پونچھ میں حدمتارکہ پر آر پار گولہ باری سے خوف و دہشت

8 مئی 2020 (30 : 03 AM)   
(      )

سرینگر//حد متارکہ پر ہند و پاک افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے اور جمعرات کو بھی دو ایٹمی ممالک کی افواج کے مابین 3 سیکٹروں میںشدیدگولہ باری کی وجہ سے سرحدی آبادی میں رہائش پذیر لوگوں میں خوف وہراس کی لہر دوڑ گئی۔ جمعرات کی صبح11بجے ہند وپاک افواج کے درمیان پونچھ کے3سیکٹروں قصبہ ،شاہپور اور کیرنی میں شدید گولہ باری کا تبادلہ شروع ہوا جو وقفے وقفے سے سہ پہر4بجے تک جاری تھی ۔گولہ باری کے نتیجے میں سرحدی ضلع پونچھ کے مذکورہ تین سیکٹروں کے کئی دیہات اسکی زد میں آگئے ،تاہم کسی جانی ومالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیںہے ۔تاہم قصبہ سیکٹر میں متعدد افراد آہینی زد میں آکر زخمی ہوئے ۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان کرنل دیویندر آنند نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے جمعرات کو ایک مرتبہ پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ،جس کا بھر پو ر اور معقول جواب دیا گیا ۔ان کا کہناتھا کہ رواںبرس یکم جنوری سے اب پاکستان نے لائن آف کنٹرول پرایک ہزار550مرتبہ جنگ بندی معاہدہ2003کی خلاف ورزیاں کیں ۔فوجی حکام کا کہنا ہے کہ لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں اور بار بار گولہ باری کرنے کا بنیادی مقصد عسکریت پسندوں کو جموں وکشمیر کے حدود میں در اندازی کرکے بھیجنا ہے ،تاکہ یہاں قیام امن میں رخنہ ڈالا جاسکے ۔