مزید 2اموات، تعداد 33

جموں وکشمیر میں ڈاکٹر،14حاملہ خواتین، 2پولیس اہلکاروں سمیت 117کا اضافہ

تاریخ    3 جون 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
 سرینگر //وادی میں مزید 2کورونا وائرس مریضوں کی موت کے بعد جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد33ہوگئی ہے ۔وائر س سے فوت ہونے والے افراد میں 4جموں جبکہ 29کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر میں شعبہ امراض چھاتی کے سربراہ ڈاکٹر، 14حاملہ خواتین اور2پولیس اہلکاروں سمیت 117مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں اور اسطرح جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مریضوں کی تعداد 2718ہوگئی ہے جن میں 642جموں جبکہ 2076افراد کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ منگل کو مثبت قرار دئے گئے 117مریضوں میں سے 15سرینگر، 11کولگام، 10کپوارہ،7بارہمولہ، 7شوپیان، 5بانڈی پورہ،8 بڈگام، 14پلوامہ، 13جموں، 9رام بن، 2کٹھوعہ،2ادھمپور، ایک سانبہ، 9پونچھ،3راجوری اور ایک کا تعلق ڈوڈہ سے ہے۔ 

شمالی کشمیر میں کورونا سے 2اموات

سرحدی ضلع لولاب سے تعلق رکھنے والے25سالہ گھاٹ منشی پیر کو صدر اسپتال سرینگر میں فوت ہوگیا۔ جی ایم سی ترجمان ڈاکٹر محمد سلیم خان نے بتایا ’’ لولاب سے تعلق رکھنے والے ایک 27سالہ نوجوان کو نمونیا اور چھاتی کے مختلف امراض کیلئے صدر اسپتال منتقل کیا گیا لیکن اسپتال میں داخلے کے چند گھنٹوں بعد وہ فوت ہوگیا‘‘۔ڈاکٹر سلیم خان نے بتایا ’’ کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ آنے تک لاش کو اپنی تحویل میں رکھا گیا  اور منگل کو رپورٹ آنے کے بعد لاش کو  تدفین کیلئے لواحقین کے حوالے کردیا گیا ‘‘۔ بارہمولہ ضلع اسپتال میں پیر اور منگل کی درمیانی شب کو ایک55 خاتون کورونا وائرس کی وجہ سے فوت ہوگئی ہے۔ضلع اسپتال بارہمولہ میں ڈاکٹروں نے بتایا کہ مذکورہ خاتون کو پیر اور منگل کی درمیانی شب اسپتال لایا گیا جو دم توڑ چکی تھی لیکن ڈاکٹروں نے لاش کو اپنی تحویل میں لیکر نمونہ تشخیص کیلئے بھیجا جسکی رپورٹ مثبت آئی ہے‘‘۔ اسپتال میں تعینات ڈاکٹروں نے بتایا کہ مذکورہ خاتون کا داماد 27مئی کو کورونا وائرس کی وجہ سے فوت ہوگیا تھا ۔ 

سی ڈی اسپتال

میڈیکل کالج سرینگر ترجمان ڈاکٹر محمد سلیم خان نے بتایا ’’پچھلے 24گھنٹوں کے دوران500نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 44مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں جبکہ 456نمونے منفی قرار دئے گئے‘‘۔ ڈاکٹر سلیم خان نے بتایا ’’ 52میں سے4بارہمولہ،11پلوامہ، 10قاضی گنڈ کولگام،5بانڈی پورہ،8کپوارہ اور 2کا تعلق بڑگام ضلع سے ہے۔ڈاکٹر سلیم خان نے بتایا کہ 44افراد میں 14حاملہ خواتین اور ڈی پی ایل کپوارہ میں تعینات دو پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔ 

سکمز صورہ

 میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے بتایا ’’ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 858مشتبہ مریضوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے22کی رپورٹیں مثبت آئیں جبکہ 836منفی قرار دی گئی‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا ’’22مریضوں میں سے 14سرینگر، 3شوپیاں،2بارہمولہ، ایک کپوارہ، ایک پلوامہ اور ایک کا  بڑگام سے تعلق رکھتا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا’’ سرینگر ضلع کے 14مریضوں میں6صفاکدل،ایک بھاگوان پورہ حول، ایک علمگری بازار، ایک پرے پورہ حیدر پورہ، ایک بمنہ سرینگر، ایک لال بازار، ایک بٹہ کدل اور ایک کا تعلق ملفک حضرت بل سے تعلق رکھتا ہے‘‘۔ڈاکٹر جان نے بتایا کہ اس کے علاوہ 3رام نگری شوپیاں، منی گام کپوارہ میں ایک اور ہٹوارہ پلوامہ سے ایک تعلق رکھتا ہے‘‘۔ انسٹی ٹیوٹ کے شعبہ عوامی رابطہ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے اعدادوشمار میںبتایا گیا ہے کہ ابتک کل484مشتبہ مریضوں کا داخلہ کیا گیا جن میں سے417مریضوں کو قرنطینہ کی مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ کردیا گیا جبکہ52مثبت قرار دئے گئے مریضوں کو گھر بھیجا گیا ہے۔ ابتک52933نمونوں کی تشخیص کی گئی ہے جن میں سے52068کو منفی قرار دیا گیا ہے جبکہ883مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں۔ 

جے وی سی

سکمز میڈیکل کالج پرنسپل ڈاکٹر ریاض احمد ایتو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ شام 6بجے تک80نمونوں کی تشخیص کی گئی  جن میں سے 6مثبت قرار دئے گئے جبکہ 74کی رپورٹیں منفی آئیں ہیں‘‘۔ڈاکٹر ریاض نے بتایا ’’ 6 مریضوں میں سے 4ماگام،ایک چاڈورہ اور ایک 65سالہ خاتون کا تعلق حیدر پورہ سرینگر سے ہے‘‘۔

جموں 

گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں منگل کو مزید 19افراد کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ محکمہ صحت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کمانڈ اسپتال ادھمپور میں 19، 2مارڈر لیبارٹری اورآئی آر ایل سرینگر میں مزید 2افراد کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔ 

حکومتی بیان 

 حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے117نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے77کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 40 کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد2,718تک پہنچ گئی ہے۔حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے2,718 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 1,732سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک 953اَفراد شفایاب ہوئے ہیںاور33اَفراد کی موت واقع ہوئی ہے ۔اِس دوران منگلو کو مزید07 مریض صحتیاب ہوئے ہیںجن میںجموں صوبے کے04 اور کشمیر صوبے کے 03 اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 1,83,067ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے  02؍جون2020ء کی شام تک 1,80,349نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔علاوہ ازیں اب تک1,85,119افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا سفر ی پس منظر ہے اور جو مشتبہ معاملات کے رابطے میں آئے ہیں۔ ان میں 43,635 اَفراد کو ہوم قرنطین میں رکھا گیا ہے جس میں سرکار کی طرف سے چلائے جارہے قرنطین مراکز بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ43 اَفراد کو ہسپتال قرنطین میں رکھا گیا ہے۔1,732کو ہسپتال آئیسولیشن میں رکھا گیا ہے جبکہ 50,220 اَفراد کو گھروں میں نگرانی میں رکھا گیا ہے۔اسی طرح بلیٹن کے مطابق89,456اَفرادنے 28روزہ نگرانی مدت پوری کی ہے۔بلیٹن کے مطابق ضلع اننت ناگ میں 349 مثبت معاملے سامنے آئے ہیںجن میں 218 سرگرم ہیں۔ 126 شفایاب ہوئے ہیں اور05 کی موت واقع ہوئی ہے۔کولگام میں311 مثبت معاملات پائے گئے ہیںجن میں275سرگرم معاملات ہیںاور 32صحتیاب ہوئے ہیںاور04 کی موت واقع ہوئی ہے۔اُدھر سری نگر میں اب تک کورونا وائرس کے 305 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں سے157 سرگرم معاملات ہیں ۔141 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ07 کی موت واقع ہوئی ہے جبکہ کپواڑہ میں 289مثبت معاملات درج کئے گئے ہیں اور 212 سرگرم معاملات ہیں اور76صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔
ضلع بارہمولہ میں اب تک کورونامریضوں کی تعداد 245ہوئی ہیںجن میں سے 136سرگرم معاملات ہیں اور06مریضوں کی موت واقع ہوئی ہیںاور 103صحتیاب ہوئے ہیں۔بانڈی پورہ میں اب تک 151 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے16 سرگرم معاملات ہیں ، 134مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع شوپیان میں 181 مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 70 سرگرم ہیں اور 108صحتیا ب ہوئے ہیںجبکہ 03کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بڈگام میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کُل تعداد اب تک 119ہوئی ہیںجن میں سے 56سرگرم ہیں اور61اَفراد صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ02 کی موت واقع ہوئی ہے ۔گاندربل میں کل 34مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں10 سرگرم معاملات ہیں اور 24 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔پلوامہ ضلع میں کووِڈ ۔19کے 92 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں79 سرگرم معاملات ہیں اور 13  مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔اسی طرح  جموں میں وائر س کے 157مثبت معاملات پائے گئے ہیں جن میں114سرگرم معاملات ہیں اور41 صحت یاب ہوئے ہیںاور02 کی موت واقع ہوئی ہیجبکہ رام بن میں153معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 137سرگرم معاملات ہیں اور16 شفایاب ہوئے ہیںجبکہ کٹھوعہ میں80مثبت معاملہ سامنے آئے ہیںجن میں 53 سرگرم معاملات ہیںاور 27اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں۔دریں اثنأاودھمپور ضلع میں اب تک کورونا مریضوں کی کُل تعداد 69 ہوئی ہیں جن میں سے 42معاملات سرگرم ہیں۔ 26اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع سانبہ میں 45 مثبت معاملے کی تصدیق ہوئی ہے جن میں 32 سرگرم معاملات ہیں اور 13اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔اس طرح پونچھ میں49معاملے سامنے آئے ہیںجو سبھی معاملات سرگرم ہیں ۔راجوری ضلع میں کورونا کے اب تک36 مریض پائے گئے ہیںجن میں 31 معاملے سرگرم ہیں اور 05مریض شفایاب ہوئے ہیں اورریاسی میں بھی14 معاملات سامنے آئے ہیں جن میں11سرگرم ہیں اور03 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔ کشتواڑ میں12 مثبت معاملے سامنے آئے ہیں جن میں09 معاملے سرگرم ہیں اور03 مریض پوری طرح سے صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ڈوڈہ میں 27 معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے 25معاملات سرگرم ہیں جبکہ ایک مریض پوری طرح صحتیاب ہوا ہے اور ایک مریض کی موت واقع ہوئی ہے۔
 
 
 
 

پولیس کے مزید 2اہلکار متاثر

 تعداد 119تک پہنچ گئی

پرویز احمد
 
سرینگر // ڈسٹرکٹ پولیس لائنز کپوارہ کے 2پولیس جوان کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں۔ اس طرح وادی میں کورونا متاثرین پولیس اہلکاروں کی تعداد 119تک پہنچ گئی ہے۔ میڈیکل کالج ترجمان ڈاکٹر محمد سلیم خان کے مطابق کپوارہ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز کی جانب سے سی ڈی لیبارٹی کو 2نمونے بھیجے گئے جو مثبت قرار پائے۔معلوم ہوا ہے کہ پولیس لائنز میں تعینات ایک پولیس اہلکار جموں  کا ہے جبکہ بٹہ  پورہ ہایہامہ سے تعلق رکھنے والا  ایک ایس بی او بھی وائرس سے متاثر ہوا، جس کی ڈیوٹی ریڈ زون گونی پورہ ہندوارہ میں تھی ، جہاں 44افراد وائرس میں مبتلا پوئے گئے ہیں۔دونوں اہلکاروں کو آئیسولیشن سینٹر منتقل کردیا گیا ہے اور انکے رابطوں کی نشاندہی کی جارہی ہے۔یاد رہے کہ ماگام پولیس سٹیشن میں 8 اور کھٹوعہ پولیس تھانے میں 2اہلکاروں کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعددونوں پولیس سٹیشنوں کو سیل کردیا گیا ہے۔ پولیس اسٹیشن ماگام میں سنیچر  8پولیس اہلکاروں کی رپورٹ مثبت آنے کے بعد پولیس اسٹیشن کو سیل کردیا گیا۔ اس سے قبل بارہمولہ میں5، پولیس لائنز اننت ناگ  میں 78اہلکار، کولگام پولیس خصوصی کیمپ میں 21، دمحال ہانجی پورہ پولیس کیمپ میں ایک، بانڈی پورہ میں 2اہلکاروںکے علاوہ بڈگام پولیس لائنز میں 2اور ماگام پولیس تھانے میں 8اہلکار مثبت قرار پائے گئے ہیں۔
 

لداخ میں کورونا سے پہلی موت

 سابق مرکزی وزیر کا بعد از مرگ ٹیسٹ مثبت آیا

نیوز ڈیسک
 
لیہہ/یو این آئی/ لداخ میں کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق مرکزی وزیر پی نمگیال کا موت کے بعد کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔ ان کا پیر کو یہاں مختصر علالت کے بعد 83 برس کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ لداخ یونین ٹریری، جہاں اب تک کورونا وائرس کے 81 مثبت معاملات سامنے آچکے ہیں، میں اس وبا سے متاثرہ کسی مریض کی موت کا یہ پہلا واقعہ ہے۔لداخ حکومت کے ترجمان رگزن سیمفل نے پی نمگیال کی کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کی تصدیق کردی ہے۔ انہوں نے کہا: 'مرحوم لیڈر سے لئے جانیس والے نمونے کی رپورٹ مثبت آئی ہے'۔پی نگمیال کے سبھی افراد خانہ اور سینکڑوں دیگر افراد کو قرنطینہ میں بھیجا گیا ہے کیونکہ مرحوم کی آخری رسومات مبینہ طور پر کووڈ 19 پروٹوکال کے برعکس انجام دی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ مرحوم لیڈر محض دو ہفتے قبل راجدھانی نئی دہلی سے لوٹے تھے اور یہاں انتقال سے قبل یا بعدمیںان کے رابطے میں آنے والے سبھی افراد کا کورونا وائرس ٹیسٹ کیا جائے گا۔ لداخ میں اب تک کورونا کے 81 کیسز سامنے آچکے ہیں جن میں سے 33 ایکٹو ہیں جبکہ 47 متاثرہ افراد صحت یاب ہونے کے بعد ہسپتالوں سے رخصت کئے جاچکے ہیں۔
 

 آیئسو لیشن سینٹر سے نوجوان فرار،گھر پہنچنے سے قبل پکڑا گیا 

کپوارہ/اشرف چرا غ /پتو شئے لولاب کے آیئسو لیشن سنٹر میں کورونا میں مبتلا ایک مریض فرار ہو گیا ، تاہم انتظامیہ نے فوری کارروائی کرتے ہوئے اسے ہندوارہ سے پکڑ کر دوبارہ آیئسو لیشن سنٹر میں دا خل کیا گیا ۔معلوم ہوا ہے کہ یمرل راجواڑ کا ایک نوجوان، جو بیرون ریاست میں مزدوری کرتا تھا، 16مئی کو واپس گھر لو ٹ آ یا ، لیکن اسے پتوشئے لولاب کے جو ہر یہ ودھالیہ سکول قرنطین سنٹر میں رکھا گیا اور اس کے نمونے حاصل کئے گئے ۔29مئی کو مذکورہ نوجوان کا ٹیسٹ مثبت آ یا ۔منگل کی صبح نماز فجر کے وقت مذکورہ نوجوان نے ائیسولیشن سینٹر میں تعینات  عملے کو چکمہ دیا اور وہاں سے فرار ہو ا ۔بتا یا جاتا ہے کہ انتظامیہ کو اس کے فرار ہونے کی اطلاع جونہی ملی تو محکمہ صحت کی ایک ٹیم کو فوری طور راجواڑ روانہ کیا گیا تاہم گھر پہنچنے سے قبل ہی اسے وڈی پورہ ہندوارہ کے مقام پر پکڑ کر دوبارہ پتوشے لولاب آیئسو لیشن سنٹر میں دا خل کیا گیا ۔ مذکورہ نوجوان کیخلاف کیس زیر نمبر 66/2020درج کیا گیا ہے۔
 

سرینگر میں بھی 300کا ہندسہ عبور

سرینگر /پر ویز احمد/ منگل کو سرینگر ضلع میں مزید 15افراد مثبت قرار دیئے گئے، اس طرح ضلع میں متاثرین کی تعداد 300سے متجاوز کر گئی۔ سرینگر  سے زیادہ اننت ناگ اور کولگام میں زیادہ کیسز ہیں۔ سرینگر ضلع میں  مثبت معاملات کی تعداد 305تک پہنچ گئی ہے۔ سب سے زیادہ کیسز اننت ناگ ضلع کے ہیں جن کی تعداد 349ہے۔ اسکے بعد کولگام ضلع کا نمبر آتا ہے جہاں کیسز کی تعداد 311ہے۔
 

تازہ ترین