تازہ ترین

منریگا ملازمین کی غیر معینہ مدت کیلئے ہڑتال

ڈوڈہ//اپنے دیرینہ مطالبات کے حق میںمنریگا ایمپلائز ایسوسی ایشن ضلع ڈوڈہ کی طرف سے غیر معینہ مدت کے لئے کی جا رہی ہڑتال تیسرے روز بھی جاری رہی ۔بدھ کے روز بھی منریگا اسکیم کے تحت کام کرنے والے عارضی ملازمین نے احتجاج کیا اور دھرنا دیا۔اس موقع پر ایسوسی ایشن کے ضلع صدر سجاد احمد بٹ نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اُن کی ہڑتال اور احتجاج کا سلسلہ اُس وقت تک جاری رہے گا جب تک کہ اُن کو اس بات کی تحریری ضمانت نہیں دی جاتی کہ اُن کے مطالبات کو پورا کیا جائے گا۔اُنہوں نے کہا کہ اس سے قبل ہم نے اپنی ہڑتال ریاستی وزیر برائے دیہی ترقی و پنچائتی راج کی اس یقین دہانی کے بعد ختم کی تھی کہ اُن کے مطالبات کو ایک ماہ کے اندر پورا کیا جائے گا اور اس سلسلہ میں بہت جلد سرکاری حکمنامہ جاری کیا جائے گا ،مگر تا حال اس سلسلہ میں کوئی قدم نہیں اُٹھایا گیا ہے جس وجہ سے اُن کا اعتماد بری طرح سے مجروح ہوا ہے

ڈگری کالج کشتواڑ میں باغبانی مہم کا اہتمام

کشتواڑ//عالمی یوم آب کے سلسلے میں گورنمنٹ ڈگری کالج کے شعبہ باٹنی ، این ایس ایس اور این سی سی رضاکاروںنے باغبانی مہم کا اہتمام کیا۔اس موقعہ پر ضلع ترقیاتی کمشنر غلام نبی بلوان مہمان خصوصی تھے جبکہ پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج ڈاکٹر شفقت رفیقی نے پروگرام کی صدارت کی۔اس دوران پروفیسر کلدیپ کمار شرما، پروفیسر سریندر سین، پروفیسر لیکھ راج بڈیال، پروفیسریاسین سروال، پروفیسر فیصل کچلو(این ایس ایس کو آرڈی نیٹر)، پروفیسرستیش ٹھاکر(این سی سی کو آرڈی نیٹر)، پروفیسر رومانہ سروال، پروفیسر سریتا، پروفیسر توصیف ترک، پروفیسر شوکت بٹ وغیرہ نے بھی پروگرام میں شرکت کی ۔ اس کے علاوہ این ایس ایس اور این سی سی کے  رضاکاروں نے بھی پروگرام میں حصہ لیا۔اپنے خطاب میںغلام نبی بلوان نے کہا کہ پانی اور پودے قدیم دور سے انسانوں کی خدمت کرتے آ رہے ہیں۔انہوں نے طلباء اور اساتذہ کو مخاطب ہوکر کہا کہ ان کوششوں سے

کشتواڑیوتھ نیشنل کانفرنس کا احتجاجی مظاہرہ

کشتواڑ//ضلع کشتواڑ میں بنیادی سہولیات کی عدم دستیابی پر پرانے ڈی سی کمپلیکس دفتر پر بڑی تعداد میں لوگوں اور یوتھ نیشنل کانفرنس کے کارکنوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ اس موقعہ پر ضلع صدریوتھ نیشنل کانفرنس ڈی ڈی فاروق نے لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں ناکامی پر بی جے پی ۔پی ڈی پی مخلوط سرکار پر شدیدتنقید کی۔انہوں نے کہا کہ کشتواڑ میں بجلی اور تیل خاکی سپلائی کرنے میں حکومت ناکام ہوچکی ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ان کاکہناتھاکہ پی ڈی پی ۔بی جے پی حکومت سخت سردی کے موسم میں کشتواڑ میں بنیادی سہولت نہیں پہنچاپائی ۔جوائنٹ سکریٹری جموں صوبہ امتیاز زرگر نے کہا کہ حکومت  کشتواڑ میں لوگوں کو بنیادی سہولیات اور بہتر سڑک رابطے کے ساتھ ساتھ پیٹرول ، ڈیزل،تیل خاکی،ایل پی جی سپلائی فراہم کرنے میں غیر سنجیدہ ہے جس کے باعث لوگ پریشان حال ہیں۔انہوں نے کہا کہ کشتو

پی ڈی پی ضلع صدر کا دورہ ٔ کوٹی

ڈوڈہ//پی ڈی پی کے ضلع صدر شہاب الحق بٹ نے ڈوڈہ کی کوٹی پنچائت کا دورہ کر کے عوامی شکایات کو سُنا اور لوگوں سے انفرادی اور اجتماعی ملاقاتیں کر کے اُن کو درپیش مسائل اور مشکلات بارے تفصیلی جانکاری حاصل کی۔اس دوران پارٹی کے متعدد سینئر کارکنان اور یوتھ لیڈران بھی اُن کے ہمراہ تھے۔یہاں جاری ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ دورے کے دوران مختلف وفود نے پارٹی ضلع صدر سے ملاقاتیں کر کے اپنے اپنے علاقہ و دیہات کے مسائل کو اُجاگر کیا اور اُن سے اپیل کی کہ وہ اپنے اثر رسوخ کا استعمال کر کے اُن کے مسائل کا ازالہ کروانے کی کوشش کریں۔لوگوں نے شہاب الحق کو بتایا کہ محکمہ پی ایم جی ایس وائی، محکمہ بجلی اور محکمہ آب رسانی کی کارکردگی علاقہ میں صفر کے برابر ہے  جس وجہ سے لوگوں کو سخت مشکلات اور پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ بیولی تا کوٹی سڑک کی حالت انتہائی خستہ اور باعثِ تشویش ہے اور اس سڑک سے

مالیکوٹ میں عوام۔پولیس اجلاس منعقد

مہور//پولیس نے عوام کے ساتھ بہترروابط قائم کرنے اورسماج کو جرائم سے پاک بنانے کے لئے تحصیل مہورکے مالیکوٹ میں عوام۔ پولیس اجلاس منعقد کیاجس کی سربراہی ایس ڈی پی اومہوراسلم میراورایس ایچ او چسانہ گوروندر سنگھ کررہے تھے ۔ اس دوران میٹنگ میں معزز شہریوں کی کثیرتعدادنے شرکت کی۔ مقررین نے پولیس افسران کومسائل کی جانکاری دی اور انہیں حل کرنے پر زور دیا۔ اس موقعہ پر پولیس افسران نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ امن وقانون کی صورتحال کوبرقراررکھنے کے لئے سماج دشمن عناصر کی سرگرمیوں کے بارے میں پولیس کوبروقت اطلاع دیں۔ انہوں نے کہاکہ عوام کے تعاون سے سماج کوجرائم سے پاک بنایاجاسکتاہے۔ اس موقعہ پر پولیس افسران نے گوں کومسائل متعلقہ محکموں کے افسران کے ساتھ اٹھاکر حل کرانے کی یقین دہانی کرائی۔  

اوقاف املاک سے رضاکارانہ طور دستبردار ی

کشتواڑ//املاک اوقاف کی حفاظت اور ان کی نگہبانی امت کا اجتماعی فریضہ ہے اور ان املاک کی حفاظت کیلئے جذبۂ ایثار کا مظاہرہ کرنے والے اصحاب کی خدمات کے اعتراف کے لئے مسلم شوریٰ کمیٹی نے ان اصحاب کو ’امین ِ ملتِ اسلام ‘ کے نامی سے توصیفی اسناد دینے کا اعلان کیا ہے جنہوںنے حال ہی میں رضاکارانہ طور پر اوقاف کی اراضی محکمہ کو سپرد کر دی ہے ۔پریس کے لئے جاری ایک ریلیز کے مطابق اوقاف اسلامیہ کے کشتواڑ ایڈمنسٹریٹر کی کارروائیوں کی ستائش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موصوف کی کوششوں سے اوقاف کی املاک کو بحال کرنے کی راہ ہموار ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ پولیس تھانہ کشتواڑ کے قریب ایک کنال 9مرلہ قطعہ اراضی محمد اقبال بٹ ولد مرحوم احد اللہ بٹ ساکن حال مالی پیٹھ کشتواڑ کے تصرف میں تھا لیکن انہوںنے رضاکارانہ طور پر اس بیش قیمت زمین کو اوقاف کے سپرد کر کے ملی غیرت اور حمیت کو جو ثبوت دیا ہے وہ قابل

’عا لمی یوم آب‘ پر مباحثے کا اہتمام

رام بن//ضلع انفارمیشن سینٹر رام بن نے بھارتیہ ودیا مندر ہائی سکول کے احاطے میں عا لمی یوم آب کے سلسلہ میں مباحثہ اور ایک ثقافتی پروگرام منعقد کیا۔اس موقعہ پر پرنسپل اسکول پردیپ سنگھ ٹھاکور مہمان خصوصی تھے ۔اس پروگرام میں اسکول کے10طلباء نے حصہ لیا۔اس موقعہ پر ایک رنگا رنگ ثقافتی پروگرام بھی پیش کیا گیا۔ مقابلہ میںپہلا انعام 10 ویں جماعت کی طالبہ کاجل نے ،دوسرا انعام پلوی رائے اور تیسرا انعام صفیہ نے حاصل کیا ۔ مہمان خصوصی نے کہا کہ اس طرح کی سر گرمیوں سے پانی کی اہمیت اور تحفظ کے بارے میں طالب علموںکو بیدار کیا جانا چاہئے۔انہوں نے معلوماتی پروگرام منعقد کرنے کیلئے ضلع انفارمیشن سینٹر کی طرف سے کی جانے والی کوششوں کو سراہا اور مستقبل میں بھی اس ادارے میں اس طرح کے پروگرام منعقد کرنے پر زور دیا۔پروگرام میں سکول کے اساتذہ امیت کمار،مدن سنگھ اور انگریز سنگھ بھی موجودتھے جبکہ نظامت کے فرائ

ر ماڑی میں کوئز مقابلہ کا انعقاد

دھر ماڑی// ہائر سکینڈری اسکول دھر ماڑی میں ایک کوئز مقابلہ کا انعقادکیاگیا۔ اس پروگرام میںنویں اور بارہویں جماعت کی 4ٹیموں نے حصہ لیا ۔مقابلہ میں نویں جماعت نے پہلی پوزیشن حاصل کی ۔پروگرام میںنزاکت علی اردو لیکچرار، پورن چند ایجوکیشن لیکچرار، پریتم سنگھ ماسٹر،سکھدیو سنگھ ٹیچر،شہناز اختر ٹیچر،اوشا راجپوت ٹیچر اور بلونت سنگھ ماسٹر وغیرہ بھی موجو دتھے ۔اختتام پر طلباء میں انعامات تقسیم کئے گئے ۔    

ایس ایس اے اساتذہ کی تنخواہ واگزار کرنے کی اپیل

کشتواڑ//جموں وکشمیر رہبر تعلیم ٹیچرز فورم کے ضلع جنرل سکریٹری کشتواڑمشرف شبیر شیخ نے ایس ایس اے اساتذہ کی تنخواہیں واگزار کرنے کی مانگ کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ درس دینا ہمارا بنیادی کام ہے جس کیلئے ہی ہمیں تعینات کیاگیاہے اس لئے ہماری تما م تر توجہ تعلیم پر ہی مرکوز ہونی چاہئے۔ان کاکہناتھاکہ محکمہ سب محکموں کی ماں ہے اور صرف ایک ٹیچر ہی معاشرے کو تبدیل کرنے کی صلاحیت رکھتاہے ، اگر اساتذہ سخت محنت کریں اور طالب علموں کو اچھی اخلاقی تعلیم دیں تو معاشرے کو یقینی تبدیلی ملے گی۔اپنے پریس بیان میں مشرف نے سرپلس رہبر تعلیم ٹیچرز کی ایڈجسٹمنٹ اور ایس ایس اے اساتذہ کی تنخواہ واگزار نہیں کرنے کی اپیل ۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ اور انکے اہل خانہ پانچ ماہ کی زیرالتواء تنخواہوں کی عدم ادائیگی کی وجہ سے مالی مشکلات سے جوجھ رہے ہیںاور سر پلس رہبر تعلیم ٹیچرز گزشتہ دو سال سے انتظار کر رہے ہیںجن کے ساتھ ان

بٹھوئی میں لوگ پانی کے بوند بوند کوترساں

مہور//سب ڈویژن مہور کے گاؤں بٹھوئی سے لوگوں نے شکایت کی کہ پچھلے پانچ دنوں سے پانی کی سپلائی نہیں ہوئی جس کی وجہ سے انہیں شدید مشکلات کاسامناہے ۔ان کا کہنا ہے کہ پچھلے پانچ دنوں سے محکمہ نے پانی کی سپلائی کو کاٹ دیا ہے۔مقامی شخص محمد اشرف وانی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ نامعلوم وجوہات کی بناپر محکمہ نے پچھلے پانچ دنوں سے بٹھوئی میں پانی بند کر دیا ہے۔لوگوں نے بتایا کہ انسان اور مویشی پانی کیلئے ترس رہے ہیںاورطلباء کو بھی مشکلات کا سامناہے۔انہوںنے کہاکہ اسکولوں اور مساجد میں پانی ہی نہیں لیکن محکمہ پی ایچ ای کو ٹس سے مس تک نہیں ہورہا۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ سے مانگ کی ہے کہ ان کی مشکلات کا حل نکالا جائے ورنہ وہ سڑک پر اتر کر احتجاج کریںگے ۔  

عالمی یومِ شجرکاری

گندو//عالمی یومِ شجر کاری کے موقع پر محکمہ جنگلات کے اشتراک سے ایجوکیشنل ،انوائرمنٹل،سوشیل اسپورٹس اینڈ کلچرل سوسائٹی آف بھلیسہ کی طرف سے بھلیسہ جنگلات رینج کے کمارٹمنٹ نمبر 108کلہوتران میںدرخت لگانے کی ایک رضا کارانہ مہم کا انعقاد کیا گیا جس میں سوسائٹی کے رضاکاروں،ماحولیاتی کمیٹیوں کے ارکان اور گورنمنٹ ہائر اسکنڈری اسکول کلہوتران،گورنمنٹ گرلزہائرا سکنڈری اسکول گواڑی،غیاثیہ ماڈل اسکول چنگا اور گورنمنٹ مڈل اسکول سٹیلا کے سینکڑوں طلاب نے حصہ لیا۔مڈل اسکول اسٹیلا میں کنزرویٹر محکمہ جنگلات چناب سرکل تیج بہادر سنگھ کی صدارت میں منعقدہ افتتاحی تقریب میں ایس ڈی پی او گندو سنی کمار گپتابطورِ مہمانِ خصوصی موجود تھے جب کہ رینج آفیسر بھلیسہ شیخ ظفراللہ ، سوسائٹی کے چیئرمین محمد ایوب زرگر،طالب حسین زرگر آرایم ایس ایف سی،محمد ایوب راتھر لیکچرر، سیکریٹری جماعت علی آگاہؔ،پردیپ کمار لیکچرر ،ماسٹر

ٹھاٹھری میںنالیوں کاگندہ پانی دُکانداروں اور راہگیروں کیلئے باعثِ تشویش

ڈوڈہ//قصبہ ٹھاٹھری میں قومی شاہراہ کے کناروں پر پانی کے نکاس کے لئے بنائی گئی نالیوں میں جمع گندہ پانی دُکانداروں اور راہگیروں کے لئے نہ صرف باعثِ پریشانی بنا ہوا ہے بلکہ اس سے مختلف قسم کی وبائی بیماریاں بھی پھیل رہی ہیں۔شاہراہ کی پچھلی طرف پانی کے نکاس کے لئے بنائی گئی نالی گریف ایجنسی نے کچھ اس انداز سے تعمیر کی ہے کہ پانی نہ آگے کی طرف اپنا راستہ پاتا ہے نہ پیچھے کی طرف اور نہ ہی اوپر سے نالی کو بند کیا گیا ہے ۔نتیجۃً قصبہ کے ایک سرے سے دوسرے سرے تک پوری نالی ایک گندے تالاب کی صورت اختیار کر گئی ہے جس سے اُٹھنے والے بدبو کے بھبھوکوں سے پورے قصبہ کا ماحول متعفن ہو کے رہ گیا ہے اور دُکانداروں کا جینا دو بھر ہو گیا ہے۔تالاب نما اس نالی کو پار کرنے کے لئے ہر دُکاندار نے اپنی اپنی دُکان کے سامنے چھوٹے چھوٹے عارضی پل بنارکھے ہیں تاکہ گاہک اُن کی دُکان تک آ سکیں۔بعض مقامات پر بدبو اتنی

ایس آراو 43کے معاملات التوامیں

ریاسی//ضلع ریاسی کی تحصیل مہور کے گلاب گڑھ کے مختلف علاقہ جات کے لوگوں کی ایک میٹنگ زیر صدارت مشتاق احمد سابقہ چیئر مین دیول حلقہ پنچائیت کی قیادت میں منعقدہوئی ۔اس دوران مقررین نے افسوس کااظہار کیا کہ گاؤں دیول پنچائت اور لاکے عوام کو ابھی تک ایس ۔ آر ۔او43 کے تحت انصاف نہیں دیا گیا ۔انہوں نے کہاکہ کئی افراد2004 سے لے کر 2009 تک ہلاک کردیئے گئے تھے۔انہوں نے کہاکہ مختیار ناگ سکنہ دیول پنچایت2004میں، محمد یوسف ملک سکنہ برانسل لدر2004میں ، عبدالغنی سکنہ ویول 2006 ، بشیر احمد سکنہ دیول2008، احمد دین ملک سکنہ بندارہ دیول 2009، اعجاز احمدسکنہ بندارہ دیول 2009میں میں ہلاک ہوئے تھے۔ مذکورہ مہلوکین کے ورثانے کہاہے کہ 43-SROکے تحت کیس ضلع انتظامیہ ریاسی کے پاس د یئے گئے ہیں لیکن بار بار انکے ورثا کی طرف سے فریادکے باوجود ٹال مٹول سے کام لیاجارہاہے ۔انہوں نے کہاکہ 13سال گذرگئے لیکن ابھی تک غلا

چھاترو کی اندرونی سڑکوں پر ائور لوڈنگ

چھاترو / / سب ضلع چھاترو میں ڈرائیوروں کی من مانی کی وجہ سے اورلوڈنگ کا سلسلہ عروج پر ہے، ڈرائیوروں نے قانون کو بالائے طاق رکھتے ہوئے موت کو دعوت عام دے رکھی ہے ۔گاڑیاں جن میں بسیں میٹاڈور کروزر و ٹاٹا سومو شامل ہیں کی چھتوں و سیڑھیوں پر سواریاں آویزاں نظر آتی ہیں۔ ان سواریوں سے لدی ہوئی گاڑیوں کو دیکھ کر ہی ہوش اڑ جاتے ہیں جب چھوٹے چھوٹے بچے گاڑیوں کی چھتوں پر دکھائی دیتے ہیں چھاترو سے اندروال جانے والے ایک مسافر نے بتایا کہ اورلوڈنگ کے باعث مسافروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب زیادہ مشکلات خواتین بچوں بزرگوں اور مریضوں کو ہوتی ہے گاڑیوں میں اورلوڈنگ چھاترو کی اندرونی سڑکوں پر جن میں سب ضلع چھاترو کے چنگام، سنگپورہ،سگدی،بھاٹہ، کوچھال، ہوڑنہ دربیل،ٹاگود کی سڑکوں پر دیکھنے کو ملتا ہے جہاں ان علاقوں کو جانے والی سڑکوں کی حالت نہایت ہی خستہ ہے وہیں اورلوڈنگ

رام بن میں 3200ایس پی او زکابھرتی عمل جاری

رام بن //ضلع میں’ سپیشل پولیس افسران‘SPO بھرتی جاری ہے جس میں بھاری تعداد میں ضلع کے شمال و جنوب سے آئے ہوئے بے روزگار نوجوان جوش و خروش سے حصہ لے رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلع کی تمام تحصیلوں سے تعلق رکھنے والے 3200امیدوار وں کی ضلع پولیس لائن میں کی جارہی بھرتی کے لئے انتظامیہ کی طرف سے انتظامات کئے گئے ہیں۔ امیدواروں کو جسمانی ٹسٹ  Physical Endurance Test (PET)کے مرحلہ سے گزرنا پڑتا ہے ۔ گزشتہ روز ضلع ترقیاتی کمشنر رام بن محمد اعجاز اور ایس ایس پی موہن لال نے ضلع پولیس لائن کا دورہ کر کے وہاں جاری بھرتی عمل کا جائزہ لیا۔   

چسانہ میں100 بوری سرکاری راشن ضبط،ایک گرفتار

مہور//مہور پولیس نے ایس ایچ اوچسانہ کی قیادت میں 100 بوری سرکاری راشن ضبط کیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ ایک شخص طالب حسین ولد گلاب دین ساکن کندردھن تحصیل چسانہ نے سرکاری راشن (چاول) کی 100بوریاں نا جائز طور سے بیچنے کیلئے کندردھن میں ایک دکان میں چھپا کر رکھی تھیں۔ایس ایچ او سب انسپکٹر گوروندر سنگھ نے نائب تحصیلدار نریندر کمار کے ہمراہ کندردھن میں دکان پر چھاپہ مار کر چاول کی 100بوریاں ضبط کیں اور ملزم کو گرفتار کر لیا ۔اس سلسلہ میں پولیس سٹیشن چسانہ میں مختلف ضابطوں کے تحت ایک ایف آئی آر نمبر 10/17 درج کی گئی ہے اورمزید تفتیش جاری ہے۔  

قومی کونسل برائے فروغ اردو کاعجب طریقہ کار!

 قومی کونسل برائے فروغ اُردوزبان وزارت ترقی انسانی وسائل حکومت ہند کا طریقہ کار باعث تشویش ہے۔ 17 تا 19 مارچ 2017 کو منعقدہونے والی تین روزہ عالمی اُردوکانفرنس میں اردو کے نام پر ہندستان اور بیرون ملک سے کوئی ایسا نام اس کانفرنس کے مندوبین میں نہیں ہے جس نے واقعی اردوزبان کی ترقی میں کچھ کرداراداکیا ہو۔حد تو یہ ہے کہ ہندستان سے باہر سے آنے والے مندوبین زیادہ تر ایسے ہیں جن کا تعلق اردو سے برائے نام ہے۔ مثلاً کویت سے چند نام ایسے ہیں جو صرف اس لیے آرہے ہیں کہ موجودہ ڈائریکٹر کو ان لوگوں نے کویت بلایا تھا اب اسی کے عوض شہاب الدین جیسے شخص کو جو کویت کی اسٹیل فیکٹر ی میں کام کرتے ہیں اور بہار کے رہنے والے ہیں۔ اردو  پڑھنا لکھنا جانتے ہیں اس کے علاوہ اور کچھ نہیں یہی حال کویت سے آنے والے سرفراز احمد کا ہے جو ہندستان کے ہیں اور کویت میں کسی غیر سرکاری کمپنی میں کام کرتے ہیں اور

خطہ چناب میں ایڈیشنل ہائی کورٹ بنچ کا قیام!

پیشتر ازیں ضلع ڈوڈہ جسے خطہ چناب کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، 9,24,345افراد کی آبادی پر مشتمل ہے۔ اور 11,691Sq.KM میں پھیلا ہوا ہے۔ خطہ چناب ایک بہت بڑا خطہ ہے جس کی ایک سیاسی مذہبی اقتصادی تہذیب یافتہ تاریخ ہے۔ لیکن بدقسمتی سے اس خطہ کے لوگوں کی مصیبتوں /دشتواریوں کا کوئی پرسانِ حال نہ ہے۔ صوبہ جموں و صوبہ کشمیر کی صوبائی جنگ کا شکار یہ منفرد خطہ چناب مختلف تفرقات سے دو چار ہورہا ہے۔ اور یہی وجہ ہے کہ یہ خطہ ہمیشہ سے پسماندہ چلا آرہا ہے۔خطہ چناب صوبہ جموں کا حصہ ہے اور صوبہ جموں ریاست جموں و کشمیر کا سرمائی دارالخلافہ ہے۔ پیشتر ازیں ضلع ڈوڈہ سال 2006؁ء میں تین اضلاع میں بٹ چُکا ہے۔ جیسا کہ ضلع ڈوڈہ، ضلع کشتواڑ، اور ضلع رام بن اور تینوں اضلاع کا مرکزی شہر جموں ہے۔ جس کی وجہ سے خطہ چناب کے لوگوں کو آئے دن اپنے کاموں کے سلسلہ میں مرکزی شہر جموں کارخ کرنا پڑتا ہے۔ پھر چاہے وہ سیکٹریٹ کا

رام بن ضلع ترقیاتی بورڈ میٹنگ کے محو خواب شرکاء!

’اس وطن میںکہ’ گرگٹ حیران و پریشان ہیں کہ اُن جیسے بھی انسان ہیں ‘جو کرسیوں پر براجمان ہیں اور عوام پر اس قدر مہربان ہے کہ آنکھوں سے نیند جانے کا نام نہیں لیتی۔جی ہاں !عوام کو یہ گمان ہے کہ یہ اُن کے ہمدرد لیڈران ہیں، عوام دوست آفیسران ہیں، لیکن شومئی قسمت خدمت ِ خلق کے تئیں بد گمان ہیں ، وا ہ کیا شان ہے، آنکھوںمیں نیند اور ہونٹوں پر بددیانتی کی مسکان ہے، عوام پریشان ہے کہ یہ یہی تو تباہی کا سامان ہے ۔جب عوام کو کوئی مسئلہ ہوتا ہے تو وہ اپنے اپنے،سرداروں،سرکاری افسروں،سیاسی رہنماؤں،حکومت اور حکمرانوںکی طرف دیکھنا شروع کردیتے ہیں۔ اور پھر جس کی کوئی ادا،کوئی بات دل کو بہاجائے اسے اپنا اپنا ہیرو مان لیتے ہیں۔یوں تو ہمارا اجتماعی شعور کبھی تھا ہی نہیںجس کی بدولت ہم کسی لیڈر یا کسی آفیسرسے اپنی مانگیں پوری کروا سکیں ،ہم تو سب ایک دوسرے کی ٹانگ کھنچنے میں مصروف رہتے ہ

’’جنگل کے تحفظ‘‘ پرمباحثے کا انعقاد

رام بن//ضلع انفارمیشن سینٹر رام بن نے کمال اکیڈمی ہائی اسکول چندرکوٹ کے احاطے میں عالمی آربر دن کی مناسبت سے ’’جنگل کے تحفظ‘‘ پر مباحثے کا اہتمام کیا۔ اس موقعہ پر اسکول کے چیئرمین دھرم چند مہمان خصوصی تھے جبکہ پرنسپل عبدالخالق نے تقریب کی صدارت کی۔ مہمان خصوصی نے طالب علموں کو زندگی کیلئے تباہ کن ما حولیاتی آلودگی کوپاک بنانے کیلئے ان کے ارد گرد زیادہ سے زیادہ درخت لگانے کے لئے حوصلہ افزائی کرنے پر زور دیا۔انہوں نے مستقبل میں بھی ایسے پروگرام منعقد کرنے کی خواہش ظاہر کی۔ اسکول کے نو طالب علموں نے اس مقابلہ میں حصہ لیا اور ا س موضوع پر روشنی ڈالی۔اس موقعہ پر ایک رنگا رنگ پروگرام بھی طالب علموں اور مقامی فنکاروں کی طرف سے پیش کیا گیا جس سے حاضرین محظوظ ہوئے۔مباحثے میں پہلی ،دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والوں کو انعامات سے نوازاگیا ۔