تازہ ترین

کورونا وائرس;دنیا میں 3لاکھ 32ہزارہلاکتیں،51لاکھ متاثر

23 مئی 2020 (00 : 03 AM)   
(      )

 جنیوا//عالمی وبا کورونا وائرس سے دنیا بھر میںکے متاثرین کی تعداد51 لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جبکہ اب تک 3.32 لاکھ سے زیادہ لوگ اس وبا کا شکار ہو چکے ہیں۔دنیا بھر میں سب سے زیادہ متاثر ممالک میں پہلے نمبر پر امریکہ، دوسرے پر روس اور تیسرے پر برازیل ہے ۔امریکہ میں کورونا وائرس سے 15 لاکھ سے زیادہ لوگ متاثر ہوئے ہیں اور اس وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 90 ہزار کے اعداد و شمار کو پار کر چکی ہے۔برازیل میں بھی کورونا وائرس نے بھیانک شکل اختیار کر لیا ہے ۔ یہاں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 'کووڈ 19' کی زد میں آنے سے 1188 مریضوں کی موت کے بعد ملک میں اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 20ہزار047 ہو گئی ہے ۔ برطانیہ میں بھی حالات مسلسل خراب ہوتے جا رہے ہیں۔ یہاں اب تک اس وبا سے 2،52،246 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 36،124 لوگوں کی اس وبا سے موت ہو چکی ہے ۔یورپ میں شدید متاثر ملک اٹلی میں اس وبا کی وجہ سے اب تک 32،486 افراد ہلاک اور 2،28،006 لوگ اس وبا سے متاثر ہوئے ہیں۔ اسپین میں کل 2،33،037 لوگ متاثر ہوئے ہیں جبکہ 27،940 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔اس عالمی وبا کے مرکز چین میں گزشتہ دو دنوں سے کیس یا موت کا کوئی نیا معاملہ سامنے نہیں آیا ہے . یہاں اب تک 84،063 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 4638 اموات ہوئی ہے . اس وائرس کے حوالہ سے تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہونے والی موت کے 80 فیصد کیسز 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے .یوروپی ملک فرانس اور جرمنی میں بھی صورت حال کافی خراب ہیں۔ فرانس میں اب تک 1،81،951 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 28،218 لوگوں کی موت ہو چکی ہے . جرمنی میں کورونا وائرس سے 1،79،021 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 8،203 لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔ترکی میں کورونا وائرس سے اب تک 1،53،548 لوگ متاثر ہوئے ہیں اور اس سے 4،249 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔
 

سوڈان:121 کی موت

خرطوم// سوڈان میں گزشتہ تین دنوں میں کورونا وائرس (کووڈ -19) کے 410 کیسز سامنے آئے ہیں اور 10 لوگوں کی موت ہوئی ہے . ملک میں اس وبا سے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 3138 اور مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 121ہو گئی۔اس دوران وزارت صحت نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا کہ بیماری سے 23 مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔ اب تک کل 309 لوگ ٹھیک ہو چکے ہیں۔وزیر صحت اکرم علی التام نے صحت پابندی میں نرمی وائرس کے پھیلاؤ کے لئے ذمہ دار قرار دیا ہے ۔قابل ذکر ہے سوڈان حکومت نے خرطوم میں 18 اپریل کو تین ہفتے کا کرفیو لگایا تھا پھر سے 9 مئی تک 10 دن کے لئے اور پھر 18 مئی سے دو ہفتے کے لئے بڑھا دیا تھا۔ژنہوا،