GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
2009کے بعد دوسرا واقعہ
سوائن فلو میں مبتلا شہری کی موت

ارشاد احمد
گاندربل//وادی میں سوائن فلو کی وجہ سے صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ کا ملازم فوت ہوگیا ہے۔ اس واقعہ کے بعد ڈاکٹروں کی ایک خصوصی ٹیم نے مذکورہ ملازم کے رشتہ داروں سے خون کے نمونے حاصل کرلے ہیں۔گاندربل کے اس ملازم غلام حسن وانی کو ایک ہفتے قبل سوائن فلو ہونے کی تصدیق کی گئی تھی جس کے بعد وہ موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا رہا اور کل وہ زندگی کی جنگ ہار گیا۔ واضح رہے کہ کشمیر عظمیٰ نے 20جنوری کو صورہ ہسپتال میں جنوبی کشمیر اور سرینگر سے تعلق رکھنے والے سوائن فلو میں مبتلا تین مریضوں کی نشاندہی کی تھی تاہم وہ بعد میں صحت یاب ہوکر رخصت کئے گئے۔ واضح رہے کہ 2009میں جب وادی میں سوائن فلو کے مریضوں کی تشخیص ہوئی تھی تو اس وقت بھی تولہ مولہ گاندربل کی ہی 22سالہ دوشیزہ مسکان اختر کی موت واقع ہوئی تھی۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ تولہ مولہ علاقے کی ایک اور خاتون بھی سوائن فلو کے مرض میں مبتلا ہے، تاہم اس کا اس وقت علاج و معالجہ چل رہا ہے اور اسے حال ہی میں ہسپتال سے رخصت کیا گیا ہے۔انسٹی چیوٹ کے وارڈ نمبر5کے علیحدہ کمرے میں گذشتہ ایک ہفتے سے زیر علاج47سالہ غلام حسن وانی ولد عبدالخالق ساکن نیو کالونی تولہ مولہ گاندربل سوموار کی دوپہر ایک بجے دم توڑ بیٹھا۔ غلام حسن انسٹی چیوٹ کے ایڈ منسٹریٹو بلاک میں سینئر اسسٹنٹ کے بطور کام کرتا تھا۔ غلام حسن کے گھر والوں کا کہنا کہ غلام حسن پہلی بار21جنوری کو بیمار ہوگیا اور اسے زکام، کھانسی اور بخار کی شکایت ہونے لگی۔ اسی روز اسے صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے چند ادویات تجویز کرکے گھر بھیج دیا۔ 24جنوری کواسے ایک بار پھر انسٹی چیوٹ لایا گیا اور اس روز بھی اسے معمول کے علاج کے بعد گھر جانے کیلئے کہا گیا۔ جب اس کی حالت غیر ہونے لگی اور منہ سے خون بہنے لگا تو 27جنوری کی صبح اسے دوبارہ انسٹی چیوٹ پہنچایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسکے کئی ٹیسٹ کئے اور اس بات کی تصدیق کی کہ وہ’’سوائن فلو‘‘ یعنی H1N1 میں مبتلا ہے۔ غلام حسن کو پہلے وارڈ نمبر2اور بعد میں وارڈ نمبر5کے علیحدہ کمرے میں زیر علاج رکھا گیا۔ اس دوران احتیاط کے بطوراس کے کسی بھی رشتہ دار کو اس کے پاس جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔ اسی کمرے میں قریب ایک ہفتے تک ماہر ڈاکٹروں کی نگرانی میں رہنے کے بعد بالآخر غلام حسن وانی4فروری کی دوپہر زندگی کی جنگ ہار گیا۔ صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ کے ڈائریکٹرڈاکٹر شوکت احمد زرگر نے اس بات کی تصدیق کی کہ غلام حسن وانی سوائن فلو کا شکار ہوکر لقمہ اجل بن گیا۔ انہوں نے کہا کہ سوائن فلو کاوائرس اس کے پھیپھڑوں میں داخل ہوچکا تھا جس کے باعث اس کی جان نہ بچ سکی، حالانکہ ڈاکٹروں نے اسے بچانے کی ہر ممکن کوشش کی تھی۔ ڈاکٹر زرگر نے بتایا کہ انسٹی چیوٹ میں اس مرض کے شکار کئی دیگر مریضوں کا کامیاب علاج کیا گیا تاہم غلام حسن بری طرح سے سوائن فلو کی لپیٹ میں آچکا تھاجس کے نتیجے میں وہ جانبر نہ ہوسکا۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کے تناظر میں کسی کو گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ڈاکٹر زرگر نے لوگوں کو صلاح دی کہ وہ مسلسل زکام، کھانسی اور بخار کی صورت میں فوری طور اپنی جانچ کروائیں۔ انہوں نے کہا کہ انسٹی چیوٹ میں سوائن فلو کا علاج دستیاب ہے اور لوگوں کو پریشان ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ غلام حسن کی موت کی خبر ملتے ہی چیف میڈیکل آفیسر گاندربل ، بی ایم او، میڈیکل آفیسر اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ سپروائزر پر مشتمل ایک ٹیم نے علاقہ کا دورہ کرکے صورتحال کا جائزہ لیا۔ ٹیم نے مقامی لوگوں بالخصوص غلام حسن کے رشتہ داروں کو صلاح دی کہ وہ احتیاط سے کام لیتے ہوئے ڈاکٹروں سے معائنہ کروائیں۔ اسی دوران سرینگر سے ڈاکٹر دیبا کی قیادت میںمحکمہ صحت کے ماہرین پر مشتمل ٹیم نے بھی علاقہ میں جاکر مرحوم کے گھر کا دورہ کیا اور احتیاط کے بطوراسکے کئی رشتہ داروں سے خون کے نمونے حاصل کئے تاکہ ان کی جانچ کروائی جاسکے۔ سی ایم او گاندربل نے بتایا کہ لوگوں کو احتیاط برتنے کی صلاح دی گئی ہے اور اس ضمن میں ضلع کے مختلف علاقوں میں عوام کو آگاہ کرنے کی مہم شروع کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسکے علاوہ دیگرضروری اقدامات بھی اٹھائے جارہے ہیں۔ (مشمولات کے ایم این)

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2014 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By