لاک ڈاون کااثر | بھوپال میں زیرتعلیم کشمیری طلاب بے یارومددگار

تاریخ    9 اپریل 2020 (22 : 12 AM)   


اشرف چرا غ
کپوارہ//بھوپال میں زیرتعلیم کشمیرکے چالیس طلباء لاک ڈائون کے نتیجے میں کسمپرسی کی حالت میں ہیں اورانہوں نے جموں کشمیرانتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ اُن کی کشمیرواپسی کیلئے اقدام کئے جائیں۔بھوپال کی شری ستیہ سائیں یونیورسٹی میں ایم بی بی ایس کررہے کپوارہ کے طالب علم نے  فون پربتایا کہ یہاں کشمیری طالب علم پریشان ہیں۔انہوں نے کہا کہ لاک ڈائون کی وجہ سے اُن کا یہاں کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔ارشادنے بتایا کہ بھوپال کی یونیورسٹیوں اور کالجوں میں زیرتعلیم طلباء جن کی تعداد 40ہے،اولڈ بھوپال کملا پارک فلیٹ میں بیٹھے ہیں اوراب تک انہوں نے جیسے تیسے گزارہ کرلیا ،لیکن اب یہاں اُن کے پاس کھانے پینے کی تمام چیزیں ختم ہوگئی ہیں اوریہاں دودھ کے سواکچھ نہیں ملتا ہے ۔ان طلاب نے لیفٹنٹ گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ اُنہیں اپنے گھروں کو پہنچانے کیلئے انتظام کیاجائے یا بھوپال میں ان کے رہنے کیلئے بندوبست کیا جائے۔
 

تازہ ترین