تازہ ترین

ملک میں موجودہ صورتحال’ سماجی ایمرجنسی‘

وزرائے اعلیٰ سے مشاورت کے بعدلاک ڈائون میں توسیع کا فیصلہ ہوگا :مودی

تاریخ    9 اپریل 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے کورونا وبا کی وجہ سے پیدا صورتحال کو’سماجی ایمرجنسی‘قرار دیتے ہوئے بدھ کو کہا کہ کئی ریاستی حکومتوں، ضلع انتظامیہ اور ماہرین نے لاک ڈاؤن کی مدت بڑھانے کو کہا ہے تاہم حتمی فیصلہ لینے سے قبل وزرائے اعلیٰ سے بھی مشاورت ہوگی۔مودی نے ملک میں کورونا وبا کی وجہ سے پیدا صورتحال پر سیاسی جماعتوں کے قانون ساز جماعتوں کے رہنماؤں کے ساتھ بدھ کو یہاں ویڈیو کانفرنس کے ذریعے ایک میٹنگ میں حصہ لیتے ہوئے کہا ’’ملک میں سماجی ایمرجنسی جیسی صورت حال ہے اور اس کے پیش نظر حکومت کو کئی سخت فیصلے کرنے پڑے ہیں۔ ہمیں اب بھی مکمل طور محتاط رہنے کی ضرورت ہے‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ مختلف ریاستی حکومتوں، ضلع انتظامیہ اور ماہرین نے لاک ڈاؤن کی مدت بڑھانے کو کہا ہے۔قابل ذکر ہے کہ کورونا وبا کی وجہ سے ملک میں 21دن کا لاک ڈاؤن کیا گیا ہے جس کی مدت 14اپریل کو ختم ہونی ہے ۔ مودی نے کہا کہ پوری دنیا کورونا وائرس کے شدید چیلنج کا سامنا کر رہی ہے ۔
موجودہ صورت حال کو انسانی تاریخ میں ت بدلتے واقعات کے آغاز قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کے اثرات سے نمٹنے کے لئے ہمیں نئے حل تلاش کرنے ہوں گے ۔ اس وبا سے نمٹنے کے لئے مرکز اور ریاستوں کی تال میل کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سے ملک تخلیقی اور مثبت سیاست کا گواہ بنا ہے جس میں تمام طبقات کے جماعتوں نے متحد ہوکر کام کیا ہے ۔ اس کوشش میں ہر شہری کی شناسائی، نظم و ضبط، لگن اور عزم کے احساس کی بھی انہوں نے تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ محدود وسائل میں بھی ملک نے اس بحرانی صورت حال کا سامنا کیا ہے اور ہندوستان ان چند گنے چنے ممالک میں شامل ہے جس نے ابھی تک وائرس انفیکشن کی رفتار پر قابو کیا ہے ۔ انہوں نے آگاہ کیا کہ حالات مسلسل تبدیل ہو ر ہے ہیں اور ہمیشہ چوکس رہنے کی ضرورت ہے ۔وزیر اعظم نے کہا کہ ان بدلتے ہوئے حالات میں ملک کو اپنی کام کی ثقافت اور کام کے انداز میں تبدیلی لانے کی کوشش کرنی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی ترجیح ہرایک شخص کی جان بچانا ہے ۔ کورونا کی وجہ سے ملک شدید اقتصادی چیلنج کا سامنا کر رہا ہے اور حکومت اس کا مقابلہ کرنے کے لئے مصروف عمل ہے ۔بیجو جنتادل کے لیڈر نے وزیراعظم کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ لاک ڈائون 14اپریل کو یکمشت اٹھایا نہیں جائے گا۔ان کا کہناتھا’’وزیراعظم نے واضح کیا کہ لاک ڈائون ختم نہیں ہورہا ہے اور کورونا سے قبل اور اس کے بعد کی زندگی یکساں نہیںہوگی‘‘۔میٹنگ میں شرکت کرنے والے ایک اور لیڈر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ وہ اس معاملہ پر وزرائے اعلیٰ سے بھی مشاورت کرینگے۔میٹنگ میں غلام نبی آزاد اور شرد پوار نے بھی حصہ لیا ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ میٹنگ کے دوران کئی وزارتوں کے سیکریٹریوںنے انہیں لاک ڈائون کے دوران عوامی مسائل کم کرنے کیلئے حکومت کی جانب سے کئے جارہے اقدامات پر بریف کیا۔کئی اپوزیشن لیڈروںنے صحت ورکروںکیلئے ذاتی حفاظتی سامان کی قلت کامعاملہ اٹھایاجبکہ کچھ نے نئی پارلیمنٹ بلڈنگ کی تعمیر روکنے کا مشورہ دیا۔آزاد اور پوار کے علاوہ اس ویڈیو کانفرنس اجلاس میں سماج وادی پارٹی کے رام گوپال ورما،بہوجن سماج پارٹی کے ستیش مشرا،لوک جن شکتی پارٹی کے چراغ پاسوان،ڈی ایم کے کے ٹی آر بالو،شرومنی اکالی دل کے سکھبیر سنگھ بادل ،جنتا دل یونائٹیڈ کے راجیو رنجن سنگھ ،بیجو جنتادل کے پیناکی مشرا اور شیو سینا کے سنجے راوت نے شرکت کی ۔اپنی ابتدائی ہٹ دھرمی ترک کرتے ہوئے ترنمول کانگریس کے سدیپ بودھاپدائیے نے بھی حصہ لیا ۔مودی نے ان پارٹیوں کے لیڈروں نے تبادلہ خیال کیا جن کی راجیہ سبھا و لوک سبھا میں کم سے کم پانچ ارکان ہیں۔
یاد رہے کہ وزیراعظم نے اس سے قبل کئی وزرائے اعلیٰ سے بھی بات کی جن میں غیر بھاجپا وزرائے اعلیٰ سے بھی گفتگو شامل ہے۔اس کے علاوہ انہوںنے ڈاکٹروں ،صحافیو ں ،ماہرین سماجیات ،صنعتکاروں سے بھی مشاورت کی۔ایک دیگر اطلاع کے مطابق مودی گیارہ اپریل صبح وزرائے اعلی کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ سے غور و خوض کریں گے ۔ 21دن کا لاک ڈاون 14اپریل کو ختم ہورہا ہے اور اسے بڑھانے یا ہٹانے کے معاملہ پر مودی وزرائے اعلی سے بات چیت کریں گے
 

لاک ڈاون پر حکومت اور اپوزیشن میں اختلاف نہیں:آزاد

نیوز ڈیسک
 
نئی دہلی//کانگریس نے کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں حکمراں فریق اور اپوزیشن کے مابین کوئی اختلاف نہیں ہے اور مرکز اور ریاستی حکومتیں لاک ڈاون بڑھانے سے متعلق جو فیصلے کریں گی، پورا ملک کی اس کی حمایت کرے گا۔راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے لیڈر اور کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد نے وزیراعظم نریندر مودی کے ساتھ اپوزیشن جماعتوں کے لیڈروں کی میٹنگ کے بعد خصوصی پریس کانفرنس میں کہاکہ پورا ملک اس وقت کورونا وائرس کے انفیکشن کے خلاف متحد ہوکر لڑ رہا ہے ۔ ہماری لڑائی اس وقت حکومت سے نہیں کورونا سے اوراس لڑائی میں حکومت اور اپوزیشن ایک ساتھ ہیں۔ آزاد نے کہاکہ لاک ڈاون کے تعلق سے بیشتر لیڈروں کے موقف میں یکسانیت تھی۔ خود مسٹر مودی نے کہاکہ لاک ڈاون بڑھانے کے تعلق سے تمام وزرائے سے بات کریں گے اور اس پر سب کی جو رائے ہوگی اس کے مطابق فیصلہ کیا جائے گا۔ آزاد نے کہاکہ اس وقت ترجیح لوگوں کو بچانا ہے اور ہر حال میں کورونا وائرس کے انفیکشن کو تیسرے مرحلہ میں پہنچنے سے روکنا ہے ۔ اس میں خیال یہ رکھنا ہے کہ سپلائی چین نہیں ٹوٹے اور لوگوں کی ضروری سامان کے تعلق سے دقت نہیں ہو۔