ملائیشیا: سابق وزیراعظم مہاتیر محمد کی پارٹی رکنیت منسوخ

تاریخ    30 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


یو این آئی
لندن //ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم مہاتیر محمد کو ان کی سیاسی جماعت سے بے دخل کردیا گیا۔سیاسی جماعت بیراستو کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ’مہاتیر محمد کی رکنیت فوری طور پر منسوخ کی جاتی ہے‘۔واضح رہے کہ مہاتیر محمد بیراستوپارٹی کے شریک بانیوں میں سے ہیں۔رپورٹ کے مطابق پارٹی کے چیئرمین مہاتیر محمد کو ملائیشیا کی حکومت کی حمایت نہ کرنے پر برطرف کیا گیا جس کی سربراہی وزیراعظم محی الدین یاسین کررہے ہیں۔خیال رہے کہ محی الدین یاسین پارٹی کے صدر ہیں۔سوشل میڈیا پر وائرل مراسلے میں پارٹی نے واضح کیا کہ جب گزشتہ ہفتے پارلیمنٹ کا اجلاس ہوا تھا تو مہاتیر محمد اپوزیشن کے ساتھ بیٹھ گئے، انہوں نے ظاہر کردیا کہ وہ پارٹی کے صدر اور وزیراعظم محی الدین کی قیادت کو تسلیم نہیں کرتے، اس طرح وہ خود ہی رکنیت کے دائرے سے باہر ہوگئے۔اس ضمن میں پارٹی کے صدر اور وزیراعظم محی الدین کے قریبی ساتھی نے مراسلے کی تصدیق کی۔دوسری جانب ایک معاون نے بتایا کہ مہاتیر محمد کے دفتر نے فوری تبصرہ کرنے سے گریز کیا کیونکہ انہوں نے خود مراسلہ نہیں دیکھا۔واضح رہے کہ محی الدین کے اس اقدام کو ’تمام اختیارات‘ اپنے پاس رکھنے کی کوشش سمجھا جارہا ہے کیونکہ انہیں اپنی نوزائیدہ وزارت عظمیٰ کے لیے ممکنہ چیلنجز درپیش ہے۔95 سالہ مہاتیر محمد نے رواں برس فروری میں خلاف توقع وزرات عظمیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔
 

تازہ ترین