روزانہ 500امرناتھ یاتری شاہراہ سے سفر کریں گے | مشیر بھٹناگر اور پولیس سربراہ کا گپھا کا دورہ ، انتظامات کا جائزہ لیا

تاریخ    6 جولائی 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
جموں //بھاگوتی نگر جموں میں واقع یاتری نواس کو امرناتھ یاترا کیلئے آنے والے یاتریوں کی خاطر بیس کیمپ کے طور پر استعمال کیاجائے گا۔اس حوالے سے بات کرتے ہوئے ایک افسر نے بتایا’’یاتری نواس کو بیس کیمپ کے طور پر استعمال کیاجائے گا اور اس سلسلے میں سیکورٹی کے تمام تر انتظامات کئے گئے ہیں ‘‘۔جموں و کشمیر انتظامیہ نے روزانہ 500یاتریوں کو جموں سرینگر شاہراہ پر سفر کرنے کی اجازت دی ہے ۔قبل ازیں سالانہ یاترا کو شیڈیول کے مطابق 23جون کو شروع ہوناتھا تاہم کورونا وائرس کے باعث اس میں تاخیر ہوئی ۔واضح رہے کہ یاتری نواس جموں کو پہلے انتظامی قرنطینہ میں تبدیل کیاگیاتھا اور پھر اسے اپ گریڈ کر کے 500 بستروالا کووڈ ہسپتال بنایاگیا۔دریں اثناء اتوار کو لیفٹنٹ گورنر کے مشیر آر آر بھٹناگر اور پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے امرناتھ گپھا بالتل کا دورہ کیا اور سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا۔مشیر اور پولیس سربراہ نے سب سے پہلے امرناتھ گپھا میں حاضری دی اور پھر بالتل میں پولیس و سی آر پی ایف افسران کے ساتھ ایک میٹنگ کی ۔بھٹناگر نے سیکورٹی فورسز پر زور دیاکہ وہ آپسی تعاون سے امرناتھ یاترا کو کامیاب بنائیں ۔ انہوں نے کہاکہ حساس علاقوں کی نشاندہی کی جائے اور سیکورٹی گرڈ کو مضبوط بنایاجائے ۔پولیس سربراہ نے افسران کو ہدایت دی کہ امرناتھ یاترا کے دورانیہ میں تمام تر انتظامات رکھے جائیں ۔ انہوں نے کہاکہ تمام مصروف جگہوں بشمول لنگروں کو سیکورٹی کے دائرے میں لایاجائے اور احتیاطی اقدامات کئے جائیں ۔ انہوں نے کہاکہ یاتریوں کی آمداور روانگی کے حوالے سے ترسیلی نیٹ ورک کو مضبوط بنایاجائے ۔انہوں نے کہاکہ کورونا کے خطرات کے پیش نظر تمام تر لازمی اقدامات کئے جائیں ۔
 

تازہ ترین