لولاب کے جواں سال شہری سمیت مزید2 کورونا ہلاکتیں،تعداد 33

تاریخ    2 جون 2020 (52 : 02 PM)   
(File Pic)

نیوز ڈیسک
سرینگر//وادی کشمیر میں منگل کو کورونا وائرس نے مزید2شہریوں کی جان لی۔ ان میں بارہمولہ کی ایک بزرگ خاتون اور شمالی کشمیر کے کپوارہ ضلع کا ایک جواں سال شہری شامل ہیں۔ اس طرح مرکز کے زیر انتظام جموں کشمیر میں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی مجموعی تعداد33تک پہنچ گئی ہے۔
جی ایم سی سرینگر میں کورونا کے نوڈل آفیسر ڈاکٹر سلیم خان کا حوالہ دیتے ہوئے خبر رساں ایجنسی جی این ایس نے لکھا کہ 27سالہ لولاب کے شہری کو گذشتہ روز یعنی پیر کو صدر اسپتال میں داخل کیا گیا تھا جہاں وہ جاں بحق ہوگیا جس کے بعد آج اُس کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا  
،۔ڈاکٹر سلیم کے مطابق یہ جموں کشمیر میں کورونا سے ہونے والی سب سے کم عمر شہری کی موت ہے۔ اس سے قبل سرینگر کی ایک 29سالہ خاتون مہلک وائرس کا کم عمر شکار تھی۔
اس سے قبل شمالی کشمیر کے بارہمولہ کی ایک بزرگ خاتون منگل کے روز کورونا سے متاثر ہوکر انتقال کر گئی ۔
خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق مذکورہ خاتون کا تعلق بارہمولہ کے خانپورہ سے تھا اور اُس کا انتقال گذشتہ روز یعنی پیر کو ہوگیا جس کے ایک دن بعد اُس کی کورونا رپورٹ مثبت آگئی۔
جی ایم سی بارہمولہ کے پرنسپل ڈاکٹر سید مسعود کا حوالہ دیتے ہوئے خبر رساں ایجنسی نے لکھا کہ مذکورہ خاتون کئی دیرینہ امراض میں مبتلاءتھی اور آخر کار اُس کا کورونا ٹیسٹ رپورٹ بھی مثبت آگیا۔اُس کی میت کو لاش گھر میں رکھا گیا تھا اور اب اُسے قواعد و ضوابط کے مطابق دفنانے کیلئے ورثاءکے حوالے کیا جائے گا۔
ضلع کمشنر بارہمولہ جی این ایتو کے مطابق مذکورہ خاتون اُس55سالہ شخص کی والدہ نسبتی تھی جو کورونا میں ملوث ہوکر گذشتہ ہفتے انتقال کرگیا۔
آج کی دو ہلاکتوں سے جموں کشمیر میں گذشتہ نو روز کے دوران 11 شہری کورونا کی وجہ سے جاں بحق ہوگئے ہیںجبکہ مجموعی ہلاکتوں کی تعداد33تک بڑھ گئی ہے۔ان میں7کا تعلق سرینگر،6کا تعلق بارہمولہ،5کا تعلق اننت ناگ،4کا تعلق کولگام،2کا تعلق شوپیان، مزید2کا تعلق بڈگام جبکہ ایک کا تعلق بانڈی پورہ اور ایک اور کا تعلق کپوارہ ضلع سے جبکہ باقی ماندہ کا تعلق صوبہ جموں سے تھا۔
 

تازہ ترین