تدابیر اسلامی شریعت کے خلاف نہیں :مفتی محمد یعقوب

گھروں میں اہل خانہ کے ساتھ جماعت کے ساتھ نمازیں اداکریں

تاریخ    26 مارچ 2020 (00 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک
 سرینگر//جمعیت اہلحدیث کے مفتی عام مفتی محمد یعقوب بابا المدنی نے انسانی زندگی کے تحفظ کو بہت زیادہ اہم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جس شخص کی وجہ سے دوسروں کو تکلیف پہنچنے کا خطرہ ہو یا جسے خود بیمار ہونے کا اندیشہ ہوتومصالح عامہ اور جسم وجان کے تحفظ کے پیش نظر اسلام نے اسے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی تلقین کی ہے۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ یہ تدابیر اختیار کرنا توکل یا اسلامی شریعت کی کسی بھی ہدایت کے خلاف نہیں اور نہ ہی تقدیرسے فرارہے بلکہ یہ عین اسلامی تعلیمات کے مطابق ہے ۔مفتی یعقوب کے مطابق اس وقت کوروناوائرس کے خطرات کے پیش نظرہرایک پرلازم بنتاہے کہ وہ اسلام کے رہنما اصولوں کی پاسداری کرے اور محکمہ صحت کی ہدایات کے مطابق ایک دوسرے سے دوری اختیار کریں۔انہوں نے کہا ’’چونکہ دنیاکے اکثر ممالک نے لوگوں کے گھروں سے باہر نکلنے پر سخت پابندی عائد کی ہے اور لاک ڈاؤن کابھی اعلان کیا ہے ، دینی اجتماعات یا مسجدوں میں نمازیوں کا جمع ہونابھی ماہرین کی رائے کے مطابق اس وبا کے پھیلنے کاسبب بن سکتاہے ، لہٰذا وادی کے مسلمان ان مشکل حالات میں احتیاطی تدابیر کے پیش نظر ان گذارشات پرعمل کریں‘‘۔مفتی یعقوب نے کہا کہ اسلامی شعار کاخاص خیال رکھتے ہوئے مساجد میںپنج وقتہ نمازوں کے لئے اذان دی جائے،نماز کے مقررہ اوقات پر اپنے گھروں میں اہل خانہ کے ساتھ جماعت کے ساتھ نماز اداکریں۔انہوں نے کہا چونکہ جمعہ میں جم غفیر کے احتمال کی وجہ سے جمعیت نے پہلے ہی نماز جمعہ موقوف رکھنے کا فیصلہ لیا ہے لہٰذا جمعہ کو ظہر کی چار رکعت باقی دنوں کی طرح گھروں میں ہی اداکریں۔انہوں نے عوام سے گزارش کی ہے کہ قرآن کریم کی تلاوت ،دعا واستغفار ،توبہ اور نوافل کا کثرت سے اہتمام کریں اور اپنے پڑوس میں رہنے والے مفلوک الحال لوگوں کی بلا لحاظ مذہب ومسلک مدد کریں۔
 

تازہ ترین