تازہ ترین

بھدرواہ میں ٹریفک کنٹرول خود SDM سھمبالا

بھدرواہ //سول انتظامیہ اور پولیس کے درمیان بھدرواہ میں ٹریفک کو کنٹرول کرنے میں تال و میل میں فقدان کی خبریں روز نامہ کشمیر اعظمیٰ میں شائع رپورٹ پر کاروائی کرتے ہوئے سول انتظامیہ نے پہل کرتے ہوئے ٹریفک کو باقاعدہ بنانے کا کام بذات خود شروع کیا ہے،جس سے سیاحوں اور دوکانداروں کو تھوڑی سی راحت ملی ہے۔کشمیر اعظمیٰ میں 23جون 2017 کو ٹریفک کی بد نظمی کے سلسلہ میں شائع خبر کا ایگزیکٹومجسٹریٹ بھدرواہ معصود احمد کو بذات خود ٹریفک کا منیجمنٹ چلاتے ہوئے اور لکشمی نارائن چوک اور صدر بازار میں گاڑیوں کو سیری بازار میں داخل ہونے سے روکنے کے لئے خا ردا رتار بچھاتے ہوئے دیکھا گیا ہے،جہاں پر عید کی خریداری اور سیاحوں کا بھاری رش ہوتا ہے۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ سول انتظامیہ کی جانب سے اہم کاروباری مرکز سیری بازار میں بھاری گاڑیوں کے داخلہ پر پابندی کے باوجود اور نئے بس اسٹینڈ سے پسری براستہ سیری بازار نو

کشتواڑ میں عید الفطر کے پیش نظرسخت سیکورٹی

کشتواڑ//ضلع کشتوڑ میں عید الفطر منانے کے لئے ضلع انتظامیہ نے سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے ہیں۔قصبہ میں خاطر خواہ سیکورٹی کے لئے پولیس نے بازار، اسٹیشنوں اور دیگر حصوں میں کئی عارضی پولیس پوسٹ قائم کئے ہیں۔ ایک سینئر پولیس اہلکار نے کشمیر اعظمیٰ کو بتایا کہ ماہ رمضان اور عید الفطر کے پیش نظر پولیس نے قصبہ میں سیکورٹی کے پُختہ انتظامات کئے ہیں اور اسکے علااوہ کئی عارضی پوسٹ بھی قائم کئے گئے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ سیکورٹی کی صورت حال یقینی بنانے کے لئے قصبہ کشتواڑ اور گرد و نواح میں سول کپڑوں میں ملبوس پولیس اہلکاروں کو بھی تعینات کیا گیا ہے۔جے اینڈ کے پولیس ،سی آر پی ایف ،جے کے اے پی نے مین بازار کشتواڑ سے ایس ایس پی آفس کُلیڈ کشتواڑ تک ایک روڈ شوو بھی کیا،تاکہ لوگوں میں عید خوشی اور پُر امُن طور سے منانے کے لئے اعتماد پیدا کیا جا سکے۔  

کشتواڑ میں گاڑیوں کی اور لوڈنگ

کشتواڑ//کشتواڑ میں گاڑیوں کی اور لوڈنگ سے عام لوگوں و سکولی بچوں کو کافی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اورلوڈنگ کا حال یہ ہے کہ بعض اوقات مسافروں اور سکولی بچوں کو گاڑیوں میں لٹکتے ہوئے دیکھا ہے۔اس سے یہ معلوم ہو تاہے کہ ڈرائیور مسافروں کے تحفُظ کے تئیں کتنے سنجیدہ ہیں۔بسوں ، میٹا ڈاروں ،ٹاٹا سومووں ،ٹیمپووں،وئینز و دیگر پرائیویٹ وہیکلز اوور لوڈنگ سیمسافروں کی زندگی خطرے میں پڑتی ہے۔ ایسا لگ رہا ہے کہ پرائیویٹ گاڑیوں کو پیسے بنانے کی اجازت دی گئی ہے۔گاڑیوں کی اور لوڈنگ میں غیر یقینی وقت اور کم تعداد میں گاڑیوں کے چلنے کی وجہ ہے۔کشمیر اعظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے کشتواڑ کے ایک مقامی باشندے انیس بخشی نے کہا کہ پرائیویٹ گاڑیاں مسافروں کو اوور لوڈ شدہ گاڑیوں میں سوار کرتے ہیں،جس سے اس سڑک پر لوگوں کو خطرہ لاحق ہوتا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ضلع کشتواڑ طلبا و طالبات کو اوور لوڈشدہ گاڑیوں میں

ریاسی میں منشیات فروش گرفتار ،شراب ضبط

ریاسی //ریاسی پولیس نے آج ایک منشیات سمگلر کو گرفتار کرکے اُ سکے قبضہ سے بھاری تعداد میں شراب کی بوتلیں بر آمد کی ہیں۔اطلاعات کے مطابق ایس ایچ او پولیس اسٹیشن ریاسی جسبیر سنگھ پولیس پارٹی کے ہمراہ بس اسٹینڈ میں گشتی ڈیوٹی پر تھے کہ پارٹی نے ایک شخض کو ہاتھ میں بیگ لئے  ہوئے دیکھا۔مذکورہ شخض کو مشکوک پاتے ہوئے پولیس پارٹی نے اسکا تعاقب کرکے اسے گرفتار کیا۔ مشکوک شخض نے اپنا نام منی رام ولد منسا رام ساکنہ بھگا ،ریاسی بیان کیا ۔پولیس نے اسکے قبضہ سے جے کے ایکسائز دیسی وہسکی فی کس 375ایم ایل وزنی کی 6فروٹیاں، جے کے ایکسائز دیسی وہسکی فی کس 250ایم ایل وزنی  25فروٹیاں، شالیمار ڈرائی جن 750۔ایم ایل کی ایک بوتل اور جے کے ایکسائز دیسی وہسکی 180 ایم ایل وزنی کی ایک فروٹی بر آمد کی۔مبینہ ملزم نشیات کی اس کھیپ کو غیر قانونی طور لے جارہا تھا ۔پولیس نے اس سلسلہ میں ایک کیس زیر ایف آئی

عید کی خریداری پر بھدرواہ کے بازاروں میں لوگوں کا اژدھام

بھدرواہ//عید الفطر کے مبارک موقعہ پر بھدرواہ کے بازاروں اور ودی چناب کے شاپنگ مراکز  ،خصوصی طور سے بھدرواہ قصبہ کے مہشور اوپن مارکیٹ میں لوگوں کی کافی تعداد خریداری کے لئے اُمڑ پڑی۔ عید سے قبل ہی لوگ خریداری میں مست رہے۔بازار خصوصاً سیری بازار کا اوپن مارکیٹ ،جو کہ ضلع ڈوڈہ میں خریداری کا اہم مرکز ہے ،میں بازار صُبح سویرے ہی کھولے گئے۔نصف شب میں ہی کئی پھڑی والوں کو جگہ پر قبضہ کرتے ہوئے دیکھا گیا ۔بھدرواہ،بھالہ ،ٹھاٹھری ،چھرالہ اور گندوہ کے مختلف علاقوں سے لوگ فیشن ہائوسوں، بُٹیکوں وغیرہ میں ہزاروں کی تعداد میں شام دیر گئے تک خریداری کرتے رہے۔لوگ ریڈی میڈ کپڑے، برتن ،الیکٹرانک اشیاء اشیائے خوردنی و دیگر اشیا ء کی خریداری کرتے رہے۔وادی بھدرواہ میںکاروباری مرکز سیری بازار ،لوگوں سے کھچا کھچ بھرے رہے۔گنپت مارکیٹ، کھالرو مارکیٹ اور صدر بازار میں بھی لوگوں کی کافی بھئیڑ دیکھنے کو ملی۔

چوتھی جماعت کی طالبہ سے مارپیٹ کا معاملہ

بانہال // تحصیل کھڑی کے ایک سکول میں ایک استاد کی طرف سے جمعرات کو چوتھی جماعت کی طالبہ سے مارپیٹ کا معاملہ سامنے آنے کے بعد زونل ایجوکیشن افسر کھڑی نے متعلقہ استاد کو اپنے دفتر کے ساتھ اٹیچ کردیا  ہے اور اس معاملے میں ایک تین رکنی کمیٹی تشکیل دے گئی ہے جو مارپیٹ کے اس معاملے کی تحقیقات کرے گی۔ سرکاری مڈل سکول اہمہ ترگام تحصیل و تعلیمی زون کھڑی میں تعینات ٹیچر مشتاق احمد کی  طرف سے بچی کے ساتھ چھڑی سے کی گئی مارپیٹ کا یہ معاملہ جمعرات کو پیش ایا ہے اور لڑکی کو بانہال ہسپتال میں ابتدائی علاج معالجہ کے بعد جانے کی اجازت دی گئی ہے جبکہ اس چوتھی جماعت کی طالبہ الفت جان کے والد غلام نبی نائیک ساکنہ اہمہ پنچایت ترگام نے پولیس پوسٹ کھڑی میں بھی استاد مشتاق احمد کے خلاف ایک شکایت بھی درج کی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ جمعرات کو سکول کے اوقات میں الفت جان کی طالبعلم کے ساتھ جھگڑا ہوا اور دو

گول میںسیول انتظامیہ وپولیس کی اہم مہم

گول//گول بازارمیں آج سول وپولیس انتظامیہ نے ایک اہم کارروائی کر کے بازارمیں کھڑی گاڑیوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے کئی گاڑیوں کے چالان کئے گئے ۔اس دوران انہوں نے پولیس گاڑی میں لوڈ اسپیکر لگا کر اعلان کروایا کہ اگر کوئی بھی گاڑی مالک بازا ر میں گاڑی کھڑی کرے گا اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی اور گاڑی ضبط کی جائے گی ۔انہوں نے یہ مہم آج پورے بازار میں جاری رکھی ۔اس موقعہ انتظامیہ نے دکانداروں کو بھی متنبہ کیا کہ وہ بازار میں اگر کسی شکایت کے مرتکب پائے گئے تو اُس کو بخشا نہیں جائیگا ۔ انہوں نے اس موقعہ پر اسٹور کیپر کو بھی ہدایت دی کہ وہ لوگوں کو راشن دیں اور اپنی اوقات میں اسٹور کو کھلا رکھیں اور اتوار کو بھی لوگوں کو راشن مہیا کیا جائے ۔ایس ڈی ایم گول پنکج بڈگوترہ نے خود بازار کا جائزہ لیا اور کہا کہ عید الفطر میں کسی بھی شہری کو کوئی پریشانی نہیں آنی چاہئے ۔ انہوں نے سبزی فروش ، شیر

فوج کی جانب سے بھدرواہ میں افطار پارٹی

بھدرواہ//راشٹریہ رائفلز یونٹ بھدرواہ نے عوام ،فوج کے درمیان رشتوں میں مزید استحکام لانے کے لئے اور صدیوں پُرانے بھائی چارہ اور آپسی رواداری کو بھلائی کے لئے بھدرواہ میں افطار پارٹی کاانعقاد کیا ۔ اس پارٹی میںدونوں فرقوں کے معزز شہریوں بشمول سیاسی و سماجی تنظیموں کے لیڈروں کے علاوہ سول، فوج اور میڈیا برادری کے لوگوں نے شرکت کی۔افطار پارٹی کے بعدریاست میں امن و خوشحالی و بھائی چارے کی دعا کی گئی ۔بھدرواہ کے عوام نے آر آر کی جانب سے افطار پارٹی منعقد کرنے کی کافی سراہنا کی اور فوج سے التجا کی کہ باقاعدگی سے ایسی تقاریب منعقد کی جائی تاکہ فوج اور عوام کے درمیان رشتے مظبوط ہو سکیں۔ اُنہوں نے کہا کہ ایسے ایوئینٹوں سے مقامی لوگوں اور فوج کے درمیان نہ صرف خلیج کو کم کرنے میں مدد ملے گی بلکہ پُرانے بھائی چارے کو بھی قائم و دائم رکھنے میں مدد ملے گی اور آپسی غلط فہمیوں کو دور کرنے میں بھی مد

ڈوڈہ میں مارکٹ چیکنگ

ڈوڈہ// ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ کی ہدایات پر عید الفطر کے موقع پر مارکٹ چیکنگ اور دیگر سامان کا جائزہ لینے کے لئے تحصیلدار ڈوڈہ ناصر علی نٹنو کی قیادت میں چیکنگ ٹیم نے قصبہ کی پوری دکانوں کا معائنہ کیا گیا ۔مارکٹ چیکنگ ٹیم نے پرانے بس اسٹینڈ سے نہرو چوک ،اور بھرت روڈ اولڈ بس سٹنڈ سے ، نئے بس سٹینڈ و دیگر مارکٹ میں چیکنگ کی گئی، تحصیلدار کے ہمراہ فوڈ سیفٹی آفیسر، و منسپلٹی کے ملازمین، ٹی۔ایس۔او و دیگر آفیشل موجود تھے۔چیکنگ کے دوران اْن دکانداروں سے 5600 روپے کا جرمانہ وصول کیا گیا جو مارکٹ میں غیر معیاری اشیاء￿  کی فروخت اور مقرر شْدہ نرخوں  سے زیادہ لوگوں سے وصول رہے تھے۔اس کے علاوہ جو دکاندار جاری کردہ نشان کے علاوہ مومی کاغذ کا استعمال کر رہے تھے اْن پر بھی جرمانہ عائد کیا گیا۔تحصیلدار ڈوڈہ نے دکانداروں کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ بازار میں شفایت سے کام کریں اور آفیسر کی طر

خطہ چناب کی مساجد میں لا کھوںفرزندان توحید نے شب بیداری کی اور جمعتہ الوداع کی نماز ادا کی

جمعتہ الوداع کے موقع پر آج ضلع رام بن کی جامعہ مساجد میں ہزاروں کی تعداد میں فرزندان توحید نے ماہ مبارک کے آخری جمعہ ، جمعتہ المبارک کی نماز ادا کی اور بازاروں میں لوگوں کا بھاری رش تھا۔ اس موقع پر پولیس نے حفاظت کے سخت انتظامات کئے تھے اور نماز کے دوران ٹریفک کو قابو کرنے کیلئے خصوصی اقدامات کئے گئے تھے۔ بانہال میں مرکزی جامع مسجد بانہال، جامع مسجد عید گاہ ، جامع مسجد ناگبل ، جامعہ مسجد مدرسہ فیض الاسلام ، پیر دستگیر صاحب کراوہ ، کنڈ عدلکوٹ ، ڈولیگام ، نوگام ، ٹھٹھاڑ ، کسکوٹ ، چریل، جامع مسجد کھڑی ، مہو منگت ، اڑپنچلہ ، ترنہ ، ترگام، بزلہ ، جامع مسجد رامسو ، اکڑال ، پوگل پرستان ، چملواس ، مرکزی جامع مسجد رام بن ، جدید جامع مسجد رام بن، جامع مسجد میتراہ ، جامع مسجد امام آباد ، چندروگ ، چندرکوٹ ، بٹوٹ ،۔ گول ، سنگلدان ، اور راجگڑھ کی درجنوں جامعہ مساجد میں ایک اندازے کے مطابق پچاس ہز

انہدامی کاروائی کیا ڑ میں خاتون سمیت دو افراد کی مارپیٹ

بانہال // بانہال کے لْڑو ، نیل میں گذشتہ روز محکمہ جنگلات کی طرف سے ناجائز تجاوزات کی انہدامی کاروائی کے خلاف مقامی لوگوں نے محکمہ جنگلات پر زیادتی ، مارپیٹ اور مکان کو نقصان پہنچانے کا الزام عائد کیا ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ گزشتہ منگل کو سڑک کا کام کو بند کرنے کے بعد محکمہ جنگلات کے افسروں اور اہلکاروں نے رگھو بیر سنگھ کے گھر پر انہدامی کاروائی کی اڑ میں حملہ کر دیا جس کی وجہ سے نہ صرف دو منزلہ رہائشی مکان کے شیشوں اور کھڑکیوں کو نقصان پہنچایا گیا بلکہ سو سال سے یہاں رہنے والے مالک مکان رگھوبیر سنگھ اور ان کی بھابھی درگا دیوی کی مارپیٹ کی گئی جس سے وہ زخمی ہوگئے اور خواتین اور بچوں کو خوف زدہ کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ جنگلات رگھوبیر سنگھ کے مکان کی جگہ کو جنگلاتی اراضی کہتے ہیں جبکہ محکمہ مال کے نائب تحصیلدار نے ریکارڈ سمیت علاقے میں آکر اسے ملیکتی اور سٹیٹ لینڈقرار دیکر رگ

گول میں من مانی قیمتوں سے عام لوگ پریشان

گول//ماہ صیام تو چلا گیا اب عید آنے والی ہے اور بازار میں لوگوں کا رش بھی بڑھتا ہی جا رہا ہے اورلوگ خریداری کرنے میں مصروف ہیں لیکن اس دوران ذخیرہ اندوز زیادہ سے زیادہ منافع کمانے میں لگے ہوئے ہیں اور پورے بازار میں کسی بھی چیز کی قیمت ایک جیسی نہیں ہے۔جہاں ایک دکاندار کیلے ساٹھ روپے درجن فروخت کرتا ہے وہیں اس کے ساتھ والا دکاندار ستر روپے اسی طرح سے کریانہ میں بھی دالوں میں من مانی قیمتیں رکھی گئی ہیں جس وجہ سے لوگوں کوکافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ ان قیمتوں کو اعتدال پر لانے کے لئے انتظامیہ ناکام ہی ثابت ہو رہی ہے ۔ماہ صیام سے قبل بھی اگر چہ بازار میں انتظامیہ نے چیکنگ کی لیکن بعد میں وہی ہوا جو دکانداروں نے چاہا ۔ وہیں یہاں پرمختلف ایجنسیوں سے مرغ فروش بھی گنگا میں ڈبکی لگا کر ہی جاتے ہیں وہ بھی زیادہ سے زیادہ منافع کمانے کے لئے گول سے کچھ نہ کچھ گول کر کے ہی جاتے ہیں ۔ایک

مدرسہ اسرارالعلوم نیلی بھلیسہ

ڈوڈہ//مدرسہ اسرارالعلوم نیلی بھلیسہ جامعہ غنیۃ العلوم اخیار پور کے بعد بھلیسہ کا دوسرا سب سے بڑا اقامتی مدرسہ ہے اور اس مدرسہ کو بھلیسہ کا پہلا اقامتی مدرسہ ہونے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔6اپریل1980ء کے دن اس مدرسہ کا با ضابطہ افتتاح کیا گیا تھا،شاہ فرید الدین بغدادی کے فرزندِ ارجمند شاہ اسرار الدین ولی کی نسبت سے مدرسہ کا نام ’’مدرسہ اسرارالعلوم‘‘ رکھا گیا اورحافظ خورشید احمد پنچھی کو مدرسہ کا پہلا مدرس تعینات کیا گیاجن کا ماہوار کفاف275روپے مقرر کیا گیا تھا۔شروع میں مدرسہ میں 9 طلباء داخل ہوئے جن میں سے 6جز وقتی اور3اقامتی طلباء تھے۔کچھ نا مساعد حالات کی وجہ سے 1992ء تک مدرسہ میں کوئی خاطر خواہ تعلیمی یا تعمیراتی پیش رفت نہ ہو سکی یہاں تک کہ درجہ حفظ جو ابتداء میں شروع کیا گیا تھا وہ بھی بند ہو گیا۔مگر1992ء میں جب مولانا شوکت علی قاسمی ؔ نے مدرسہ کا نظام سنبھالا تو

ڈگڈول میں شاہراہ گھنٹوں تک مسدود رہنے کے بعد بحال

بانہال // رام بن اور بانہال کے درمیان شاہراہپرپسیوں اور پتھروں کے گرنے کا سلسلہ جاری ہے ۔ جمعرات کی صبح ڈگڈول میں پہاڑی سے کھسک کر بڑے بڑے پتھر شاہراہ پر گر آئے جس کی وجہ سے شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت نہ صرف تین گھنٹے تک معطل رہی جبکہ بعد میں شاہراہ پر لگا ٹریفک جام کئی گھنٹوں تک جاری رہا۔ شاہراہ پر آج سرینگر سے جموں کی طرف ٹریفک کو آنے کی اجازت تھی۔ بیٹری چشمہ اور ڈگڈول لور کے مقام شاہراہ کے بند ہونے کے بعد وادی کشمیر سے ٹریفک پولیس نے جموں کی طرف انے والے ٹریفک کو جواہر ٹنل اور قاضیگنڈ کے علاقوں میں روک دیا اور شاہراہ سے پتھر اور ملبہ وغیرہ صاف کرنے کے بعد ٹریفک کی دو طرفہ ٓامدورفت بحال کی گئی لیکن ڈرائیوروں کی جلد بازی اور اورٹینکنگ کی وجہ سے دو طرفہ ٹریفک جام ہوگیا جو بعد دوپہر دو بجے بعد ہی صاف ہوسکا۔ ٹریفک جام کی وجہ سے مسافروں ، سکولی اور کالج جانے والے طلبا ، سرکاری ملازمو

بھدرواہ قصبہ میں لگاتار ٹریفک جام ،عوام اور سیاح پریشان

بھدرواہ //بھدرواہ قصبہ میں سول انتظامیہ کی جانب سے ٹریفک پابندیوں کے باوجودضلع پولیس کے رویہ سے قصبہ میں لگاتار ٹریفک جام دیکھنے کو مل رہا ہے، جہاں پر آدھے گھنٹے کا سفر چار گھنٹوں میں طے ہوتا ہے۔ اگرچہ بھدرواہ میں امسال گھریلو سیاحوں کی کافی بھیڑ دیکھنے کو ملتی ہے تاہم لگاتار ٹریفک جام سے سیاحوں میں ناراضگی پائی جاتی ہے۔اگر چہ انتظامیہ نے نئے بس اسٹینڈ سے پسری براستہ سیری بازارتک کے روڈ پربھاری کمرشل گاڑیوں کی پابندیوں اور نو پارکنگ زون قرار دیا ہے تاہم اولڈ ہسپتال روڈ سے جامع مسجد تک کے سڑک پر دونوں اطراف گاڑیاں پارک کی ہوئی ہوتی ہیں اور درجنوں بھاری کمرشل گاڑیاں سیر ی بازار سے قصبہ میں داخل ہو جاتی ہیں،جسکی وجہ سے قصبہ میں عام طور جام لگا رہتا ہے اور مسافروں کو منٹوں کا سفر طے کرنے میں کئی گھنٹے لگتے ہیں۔مسافر اسکے لئے ٹریفک حُکام کو ذمہ وار قرار دیتے ہیں۔ان لوگوں کا کہنا ہے کہ ٹریف

ڈی سی رام بن نے ضلع ہسپتال میں ضروری سٹاک کا جائزہ لیا

رام بن//ضلع ترقیاتی کمشنر طارق حُسین گنائی نے آج ضلع ہسپتال کا دورہ کیا اور وہاں لوگوں کو مہیا کی جارہی پر ادویات اور ہیلتھ کئیر کے معیار کاذاتی طور جائزہ لیا۔سی ایم او ڈاکٹر سیف الدین ،ڈپٹی سی ایم او ڈاکٹر اقبال بھٹ،میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر دھرم ویر سنگھ بھی ڈی سی کے ہمراہ تھے۔اُنہوں نے او پی ڈی ،آئی پی ڈی بلاکوں ،کیجولٹی بلاک کا بھی طویل دورہ کیا  اور مریضوں ،ڈاکٹروں اور نیم طبعی عملے سے بھی تبادلہ خیال کیا۔اُنہوںنے ہسپتال انتظامیہ کو ہسپتال کی کارکر دگی میں بہترری لانے اور صحت و صفائی میں مزید بہتری لانے کی ضرورت پر زور دیا ۔اُنہوں نے مریضوں کو ادویات فراہم کرنے اور معیاری خدمات دستیاب رکھنے کی سی ایم او کو ہدایت دی۔اُنہوں نے کہا کہ محکمہ صحت ایک صحت مند سماج بنانے میں ایک اہم کردار نبھاتا ہے۔اُنہوں نے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ کو ہسپتال میں بھرتی مریضوں کی مناسب دیکھ بال کرنے کی ہد

ڈی سی نے رام بن میںعید الفطر کے انتظامات کا جائزہ لیا

رام بن//رام بن میں عید الفطر اور شب قدر منانے کے لئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے ضلع ترقیاتی کمشنر طارق حُسین گنائی کی قیادت میں ایک میٹنگ منعقد کی گئی جس میں یہ تہوار پُر امن اور احسن طریقہ سے منانے  اور خصوصی عبادت کے لئے مساجد اور عید گاہ جانے والے زائرین کی سہولیت کے لئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے متعلقہ افسران کو اشیائے ضروریہ ، پانی کی سپلائی،صحت و صفائی، ٹریفک انتظام ، سیکورٹی کی تعیناتی ،ادویات اور ایمبولنس کی دستیابی کے لئے ہدایت دی۔پی ڈی ڈی کو تہوار کے دنوں میں بغیر خلل بجلی سپلائی کرنے کی ہدایت دی گئی۔اُنہوں نے تحصیلدار،ایف سی ایس اینڈ سی اے و میونسپل کمیٹی کو بازاروں کی چیکنگ کرنے کی ہدایت دی تاکہ صارفین کو اشیائے مہنگے داموں پر نہ بھیچے جائیں۔میونسپل و دیگر متعلقہ حُکام کو ہدایت دی گئی کہ وہ مساجد کے گرد و نواقح میں صفائی کا خاص د

’’ابابیل ‘‘خدمتِ خلق اور عوامی فلاح و بہبود کا دوسرا نام

ڈوڈہ//ہر انسانی معاشرے میں کچھ لوگ ایسے ضرور ہوتے ہیں جن کے دلوں میں خدمتِ خلق کا جذبہ کوٹ کوٹ کر بھرا ہوتا ہے اور جن کو  ضرورت مندوں کی مدد کرنے سے سکون ملتا ہے۔ان میں سے کچھ لوگ ایسے کام کر جاتے ہیں کہ نسلوں تک اُن کا اثر باقی رہتا ہے اور عرصۂ دراز تک لوگ اُن سے مستفید ہوتے ہیں۔ ضلع ڈوڈہ میں بھی ایسے لوگوں کی کمی نہیں ہے اور بہت ساری سماجی تنظیمیں اور انفرادی طور کچھ شخصیات خدمتِ خلق اور عوامی فلاح و بہبود کے کاموں میں پیش پیش نظر آتے ہیں۔ایسے ہی تنظیموں میں ’’ابابیل ‘‘نامی رضا کار تنظیم بھی شامل ہے جو  اگرچہ ابھی نو خیز ہے مگر اپنے کام کرنے کے انداز کی وجہ سے وہ نوجوانوں میں کافی مقبول ہوتی جا رہی ہے اور بہت کم عرصہ میں اُس کا دائرہ  کشتواڑ اور رام بن اضلاع تک وسیع ہو گیا ہے۔اس کے رضا کاروں میں زیادہ تر پڑھے لکھے نوجوان اور زیرِ تعلیم طلباء ہ

خطہ چناب میں تیسرے عالمی یوگا دن کے سلسلہ میں تقاریب کا انعقاد

موجودہ نسل کو اپنی زندگی میں یوگا اور جسمانی مشق کرنے کا جذبہ پیدا کرنا چاہیے۔ ان باتوں کا اظہار تیسرے عالمی یوگا دن کے موقعہ پر منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ممبر سامبلی رام بن نیلم کمار لنگہے نے لوگوں کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اُنہوں نے بچوں کو اپنے گھروں میں اور طلبا کو سکولوں میں ا یسی مشق کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔اُنہوں نے لوگوں کو یوگا اپنی زندگی میں کھانے و پینے اور سونے کی طرح اپنانے کی اپیل کی۔،تاکہ انتشار  اور ادویات سے بچا جاسکے۔اُنہون نے یوگا کو ایک عالمی پہلیٹ فارم مہیا کرانے پر وزیر اعظم نریندر مودی کی سراہنا کی ۔یوگا سے متعلق تقریب کا اہتمام گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول رام بن میں آیوش ،یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس ،اطلاعات و عوامی رابطہ اور پتنجلی یوگ پیٹھ رام بن اور ضلع انتظامیہ کے اشتراک سے منعقد کیا گیا تھا ۔کیمپ کا افتتاح مہمان خصوصی کی جانب سے متبرک ج

محکمہ جنگلات کے ملازمین پر حملہ، 2 زخمی

بانہال // محکمہ جنگلات رام بن کی طرف سے رامسو کے علاقے میں جنگلات کی اراضی کے بیچوں بیچ سے محکمہ تعمیرات عامہ رام بن کی طرف سے غیر قانونی طریقے سے تعمیر کی جارہی سڑک کا کام بند کرنے کی کوشش کے دوران مقامی لوگوں اور چند مقامی ملازمین نے ٹھکیدار کی شہہ پر محکمہ جنگلات کی پارٹی پر کلہاڑیوں اور پتھروں سے حملہ کردیا ہے جس کی وجہ سے محکمہ جنگلات کے دو ملازمین زخمی ہوگئے ہیں۔ محکمہ جنگلات کا الزام ہے کہ محکمہ تعمیرات عامہ کی طرف سے محکمہ جنگلات کی مشاورت اور نوٹس میں لائے بغیر ہی سڑک کا کام شروع کر دیا گیا ہے اور یہ سڑک جنگلات کی اراضی کو تباہ کرکے تعمیر کی جا رہی ہے اور اس میں ایک ٹھیکدار اور محکمہ کے افسروں کی ملی بھگت اور ذاتی مقاصد کار فرما ہیں۔  اس مجرمانہ سازش اور حملہ کیلئے محکمہ جنگلات نے پولیس کو خط لکھ کر ایکسئین رام بن ، اسسٹنٹ ایزیکٹیو انجینئر رامسو اور جونیئر انجینئر رامسو ک