تازہ ترین

وائرس سے6 فوت،198مزید متاثر

متاثرین میں2کمسن بچے، 4بینک ملازمین اور8حاملہ خواتین بھی شامل

تاریخ    2 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
 سرینگر// یکم جولائی کوجموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے مزید 6امواتیں ہوئیں، جسکے ساتھ ہی مہلوکین کی تعداد107ہوگئی ہے۔ ان میں سے13جموں جبکہ 94افراد کشمیر میں فوت ہوئے ہیں۔ بدھ کو2کمسن بچوں، 4بینک ملازمین،8حاملہ خواتین اور پولیس و فورسز کے 28اہلکاروں سمیت 198افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں۔جموں کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 7695 تک پہنچ گئی ہے جن میں سے 1630جموں جبکہ 6065متاثرین کا تعلق کشمیر سے ہے۔ 198متاثرین میں سے 32سرینگر، 49بارہمولہ، ایک کولگام، 32شوپیان، 8اننت ناگ، 16کپوارہ، 24پلوامہ، 6بڈگام، 11گاندربل، 11جموں، ایک ادھمپور، 2سانبہ،2راجوری اور 3ڈوڈہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ 

مزید 5امواتیں

جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کا سلسلہ یکم جولائی کو بھی جاری رہا اور وائرس نے6افراد کو نگل لیا جن میں سے ایک جموں جبکہ 5کشمیر میں فوت ہوئے ۔ بدھ کو کشمیر میں فوت ہونے والے 5افراد میں سے 3 سکمز صورہ جبکہ 2معمر افراد سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ میں فوت ہوئے ۔ سکمز صورہ کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’عید گاہ سرینگر سے تعلق رکھنے والی 50سالہ خاتون فوت ہوگئی‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ مذکورہ خاتون کوہائی بلڈ پریشر، تھائروڑ اور دیگر بیماریوں کی وجہ سے معقدی امراض کے شعبہ میں 19جون کو داخل کیا گیا‘‘۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ کنڈی کپوارہ سے تعلق رکھنے والی ایک 50سالہ خاتون بھی وائرس کی وجہ سے فوت ہوگئی ۔ خاتون کا ایک پھپھڑا کینسر مرض سے خراج ہوچکا تھا جسکی وجہ سے وہ خون کی کمی کی شکار تھی۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ خاتون کو 27مئی کو  اسپتال میں داخل کیا گیا اور اس کی رپورٹ بھی مثبت آئی تھی‘‘۔ ڈاکٹر جان نے بتایا کہ سکمز میں بدھ کو ہونے والی تیسری موت شانگس اننت ناگ کے رہنے والے ایک 45سالہ شخص کی ہوئی ۔ فوت ہونے والے شخص کی رپورٹ 28جولائی کو مثبت آئی تھی لیکن وہ بدھ کو حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے فوت ہوگیا۔سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ مین بھی 2معمر شخص وائرس کی وجہ سے فوت ہوگئے ۔میڈیکل سپر انٹنڈ نٹ ڈاکٹر سلیم ٹاک نے بتایا ’’ اسپتال میں 2 مریضوں کی موت ہوئی جن میں ایک کا تعلق سوپور بارہمولہ جبکہ ایک کا تعلق بجبہاڑہ سے ہے ‘‘۔ڈاکٹر سلیم  نے بتایا ’’ دونوں کی عمر70سال سے زیادہ تھی جبکہ دونوں مریضوں کو نمونیا اور دیگر امراض کی شکایت تھی ۔ان کا کہناتھا کہ دونوں مریضوں کو24جون کے روز اسپتال میں داخل کیا گیا تھا ۔معلوم ہوا ہے کہ 72سالہ بجبہاڑہ مریض کی موت گزشتہ شب اسپتال میں ہوئی ۔ادھر کمانڈ اسپتال ادھمپور میںشمع چیک علاقے سے تعلق رکھنے والا ایک 54سالہ شخص بھی کورونا وائرس سے فوت ہوگیا ہے۔ 

سکمز صورہ

سکمز صورہ کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’ پچھلے24گھنٹوں کے دوران2550نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں 85مثبت جبکہ 2465افراد کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر فاروق جان نے بتایا ’’85متاثرین میں سے 29شوپیان، 15سی آر پی ایف،15پلوامہ، 9سرینگر6اننت ناگ،2بڈگام،1کپوارہ، 1کولگام،1کولگام،3بارہمولہ،1گاندربل اور 3کا تعلق ممبئی سے ہے۔ ڈاکٹر جان نے بتایا ’’ شوپیان کے 29متاثرین میں سے 5بابا پورہ، 2حرمین،2کنگنو،4خواجہ پورہ،2ریبن،6کیگام،کیگام میں تعینات 3سی آر پی ایف اہلکار،  ایک ڈائیرو، ایک بابا پورہ، ایک پنجورہ اور ایک عالم گنج سے تعلق رکھتا ہے‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ سی آر پی ایف کے 15اہلکاروں میں سے185بٹالین سی آر پی ایف پلوامہ کے 6،2ایس او جی کیمپ پنزگام،177بٹالین سی آر پی ایف سوپور ایک اہلکار، 162بٹالین سی آر پی ایف کپوارہ کا ایک اہلکار اور 181بٹالین سی آر پی ایف چرار شریف کا ایک اہلکار شامل ہیں۔ ڈاکر جان نے بتایا ’’ پلوامہ کے 15متاثرین میں سے 4 درکہ لرن ابہامہ،2مغل پورہ پلوامہ، 3ٹینگہ ہار  اور 2کاکہ پورہ پلوامہ سے تعلق رکھتے ہیں۔  انہوں نے کہا کہ سرینگر کے 9متاثرین میں سے  ایک نہرو پارک، ایک کرالہ پورہ ، ایک وزیر باغ ، ایک برزلہ ،2 الاہی باغ اور ایک کا تعلق  خانیار سرینگر سے ہے‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ اننت ناگ کے 6متاثرین میں سے  ایک شرہامہ ، ایک اسوارہ  اور 3ویری ناگ اننت ناگ سے تعلق رکھتے ہیں۔  انسٹی ٹیوٹ کے شعبہ عوامی رابطہ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار میںبتایا گیا ہے کہ ابتک کل763مشتبہ مریضوں کا داخلہ کیا گیا جن میں سے553مریضوں کو قرنطینہ کی مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ کردیا گیا جبکہ66مثبت قرار دئے گئے مریضوں کو گھر بھیجا گیا ہے۔ابتک120319نمونوں کی تشخیص کی گئی ہے جن میں سے116155کو منفی قرار دیا گیا ہے جبکہ1467مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔

سی ڈی اسپتال

سی ڈی اسپتال میں پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 86افراد کے نمونے مثبت آئیں ہیں  جن میں سے 23ایس ڈی ایچ سوپور، 3جی ایم سی بارہمولہ، 9گاندربل، 92بیس اسپتال کا ایک اہلکار، صدر اسپتال سرینگر میں 8،2 بون اینڈ جوئنٹ اسپتال،2سی ڈی اسپتال, 3ایس ڈی ایچ پٹن، 5ایس دی ایچ کریری، 5ایس ڈی ایچ ہندوارہ، 2کیمونٹی ہیلتھ سینٹر کپوارہ،4کیمونٹی ہیلتھ سینٹر کرالہ پورہ، 10جی ایم سی بارہمولہ شامل ہے۔جی ایم سی ذرائع نے بتایا کہ متاثرین میں 14ماہ اور 2سالہ کمسن بچوں ، 3پولیس اور ایک فوجی اہلکار شامل ہیں۔ سی ڈی اسپتال میں موجود ذرائع نے بتایا ’’ گاندربل کے متاثرین میں سے پولیس اسٹیشن شادی پورہ 5پولیس اہلکار، ڈی پی ایل بارہمولہ کے 4اہلکار، آرمڈ پولیس کی14بٹالین کے 2پولیس اہلکاراور بی ایس ایف بارہمولہ 90بٹالین کے 2اہلکار بھی شامل ہیں۔ 

جے وی سی سرینگر

 پرنسپل سیکمز میڈیکل کالج ڈاکٹر ریاض احمد ایتو نے بتایا ’’ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران543نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 15مثبت جبکہ 528افراد کے نمونے منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر ریاض نے بتایا’’ 15متاثرین میں سے 3بڈگام اور 12سرینگر شہر سے تعلق رکھتے ہیں‘‘۔ ڈاکٹر  نے بتایا ’’ بڈگام کے 3متاثرین میں سے 3چاڈورہ بڈگام سے تعلق رکھتے ہیں‘‘۔ڈاکٹر ریاض نے بتایا’’ سرینگر شہر کے 12متاثرین میں سے 4ایس آر گنج، 2دانہ مزار ، ایک خانیار، ایک بژہ پورہ،  ایک چنار کالونی باغات، ایک رعناواری، ایک دلال محلہ اور ایک ہیرون سے تعلق رکھتا ہے۔‘‘  

جموں 

جموں صوبے میں پچھلے24گھنٹوں کے دوران19افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں جن میں سے 7کرشنا لیبارٹری،10جی ایم سی جموں،ایک کمانڈ اسپتال جموں اور ایک کی رپورٹ ایس آر ایل  سے مثبت آئی ہے۔ 

حکومتی بیان

حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے198نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے179کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 19کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد7,695تک پہنچ گئی ہے۔ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے7,695ت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 2,734سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک4,856اَفراد شفایاب ہوئے ہیں ۔جموں وکشمیر میں کوروناوائرس سے مرنے والوں کی تعداد105تک پہنچ گئی ،جن میں سے 92کا تعلق کشمیر   صوبہ سے اور13کاتعلق جموں صوبہ سے ہیں۔اِس دوران بدھ کو مزید134مریض صحتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے08 اور کشمیر صوبے کے 126اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 3,71,486ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  یکم؍جولائی2020ء کی شام تک 3,63,791نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک2,85,126افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 40,118اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ35 اَفراد کو ہسپتال قرنطین میں رکھا گیا ہے۔2,734کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ46,475 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔ پھیلائیں اور نہ اُن پر کان دھریں۔
 

 فورسز کے مزید 28اہلکار متاثر

پر ویز احمد
 
سرینگر// وادی میںبدھ یکم جولائی کو پولیس و فورسز کی مختلف ایجنسیوں سے وابستہ مزید 28اہلکار وں میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔اسکے ساتھ ہی وادی میں کورونا وائرس سے متاثرہ پولیس و فورسز اہلکاروں کی تعداد616پہنچ گئی ہے۔بدھ کوضلع پولیس لائنز بارہمولہ کے 4 اہلکار، آرمڈ پولیس 14بٹالین کے 3اہلکار،پولیس سٹیشن شادی پورہ گاندربل کے 5اہلکار اور پولیس ٹاسک فورس کیمپ پنجگام پلوامہ کے 2اہلکاروں سمیت 14اہلکار متاثر قرار دیئے گئے ہیں۔اس طرح وادی میں مجموعی طور پر متاثرہ پولیس اہلکاروں کی تعداد249تک پہنچ گئی ہے۔بدھ کوسی آر پی ایف 185بٹالین پلوامہ کے 6، 177بٹالین سوپور کا ایک،162بٹالین کپوارہ کا ایک،181بٹالین چرار شریف کا ایک اور کیگام شوپیان سی آر پی ایف کیمپ کے 3 اہلکاروں میں بھی وائرس پایا گیا۔اس طرح متاثرہ سی آر پی ایف کی مجموعی تعداد272 ہوگئی ہے۔بادامی باغ میں ایک اور فوجی وائرس میں مبتلا پایا گیا اس طرح فوجی اہلکاروں کی تعداد 51ہوگئی ہے۔بدھ کو ہی بی ایس ایف 90بٹالین بارہمولہ کے 2اہلکار بھی مثبت پائے گئے ، یوں متاثرہ بی ایس ایف اہلکاروں کی تعداد 25ہوگئی ہے۔19 بیکن اہلکار اورسی آئی ایس ایف کا ایک اہلکار بھی وائرس سے متاثر ہوا ہے۔

تازہ ترین