GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
یوم یکجہتی کشمیر منانے پرحکومت پاکستان اور پاک عوام کو مزاحمتی جماعتوں کا شکریہ


سرینگر// وادی میں مختلف مزاحمتی جماعتوں نے کشمیر ی عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ’’یوم یکجہتی کشمیر ‘‘ کشمیر منانے پر حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام کا شکریہ ادا کیا ہے۔ کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے پر پاکستانی عوام، سیاسی و مذہبی پارٹیوں،حکومت اور غیر سرکاری تنظیموں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے سینئر مزاحمتی لیڈر اور نیشنل فرنٹ کے چیئر مین نعیم احمد خان نے کہا ہے کہ پاکستان کے لوگوں اور کشمیری عوام کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں۔ ایک بیان میں نعیم احمد خان نے کہا کہ پاکستان نے روز اول سے ہی کشمیری عوام کے جذبات اور خواہشات کی قدر کرتے ہوئے ہمیشہ تنازعہ کشمیر کو عوامی اُمنگوں کے مطابق حل کرنے کی حمایت کی ہے۔ نعیم احمد خان کے مطابق ’’پاکستان نے سخت ترین اوقات میں بھی ہم مظلوموں کی سیاسی ، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھی ہے اور ایسا کرتے ہوئے ہمارے خوابوں کی اُس سر زمین کو بہت کچھ سہنا بھی پڑا ہے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا’’مظلوموں کے ساتھ اظہار یکجہتی سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ پاکستان کے نظریاتی و فکری اصول کمزور ہی سہی مگر اب بھی سلامت ہیں جن کے قوی بننے کیلئے کشمیری عوام ہمیشہ دعا گو رہے ہیں‘‘۔ نعیم احمد خان کے مطابق پاکستان پوری دنیا میں موجود مسلمانوں کی خیر خواہی کیلئے سرگرداں ہے اور یہی وجہ ہے کہ اُس کو عالم اسلام میں مسلمانوں کا قلعہ کہا جاتا ہے۔انہوں نے کہا’’پاکستان ہر سال5فروری کو کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کا مظاہرہ کرتا ہے مگر کشمیری ہر سانس میں پاکستان کے استحکام اور سلامتی کی دعائیں مانگتے رہتے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سلامتی کس طرح برصغیر کے ساتھ ساتھ پوری دنیا میں رہ رہے مسلمانوں کیلئے ضروری ہے اس بات کا ندازہ لگانے کیلئے اُس فکر اور سوچ کو سمجھنا لازمی شرط ہے جس کی بنیاد پر پاکستان قائم ہوا اور جس کو مفکر اسلام علامہ اقبالؒ نے پیش کیا۔ نعیم احمد خان نے قیام پاکستان اور تحفظ پاکستان کی راہ میں تکالیف کا شکار ہونے والوں کو خراج تحسین اورخراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اپنی اس پالیسی کا اعادہ کیا ہے کہ قیام پاکستان تب تک نامکمل ہے جب تک تنازعہ کشمیر کو عوامی خواہشات کے مطابق حل نہیں کیا جاتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ بھارت کی روایتی ضد ، ہٹ دھرمی اور نو آبادیاتی سوچ اس انسانی تنازعہ کو حل کرنے کی راہ میں رکاوٹ بنی ہوئی ہے، اس لئے بھارت کی سول سوسائٹی پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اپنے سیاست دانوں کی رہنمائی کرے اور اُنہیں اس بات کیلئے راضی کرے کہ وہ سامراجی طرز عمل کو ترک کرکے جمہور پسند ہونے کا برملا اظہار کریں، بصورت دیگر علاقائی امن کا خواب ،خواب ہی رہے گا اور برصغیر کے لوگ مسلسل مسائل میں مبتلاء رہیں گے۔ دریں اثنا اتحاد المسلمین کے سرپرست اعلیٰ مولانا محمد عباس انصاری نے یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام کا کشمیریوںکی جدوجہد آزادی کے تئیں ان کے بے لوث سیاسی اخلاقی اور سفارتی حمایت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ سات دہائیوں سے متنازعہ چلے آرہے مسئلہ کشمیر کے حل کے حوالے سے پاکستان نے ہر سطح پہ اور ہر مرحلے پر کشمیریوں کی جو مدد کی ہے اور دنیا کے سبھی بین الاقوامی سطح کے فورموں اور اداروں میں اس مسئلہ کے ضمن میں آواز بلند کی ہے اس کے نتیجے میں آج پوری دنیا میں مسئلہ کشمیر کے حل کے حق میں حمایت پیدا ہور ہی ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے ضمن میں پاکستان کی شمولیت ایک تاریخی اور کلیدی اہمیت کی حامل ہے ، اسلئے کسی بھی مذاکراتی عمل میں پاکستان کی شمولیت ایک نا گزیر امر ہے۔ادھرلبریشن فرنٹ کے چیئر مین جاوید میر نے5 فروری کو کشمیری عوام سے پاکستانی قوم و قیادت کی یومِ یکجہتی کو تحریکی اعتبار سے خصوصی اہمیت کا حامل قرار دیا ہے ۔ اُنہوں نے پاکستان کی حکومت اور وہاں کی عوام کا شکریہ ادا کیا ہے ۔ انہوں نے پاکستان کی سیاسی قیادت سے اپیل کی ہے کہ وہ تنازعہ کشمیر اور کشمیری عوام کی لاکھوں قُربانیوں اور حقِ خود ارادیت کے حوالے سے بھارت سے مذاکرات کے دوران معذ رت خواہانا پالیسی اختیار نہ کریں اور بھارت کے ساتھ مذاکرات کے دوران تنازعہ کشمیر اور کشمیری عوام کو اول درجے کی فریقانہ حیثیت دلانے پر قائم اور دائم رہیں اور کشمیری عوام کے حق میں جاری سیاسی ، اخلاقی اور صفارتی حمائت کی عزت اور لاج رکھیں ۔ اس دوران جموں کشمیرپیپلز لیگ کے چیرمین اور حریت کانفرنس کے سینر لیڈر مختار وازہ نے ہر سال یوم یکجہتی منانے پر پاکستان اور پاکستانی عوام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ کشمیری عوام کی پرامن تحریک کو اخلاقی، سیاسی اور سفارتی مدد کی اور جس کی بدولت کشمیری کی حق پر مبنی تحریک عالمی ایوانوں تک پہنچ گئی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستاں کی طرف سے کشمیری عوام کو حق خوداریت حاصل کرنے کے لے کی جارہی مدد کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ کشمیر کے ظلم و جبر اور انسانی حقوق کی پامالیوں کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کیلئے بھی قابل اعتراف اور قابل ستائش  روال ادا کیا ۔ دریں اثنا سالویشن مومنٹ کے چیرمین ظفر اکبر بٹ نے پاکستانی قوم اور حکومت کے نام اپنے ایک تہنیتی پیغام میں ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ مظلوم کشمیری عوام کے سا تھ ہر سال 5 فروری کو اظہار یکجہتی مناکر پاکستان نے نہ صرف اپنی ملی ذمہ داریوں کو پورا کیا ہے بلکہ کشمیر کے عوام کی حق پر مبنی جدوجہد کی حمایت کا اعادہ بھی کیا ۔انہوں نے مسئلہ کشمیر کے تئیں پاکستانی عوام اور حکومت کی دلچسپی اور اس تنازعے کو سلجھانے کے لئے ان کی قربانیوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا ’’ پاکستان نے ہمیشہ مظلوم کشمیریوں کی حمایت میں آوازبلند کرکے ایک قومی فریضہ انجام دیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ پاکستان کے عوام جنوبی ایشاء کے اس دیرینہ مسئلہ کو سلجھانے میں اپنا بھرپور کردار اداکرتے رہیں گے‘‘۔  ادھرمسلم کانفرنس کشمیر کے چیرمین شبیراحمد ڈار نے پریس کے نام جاری بیان میں یوم یکجہتی کشمیر منانے پر پاکستان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ عوام ِ پاکستان جموں کشمیر کے حریت پسند عوام کے حقیقی ہمدرد ہیں اور ہر سال ۵ فروری کو یوم یکجہتی منا نا اس بات کی دلیل ہے کہ پاکستان کے لوگ اپنے مظلوم کشمیری بھائیوں کے دکھ و درد میں شامل ہیں۔ موصولہ بیان میںاُنہوں نے مسلم کانفرنس کے صف اول کے رہنما چودھری غلام عباس کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مسلم کانفرنس کے حقیقی وارث آج بھی اپنے قائد کاروان کے نقش قدم پر چل کر عزیمت اور استقامت کی مثال پیش کررہے ہیں اور حصول منزل تک سفر آزادی اسی عزیمت کے ساتھ جاری رہے گا ۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2014 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By