پاکستان کی طرف سے حدمتارکہ پراور کشمیر میں جنگجویانہ سرگرمیوں کو فروغ دینے کی کوشش

کسی بھی ممکنہ حفاظتی چیلنج کا مقابلہ کیاجائیگا،کور گروپ کی میٹنگ میں اقدامات پر تبادلہ خیال

تاریخ    31 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//جموں وکشمیر میں موجودہ صورتحال کے پس منظرمیں چنارکمان کے سربراہ لیفٹنٹ جنرل بی ایس راجو ،اور پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے یہاں کورگروپ کی ایک میٹنگ جس میں سول انتظامیہ ،خفیہ اداروں اور حفاظتی ایجنسیوں کے اعلیٰ حکام شریک تھے،میں حفاظتی صورتحال اور کسی بھی ممکنہ چیلنج سے نمٹنے کیلئے تیاریوں کا جائزہ لیا۔کور گروپ میں کشمیرکی حفاظتی معاملات پرتمام اداروں کو توجہ مزکوزرکھنے کی ضرورت اُجاگر کی گئی ۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ خفیہ اداروں کی اطلاعات کے مطابق پاکستان نے حدتارکہ پردراندازی اور جنگ بندی خلاف ورزیوں میں اضافہ کیا ہے اور کشمیرمیں جنگجویانہ کارروائیوں میں شدت لانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔پاکستان اور اس کے حاشیہ بردار جموں کشمیرمیں غلط معلومات پھیلانے کیلئے سوشل میڈیا پر سرگرم ہیں ۔ کور گروپ نے حدمتارکہ پرمستحکم دراندازی مخالف گرڈ یقینی بنانے پر غور کیاتاکہ کشمیرمیں جنگجوگرڈ کامقابلہ کیاجائے ۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ خفیہ اداروں کی اطلاعات کے مطابق جموں کشمیرمیں تشددمیں اضافہ کرنے کیلئے پاکستان اور قوم دشمن کوششیں کررہے ہیں ۔تنظیموں کے سربراہوں کی حالیہ ہلاکتیں اوربارودی سرنگوں کو ناکارہ بنانے کی کارروائیوں سے ان کی کوششوں کو دھچکا پہنچا ہے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ فورسزکی یہ کامیاب کارروائیاں کشمیری لوگوں کے تعاون سے انجام پائی ۔ صوبائی کمشنر نے منشیات کی اسمگلنگ اور کاشت کوختم کرنے کیلئے انتظامیہ کی کوششوں کاخلاصہ کیااور کووِڈ- 19کا مقابلہ کرنے کیلئے کئے جارہے اقدامات کی جانکاری دی ۔میٹنگ کے دوران سینئرکمانڈروں نے حفاظتی صورتحال پراطمینان کااظہار کیااورجموں کشمیرمیں امن کو برقرار رکھنے کیلئے مسلسل کوششوں پرزوردیا۔  
 

تازہ ترین