عالمی کپ 2021 کی میزبانی نہیں جائے گی:بی سی سی آئی

تاریخ    29 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


نئی دہلی/ ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) اور بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) میں ٹیکس استثنی تنازعہ کے درمیان بی سی سی آئی نے کہا ہے کہ ہندستان کے ہاتھوں سے اگلے سال ٹی -20 ورلڈ کپ کی میزبانی چھننے کا کوئی خطرہ نہیں ہے ۔بی سی سی آئی کے خزانچی ارون کمار دھومل نے کہا ہے کہ اس ایونٹ کے لئے ٹیکس چھوٹ حاصل کرنے میں بورڈ کی ناکامی کے باوجود ٹی -20 ورلڈ کپ 2021 کی میزبانی جانے کا خطرہ نہیں ہے ۔ آئی سی سی ایوینٹس منعقد کرنے کے لئے میزبان ممالک کو میزبان معاہدے میں ٹیکس چھوٹ حاصل کرنا ضروری ہوتی ہے اور بی سی سی آئی کو 18 مئی تک تصدیق کرنی تھی کہ اس نے ٹیکس چھوٹ حاصل کر لی ہے ۔کرک انفو نے آئی سی سی اور بي سي سي آئی کے درمیان ای میل کی بات چیت کا حوالہ دیتے کہا تھا کہ اس مسئلے کو لے کر آئی سی سی نے ٹورنامنٹ کو منتقل کرنے کی دھمکی دی ہے ۔دھومل نے حالانکہ کہا کہ یہ ممکن نہیں ہو گا اور بات چیت کے عمل کو جاری رکھیں۔ٹورنامنٹ کو کوئی خطرہ نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ ٹورنامنٹ کے انعقاد کو لے کر کوئی خطرہ نہیں ہے ۔ہم آئی سی سی کے ساتھ اس پر بات چیت کر رہے ہیں اور ہم اس کا حل نکال لیں گے ۔بی سی سی آئی کو اسی طرح کے مسائل کا سامنا پچھلی بار 2016 میں ٹی -20 ورلڈ کپ کی میزبانی میں بھی کرنا پڑا تھا۔بی سی سی آئی نے اس وقت ٹورنامنٹ کی میزبانی کے لئے حکومت سے ٹیکس میں چھوٹ کی مانگ کی تھی مگر بورڈ کی اپیل کے باوجود حکومت کے رخ میں کوئی تبدیلی نہیں آئی تھی۔آئی سی سی کے ترجمان نے کہا کہ عالمی سطح کے کامیاب انعقاد کے لیے اور کرکٹ کے کھیل میں سرمایہ کاری کرنے کے لئے معاہدوں کو طے وقت کی حد میں مکمل کرانا ہماری اجتماعی ذمہ داری ہوتی ہے ۔یو این آئی
 

تازہ ترین