صحرائی نے نظربندوں کی رہائی کا مطالبہ کیا

تاریخ    18 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   


نیو ڈسک
سرینگر// تحریک حریت چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے حذیف احمد بٹ سالوسہ کریری کو گرفتار کرکے پی ایس اے کے تحت جیل منتقل کرنے اور غلام حسن شاہ بومئی سوپور، عرفان احمد اور عبدالمجید لوگری پورہ کو عدالت کے احاطے میں گرفتار کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکمران جموں کشمیر کے عوام کو ہر طرح سے تنگ کرنے اور انتقام لینے کے حربے اختیار کئے ہیں۔ ایک بیان میںصحرائی نے کہا کہ حذیف احمد بٹ کے لواحقین کے کہنے کے مطابق نابالغ ہے۔ اس کی عمر صرف 16سال ہے اور قانونی یا اخلاقی طور پر پی ایس اے کا اس پر اطلاق نہیں ہوسکتا ہے۔ بیان کے مطابق اسی طرح تنظیم کے ارکان غلام حسن شاہ، عرفان احمد اور عبدالمجید لوگری پورہ کو پیشی پر عدالت میں حاضر ہوئے تھے اور جونہی وہ عدالت میں تاریخ دینے کے بعد اپنے گھروں کی طرف نکلے تو پولیس کی ایک جمعیت نے ان کو احاطہ عدالت میں ہی گرفتار کرکے تھانے میں نظربند کردیا ۔صحرائی نے عبدالوحید میر بانڈی پورہ کی ایک طویل عرصے سے نظربندی کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ موصوف کی اہلیہ بھی مختلف عارضوں میں مبتلا ہے اور عبدالوحید گزشتہ 7سال سے جرم بے گناہی کی سزا کاٹ رہا ہے ۔موصوف کی اہلیہ کے علاج ومعالجہ کیلئے گھر میں کوئی فرد موجود نہیں ہے جبکہ بچے بھی نابالغ ہیں۔ انہوں نے تمام نظربندوں کی رہائی کا مطالبہ کیا۔
 

تازہ ترین