپس لایا گیا۔تفصیلات کے مطابق 5 جولائی سے 6جولائی 2020ء کی صبح تک لکھن پور کے راستے سے2,220 بشمول کویت کے 87 درماندہ مسافر یوٹی میں داخل ہوئے جبکہ 998مسافر آج 54ویں دلّی کووِڈ خصوصی ریل گاڑی سے جموں پہنچے ۔اب تک 54ریل گاڑیاں یوٹی کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے45,879درماندہ مسافر جموں پہنچے جبکہ 21خصوصی ریل گاڑیوں سے 15,696مسافر اودھمپور ریلوے سٹیشن پر اُترے۔
 
 

گھریلو پروازو ں کا  43واںدِن | 1,816مسافر13پروازوں میں سرینگرپہنچے

 جموں//جموں وکشمیر یونین ٹریٹری میں گھریلو پروازوں کے دوبار ہ چالوہونے کے43ویں دِن 2,407مسافروں کو لے کر آج 21 پروازیں جموں اور سری نگر ہوائی اڈوں پر اُتریں ۔ 591مسافروں سمیت08کمرشل پروازیں جموں ہوائی اڈے اور 1,816مسافروں کو لے کر13 پروازیں آج سری نگر کے ہوائی اڈے پر اتریں۔ اِس دوران مرکزی  شہری ہوا بازی اور صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارتوں کی جانب سے مقرر کئے گئے رہنما خطوط اور ایس او پیز کا خاص خیال رکھا جارہا ہے۔
 
 
 
 
 
 

 امن اور خوشحالی اپنی پارٹی کا ایجنڈا:دلاور میر 

ریاستی درجہ کی بحالی کیلئے جدوجہد کریں گے 

جموں//ریاستی درجہ کی بحالی پرزور دیتے ہوئے اپنی پارٹی نے مطالبہ کیا ہے کہ جموں وکشمیر میں سیاسی عمل بحال کیاجائے ۔ یہ مانگ پارٹی صوبائی دفتر جموں میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران لیڈران نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کیا۔ اس تقریب میں محکمہ بجلی کے سابقہ فیڈر منیجر اعجاز کاظمی جوکہ پاور ایمپلائز یونین کے صوبائی جنرل سیکریٹری بھی ہیں، نے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ پارٹی میں شمولیت اختیار کی جن کا محمد دلاور میر ودیگر سینئرلیڈران نے خیر مقدم کیا۔ دلاور میر نے کہاکہ اپنی پارٹی عوام کو امن اور خوشحالی کی طرف لے جانے کے لئے ترقیاتی ایجنڈا پرعمل پیرا ہوگی۔ پارٹی ریاستی درجہ کی بحالی کے لئے جدوجہد کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ وقت آگیا ہے کہ جموں وکشمیر میں سیاسی عمل کا آغاز کیاجائے، جمہوری عمل میں تفریقی سیاست کی جگہ نہیں، یہاں لوگوں کو متحد کیاجانا چاہئے۔ سابقہ ایم ایل سی وجے بقایہ نے کہاکہ پارٹی سماج کے تمام طبقہ جات کے مسائل کو حل کرنے کے لئے کام کریگی۔اس موقع پر سابقہ ایم ایل سی سید اصغر علی، سنیئرلیڈر وکرم ملہوترہ، سنیئر یوتھ لیڈر رقیق احمد خان، وائبہو مٹو، سندیپ گندوترہ، جنمیت سنگھ بالی وغیرہ بھی موجود تھے۔پریس بیان کے مطابق جن دیگرنوجوانوں نے اپنی پارٹی کا دامن تھاما ، اِن میں راہل پال، گوند، ساہل شرما، سنی کمار، شبہم بشن، اعجاز میر، سوہل وسیم، چرنجیت سنگھ ، حیدر حسین، حسن علی وغیرہ شامل ہیں۔
 
 

ڈاکٹر فاروق کا ایڈوکیٹ غلام نبی ڈار کوبرسی پرخراج عقیدت

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے سابق صدر ضلع اننت ناگ ایڈوکیٹ غلام نبی ڈار کو14ویں برسی پر خراج عقیدت ادا کیا ہے۔ مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ غلام نبی ڈار نے پارٹی کی سربلندی کیلئے اپنی جان قربان کردی۔ مرحوم کی برسی پر 8جولائی کو اُن کے مقبرہ واقع ژولگام کولگام میں صبح سویرے قرآن خوانی اور گلباری ہوگی جبکہ کووڈ 19کے پیش نظر کوئی بھی جلسہ منعقد نہیں ہوگا۔پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ،جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، اراکین پارلیمان محمد اکبر لون، حسنین مسعودی، سینئر لیڈران سکینہ ایتو، پیرزادہ احمد شاہ، ڈاکٹر بشیر ویری، الطاف احمد کلو، عبدالمجید لارمی، شیخ محمد رفیع، سید توقیر احمد، صفدر خان اور ضلع صدر یوتھ کولگام مشتاق احمد نے بھی مرحوم کو خراج عقیدت پیش کیا۔
 
 

منشیات مخالف مہم 

بڈگام میں باپ بیٹا چرس سمیت گرفتار 

سرینگر// بڈگام پولیس نے پارنیوہ خانصاحب علاقے میں پولیس نے ایک ناکہ کے دوران محمد شعبان وانی عرف شولا اور اس کے بیٹے ساحل احمد وانی کو گرفتار کرلیا ہے جن کے قبضے سے دو کلو چرس برآمدکرلیا گیا ۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ ایک ناکہ کے دوران آلٹو 800کی تلاشی لینے کے بعد چرس برآمد کرلیا گیا ہے ۔ پولیس نے اس سلسلے میں  FIR No.125/2020 U/S 8/20 NDPSکے تحت کیس درج کرلیا ہے ۔
 
 

سپریم کورٹ جج کی آرینز ویبنارمیں شرکت

سرینگر //سابق سپریم کورٹ جج انیل آر دوے نے پی یو سی اے اور آرئن ویبنار میں شرکت کی جبکہ دہلی ہائی کورٹ کے جج جسٹس جوتی سنگھ نے بھی اپنے تجربات کا اظہار کیا۔سوموار کو سابق جسٹس انیل آر دوے اوردہلی ہائی کورٹ کے جسٹس جوتی سنگھ نے پنجاب آرئنز کالجز ایسوسی ایشن (پی یو سی اے) کے زیر اہتمام ایک ویبنار میں حصہ لیا۔ اس سمینا ر میں طلاب کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔اس موقعہ پر ایڈوکیٹ وہاب اگنی ہوتری نے نظامت کے فرائض انجام دئے جبکہ چیئرمین آرینز گروپ ڈاکٹر انشو کٹاریہ نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔جسٹس دوینے اس موقع پر کہا کہ قانونی چارہ جوئی میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اس طرح ججوں کا کام بھی آسان ہوتا جارہاہے ۔دریں اثناء طلاب نے دونوں ماہرین سے چند سوالات پوچھ لئے اوراُن کے جوابات سے مستفید ہوئے ۔
 
 

چرارشریف میں خوبصورت پارکیں تعمیرکی جائیں گی: ناظم پھولبانی

سرینگر //حالیہ دنوں سول سیکرٹریٹ سرینگرمیں چرارشریف پروجیکٹ کیلئے منعقد کی گئی سرکاری سطح کی خاص میٹنگ میں ا بھارے گئے مقامی نوعیت کے اہم مسائل اور لمبے عرصے سے زیر تعمیر والتوا پڑے دوسرے پروجیکٹوں کوجلد پایہ تکمیل پہنچانے کی عمل کے سلسلے میں ڈائریکٹر پھولبانی فاروق احمد لون نے ڈپٹی ڈائریکٹر اور دیگر ماتحت عملے کے ساتھ جائزہ لینے کیلئے چرارشریف پہنچ گئے۔ موصوف نے دررگاہ شیخ العالمؒ کے چاروں اطراف، اور ملحقہ وقف اراضی میں موجود مختلف پبلک پارکوں کی حالت زار اوران کی خستہ حالت کامشاہدہ کیا اور صحن میں موجود فلوری کلچر کی طرف سے تیار کی گئی دونوں پارکوں کو مزید دلکش وخوبصورت بنانے پر زور دیاگیاہے۔فاروق احمد لون نے اعتراف کیا کہ زیارت کے احاطے سے منسلک بیکار پڑی اراضی پرمعیاد بند مدت کے اندر ایک بہترین پبلک پارک تعمیر کی جائیگی۔اس موقعے پر ایک اور اعلیٰ سرکاری حاکم نے بتایا کہ زیارت سنگرام گنائی اور تاریخی خانقاہ ریشیہ اویسیہ کے بیچ میں موجود جے کے پی سی سی کے زیر انتظام دوکنال زمین پر بھی ایک خوبصورت پارک تعمیر کرنے کا انہیں سرکار کی طرف سے اشارہ مل چکا ہے۔ دریں اثنا اس موقعہ پر مسلم وقف بورڈ کے مقامی ذمہ داروں نے دورے پر آئی محکمانہ ٹیم کو التوا میں پڑ ی اراضی کو فورا تحویل میں لیکر اس جگہ بھی پارک تعمیر کرنے کے عمل میں تعاون پیش کیاتاہم عوامی حلقوں نے گورنر کے مشیر بصیر خان کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے انہیں اپیل کی کہ جے کے پی سی سی کے ماتحت لمبے عرصے سے زیرالتواع میں پڑے دوسرے تمام تعمیری کاموںکو واپس چھین کر انہیں آراینڈ بی محکمے کے ذریعے اب مکمل کروائیں جائیں تاکہ قصبہ چرارشریف کا عوام مزید ذہنی پریشانی سے کسی حد تک چھٹکارا محسوس کرسکیں۔
 
 

راجہ اعجاز علی کی والدہ فوت

الطاف بخاری سمیت اپنی پارٹی کے دیگر لیڈران کا اظہار ِ تعزیت

سرینگر// سابق آئی جی پی راجہ اعجاز علی کی والدہ سوموارکو سرینگر میں واقع اپنی رہائش گاہ پرانتقال کرگئیں۔وہ کچھ عرصہ سے علیل تھیں۔اُن کی نمازِ جنازہ اُن کے آبائی گاؤں پہلی پورہ بارہمولہ میں ادا کی گئی ۔ خاندانی ذرائع کے مطابق مرحومہ کی فاتحہ خوانی جمعرات 9 جولائی کو آبائی گاؤں پہلی پورہ میں انجام دی جائے گی۔جموں وکشمیر اپنی پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے سابق آئی جی پی راجہ اعجاز اعلی کی والدہ کے انتقال پر گہرے دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔ تعزیتی پیغام میں بخاری نے غمزدہ کنبہ کے ساتھ تعزیت کرتے ہوئے مرحومہ کے ایصال ِ ثواب کیلئے دعا کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ وہ غمزدہ کنبہ، رشتہ داروں، دوست واحباب کے ساتھ دکھ کی اِس گھڑی میں یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں اور اللہ سے دعا گو ہیں کہ کنبہ کو یہ ناقابلِ تلافی نقصان برداشت کرنے کی ہمت عطا کرے۔ اپنی پارٹی لیڈران غلام حسن میر، محمد دلاور میر، محمد اشرف میر، ظفر اقبال منہاس، عبدالمجید پڈر، رفیع احمد میر، جاوید بیگ، یاورمیر، راجہ منظور، شعیب لون، نور محمد شیخ اور جاوید مرچال نے بھی سوگواران کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔جموں کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی کے نائب صدر غلام نبی مونگا نے سوگوار کنبے بالخصوص راجہ اعجاز علی سے تعزیت کیا ہے اور مرحومہ کی جنت نشینی کیلئے دعا کی ہے۔ادھر سابق چیف کوآرڈی نیٹر کشمیر کمیٹی الطاف اسرار، کرناہ کے سماجی کارکن راجہ بشیر احمد خان اورسابق ترقیاتی کمشنر پیر محمد یاسین شاہ نے بھی غمزدہ خاندان سے تعزیت کا اظہار کیا ۔ کشمیر عظمیٰ کے نامہ نگار برائے ضلع گاندربل ارشاد احمد نے بھی غمزدہ خاندان کے ساتھ اظہار تعزیت کرتے ہوئے مرحومہ کی جنت نشینی کے لئے دعا کی۔ دریں اثنا سماج کے مختلف طبقوں سے وابستہ افراد نے راجہ اعجاز علی اور دیگر سوگواران سے تعزیت کرتے ہوئے مرحومہ کی مغفرت اور لواحقین کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے ۔ 
 

انجمن حمایت الاسلام کا اظہار تعزیت

سرینگر//بزم ہمدانیہ کے اساسی رکن مرحوم پیر شمس الدین مخدومی ڈورو شاہ آباد کے انتقال پر انجمن حمایت الاسلام کے صد مولانا خورشید احمد قانونگو و دیگر زعماء بالخصوص ابوطارق غلام نبی میر ڈورو شاہ آباد، الحاج عبدالصمد خشو اور سید غلام نبی کاملی نے موصوف کی وفات پر گہرے رنج و غم کااظہار کیا ہے۔ موصوف نے تنظیم کے ابتدائی دور میں تبلیغ و تحریر پر و دیگر دینی خدمات میں بہت گہری دلچسپی کااظہار کیا ۔ موصوف ڈورو شاہ آباد کے علمی گھرانے سے تعلق رکھتے تھے اور اپنے اکابرین کے نقش قدم پر دینی خدمات میں پیش پیش رہے۔
 
 

تازہ ترین