تازہ ترین

شرپسند عناصر کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی:اجے نندا

ریاسی//خزانہ اور منصوبہ کے وزیر اجے نندا نے کہا ہے کہ خانہ بدوشوں کو ہر طرح کی مدد دی جائے گی تاکہ وہ بلا کسی رکاوٹ کے ایک جگہ سے دوسری جگہ تک نقل و حمل کرسکے۔ریاسی میں پولیس اور سول انتظامیہ کے ساتھ ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے وزیر موصوف نے کہا کہ ہر طرح کے شر پسند عناصر کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ضلع ترقیاتی کمشنر ریاسی رویندر کمار ، ڈی آئی جی ادھمپور وریندر شرماکے علاوہ کئی دیگر افسران بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔وزیر نے افسروں کو ہدایات دیں کہ وہ مناسب جانچ کے بعد قوانین کے مطابق مویشیوں کی ٹرانسپورٹیشن کے اجازت نامے جاری کریں تاکہ ناخوشگوار واقعات کے خدشات کو دور کیا جاسکے ۔اس موقعہ پر پولیس افسروں کو ہدایت دی گئی کہ وہ مویشیوں کی غیر قانونی ٹرانسپورٹیشن پر سختی سے نظر گزر رکھنے کے ساتھ ساتھ اُن بکر اور گجر والوں کی آزادانہ نقل و حمل کو بھی یقینی بنائیں جو اپنے مویشیو

گول سنگلدان میںریلوے کمپنیوںکے بیچنگ پلانٹ

گول//کئی برسوںسے گول کے سنگلدان علاقہ میںقاضی گنڈ کٹرہ ریلوے لائن پر کا م زوروشورسے جاری ہے لیکن اس دوران یہاںپر افکان، ارکان اور پٹیل انجینئرنگ کمپنیوںنے انتظامیہ سے مل کر کھلے عام قانون کی دھجیاںاڑا رہے ہیںجس سے یہاںپر نہ صرف بچیوںکامستقبل مخدوش ہے بلکہ یہاںپر صدیوںپرانے چشمے سوکھ گئے، بستیاںاُجڑ گئیں، جنگلات ریگستان میںتبدیل ہورہے ہیںاوریہ تمام غیرقانونی کام یہاںپرانتظامیہ سے مل کرکیاجارہاہے۔ یہاںپر غیرقانونی سر سبز جنگلات کے کٹائو،زرعی اراضی بالخصوص دھان کے کھیتوںمیںزہریلا مواد ڈالنا، ندی نالوںمیں زہریلا پانی ودوسرا مواد کھلے عام ڈالنا، یہاںتک کہ تمام ایسے کام جن کی این او سی ان ریلوے کمپنیوںکوضرور ہونی چاہے لیکن ان کے پاس کسی ایک کام کی این او سی نہیںہے۔ یہاںپر دلواہ لور پنچایت میں افکان کمپنی نے ایک بیچنگ پلانٹ بیچ بستی میںنصب کیاگیا یہاںتک کہ اس پلانٹ سے صرف ڈیڈھ سو میٹرکی دوری

۔70سال سے نظر انداز قصبہ بٹوت ، بنیادی سہولیات سے محروم

بٹوت//ماضی قریب میں جموں سرینگر شاہراہ پر آباد ہو نے کا شرف رکھنے کے ساتھ ساتھ ریاست کے خطہ چناب کے لئے مر کزی وداخلی اہمیت کے حامل قصبہ بٹوت کے عوام کو ایک لمبی عوامی جدوجہد کے بعد سال 2014میں بلاک وتحصیل کا درجہ ضرور مل گیا مگر تلخ سچائی یہ بھی ہے کہ آج کے جدید ترقی یافتہ دور میں بھی قصبہ بٹوت و گرد ونواع کے ایک وسیع وعریض علاقے کے ہزاروں پر مشتمل انسانی آبادی بنیادی سہولتوں سے محروم ہے ۔ ریاست میں70برس تک بر سر اقتدار رہنے والی حکومتوں کی جانب سے قصبہ بٹوت کو تعمیر و ترقی نیز بنیادی سہولیات کی فراہمی کے نام پر نظر انداز و سوتیلے سلوک کا شکار بنا ئے جا نے کا حکومتوں پر الزام عائد کر تے ہوئے بٹوت میں مختلف سیاسی سماجی و مذہبی تنظیموں سے وابستہ لیڈران بشمول بیوپار منڈل بٹوت کے صدر سنجے گپتا ،ہوٹل ڈھابہ ایسوسی ایشن کے صدر غلام حیدر خان، سناتن دھرم سبھا کے صدر نشور گپتا ،بٹوت انجمن اس

جموں سرینگر شاہراہ پر حفاظت کے معقول انتظامات کرنے کی ہدایت

جموں// ریاستی پولیس کے سربراہ ڈاکٹر ایس پی وید نے جموں سرینگر شاہراہ پر حفاظت کے معقول انتظامات کرنے کی ہدایت دی ہے۔  ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے دربار مؤ کے سلسلے میں انتظامات کا جائیزہ کے دوران مختلف ونگوں کے سنیئر افسروں سے بات کرتے ہوئے ڈی جی پی نے ملازمین اور سرکاری ریکارڈ کی پُر تحفظ اور بلا خلل نقل و حمل کو یقینی بنانے اور شاہراہ اور دونوں شہروں میں ٹریفک میں معقولیت پر زور دیا۔ڈی جی پی نے گرمائی راجدھانی میں دفاتر کے احسن کام کاج کے لئے سیکورٹی کے معقول بندوبست پر بھی زور دیا۔ڈی جی پی پولیس اسٹینس بوتھ قائم کرنے، ریکوری وینوں کی دستیابی اور موبائل پولیس کنٹرول گاڑیاں دستیاب رکھنے کے احکامات دیئے۔پولیس سربراہ نے ریاست میں امن و قانون کی صورتحال کا تفصیلی جائیزہ لیتے ہوئے امن و امان کو یقینی بنانے کے لئے پولیس اور دیگر حفاظتی دستوں کے مابین قریبی تال میل پر بھی زور دیا۔میٹنگ م

کشتواڑ میں پانی کی شدید قلت

کشتواڑ// محکمہ پبلک ہیلتھ انجینئر نگ کی ناقص کارکردگی پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کشتواڑکے متعدد دیہاتوں کے لوگوں نے اپنے درپیش مسائل کے جلد ازالہ کے لئے زور دار آواز بلند کی ہے۔ متعدد دیہاتوں بشمول اندرنگر ، ہلر ، پوھی، کلید، زلینہ سنگرام بھاٹا ، چیر ہر اور دیگر ملحقہ علاقوں کے لوگوں نے آج کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ گذشتہ قریب ایک ماہ سے انہیں پانی کی شدید قلت کاسامناکرنا پڑرہا ہے ۔ ان علاقوں کے لوگوں نے تبایا کہ انہوں نے پانی کی کمی کو دور کرنے کے لئے متعلقہ محکمہ کے حکام سے کئی بار استدعا کی اور احتجاج میں بھی کیا مگر کوئی شنوائی نہیں ہورہی ہے ۔ حالانکہ آئے روز اخبارات میں بھی متذکرہ بالا علاقوں حالانکہ قصبہ کشتواڑ میں پانی کی کمی کی خبریں شائع ہورہی ہیں مگر پھر بھی حکام خرگوش کی نیند سورہے ہیں ۔ دریں اثناء مایا سرکوٹ اور دیگر ملحقہ علاقوں کے لوگوں نے محکمہ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ سے

پہاڑوںپرخانہ بدوشوںکی زندگی ا بتر

گول//خانہ بدوش طبقہ آج کل مصیبت بھری زندگی بسرکررہاہے۔ سرکارکی جانب سے دی جا رہی سہولیات سے یہ طبقہ کوسوں دور ہے اور پہاڑوںپرگزربسرکرنا اور ان پہاڑوںسے اس طبقہ کاسفرکرنا مزید ابترہوگیاہے۔ سرمائی دارالحکومت جموںسے آج کل خانہ بدوش طبقہ کے لوگ جو گول گلاب گڑھ کی پہاڑیوںسے وادی کشمیر پہنچتے ہیں اورگرمیوںمیںیہاںکی پہاڑیوںپر گزربسرکرتے ہیں لیکن سرکار کہتی ہے کہ ان کیلئے بہت ساری سہولیات رکھی گئی ہیںتاہم یہ سہولیتیںصرف کاغذی گھوڑے بن کررہ گئے ہیں۔ بکروالوںکاکہناہے کہ ان کے راستے تباہ ہوچکے ہیںاور دوران سفرانہیںکوئی امدادنہیںدی جاتی۔ان کاکہناہے کہ ان کے راشن کارڈوںپرسفرکے دوران راشن نہیںملتاہے بلکہ انہیںبازاروںسے مہنگے داموںراشن خریدناپڑتاہے۔ انہوںنے سرکار سے مطالبہ کیاکہ انہیںادویات،راشن اوردیگر سہولیات دی جائیں ۔جموںکے اکھنور سے پیرپنچال کی پہاڑیوںسے وادی کشمیرکی جانب رواںدواںلوگوں نے گول

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی طلباء کا دورہ اختتام پذیر

کشتواڑ//فوج کی جانب سے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی فیکلٹی کے ممبران اور طلباء کئے لئے 6روزہ دورہ کا انعقاد کیاگیاجوکامیابی سے اختتام کو پہنچا۔اس دورے کا اہتمام ضلع کشتواڑ کے تمدنی ورثے کو اجا گر کرنے کی غرض سے کیا گیا تھا۔اس دوران انہیں سرکاری اہلکاروں اور مقامی لوگوں سے بات چیت کرنے کا موقعہ ملا ۔دورے پر گئے ہوئے ممبران کو متعدد تعلیمی اداروں اور سیاحتی مراکز دیکھنے کا موقعہ بھی ملا۔ اس دوران ممبران نے ایک سیمینار’’ــ قوم کی تعمیر میں نوجوانوں کا رول‘‘ میں بھی شرکت کی۔ٹور ممبران نے دھار منڈ گیریزن میں جنرل آفیسر کمانڈنگ سے بھی ملاقات کی۔با ت چیت کے دوران علاقہ میں خواتین اور نوجوانوں کو با اختیار بنانے کیلئے فوج کی سنجیدہ کوششوں کو سراہا گیا۔ یونیورسٹی کے طلباء اور پرو فیسروں نے فوج کی کوششوں کی تعریف کی ۔  

بٹوت کشتواڑ سڑک کو اپ گریڈ کرنے کا معاملہ

نئی دہلی// ٹرانسپورٹ کے وزیر مملکت سنیل کمار شرما نے سڑک و قومی شاہراؤں کے حکام بشمول ایم ڈی، این ایچ آئی ڈی سی ایل آنند کمار کے ساتھ آج یہاں ایک میٹنگ کے دوران بٹوت۔ کشتواڑ سڑک کو اپ گریڈ کرنے کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا۔میٹنگ کے دوران وزیر نے متعلقہ افسروں کے ساتھ سڑک کی حالت پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے اس میں سدھار لانے کی فوری ضرورت کو اُجاگر کیا۔اس موقعہ پر بتایا گیا کہ این ایچ آئی ڈی سی ایل اور پبلک ورکس محکمہ کی ایک مشترکہ ٹیم 27 اپریل کو علاقے کا دورہ کر کے سڑک کو ہوئے نقصانات کا تخمینہ لگائے گی اور اس ضمن میں ایک منصوبہ بھی مرتب کیا جائے گا۔این ایچ اے ون نے گنپت پُل سے مین سڑک تک کے حصے کو قومی شاہراہ کے ساتھ ملانے سے اتفاق کیا۔ وزیر نے کہا کہ سڑک کو بڑھاوا دینے کا کام جلد از جلد شروع کیا جانا چاہئے تا کہ قیمتی جانوں اور جائیداد کا مزید زیاں نہ ہونے پائے۔ انہوں نے کہا کہ حک

لال سنگھ کا دورہ ٔچناب، جنگلات کا معائنہ کیا

جموں//وزیر جنگلات و ماحولیات چودھری لال سنگھ نے چناب وادی کا دورہ کر کے شیخ ون ڈوڈہ میں شجرکاری کام کا معائنہ کیا۔ انہوں نے وہاں دیودار کا پودا بھی لگایا۔ انہوں نے چناب سرکل کے افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ بھی کی۔اس دوران محکمہ جنگلات کے کئی اعلیٰ افسران بھی وزیر موصوف کے ہمراہ تھے۔بعد میں بھدرواہ میں وزیر موصوف نے تمام محکموں کی ایک میٹنگ طلب کی۔ اس دوران ٹی آر سی بھدرواہ میں شجرکاری مہم بھی شروع کی گئی۔چودھری لال سنگھ کے ساتھ کئی عوامی وفود بھی ملاقی ہوئے اور اپنے اپنے مسائل اُن کے نوٹس میں لائے۔ وزیر نے لوگوں کو عمارتی لکڑی دستیاب کرانے کی موقعہ پر ہی ہدایات دیں۔ انہوں نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ جنگلات کو تحفظ دینے میں ہر ممکن کوشش کریں۔ انہوں نے جنگلات کی اراضی سے ناجائیز قبضہ ہٹانے کے لئے بھی اقدامات کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔  

مہر، نیرا تاگنوت سڑک گزشتہ12 سال سے تشنہ تکمیل

رام بن//پی ایم جی ایس وائی کے تحت مہر نیرا تاگنوت سڑک پروجیکٹ اس علاقہ کے لوگوں کے لئے ابھی تک خواب بنا ہوا ہے۔12سال کا عرصہ گذر جانے کے باوجود بھی یہ سڑک پائے تکمیل کو نہ پہنچ سکی۔اس دوران پلی شالدان کنٹھی ڈیموٹ چبہ گنوت علاقوں کے لوگوں نے بتایا کہ سال2007میں اس سڑک کی تعمیر کا کام شروع کیا گیا تھا مگر12سال کا عرصہ بیت جانے کے باوجود بھی سڑک مکمل نہ ہو سکی حالانکہ اس سڑک کے تعمیر کے کام سے وابستہ عمل آور ایجنسی کے حق میں تخمینہ رقومات بھی وگذار کی گئیں ہیں۔ان علاقوں کے لوگوں کا کہنا ہے کہ اس سڑک کی تعمیر کے لئے وگذار کئے گئے لاکھوں روپے پی ایم جی ایس وائی ڈویژن بٹوت نے خرد برد کر دیے ہیں۔ان علاقوں کے عوام کا کہنا ہے کہ سائنس و ٹیکنالوجی کے اس ترقی یافتہ دور میں بھی ان علاقوں کے عوام کو تحصیل صدر مقام تک پونچنے کے لئے رسل و سائیل سے محروم ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس سڑک پر جواب تک کام کیا

وزیر صحت ڈاکٹروں کو بلی کا بکرا بنا رہے ہیں:بار ایسو سی ایشن ڈوڈہ

ڈوڈہ//گزشتہ دنوں میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ضلع ہسپتال ڈاکٹر کومعطل کئے جانے کی مذمت کرتے ہوئے ضلع بار ایسو سی ایشن نے کہا ہے کہ وزیر صحت اپنی ناکامیوں کی پردہ پوشی کے لئے ڈاکٹروں کو بلی کا بکرا بنا رہے ہیں۔ پریس کے لئے جاری ایک ریلیز میں بار صدر ایڈوکیٹ سید عاصم ہاشمی نے کہا کہ ریاستی حکومت بالخصوص وزیر صحت بالی بھگت محکمہ ہیلتھ کی ترویج و ترقی میں پوری طرح سے ناکام رہے ہیں، ہسپتالوں میں بنیادی سہولیات اور عملہ کی قلت کو پورا کرنے کے لئے کوئی قدم نہیں اٹھایا جارہا ہے اور جب عوامی دبائو بنتا ہے تووزیر موصوف ڈاکٹروں اور افسران کو نشانہ بنا کر عوامی غیض و غضب کو ٹھنڈا کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع ہسپتال چاروں طرف سے کھلا ہے ،ہسپتال کی اراضی پر ناجائز تجاوزات کی گئی ہیں سینکڑوں نجی گاڑیاں ہسپتال کے احاطہ میں موجود ہیں جس پر کوئی توجہ نہ دی جا رہی ہے ،پورے قصبہ ڈوڈہ کے ندی نالے اِس ہسپ

تازہ پسیاں آنے سے ٹھاٹھری کشتواڑ شاہرہ پھر بند

کشتوار//ٹھاٹھری کشتواڑ سڑک کل گاڑی دربشالہ کے نزدیک آج صبح پسیاں کرنے کی وجہ سے ایک بار پھر آمد و رفت کے لئے بند ہو گئی ہے۔بھاری پسیاں گر آنے کی وجہ سے اس سڑک کا تقریباً25میٹر حصہ بہہ گیا ہے۔37دنوں سے اس شاہراہ پر پسیاں گر رہی ہیں ریاستی محکمہ تعمیرات عامہ اور ضلع انتظامیہ اس سڑک جو آمد و رفت کے قابل بنانے میں نا کام ہو چکی ہے۔دریں اثنا کشمیر عظمیٰ نے جب ایگزیکیوٹو انجینئر تعمیرات عامہ مہندر کمار سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ یہ سڑک پسیاں کرنے کی وجہ سے آج صبح پھر سے بند ہو ئی ہے، محکمہ نے اس سڑک پر آمد و رفت بحال کرنے کے لئے افرادی قوت اورمشیزی استعمال میں لایا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس سڑک پر بھاری چٹانیں گر آئی ہیں اور یہ سلسلہ اب بھی جاری ہے۔انہوں نے مزید کیا کہ پرائیویٹ کمپنی نیشنل ہائی ویز اینڈ انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ کارپوریشن کو اس شاہرہ کی بحالی کا کام سپرد کیا گیا ہے۔ &

چھاترو میں اساتذہ کے لئے ڈی ایڈ کورس کا انعقاد

چھاترو / / نیشنل انسٹی چیوٹ آف اوپن اسکولنگ (NIOS )پروگرام کے تحت گورنمنٹ ماڈل ہائر سکینڈری اسکول چھاترو میں ڈی ایڈ کورس کا اہتمام کیا گیا ،اس کورس میں ان اساتذہ کو شامل کیا گیا ہے جنہوں نے ابھی تک مذکورہ کورس نہیں کیا ہے۔ یہ کورس 2 سال کی مدت میں مکمل کرایا جائے گا ۔واضح رہے کہ مرکزی سرکار کی جانب سے نظام تعلیم میں زمینی سطح پر فعال اور بہتر بنانے کی غرض سے اس پروگرام کا انعقاد عمل میں لایا گیا ہے تاکہ درس و تدریس میں مزید بہتری لائی جا سکے۔ ابتدائی تعلیمی کورس کے پروگرام کے انعقاد سے اساتذہ کو راحت ملے گی۔ قابل ذکر ہے کہ تعلیمی زون اندروال میں تعینات سرکاری اسکولوں میں اساتذہ کی ایک بڑی تعداد بنیادی تعلیمی کورس کرنے سے قاصر رہے ہیں مذکورہ پروگرام کے تحت اب اساتذہ کو ڈی ایڈ کورس کرنے موقع فراہم کیا گیا ہے جس کی وجہ سے زمینی سطح پر اساتذہ کو درپیش  درس و تدریس کے نظام میں مختلف ن

کشتواڑ میں100 بستروں والے ہسپتال کا سنگِ بنیاد رکھا گیا

کشتواڑ//قصبہ میں اضافی100 بستروں والے ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھا۔مذکورہ عمارت کو 19 کروڑ50 لاکھ روپے کی لاگت سے مئی2020 تک تعمیر کیا جائے گا اور ابتدائی مرحلے کے تحت اس کے لئے3 کروڑ50 لاکھ روپے واگذار کئے گئے ہیں۔ اس موقعہ پرمنعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صحت و طبی تعلیم کے وزیر بالی بھگت نے کہا کہ سرکار عوام کو بہتر طبی خدمات فراہم کرنے کے لئے کوشاں ہے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ سرکار عنقریب ہی ضلع ہسپتال کشتواڑ میں اضافی طبی و نیم طبی عملے کی فراہمی کو یقینی بنائے گی۔بعد میں وزیر نے کوڑھ بیماری سے متعلق سرجری کیمپ کا بھی افتتاح کیا۔ اس موقع پر ضلع ترقیاتی کمشنر، ایس ایس پی، سی ایم او دیگر افسران بھی موجود تھے۔  

بھدرواہ کو سیاحتی نقشہ پر لانے کیلئے جامع منصوبہ زیر غور: پریہ سیٹھی

بھدرواہ //قدرتی حسن سے مالا مال بھدرواہ قصبہ میں سیاحوں کو اپنی جانب راغب کر نے صلاحیت موجود ہے اور ریاستی حکومت نے قصبہ کو سیاحتی نقشہ پر لانے کیلئے ایک جامع منصوبہ مرتب کر رکھا ہے ۔ ان خیالا ت کا اظہار کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے ٹورازم پریہ سیٹھی نے کہا کہ بھدرواہ سمیت جموں خطہ کے دیگر صحت افزاء مقامات پر سیاحتی لانے کے لئے مرکزی اور ریاستی سرکاریں سنجیدہ ہیں۔ وہ تیلی گڑھ میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر رہی تھیں۔ پریہ سیٹھی نے بھدرواہ کو ہماچل اور پنجاب کے ساتھ جوڑے جانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے توقع ظاہر کی کہ اس سے بیرون ریاست کے سیاح زیادہ سے زیادہ تعداد میں بھدرواہ آ پائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بھدرواہ، جائی، پدری، گلانڈہ، سیوج اور کیلا ش کنڈ کا ایک سیاحتی سرکٹ قائم کیا جائے گا جب کہ جلد ہی علاقہ میں ٹریول ٹریڈ کانفرنس منعقد ہوگی۔ علاقہ میں سیاحوں کی زیادہ سے زیادہ آمد کو

KGBVگول کی حالت ابتر

گول//غریب طالبات کوبہتر تعلیمی زیور سے آراستہ کرنے کے لئے سرکارکی جانب سے KGBVنامی اسکولوںکاقیام عمل میں لایا تھا تاکہ غریب بچیوںکوبھی بہترتعلیم میسر ہولیکن اگر زمینی سطح پردیکھاجائے توان سے مطلوبہ نتائج برآمد نہیں ہوئے ہیں بلکہ غریب طالبات کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑکیاجارہاہے۔ پرنسپل ہائرسکینڈری سکول گول نانا جی تکونے اچانک KGBVکااچانک دورہ کیاجہاںانہوںنے 6 اساتذہ میںسے صرف3 کو حاضر پایاجبکہ 75طالبات میںسے صرف15ہی طالبات سکول میںموجود تھیں۔ اس موقعہ پرپرنسپل نے بچیوںکودئے جانے والے خوراک کابھی جائزہ لیاجوناقص پایا گیااور رہنے کے لئے بھی کوئی اچھا پروگرام نہیںتھا۔ پرنسپل نے ناقص کھانا، رہنے کے لئے جگہوںپرتشویش کااظہارکرتے ہوئے KGBVسکول کے وارڈن کووجہ بتائو نوٹس جاری کیا۔  

ریاسی واقعہ پر کشتواڑ کی تنظیمیں سیخ پا

کشتواڑ//ریاسی میں خود ساختہ گائو رکھشکوں کی طرف سے ایک بے گناہ کنبہ کو ظلم و ستم کا نشانہ بنائے جانے کی مذمت کرتے ہوئے اسلامی مرکزی مجلس شوریٰ ضلع کشتواڑ نے کہا ہے کہ ہندوستان کی باقی ریاستوں کی طرح جموں کشمیر کی ریاسی علاقے میں بھی گاؤرکھشا کی آڑ  لے کر بے گناہ گوجر کنبہ پر سرکار کے پالے ہوئے غنڈوں نے حملہ کیا اور اُن معصوموں پر لاٹھیوں سے اور ہاتھوں سے مار پیٹ کی حتیٰ کہ عورتیں بھی غنڈہ گردی کا شکار ہوئیں۔ امیر اعلیٰ فاروق حسین کچلو نے ایک پریس ریلیز میں مخلوط حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ان عناصر کو جو ریاست میں فرقہ وارانہ فساد کرانا چاہتے ہیںکیخلاف سخت کارروائی کرے تاکہ ریاست کا امن و سکون بر قرار رہ سکے۔ریلیز کے مطابق مجلس شوریٰ کی تمام تنظیمیں جن میں شامل تبلیغی جماعت، جماعت اسلامی ، تحریک صوت الاولیاء ، اہلحدیث ، مُسلم ویلفیئر ایسوسی ایشن ، یونائٹیڈ مسلم کونسل ، ابابیل و

نیل بانہال میں دلدوز حادثہ

بانہال // نیل علاقے میں تیز بارشوں اور تیز ہواوں کی وجہ سے ایک کچے مکان کی چھت دھنس جانے سے12سالہ بچی ، جو چوتھی جماعت میں زیر تعلیم تھی، لقمہ اجل بن گئی تاہم کمرے میں محوِخواب دیگر افراد خانہ معجزاتی طور بچے نکلے ۔ذرائع نے بتایا کہ الفت نور دختر منظور احمد نائیک ساکنہ سنی گام ، مدنی ہال علاقہ نیل تحصیل بانہال ضلع رام بن اپنے گھر میں دیگر افراد خانہ کے ہمراہ ساتھ سوئی ہوئی تھی کہ پیر کی صبح چار اور پانچ بجے کے درمیان مکان کی چھت اچانک دھنس گئی اور ملبہ محو خواب معصوم بچی پر آ گرا جس سے وہ موقعہ پرہی موت کے منہ میں چلی گئی۔ اسی کمرے میں سوئی ہوئی ایک سالہ بہن مرثینہ اور دیگر افرادِ خانہ بال بال بچ نکلے۔ پولیس رام سو نے بتایا کہ علاقے میں اس سے پہلے شدید بارش ہوئی تھی اور اسی وجہ سے مکان کی چھت دھنس کر اس بچی کی موت کا باعث بنی۔الفت نور کی لاش کو مقامی لوگوں کی مدد سے ملبے کے نیچے سے بر

سنیل شرمانے ڈوڈہ میں ہنگامی میٹنگ طلب کی

ڈوڈہ//ٹرانسپورٹ کے وزیر مملکت سنیل شرما نے آج ڈی سی آف ڈوڈہ میں ایک ہنگامی میٹنگ طلب کر کے کلگاڑ ی درا شالہ میں سڑک کی مرمت کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔میٹنگ میں ضلع ترقیاتی کمشنرڈوڈہ بھو پندر کمار ، ضلع ترقیاتی کمشنر کشتواڑ غلام نبی بلوان ، ایس ایس پی ڈوڈہ شبیر کھٹانہ اور دونوں کی اضلاع کی انتظامیہ کے افسران بھی موجود تھے۔بٹوت۔ کشتواڑ قومی شاہراہ کی فوری مرمت کے معاملات پر تبادلہ خیال کے دوران وزیر نے دونوں اضلاع کی انتظامیہ کو ایسے مقامات کا سروے کرنے کی ہدایت دی جہاں مرمت لازمی ہے۔انہوں نے ا س سلسلے میں این ایچ آئی ڈی سی ایل ، پی ڈبلیو ڈی ، این ایچ پی سی،ماہرین ارضیات اور ایس ڈی آر ایف کے رضاکاروں کا تعاون حاصل کرنے کے لئے کہا۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ وزیر مملکت سنیل شرما کی مداخلت کے بعد این ایچ آئی ڈی سی ایل کے منیجنگ ڈائریکٹر نے اس علاقے کو ایک ایمرج

ڈوڈہ میں عالمی یوم کتب بینی منعقد

ڈوڈہ// عالمی یوم کتب بینی کے سلسلہ میں ڈسٹرکٹ لائبریری ڈوڈہ میں عالمی یوم کتب بینی منایا گیا۔جس میں ضلع کے معززین کے علاوہ لوگوں کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پر چیف ایجوکیشن آفسر ڈوڈہ بطور مہمان خصوصی تھے۔جبکہ مدیر اعلیٰ ہائے وے ٹائم فرید احمد فریدی ،اسسٹنٹ پروفیسر شعبہ اْردو اختر ادھینپوری ،امتیاز احمد زرگر اسسٹنٹ پروفیسر ڈگری کالج ڈوڈہ ،اے سی آر ڈوڈہ و دیگر کئی معززین بھی اس موقع پر موجود تھے۔عالمی یوم کْتب بینی کے موقع پر شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے امتیاز احمد زرگر اسسٹنٹ پروفیسر نے کہا کہ موجودہ جدید دور میں جہاں انٹرنیٹ کا دور ہے سب کی توجہ کتابوں سے ہٹ کر موبائل فون اور کمپیوٹر کے طرف مرکوز ہو گئی ہے۔ایسے میں تمام طلباء کو چاہیے کہ وہ کتابوں کا مطالعہ کریں ۔فرید احمد فریدی نے عالمی یوم کْتب بینی کے موقع پر بولتے ہوئے کہا کہ ڈسٹرکٹ لائبر یری پہلے زمانے کے مقابلے لوگوں کی آمد