رواں برس کا گرم ترین دن| سرینگر میں پارہ 33.7ڈگری تک پہنچ گیا

تاریخ    3 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


  سرینگر //واد ی کشمیر میں شدید ترین گرمی کی لہر کے بیچ جمعرات کا دن رواں برس کا گرم ترین دن رہا جس کے چلتے شہر سرینگر میں دن کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 33.7ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا ہے ۔  وادی کشمیر میں گذشتہ کئی روز سے درجہ حرارت میں بڑوتری آرہی ہے یکم جولائی کو یہاں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 32.5ڈگری سلسیش ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ 30جوان کو یہاں 29.5ڈگری سلسیش تھا ۔29جون کو 31.7ڈگری سلسیش ریکارڈ کیا گیا تھا ۔28جون کو 32.9ڈگری سلسیش تھا تاہم گذشتہ کئی دنوں سے وادی  چالیس دنوں پر مشتمل ’’ووہرات‘‘ کے 12 دن گزرنے کے بعد آج درجہ حرارت میں اضافہ دیکھنے کو ملا ہے اس طرح رواںبرس میںکل وادی میں گرم ترین دن رہا جس کے چلتے سرینگر میں دن کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت33.7ڈگری سیلیس ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ محکمہ موسمیات کی اطلاع کے مطابق وادی میں اگلے چند دنوں تک موسم خشک رہے گا تاہم درجہ حرارت میں کوئی خاص اضافہ ہونے کاامکان نہیں ہے ۔ یاد رہے کہ رواں برس کے چھہ ماہ گزرنے کے باوجود بھی وادی میں موسم سرما کا احساس ختم نہیں ہوا اور ماہ اپریل، مئی اور جون میں بھی وقفے وقفے سے بارشوں کا سلسلہ جاری رہا جس کے نتیجے میں وادی میں درجہ حرارت کم رہا اور لوگوں کو موسم سرماء اور موسم گرماء میں زیادہ فرق دکھائی نہیں دیاتاہم یکم جولائی سے موسم بالکل خشک ہے اور دن بھر دھوپ کھلنے کے نتیجے میں گرمی کا زور بھی دھیرے دھیرے بڑھنے لگا۔ جبکہ تاہم ووہرات میں جس قدر گرمی سے لوگ بے حال ہوجایاکرتے تھے رواں برس فی الحال اس قدر گرمی نہیں دکھی۔ ادھرگرمی کی لہر سے بچنے کیلئے وادی کے مختلف علاقوں میںلوگ یا تو ٹھنڈے مقامات کا رخ کرتے ہیں یا تو ندی نالوں اور دریائوں میں گرمی کی لہر سے بچنے کیلئے نہاتے نظر آرہے ہیں ۔ 

تازہ ترین