تازہ ترین

۔1850میگاواٹ والا سا ولہ کو ٹ پر وجیکٹ تا خیر کا شکا ر

محکمہ جنگلات و ماحولیات سے اجازت ملی نہ سڑکوں،پلوں اور ٹنلوں کاکام ہوسکا

تاریخ    30 جون 2020 (00 : 03 AM)   


ا یم ایم پر ویز
رام بن //ضلع رام بن میں دریا ئے چنا ب پر بغلیہار پن بجلی سے بھی زیادہ صلاحیت والے 1850میگا واٹ سا ولہ کوٹ ہا ئیڈرو الیکٹرک پرو جیکٹ پر کام متواتر جمود کاشکار ہے ۔ حالانکہ مر کزی وزارت برائے جنگلات و ما حولیات کی جا نب سے ابھی ہر ی جھنڈی نہیں ملی ہے، تا ہم اس پر وجیکٹ کی را بطہ سڑکو ں، پلوں اور ٹنلوں پر کا م پچھلے کئی سا ل سے سست رفتا ری سے جا ری ہے۔ریا ستی پولو شن کنٹرول بورڈ اور ضلع انتظا میہ کے ا فسروں نے پر وجیکٹ کی زد میں آ نے والے شہریوں کے ساتھ تبا دلہ خیال کر نے کے لئے اب تک کئی مشترکہ اجلا س بھی منعقد کئے گئے، جن میں متا ثرین کی نقل مکا نی اور دوسری جگہوں پر با ز آ با د کاری کے حوالے سے تما م متبادل زیر غور لائے گئے تاہم ہر کام میں تاخیر کی جارہی ہے۔غرض ہر کام کچھوے کی چال کے مطابق ہورہاہے جس سے منصوبہ کی تعمیر پر لاگت کا تخمینہ بڑ ھ جانے کا امکان ہے جس کا ا ثر آئندہ بر سوں میں ظا ہر ہو نا شروع ہوجائے گا۔اگر چہ جموں کشمیر کو بجلی کے شعبے میں خود کفیل بنانے اوربجلی کی قلت کو پورا کرنے کیلئے بہت باروعدے کئے گئے مگر کبھی سنجیدہ کوششیں نہیں ہوئیں اور نہ ہی کوئی ٹھوس لا ئحہ عمل تر تیب دیاگیاجس کا خمیا زہ لوگوں کو سات دہائیوں سے بھگتناپڑرہاہے ۔جمو ں وکشمیر میں بہنے والے در یا تقر یبا 18000میگا وا ٹ سے زیا دہ بجلی پید ا کر نے کی صلاحیت رکھتے ہیں لیکن یہ صلاحیتیں آج تک بروئے کار نہیں لائی جاسکیں جو مقا می لوگوں، سما جی تنظیمو ں کے عہدیداروں کیلئے تشویش کا باعث ہے ۔ضلع را م بن کے تعلیم یا فتہ اور ہنر مند بے روز گا ر نو جوانوں کے سا تھ سا تھ مقا می سیا سی و سماجی جما عتوں کے کارکنان نے پرو جیکٹ کی تعمیر پر ہو نے والی تا خیر پربرہمی کا اظہار کیاہے۔ ان کاکہناہے کہ پروجیکٹ کی قیمت بھی بڑھ جائے گی اور بجلی کی قلت کا مسئلہ بھی حل نہیں ہوسکے گا۔ انہوں نے کہاکہ اگر اس پر و جیکٹ کی تعمیرکاکام شروع ہوجائے تو ضلع میں بڑ ھتی ہوئی بے ر و ز گا ری پر بڑ ی حد تک قا بو پا نے کے علا وہ بجلی کی قلت بھی دور ہو جا ئے گی۔