تازہ ترین

مینڈھر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی | حاملہ خواتین مشکلات سے دوچار

تاریخ    10 مئی 2020 (00 : 03 AM)   


جاوید قبال
مینڈھر //سب ضلع ہسپتال مینڈھر میں ماہر ڈاکٹروں کی اسامیاں خالی ہونے کی وجہ سے مشکل وقت میں بھی مریضوں کو دیگر ہسپتالوں میں منتقل کرنے کیلئے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔اس وقت سب ڈسٹر کٹ ہسپتال میں گائنا کالوجسٹ ،بچوں کے ماہر ڈاکٹر کیساتھ ساتھ گزشتہ کئی عرصہ سے اینستھیزیا ماہر کی اسامیاں خالی پڑی ہوئی ہے جبکہ لاک ڈائون کے دوران حاملہ خواتین کو کچھ حد تک ایمبولینس گاڑیوں کی مدد سے راجوری اور پونچھ کے ہسپتالوں میں منتقل کیا جاتا ہے لیکن بچوں ودیگر مریضوں کی ہسپتالوں میں منتقلی کیلئے کئی دنوں تک لوگوں کو ٹھوکریں کھانی پڑرہی ہیں ۔مکینوں نے بتایا کہ حاملہ خواتین کو مینڈھر سے راجوری اور پونچھ منتقل کرنے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے حالانکہ ایمبولینس فراہم کی جارہی ہیں تاہم اس کے باوجود بھی دیہات میں اس عمل پر اس وقت چلنا انتہائی مشکل ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بیمار چھوٹے بچوں کی امراض کا ماہر مینڈھر ہسپتال میں نہ ہونے کی وجہ سے ان کو راجوری منتقل کرنے کیلئے ڈاکٹروں و بلاک میڈیکل آفیسر اور ایس ڈی ایم مینڈھر کی اجازت کے بعد ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ کے دفتر سے رجوع کرنا پڑتا ہے جو کہ ایمرجنسی کی صورت میںممکن نہیں ہوتا ہے ۔بیوپار منڈل مینڈھر نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ مینڈھر ہسپتال میں تعینات اینستھیزیا ماہر کی تنخواہ مینڈھر ہسپتال سے نکالی جارہی ہے لیکن اس کی موجودہ اٹیچ منٹ کے بارے میں کسی کو کئی جانکاری نہیں ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سب ڈسٹر کٹ ہسپتال مینڈھر میں ڈاکٹر وں کی خالی پڑی ہوئی اسامیوں کو جلدازجلد پُر کیا جائے تاکہ مشکل وقت میں مریضوں کے مسائل حل ہوسکیں ۔
 

تازہ ترین