GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
بیدی کمیشن کی رپورٹ کابینہ کو فراہم
جنوری کے پہلے ہفتے میں مجوزہ اجلاس میں غور و خوص ہوگا

طارق علی میر
سرینگر// نیشنل کانفرنس کے سینئر ورکرسید محمد یوسف کی پر اسرار موت سے متعلق بیدی کمیشن کی حتمی رپورٹ محکمہ قانون نے ریاستی کابینہ کو پیش کر دی ہے ۔ ذرایع کے مطابق نئے سال کے پہلے ہفتہ میں منعقد ہو نے والے کابینہ اجلاس میں اس پر رسمی کارروائی متوقع ہے۔یاد رہے بیدی کمیشن کے سربراہ جسٹس ایچ ایس بیدی نے اپنی رپورٹ22دسمبر کو محکمہ قانون کے سکریڑی جی اے تانترے کو سونپی تھی ۔بیدی کمیشن نے اپنی حتمی رپورٹ میں سید یوسف ہلاکت معاملے میں وزیراعلیٰ کو کلین چٹ دیتے ہوئے کرائم برانچ کے ایک ڈی ایس پی اور منشی کو اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داریاں نبھانے  میں غفلت شعاری کا مرتکب ٹھہرایا تھا۔کشمیر عظمیٰ کو ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ محکمہ قانون نے ریاستی کابینہ میں شامل تمام وزراء کو رپورٹ کی کاپیاں فراہم کی ہیں اور جنوری 2013کے پہلے ہفتہ میںمجوزہ کابینہ اجلاس میں اس رپورٹ کو زیر بحث لایا جائیگا۔ذرئع نے مزید بتایا ہے کہ وزیر علیٰ عمر عبداللہ کو چونکہ کمیشن کی جانب سے کلین چٹ دی گئی ہے لہذ رپورٹ میں صرف غفلت شعاری نبھا نے میں مرتکب ٹھہرائے گئے کرائم برانچ کے ایک آفیسر اور اہلکار کے بارے میں فیصلہ لیا جائے گا اوراس ضمن میں احکامات ہوم ڈیپایمنٹ کو دیئے جائیں گے۔جسٹس بیدی نے اپنی حتمی رپورٹ میں کہا ہے کہ جو ثبوت انکے سامنے پیش کئے گئے ہیں، ان سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ سید یوسف کو اسپتال میں معقول طبی امداد فراہم کی گئی اور اس دوران وہاں ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر کچھے نے اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داریوں کو بہتر انداز سے نبھاتے ہوئے اسی طریقے کا علاج کیا جس کا مرحوم مستحق تھا ،اسلئے راجہ اعجاز علی اور ڈاکٹر کچھے کی طرف سے کوئی بھی غفلت شعاری نہیں برتی گئی بلکہ انہوںنے اپنی ذمہ داریاں بہتر طریقے سے نبھائیں۔کمیشن نے سپریم کورٹ میں ڈی کے بسو کیس کے حوالہ جات کی روشنی میں کہا کہ کمیشن نے یہ محسوس کیا ہے کہ ڈی ایس پی بشیر احمد گنائی نے اس بات کا اعتراف کیا انہوں نے بذات خود سید یوسف کی گرفتاری اور بعدمیں انہیں حراست میں رکھنے کے حوالے سے اپنے ماتحت اہلکاروں اور گرفتار شدہ شخص کے رشتہ داروں کو اس بارے میں آگاہ نہیں کیا بلکہ اس حوالے سے منشی نذیر احمد کو مطلع کیا۔لہٰذا ڈی ایس پی بشیر احمد گنائی اور منشی نذیر احمد کو قانون کے مطابق اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داریوں سے غفلت شعاری کامرتکب قرار پایا ہے۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2014 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By