تازہ ترین

ڈمپل کا گورنر کے بیان کا خیر مقدم

دفعہ 35اے اور دفعہ 370 ہٹانے کے بارے میں فیصلہ لینے کی اپیل کی

تاریخ    23 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   


 جموں // جموں ویسٹ اسمبلی مومنٹ کے صدر سنیل ڈمپل نے گورنر ستیہ پال ملک کی جانب سے دئے گئے بیان کہ’’ بعض وزراء و بیوروکریٹ جیلوں میں ہونگے یا ضمانت پر ہونگے ‘‘کا خیر مقدم کیا ہے ۔ پیر کے روز یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے گورنر سے اُس سیاست دانوں اور بیوروکریٹوں۔ممبران قانون سازیہ، آئی اے ایس ،آئی پی ایس افسروں کے ناموں کا افشا کرنے کی اپیل کہ،جنھوں نے ریاست کو تباہ کر دیا ہے اور جو عنقریب ہی جیلوں میں ہونگے یا ضمانت پر باہر ہونگے۔انہوں نے گورنر سے ایسے اہلکاروں کو فوری طور گرفتار رکنے اور انکی جائیدادیں ضبط کرنے کی اپیل کی ہے، تاکہ ریاست میں رشوت خوری پر قابو پایا جا سکے۔انہوں نے رشوت خوری کو سختی سے کچل دینے کو کہا ہے،تاہم انہوں نے کہا کہ ہلاکت کی بات سے نوجوان گمراہ ہو سکتے ہیں۔انہوں نے رشوت خوری کے خاتمہ کیلئے سی بی آئی ،ویجی لنس، کرائم برانچ ،یہاں تک کہ این آئی اے کی مدد لینے کی اپیل کی ہے۔انہوں نے گورنر سے حد بندی لاگو کرنے کیلئے ایک آرڈی نینس لانے ، جموں میں اسمبلی نشستوں کی تعداد میں اضافہ کرنے اور مزید اضلاع تشکیل دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے دفعہ 35-A اور دفعہ  370 ہٹانے کے بارے میں فیصلہ لینے کی اپیل کی۔انہوں نے وزیر داخلہ اور وزیر دفاع کی جانب سے ریاست کا دورہ کرنے کے باوجود اس مدعے پر خاموشی اختیار کرنے کی مذمت کی اور کہا کہ ایسا لگ رہا ہے کہ بی جے پی ان مدعوں پر سنجیدہ نہیں ہے۔ڈمپل نے مزید کہا کہ بی جے پی نے اسے فقط ووٹنگ مشین بنایا ہے۔انہوں نے سابقہ قانون ساز ممبران ، وزراء کی جانب سے سرکاری کوٹھیاں خالی نہ کرنے پر ریاستی انتظامیہ کی مذمت کی ہے۔انہوں نے مبینہ الزام لگایا کہ اسمبلی تحلیل ہونے کے باوجود بھی سابقہ قانون ساز ممبران حلقہ ترقیاتی فنڈز(CDF) کا استعمال کر رہے ہیں،جو کہ کسی بھی صورت میں جائز نہیں ہے۔پریس کانفرنس میں ایس ترلوک سنگھ ،دیو راج ،ایس رندھیر سنگھ بالی، کالہ کمار بھی موجود تھے۔