تازہ ترین

وادی کو اندھیروں میں دھکیلنے کا فیصلہ: ڈاکٹر فاروق

سرینگر//انٹرنیٹ پر مسلسل پابندی کو دورِ جدید میں وادی کو اندھیروں میں دھکیلنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ پوری دنیا میں جہاں اس وقت مواصلات ،کاروبار ، تعلیم اور دیگر کاروباری و دفتری نظام انٹرنیٹ پر ہی انحصار کرتے ہیں وہیں کشمیر کے لوگوں کو اس بنیادی ضرورت سے محروم رکھا جارہا ہے ، جو سراسر ناانصافی اور امتیازی سلوک کی عکاسی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وادی میں انٹرنیٹ خدمات کے منقطع رہنے سے لاکھوں صارفین مشکلات سے دوچار ہیں، کاروباری اورپیشہ وارانہ سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوگئیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انٹرنیٹ کی معطلی سے سیاحوں کی بکنگ بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہزاروں ایسے نوجوان ہیں جو وادی میں رہ کر ہی ملک کی دیگر ریاستوں اور بیرون ممالک کی کمپنیوں کیساتھ کام کرکے اپنی روزی روٹی کماتے ہیں لیکن انٹرنیٹ پر پابندی کے بعد ان میں سے بیشتر نوجوان اپنی نوکر

انٹر نیٹ سے منسلک ہزاروں کا روز گار بند ہوگا

 سرینگر // وادی میں مسلسل 10دن تک انٹرنیٹ پر پابندی عائید کئے نتیجے میں ہزاروں نوجوان جو اس شعوبہ کے ساتھ منسلک ہیںان کا کاروباری اورپیشہ وارانہ سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوگئیں ہیں۔ بلکہ ڈاکٹر عالمی سطح پر نئی تحقیق اورپروفیسر نئی جانکاری لینے اور سینکڑوں طلاب آن لائن فارم بھرنے اور مختلف محکمہ جات کی جانب سے فراہم کی گئی نوٹیفکیشنوں سے متعلق آگاہی حاصل کرنے سے بھی محروم ہیں یہی نہیں بلکہ شہر میں بیشتر میڈیا ، کارپوریٹ اور سرکاری دفاتربھی انٹرنیٹ پر پابندی کے نتیجے میں سخت مشکلات کا سامنا کر رہے ہیں ۔معلوم رہے کہ وادی کشمیر میں کاروبار، رابطے، اشتہارات، بینکاری، معلومات یا پھرمختلف اشیاء کا فروغ تمام معاملات میں انٹرنیٹ کا استعمال کیا جارہا ہے لوگ روزانہ لاکھوں روپے کا کاروبار انٹرنیٹ کی بدولت کر رہے ہیں لیکن حکومت کی جانب سے تمام معروف سماجی ویب سائٹوں بشمول فیس بک، وٹس اپ، ٹویٹر

عدالتی مداخلت کا خدشہ

سرینگر// سماجی ویب گاہوں اور پیگام رسانی کی سائٹس پر ایک ماہ کی مکمل پابندی کو عدالت میں چیلینج کئے جانے کے پیش نظر ریاستی حکومت نے عدالت عالیہ میں پیشگی کیوٹ دائر کی ہے ۔سرکار نے بدھ کو عدالت عالیہ میں ایک کیوٹ دائر کی جس میں درخواست کی گئی ہے کہ سماجی ویب گاہوں پر پابندی کے خلاف دائر ہونے والی کسی بھی عرضی کی سماعت کے بعد اپنا فیصلہ صادر کئے جانے سے قبل سرکار کی بھی رائے پوچھی جائے اور اسے اپنا موقف سامنے رکھنے کا موقع فراہم کیا جائے ۔اس کیوٹ کا مقصد انٹر نیٹ پابندی کے خلاف ممکنہ حکم امتناعی آرڈر سے قبل اپنا موقف سامنے رکھنا ہے تاکہ براہ راست اس سرکاری قدغن پر عدالتی امتناع اثر انداز نہ ہوسکے۔  

مزاحمتی قائدین بلا شرط مذاکرات کیلئے تیار

سرینگر// حکومت ہند کو مذاکراتی عمل کیلئے آفاقی اصولوں کی تابعداری کا مشورہ دیتے ہوئے لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے تینوں فریقوں،ہند،پاک اور کشمیریوں کو ایک ہی میز پر جمع ہونے پر زور دیا ہے۔ لبریشن فرنٹ کے بانی امان اللہ خان کی یاد میں آبی گزر سرینگر پر منعقدہ ایک یادگاری مجلس سے خطاب کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ چیئرمین نے کہا کہ فسطائیت کے ساتھ مذاکرات نہ ماضی میں ہوئے ہیں اور نا ہی مستقبل میں ایسا کیا جاسکتا ہے اور کشمیر پر صرف وہی مذاکرات قابل عمل اور ثمر آور ہوسکتے ہیں جو بلا شرط ہوں اور جن میں مسئلے کے تینوں فریق یعنی کشمیری، پاکستان اور بھارت ایک ہی میز پر بیٹھ سکیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی موجودہ حکومت نے اپنی ہی اقلیتوں کے خلاف جس میں مسلمان،دلت اور عیسائی شامل ہیں،کے خلاف جنگ شروع کر رکھی ہے جبکہ حیرت انگیز طور پر بھارت کے دانشور بھی حکومت کا ساتھ د

کشمیر بُرے وقت سے گذر رہا ہے

 بارہمولہ //بائز ڈگری کالج بارہمولہ میں فوج کی طرف سے منعقد کئے گئے دو روزہ ’جشن بارہمولہ ‘‘کی اختتامی تقریب پر خطاب کرتے ہوئے فوجی کی 15ویں کورپس کے کمانڈر لیفٹنٹ جنرل جے ایس سندھو نے کہا کہ جنگجو مخالف آپریشنوں کے دوران فوج اس بات کو یقینی بنائے گی کہ عام لوگوں کی جانوںکو بچایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد صرف جنگجوئوں سے لڑنا ہے تاکہ عام لوگوں کی جانوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ یونیفائنڈ کمانڈ میٹنگ کے دوران جنگجو مخالف آپریشنوں کے خلاف ہونے والے مظاہروں سے نمٹنے پر غورخوض کیا گیا ۔ لیفٹنٹ جنرل نے جشن بارہمولہ کے حاشیے میں نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ فوج اس بات کو یقینی بنائے گی کہ جنگجو مخالف آپریشنوں کے دوران لوگوں کی جانوں کا تحفظ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر برے وقت سے گزر رہا ہے اور ہمیں اس صورتحال سے باہر آنا

طلاب کے احتجاج میں شدت جاری

سرینگر//وادی میںبدھ کو طلاب پھر سڑکوں پر آئے اور انہوں نے کئی ضلع و تحصیل مقامات پر تر تشدد احتجاج کیا جس میں20پولیس اہلکاروں سمیت50 طلباء بھی مضروب ہوئے۔اس دوران سرینگر کے ایس پی ہائر اسکینڈری اور کوٹھی باغ گرلز ہائر اسکینڈری اسکول سرکاری فرمان کے تحت مقفل رہے۔ ڈگری کالج پلوامہ میں15 اپریل کو پیش آئے واقعے کے خلاف طلاب بدستورسراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔6روز تک کالج بند رکھنے کے بعد24اپریل کو سرینگر کے ایس پی کالج و ہائر اسکینڈری کے علاوہ زنانہ کالج مولانا آزاد رور اور کوٹھی باغ گرلز ہائر اسکینڈری اسکول میں زیر تعلیم طلباء و طالبات کی طرف سے پر تشدد مظاہروں کے پیش نظر بدھ کو انتہائی حساس علاقے میں قائم ایس پی ہائر اسکینڈری اور کوٹھی باغ گرلز ہایر اسکینڈری مقفل رہے۔ ادھر جنوبی کشمیر کے علاوہ گاندربل میں بدھ کو بھی طالب علموں نے احتجاجی مظاہرہ جاری رکھا۔بائز ہا ئر اسکنڈر ی اسکو ل شالیما

نوجوانوں کی کونسلنگ کی وزیر اعلیٰ کی تجویز

نئی دلی //بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر امت شاہ نے کہا ہے کہ ریاستی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی طرف سے تشدد کے چکر میں پھنسے نوجوانوں کی کونسلنک کی تجویز کا معاملہ زیر غور لایا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ’’ محبوبہ جی نے جو پریس بیان جس میں انہوں نے تشدد میں پھنسے نوجوانوں کی کونسلنگ کے متعلق بات کی ہے اس میں ہماری پارٹی کی ٹیم جو کشمیر کی پالیسوں کے ساتھ منسلک ہے ، اس معاملے پر بیٹھ کر تبادلہ خیال کرے گئی ۔یاد رہے کہ ریاستی وزیر اعلیٰ نے گذشتہ روز سرینگر میں منعقدہ یونیفائیڈ ہیڈکواٹر میٹنگ پر فورسز پر زور دیا تھا کہ وہ نوجوانوں کی کونسلنگ کریں ۔  

معراج العالمؐ پر روح پرور مجالس کا اہتمام، شب خوانی کی محفلیں آراستہ

سرینگر// شب ِ معراج العالمؐکی تقریبات عقیدت واحترام سے منائی گئیں۔ اس سلسلے میں پوری وادی کی مساجد ، خانقاہوں میں رات بھر شب خوانی ہوئی اور درود ازکار کی محفلیں بھی آراستہ ہوئیں۔سب سے بڑی تقریب درگاہ حضرتبل میں منعقد ہوئی ،جہاں شہر سرینگر سمیت وادی کے اطراف واکناف سے سینکڑوں کی تعداد میں  لوگ جمع ہوئے اور وہ رات بھر شب خوانی میں محو رہے۔ کپوارہ، ،بارہمولہ، سوپور ، بانڈی پورہ ، پلوامہ ، شوپیان ، گاندربل ، اسلام آباد ،بڈگام سمیت دیگر اضلاع کے دور دراز دیہات سے مرد وزن کی ایک بڑی تعدا د درگاہ حضرت بل پہنچی ۔ شبِ معراج العام ؐ کے سلسلے  میں انتظامیہ نے زائرین کو درگاہ شریف حضرت بل اور دیگر مقدس مقامات تک لانے اور لیجانے کیلئے ٹرانسپورٹ کے علاوہ پانی اور بجلی کے مناسب انتظامات کئے تھے جبکہ کئی رضاکار تنظیموں نے زائرین کی سہولیات کیلئے خصوصی کیمپ لگا دئے تھے۔انتظامیہ نے چند دن قب

پتھرائو کرنے والوں کیخلاف کانپور میں ’جن سینا‘ تیار

کانپور//وادی میںپتھرائو کرنے والے نوجوانوں سے مقابلہ کرنے کیلئے بھارتی شہر کانپور میں معروف مندر سدھا ناتھ کے پجاری بال یوگی ارون پوری نے 13000افراد پر مشتمل عوامی فوج تیار کرنے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فوج سنگ اندازوں کو منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے ۔ ارون پوری نے کہا کہ ہم نے وزیر اعظم ہند نرندر مودی سے اجازت طلب کی ہے کہ اس رضاکارانہ فوج کو کشمیر جانے کی اجازت دی جائے تاکہ وہاں پر فوج اور نیم فوجی دستوں کو سنگ بازی کا نشانہ بنانے والوںکو سبق سکھایا جا سکے ۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ انہوںنے اس حوالے سے  کانپور میں اس منصوبے کی عمل آوری کیلئے میٹنگیں بھی کی ہیں۔ ارون یوگی کے بقول ہر ایک  بلدیاتی واڑ سے دس نوجوانوں نے اپنے ناموں کا اندراج کرایا ہے جبکہ دیگر 114بلدیاتی واڑوں سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو بھی تیار کیا جارہا ہے۔ ارون پوری اور دوسرے پجاری بدھ کو ضلع

ارضیاتی درجہ حرارت اوربخارات کے حجم میں اضافہ,برف تیزی سے پگل رہی ہے

  سرینگر//وادی میں موسم کی غیر یقینی صورتحال کو موسمی انتہا( کلائی میٹ ایکسٹریم) سے تعبیرکرتے ہوئے ماہرین کا ماننا ہے کہ ارضیاتی درجہ حرارت میں بتدریج اضافہ سے بخارات کا حجم تیزی سے بڑ ھ رہا ہے جس کی وجہ سے شدت کی بارشیں بھی ہورہی ہیں جبکہ پہاڑوں پر جمی برف تیزی سے پگل جانے کے سبب پانی کی سطح بھی بڑھ جاتی ہے ۔کشمیر یونیورسٹی میں شعبہ ارضیات کے پروفیسر شکیل احمد رومشو نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا ’’وادی میں ژالہ باری اور انتہائی شدت کے ساتھ بارشوں سے متعلق کوئی ڈیٹا موجودنہیں جس سے یہ اندازہ لگایا جاسکے کہ اسکی اصل وجوہات کیا ہیں۔ تاہم موسم کی غیر یقینی صورتحال دراصل کلائی میٹ ایکسٹریم کی وجہ سے ہو رہا ہے جس کے لئے ارضیاتی حدت ذمہ دار ہے۔ سرینگر کے جنوبی علاقوں میں بارشوں اور ژالہ باری کی شدت کے بارے میں انہوں نے کہا کہ وہاں ویٹ لینڈ اور تالابوں میں پانی جمع ہے جو تیزی

اننت ناگ ضمنی چناؤ

سرینگر//مرکزی داخلہ سیکریٹری کے ساتھ چنائو تیاریوں کے ضمن میں مفصل تبادلہ خیال کرنے اور چنائو کیلئے ہر ممکن مدد فراہم کرنے کی یقین دہانی کے بعدچیف الیکٹورل آفیسر شانت منو نے منگل کوایک میٹنگ کے دوران افسران پر اننت ناگ پارلیمانی نشست کے ضمنی چنائو کے لئے افرادی قوت اورمشینری متحرک کرنے پر زوردیا۔سی ای او نے ان باتوں کا اظہار چنائو تیاریوں کے سلسلے میں منعقدہ میٹنگ کے موقعہ پر افسران سے خطاب کے دوران کیا۔میٹنگ میں چار اضلاع اننت ناگ،کولگام،شوپیان اور پلوامہ کے ضلع چنائو آفیسران کے علاوہ اسسٹنٹ ریٹریننگ افسران بھی موجود تھے۔سی ای او نے ضمنی چنائو کے احسن اور کامیاب انعقاد کے لئے افسران پر تمام لازمی اقدامات اُٹھانے پر زوردیا ۔انہوںنے چنائو عمل کے لئے ٹرانسپورٹ اوررابطہ نظام کا بھی جائزہ لیا۔انہوںنے رات دن ایک شکایتی سیل قائم رکھنے کی بھی ہدایت دی تاکہ چنائو سے متعلق کسی شکایت کا فوری ا

صورتحال غیر موزون ،چنائو ملتوی کیا جائے:تصدق مفتی

سرینگر // حکمران جماعت پی ڈی پی نے الیکشن کمیشن سے ایک بار پھر استدعا کی ہے کہ وہ وادی کے موجودہ حالات دیکھتے ہوئے اننت ناگ کے ضمنی انتخابات کو غیر معینہ عرصے کیلئے ملتوی کردے۔تاہم نیشنل کانفرنس اور کانگریس نے الیکشن کمیشن کیساتھ ہونی والی  اس بات چیت میں شامل ہونے سے انکار کردیاتھا۔ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے بھائی اور اننت ناگ ضمنی انتخابات کے اُمیدوار تصدق مفتی نے سوموار کو ویڈیو کانفرنس کے ذریعے انتخابات ملتوی کرنے کی اپیل کی تھی۔ پی ڈی پی کے جنرل سیکریٹری  نظام الدین بٹ نے کہا ’’ تصدق نے اننت ناگ کے ضمنی انتخابات کو غیر معینہ عرصے کیلئے ملتوی کرنے کی استدعا کی ہے ۔ الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخابات میں حصہ لینے والے تمام اُمیدواروں کے ساتھ ایک ویڈیو کانفرنس کی تھی تاکہ 25مئی کو ہونے والے انتخابات کے بارے میں انکی رائے معلوم کی جاسکے۔تاہم نیشنل کانفرنس اور کانگریس

میڈیکل کونسل آف انڈیا کی ہدایت :محکمہ صحت نے ہاتھ کھڑے کئے

سرینگر//گزشتہ سال دسمبر میں ریاستی سرکارنے وادی کے تمام ڈاکٹروں کو نسخے جلی الفاظ میں لکھنے، اسپتال میں موجود ادویات کو ترجیح دینے اور تمام نسخوں پر ڈاکٹر کے دستخط کے علاوہ مہر ثبت کرنے کی  ہدایت جاری کی تھی مگر وزیر صحت اور نہ ہی میڈیکل کونسل آف انڈیا کی جانب سے جنریک ادویات لکھنے کے حکم کا کوئی اثر نہیں دکھائی دے رہا ہے۔ وادی کے بیشتر اسپتالوں میں ڈاکٹر نسخے حسب روایت چھوٹے الفاظ میں لکھتے ہیں جبکہ جنریک ادویات لکھنے کے میڈیکل کونسل آف انڈیا کے ہدایات کو بھی نظر انداز کیا جارہا ہے ۔تاہم ڈائریکٹر ہیلتھ کا کہنا ہے کہ وہ اس معاملے میں دوبارہ تمام اسپتالوں کے نام تازہ ہدایات جاری کریں گے جبکہ پرنسپل میڈیکل کالج کا کہنا ہے کہ یہ احکامات ابھی عملانے میں وقت درکار ہوگا۔ ریاستی حکومت نے 28دسمبر 2016کو تمام ڈاکٹروں کے نام ایک حکم نامہ زیر نمبر649ایچ اینڈ ایم ای کے تحت وادی کے تمام اسپت

گجر بکروالوں پر حملے ، پی ڈی پی سرکار کی ناکامی

جموں// گوجر بکروال طبقہ کیخلاف رونما ہونے والے تشدد آمیز واقعات کے لئے وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کو براہ راست ذمہ وار قرار دیتے ہوئے نیشنل کانفرنس نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ کی انچارج کے طور پر وہ امن و قانون نافذ کرنے اور اپنی اتحادی جماعت بی جے پی کی مختلف ذیلی تنظیموں کی طرف سے اقلیتوں کو خوفزدہ کرنے کے لئے شروع کی گئی مہم پر نکیل ڈالنے میںپوری طرح ناکام رہی ہیں۔ سینئر این سی لیڈر اور سابق وزیر میان الطاف نے پارٹی کے صوبائی صدر دفاتر پر منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریاسی میں بے بس اور مجبور خانہ بدوش کنبوں پر منظم ڈھنگ سے کیا گیا حملہ گوجروں کو ان کے آبائی علاقوں سے کھدیڑنے کیلئے بنائی گئی حکمت عملی کاایک حصہ تھا۔ پی ڈی پی کو ہدف تنقید بناتے ہوئے میاں الطاف نے کہا کہ جو جماعت ٹاسک فورس کو تحلیل کرنے اور پولیس و سیکورٹی فورسز کی طرف سے کی جانے والی زیادتیوں کا قلع قم

راجناتھ سے بھی ملاقات کی

 نئی دہلی// مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کے بعد وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے کہاکہ ریاست کے حالات بدلنے میں دو۔ تین ماہ کا وقت لگے گا۔ وادی میں روز بروز ابتر ہوتی صورتحال کے مدنظر مرکزی قیادت سے ملنے آئیں محبوبہ مفتی نے پہلے وزیر اعظم نریندر مودی اور پھر سنگھ سے ملاقات کی۔ میٹنگ کے بعد انہوں نے نامہ نگاروں سے کہا 'آئندہ دو۔تین ماہ میں آپ جموں و کشمیر کے حالات کو بالکل بدلا ہوا پائیں گے ۔ یہ دو۔ تین ماہ ہمارے لئے حقیقاًاہم ہیں۔ وزیر داخلہ سے اس سلسلے میں بات ہوئی ہے ۔ حالات میں سدھار کیلئے ہمیں سبھوں کے تعاون کی ضرورت ہے ۔  

۔3ماہ کیلئے نوکری بچا لی:عمر عبداللہ

سرینگر// جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے وادیٔ کشمیر بالخصوص گرمائی دارالحکومت سرینگر میں طالب علموں کے احتجاجیوں کو ایک نئی پریشانی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریاستی وزیر اعلیٰ اپنی نوکری بچانے کے لئے نئی دہلی میں گھر گھر جارہی ہیں۔ انہوں نے مفتی کی نئی دہلی میں وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ وزیر اعلیٰ اپنی نوکری کو مزید تین ماہ تک بچانے میں کامیاب ہوئی ہیں، تاہم اُن کے اقتدار میں رہتے ہوئے کسی بھی بہتری کی توقع نہیں کی جاسکتی ۔ عمر عبداللہ نے پیر کو مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’جہاں محبوبہ مفتی اپنی نوکری کو بچانے کے لئے دہلی میں گھر گھر جارہی ہیں، وہیں ریاست ایک بار پھر بھڑک اٹھنے کے دہانے پر ہے۔ طالب علموں کا احتجاج ایک نئی پریشانی ہے‘۔ انہوں نے کہا ’وزیر اعلیٰ (محبوبہ مفتی) وزیر اعظ

وادی میں 6روز بعد تعلیمی سرگرمیاں بحال

  سرینگر// 6روز  بعدکالج کھلتے ہی سرینگر میں طلباء و طالبات سڑکوں پر آئے اور اس قدر سیول لائنز میں پر تشدد احتجاج کیا کہ دن بھر صورتحال مخدوش بنی رہی۔ پولیس نے صورتحال کو قابو میں کرنے کیلئے ٹیر گیس اور مرچی گیس کی بے تحاشہ شلنگ کرنے کے علاوہ ہوائی فائرنگ بھی کی۔شدید قسم کے پتھرائو کے نتیجے میں ایس ایس پی سرینگر سمیت12اہلکاراور3فوٹو گرافروں سمیت کئی طلباء کو بھی چوٹیں آئیں ۔ وادی میں مسلسل6دنوں تک کالج مقفل رہنے کے بعد پیر کو کالج اور ہائر سکنڈری سکول کھل گئے۔اگر چہ وادی کے تمام تعلیمی اداروں میں درس و تدریس کا کام معمول کے مطابق ہوتا رہا تاہم ایس پی کالج، ایس پی ہائر اسکینڈری اسکول کے طلباء اور وومنز کالج کی طالبات نے ایک مرتبہ پھر جلوس نکالا اور نعرہ بازی کی۔اس موقعہ پر طلاب نے مرکزی گیٹ کو بھی عبور کیا اور مولانا آزاد روڑ پر دھرنے پر بیٹھ گئے۔احتجاجی طلبہ2طالبات کو

شلنگ کا اثر ہر آنکھ اشک بار تھی

’’ ایسا احتجاج پہلے کبھی نہیں دیکھا لال آنکھیں اور چھاتی کو پیٹ رہی ایک خاتون سیکورٹی فورسز کی جانب سے استعمال کئے گئے آنسو گیس اور مرچی گیس کے استعمال کے بعد کئی گھنٹوں تک حالات کو ٹھیک ہونے کا انتظار کر رہی تھی اور صرف یہی کہتی رہی کہ اُس نے پہلے کبھی ایسا جنونی احتجاج نہیں دیکھا ۔ شہر سوموار کو دھواں دھواں تھا ۔ افرتفری چیخ وپکار باگم دوڑ کے مناظر دیکھے گئے ،گھنٹوں ٹریفک جام بھی رہا پھر ریذیڈنسی روڑ سمیت کئی مقامات گاڑیوں سے خالی ہوگئے ۔ٹیر گیس شلنگ اور مرچی گیس کا بھی سیکورٹی فورسز نے خوب استعمال کیا راہگیروں کو منہ پر رومال اور آنکھوں کو ڈھکے ہوئے دیکھا گیا ۔خواتین مرد اور نوجوانوں کی آنکھوں سے آنسو ٹپک رہے تھے کئی آنکھیں لال کئے ہوئے کہہ رہے تھے’’ یہ کیا ہو گیا‘‘۔کام کے سلسلے میں شہر آئے ایک نوجوان نے کہا کہ میں مر جائوں گا مجھے کچھ ہو گ

پی ڈی پی ضلع صدر پلوامہ ہلاک

پلوامہ// جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں پیر کے روز مشتبہ جنگجوؤں نے پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) ضلع صدر پلوامہ ایڈوکیٹ عبدالغنی پر گولیاں چلاکر انہیںجاں بحق کیا۔حالیہ چند روز کے دوران پلوامہ اور اس سے ملحقہ ضلع شوپیان میں یہ ایسی تیسری ہلاکت ہے۔اس سے پہلے قصبہ یار شادی مرگ پلوامہ میں ایک میڈیکل شاپ مالک بشیر احمد کو گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا جبکہ اس واقعہ میں اسکا قریبی رشتہ دار الطاف احمد شدید طور پر زخمی ہوا ۔اسکے بعد پنجورہ شوپیان میں چند روز قبل نماز عشاء ادا کرنے کے بعد سابق پراسکیوٹر امتیاز احمد خان کو گھر کے نزدیک ہی ہلاک کیا تھا۔مشتبہ جنگجوؤں نے پی ڈی پی ضلع صدر ایڈوکیٹ عبدالغنی ڈار عرف غنی وکیل پر پلوامہ سے قریب 5کلو میٹر دور پنگلنہ اور پاہو نامی دیہات کے درمیان اُس وقت گولیاں چلائیں جب وہ اپنی گاڑی سے سرینگر کی طرف جارہے تھے۔پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر معلوم ہوا

تعلیم کوسیاست سے الگ رکھا جائے

  سرینگر//سکولوں میں مداخلت کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا عہد دہراتے ہوئے وزیر تعلیم سید الطاف بخاری نے کہا  ہے کہ تعلیمی ادارے بچوں کی تعلیم کیلئے ہوتے ہیں اور انہیں سیاست سے الگ رکھنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ایس پی ہائر سیکنڈری سکول کے بغیر وادی کے تمام تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کام کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ وادی کے سکولوں اور کالجوں میں معمول کے مطابق کام کاج ہوا مگر یہ واقعہ صرف ایس پی ہائر سیکنڈری تک ہی محدود رہاتاہم انہوں نے کہا کہ وہ طلبہ کی بات سنے کو تیار ہیں اور انکے سکول میں بات چیت کرنے کو بھی تیار ہے۔ انہوں نے کہا’’ میں تمام طالب علموں سے کہنا چاہتا ہوں کہ وہ مجھے اپنے سکول اور کالج میں بلائیں، میں اسکے ساتھ بات چیت کرکے انکے مسائل حل کرنے کو تیار ہوں۔‘‘ انہوں نے کہا کہ طالب علموں کو حق ہے کہ وہ مظاہرہ کرے مگر یہ سب کچھ سکو