بجبہاڑہ میں خاتون نے سر راہ بچے کو جنم دیا:لواحقین

الزامات بے بنیاد:ڈاکٹر

تاریخ    4 جون 2020 (00 : 03 AM)   


عارف بلوچ
اننت ناگ//بجہباڑہ کووِڈ اسپتال میں زیر علاج حاملہ خاتون نے ڈاکٹروں کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے بچے کو اسپتال کے صحن میں جنم دیا  ۔ کووِڈ- 19 اسپتال بجبہاڑہ میں بدھ کی دوپہر اُس وقت ہنگامہ آرائی شروع ہوئی جب یہاں (نام مخفی )کووِڈ پازٹیو حاملہ خاتون نے بچے کو جنم دیا جس کے بعد مریض کے اہل خانہ و دیگر تیمارداروں  نے اسپتال عملہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹروں کی عدم توجہی کے باعث خاتون نے بچے کو اسپتال کے صحن میں جنم دیا ، جس کے باعث اُسکی حالت خراب ہوگئی اور اُس سے سرینگر منتقل کرنا پڑا  ۔اسپتال میں موجود مریض اور دیگر تیمار داروں نے اسپتال عملہ پر الزام عائد کیا کہ اُنہوں نے مریض کی جانب کوئی توجہ نہیں دی جس کے باعث خاتون نے اسپتال کے صحن میں بچے کو جنم دیا اور کافی خون ضائع ہونے کے باعث مریضہ کی حالت کافی خراب ہوگئی اور اُسے نازک حالت میں سرینگر منتقل کرنا پڑا  ۔اسپتال کے میڈیکل سپریڈنٹ ڈاکٹر شوکت اعجاز اور ڈاکٹر فوزیہ نے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ مریض کافی دنوں سے اسپتال میں زیر علاج تھی جس دوران اُس کا باضابط طور پر ملاحظہ ہورہا تھا اور بدھ کو خاتون نے نارمل حالت میں بچے کو جنم دیا ہے ،اُنہوں نے اسپتال کے صحن میں بچے کو جنم دینے کے الزام کو یکسر مسترد کیا ہے ۔
 

تازہ ترین