GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
آر ایس ایس اور بی جے پی
ہندو دہشت گردی میں ملوث

یو این آئی
جے پور//مرکزی وزیر داخلہ اور کانگریس کے سرکردہ رہنما سشیل کمار شنڈے نے ایک ہنگامہ خیز بیان میں کہا ہے کہ بی جے پی اور آر ایس ایس بھگوا دہشت گردی کو فروغ دینے کے لئے تربیتی کیمپ چلا رہے ہیں۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی (آئی آئی سی سی ) کے مکمل اجلاس میں تقریر کرتے ہوئے شندے نے رپورٹوں کے حوالے سے یہ دعویٰ کیا۔ انہوں نے کہا کہ چھان بین کے بعد ہمیں معلوم ہوا ہے کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کے تربیتی کیمپ ہندودہشت گردی کو بڑھاوا دے رہے ہیں۔شنڈے نے زو ردے کر کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس دراندازی کے بارے میں بات کررہے ہیں لیکن ہمارے پاس یہ رپورٹ ہے کہ خواہ بی جے پی ہو یا آر ایس ایس ان کے تربیتی کیمپ ہندو دہشت گردی کو فروغ دے رہے ہیں۔سمجھوتہ ایکسپریس ، مکہ مسجد اور مالیگاؤں کے دھماکوں کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہاکہ دائیں بازو کی تنظیمیں اس طرح کی سرگرمیوں میں ملوث ہیں اور ملک کی سالمیت اور اتحاد کے تحفظ کے لئے ہمارے کارکنوں کو ان کی نفرت انگیز کوششوں سے محتاط رہنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ سمجھوتہ ایکسپریس، مکہ مسجد اور مالیگائوں میں بم ان ہی لوگوں نے نصب کئے تھے جنہوں نے اس طر ح کے کیمپوں میں تربیت پائی اور پھر انہوں نے اس کے لئے اقلیتی فرقہ کے معصوم  نوجوانوں کو مورد الزام ٹھہرایا۔وزیر داخلہ نے مزید کہاکہ ملک کی سلامتی کے لئے ہمیں اس طرح کے عناصر سے محتاط اور چوکنا رہنا ہوگا۔بعد میں پارٹی کے مکمل اجلاس کے دوران وقفہ ملنے پر غیر رسمی بات چیت کے دوران انہوں نے تاہم کہاکہ وہ بھگوا دہشت گردی کے حوالہ سے بات کررہے تھے۔انہوں نے زور دیکر کہا کہ یہ سار ی باتیں اخبارات میں بار بار آچکی ہیں اور اس میں کچھ نئی بات نہیں ہے۔ کم و بیش انہی جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کانگریس کے سرکردہ رہنما منی شنکر ایر نے کہا کہ مجھے اس کی خوشی ہے کہ وزیر داخلہ نے یہ بات کہی ہے اور انہوں نے جو کچھ بھی کہا ہے وہ 100فیصد درست ہے اور ہر شخص کو اس کا علم ہے۔ مرکزی وزیر داخلہ کے بیان کی حمایت کرتے ہوئے ایر نے کہا کہ یہ بات پہلے ہی کہی جانی چاہئے تھی۔ شنڈے کے نکتہ نظر کی وکالت کرتے ہوئے اے آئی سی سی کے جنرل سکریٹری دگ وجے سنگھ نے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ وزیر داخلہ نے ایسا کہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی سرگرمیاں یا تربیتی کیمپ ملک کے مختلف حصوں میں پائے جاتے ہیں جو قومی یکجہتی کے لئے خطرہ ہیں۔ تاہم اس تنازعہ کی شدت کو کم کرتے ہوئے پارلیمانی امور کے وزیر مملکت اور پارٹی رہنما راجیو شکلا نے کہا کہ وزیر داخلہ ہندو دہشت گردی کی نہیں بلکہ دائیں بازو ں کی دہشت گردی کے بارے میں بات کررہے تھے کیونکہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔ وزیر قانون اشونی کمار نے بھی اس ہلچل کو یہ کہتے ہوئے ختم کرنے کی کوشش کی کہ ہم دہشت گردی کو کوئی رنگ نہیں دیں گے۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2014 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By