سرینگرمیں پی ڈی پی لیڈر،کوکرناگ میں پنچوں و سرپنچوں کا احتجاج

تاریخ    10 جون 2020 (00 : 03 AM)   
(عکاسی: امان فاروق)

عارف بلوچ
سرینگر+اننت ناگ// جنوبی کشمیر میں سرپنچ کی ہلاکت کے خلاف پی ڈی پی لیڈرانجینئرنذیر احمد ایتو نے احتجاج کرتے ہوئے نامعلوم بندوق برداروں کا پتہ لگانے کا مطالبہ کیا۔ پی ڈی پی لیڈر نذیر احمد ہاتھوں میں پلے کارڈ لئے منگل کو سرینگر کی پریس کالونی میں نمودار ہوئے ۔پلے کارڈ پر”ہم امن چاہتے ہیں،خون ریزی بند کرو“ نعرے درج تھے۔ اس موقع پر انہوں نے گھنٹہ گھر کی طرف پیش قدمی کی کوشش کی لیکن پولیس نے انہیں اس کی اجازت نہیں دی۔ اس موقعہ پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے پی ڈی پی لیڈر نے اننت ناگ میں پنڈت سرپنچ کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وہ احتجاج کرتے ہوئے یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ کشمیری فرقہ پرست نہیں ہیںبلکہ وہ ہر ایک ہلاکت کی مذمت کرتے ہیں۔ اس دوران کوکر ناگ میں ایس ڈی ایم آفس کے سامنے بی ڈی سی چیئرمین کے ہمراہ پنچوں و سرپنچوں نے خاموش احتجاج کرتے ہوئے سیکورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ۔احتجاجی پنچایت ممبران کا کہنا تھا کہ رواں سال میں یہ دوسری پنچایت ممبر کی ہلاکت ہے جس کے سبب وہ لوگ عدم تحفظ کا شکار ہیں ۔ اُنہوں نے کہا کہ وہ دیہی علاقوں میں سرکاری مشینری کے شانہ بشانہ کام کر رہے ہیں تاہم حکومت پنچایت ممبران کے تئیں سنجیدہ نظر نہیں آرہی ہے ۔اُنہوں نے مطالبہ کیا کہ اُنہیں معقول رہائش کے ساتھ ساتھ سیکورٹی فراہم کی جائے ۔
 

تازہ ترین