تازہ ترین

غذائی اجناس کی پیداوار میں اضافہ کرنے پر چیف سیکریٹری کازور

ریاستی غذائی تحفظ مشن کی عمل آوری کیلئے محکموں کے درمیان تال میل کی ہدایت

تاریخ    18 جون 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک
 جموں //چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے ریاستی غذائی تحفظ مشن کی ایگزیکٹو کمیٹی کی میٹنگ کی صدارت کی ۔ میٹنگ کا انعقاد قومی غذائی تحفظ مشن کی حصولیابیوں بالخصوص تلہن اور درختوں سے حاصل کئے جانے والے تیل کے شعبے میں درج کی گئی ترقی کا جائیزہ لینے کیلئے کیا گیا ۔ خزانہ ، زراعت ، بجلی ، سماجی بہبود ، جنگلات ، ماحولیات ، دیہی ترقی ، پنچائتی راج محکموں کے انتظامی سیکرٹری اور مختلف محکموں کے ناظمین سکاسٹ جے کے وائس چانسلر ، نبارڈ اور لیڈ بنکوں کے نمائندگان میٹنگ میں موجود تھے ۔ کسانوں کی آمدن دوگنی کرنے کے مشن کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے غذائی اجناس اور تلہن کی پیداوار میں اضافہ کرنے پر زور دیا ۔ چیف سیکرٹری نے متعلقہ افسروں کو آب و ہو سے موافقت رکھنے والی فصلوں کیلئے کلسٹر طریقہ کار اختیار کرنے ، لازمی بنیادی ڈھانچہ قائم کرنے اور کسانوں کو ذیلی امداد فراہم کرنے ، مختلف بازاروں تک بہتر سڑک رابطہ سہولت فراہم کرنے کیلئے کہا ۔ ریاستی غذائی تحفظ مشن کی عمل آوری کمیٹی نے چیف سیکرٹری کی رہنمائی میں مالی سال 2020-21 کیلئے 16.53 کروڑ روپے کے سالانہ ایکشن پلان کو منظوری دی ۔ بعد میں راشٹریہ کرشی وکاس یوجنا کی ریاستی سطح کی منظوری کمیٹی کی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے سکیم کے مختلف پہلوؤں کی عمل آوری کیلئے محکموں کے مابین بہتر تال میل پر زور دیا ۔ انہوں نے تمام انتظامی سیکریٹریوں اور متعلقہ محکموں اور شعبوں بشمول باغبانی ، پشو پالن ، ماہی پالن ، بھیڑ پالن ، زراعت ۔ جنگلات اور وائلڈ لائف وغیرہ کے ناظمین پر مشتمل سٹیرنگ کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت دی ۔چیف سیکرٹری نے ایگرو فارسٹری کمیٹی تشکیل دینے کی بھی ہدایت دی جو زراعت ، جنگلات ، ماحولیات ، دیہی ترقی ، پنچائتی راج محکموں اور پرنسپل چیف کنزرویٹر فارسٹ پر مشتمل ہو گی ۔ کمیٹی ایگرو فارسٹری کو درپیش مشکلات اور اس کی صلاحیت کا جائیزہ لے گی ۔ انہوں نے محکمہ جنگلات کو سفیدے اور یوکلیپٹس جیسے درختوں کی بوائی اور کٹائی کے قواعد و ضوابط کو منظم کرنے کیلئے کہا اور اس ضمن میں فیلڈ اہلکاروں کو جاری رہنما خطوط پر سختی سے عمل پیرا رہنے کی ہدایت دینے کیلئے کہا ۔ دورانِ میٹنگ زراعت ، باغبانی اور پھولبانی محکموں کو بہتر آمدن بخش فصلوں کی کاشت میں جدت لانے اور پالی ہاوس ، ڈرپ ایری گیشن اور بہتر کھادوں کو متعارف کرنے کیلئے کہا گیا ۔ راشٹریہ کرشی وکاس یوجنا کی ریاستی سطح کی منظوری کمیٹی نے چیف سیکرٹری کی رہنمائی میں سال 2020-21 کیلئے 75.80 کروڑ روپے کا سالانہ ایکشن پلان منظور کیا ۔ اس موقعہ پر بتایا گیا کہ محکمہ زراعت اور  دیگر متعلقہ محکموں کی 2020-21 کیلئے سرگرمیوں میں کووڈ 19 وباء کے زراعت اور اس سے منسلک شعبوں پر منفی اثرات کو کم کرنے اور مارکیٹنگ بنیادی ڈھانچہ قائم کرنا شامل ہو گا ۔