تازہ ترین

میرواعظ مولوی محمد فاروق کی برسی پر تقاریب

سرینگر//راجوری کدل میںعوامی مجلس عمل کے مرکزی دفتر میرواعظ منزل راجوری کدل میں ورکرس ریلے کااہتمام کیاگیاجس کی صدارت سربراہ تنظیم میرواعظ عمر فاروق نے انجام دی۔ اس موقعہ پر اعلان کیا گیا کہ آج یعنی21 مئی 2019ء کو مرکزی جامع مسجد سرینگر سے نماز ظہر کے فوراً بعد اجتماعی طور مزار شہداء عیدگاہ کی طرف رخ کیا جائیگا جبکہ 21 مئی کے خونین سانحہ کی یاد میں پورے کشمیر میں ہمہ گیر ہڑتال رہیگی۔ ورکرس ریلے میں تنظیم کے بانی رہنما میرواعظ مولوی محمد فاروق ،حول سانحہ، خواجہ عبدالغنی لون کی برسیوں کی مناسبت سے اور جملہ شہدائے کشمیر کو انکی عظیم الشان قربانیوں پر شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔ریلے میں تنظیم سے وابستہ عہدیداران اور کارکنان نے شرکت کی اور ۲۱ مئی کے مزار شہداء عیدگاہ سرینگر پر طے شدہ جلسہ عام اور دعائیہ مجلس کی تقریب کو ہر سطح پر کامیاب بنانے کیلئے اپنے عزم کا اظہار کیا ۔ ورکر

پیلٹ متاثرین کا پریس کالونی میں احتجاج | مہلک ہتھیار پیلٹ گن پر پابندی لگانے کا مطالبہ

سرینگر//مہلک ہتھیار پیلٹ گن سے متاثرہ سینکڑوں افراد نے پریس کالونی لالچوک میں احتجاج کرتے ہوئے پیلٹ گن کے بے دریغ استعمال پر فوری پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا۔ وادی کے مختلف علاقوں سے آئے متاثرین پریس کالونی میں جمع ہوئے اوراحتجاج کرتے ہوئے کہاکہ اس مہلک ہتھیار سے آئے روز نوجوانوں کا مستقبل تاریک بنتا جارہا ہے۔ ایک طرف جہاں اسے سے انسان آنکھوں کی روشنی میں پوری طرح محروم ہوجاتا ہے وہیں دوسری طرف انسان کے ذریعہ معاش پر کاری ضرب پڑجاتی ہے۔ مظاہرین نے بتایا کہ جب ایک انسان کی آنکھ اور جسم میں پیلٹ پیوستہ ہوجاتے ہیں تو آنکھوںکی بینائی کیساتھ ساتھ اُن کے مستقبل پر کاری ضرب پڑجاتی ہے۔ ’’پیلٹ وکٹمز ویلفیئر ٹرسٹ‘‘ کے بینر تلے درجنوں پیلٹ متاثرین نے احتجاج کرتے ہوئے ریاستی سرکار سے مطالبہ کیا کہ وہ مذکورہ ہتھیار پر فوری طور پر پابندی عائد کرے۔انہوں نے بتایا کہ تاز

سانحہ حول …… خوف و دہشت کی خلش متاثرین کی یادوں میں ہنوزموجود

سرینگر//پائین شہر کے حول میں چکا چوند بازاروں اور مصروف زندگی کے بیچ 29بر س قبل ہوئے کشت خون کے کوئی بھی نشان اگر نظر نہیں آرہے ہیں تاہم آج بھی اہل علاقہ کے لوگوں کے دلوں میںاس دہشت زدہ واقعے کی خلش ضرور موجود ہے۔ 1990میں حول کی سڑکوںپرجوخون کی ہولی کھیلی گئی اس کے چھینٹے قریب3دہائیاں گزر جانے کے باوجود جان بحق ہوئے لوگوں کے رشتہ داروں اور اہل خانہ کے دلوںمیں پیوست ہے۔تاریخ کے اس خونین سانحہ میں زخمی ہونے والے اور معجزاتی طور پر بچنے والے لوگوں کے کانوں میں ’’اب بھی گولیوں کی گنگناہٹ اور فورسز کی دندناہٹ سنائی دیتی ہے۔‘‘ مئی 1990کی 21تاریخ میر واعظ کشمیر مولوی محمد فاروق کو گولیوں کا نشانہ بناکر جاں بحق کردیا گیااورجب جلوس کی صورت میں مرحوم کی میت حول چوک پہنچی تو چاروں اطراف سے گولیوں کی گن گناہٹ سنائی دی جس میں قریب 52معصوم شہری اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے

کشمیر اور لداخ کے60وکلائو کو حلف دلایاگیا

 سری نگر//ریاستی جوڈیشل اکاڈمی کی طرف سے جوڈیشل اکاڈمی مومن آباد میں کشمیر اور لداخ صوبوں کے نئے وکلاء کو عہدے کا حلف دلایا گیا۔ اکاڈمی کے چیئرمین جسٹس علی محمد ماگرے نے تقریباً60 وکلاء کو حلف دلایا جس کے بعد وکلاء کو پیشہ وارانہ اُصولوں اور برتاؤ سے متعلق تربیت دی گئی۔ اس موقعہ پر پرنسپل ڈسٹڑکٹ اینڈ سیشنز جج عبدالرشید ملک، اکاڈمی کے ڈائریکٹر راجیو گپتا، جوائنٹ رجسٹرار پروٹوکول ہائی کورٹ فاروق احمد اور دیگر متعلقین بھی موجود تھے۔جسٹس ماگر نے وکالت کے شعبہ میں آنے پر نئے وکلاء کا خیرمقدم کرتے ہوئے انہیں پیشہ میں ایمانداری برتنے پر زو ردیا ۔ انہوں نے ان وکلاء پر زو ردیا کہ زندگی کے تمام شعبوں میں اگرچہ ایمانداری ضروری ہے تا ہم وکالت کے شعبۂ میں خاص طور سے ایمانداری سب سے پہلی ترجیح ہونی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ اس پیشہ میں لگن، تندہی اور ایمانداری سے نئی بلندیوں کو چھوا جاسکتا ہے۔

بلیوارڑ روڑ تباہ حالی کا شکار، جگہ جگہ کھڈ، سیاحوں اور عوام کیلئے دردِ سر

سرینگر// بلیوارڑ سڑک کی خستہ حالت انتظامیہ کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے جبکہ نہرو پارک سے کرالہ سنگری تک 3برس قبل منظور ہوا  4گلیاروں کا منصوبہ بھی کھٹائی میں پڑا ہوا ہے ۔واضح رہے کہ اس سڑک پر جگہ جگہ گہرے کھڈے پیدا ہوئے ۔سڑک پر مقامی لوگوں کے ساتھ ساتھ غیر مقامی سیاحوں کا رش رہتا ہے ۔ یہ سڑک ڈلگیٹ سے لیکر ہارون تک مختلف مقامات پر تباہ حالی کا شکار ہے اور انتظامیہ سڑک کی مرمت کی جانب کوئی دھیان نہیں دیتی ہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس سڑک پر ٹریفک کا کافی زیادہ دبائو رہتا ہے جبکہ ہزاروں گاڑیاں روازنہ سڑک پر دوڑتی ہیںجن میں سیاح بھی ہوتے ہیں کھڈوں کی وجہ سے ٹریفک کی آمدورفت بھی متاثر ہو رہی ہے ۔بیرون ریاست کے سیاحوں کا کہنا ہے کہ جس طرح ریاستی سرکار شہر کے دیگر علاقوں کی سڑکوں کی مرمت میں ناکام ہے اُسی طرح بلیوارڑ سڑک کی جانب بھی کوئی خاص دھیان نہیں دیا جاتا اور پچھلے کچھ عرصے

خورشید گنائی نے زیارت مخدوم صاحب ؒ پر حاضری دی

سرینگر//گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی نے حضرت شیخ حمزہ مخدوم ؒؒ کی زیارت پر حاضری دی اور وہاں جاری ترقیاتی کاموں کا بھی جائزہ لیا۔مشیر ، جوجے اینڈ کے وقف بورڈ کے چیئرمین بھی ہیں ،نے وہاں ریاستی عوام کی خوشحالی ، ترقی اور امن کیلئے دعا کی۔اس موقعہ پر انجینئرنگ عملے کے ساتھ منیجنگ ڈائریکٹر جے اینڈ کے کیبل کار کارپوریشن شمیم احمد وانی اور بورڈ کے نائب چیئرمین جی آر صوفی بھی موجود تھے ۔خورشید احمد گنائی نے زیارت گاہ کے احاطے کا معائینہ کیااور وہاں افسروں سے زائرین کیلئے بہم رکھی جارہی سہولیات اور دیگر ترقیاتی کاموں کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔مشیر نے خواتین کے لئے تعمیر کئے جانے والے نئے وضو خانے کا بھی معائینہ کیا۔یہ وضو خانہ جے اینڈ کے سٹیٹ کیبل کار کارپوریشن کی طرف سے سی ایس آر کے تحت تعمیر کیا جارہا ہے۔مشیر نے بعدمیں مخدوم صاحب روپ وے کا بھی معائینہ کیا اور کیبل کار کارپوریشن کے اف

جہانگیر چوک میں ٹریفک جام روز کا معمول

سرینگر // شہر کے ٹریفک نظام میں سدھار لانے کے دعوئوں کے بیچ جہانگیر چوک میں ٹریفک جام کا سلسلہ بدستور جاری ہے جس کے سبب نہ صرف راہگیروں بلکہ مسافروں کو بھی سفر کے دوران شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ محکمہ ٹریفک نے اگرچہ حال ہی میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ سڑکوں کے کنارے یا پھر سڑکوں کے بیچ کھڑی گاڑیوں کا کورٹ چالان کیا جائے گا تاہم جہانگیر چوک میں محکمہ کی یہ مہم نظر نہیں آرہی ہے اور اکثر گاڑیاں جہانگیر چوک میں سڑکوں کے بیچ یا پھر سڑکوں کے کنارے پر کھڑا ہوتی ہیں جو ٹریفک جام کا سبب بن جاتی ہیں لیکن اُن گاڑی مالکان کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی جاتی ۔کئی ایک مسافروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ حالت ایسی ہے کہ جہانگیر چوک سے جن گاڑیوں کو بٹہ مالو ، آلوچی باغ ، برزلہ ، رامباغ ، یا پھر اقبال پارک کی طرف جانا ہوتا ہے وہ گھنٹوں فلائی اوور کے نیچے جام میں پھنس جاتی ہیں کیونکہ اس جگ

فردوس کالونی عیدگاہ کی اندرونی سڑکیں خستہ حال

سرینگر//فردوس کالونی عید گاہ زونی مر کی اندرونی رابطہ سڑکیں خستہ اور ناکارہ ہونے سے کھنڈرات میں تبدیل ہوچکی ہیں جس کے باعث عوام کو گوناگوں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔فردوس کالونی زونی مر کی اندرونی اور ذیلی رابطہ سڑکیں جگہ جگہ اکھڑ چکی ہیں اور بڑے بڑے کھڈ بن گئے ہیںاور بارشوں میں تالاب بن جاتی ہیں جبکہ اس وقت پیدل چلنے والوں کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ گاڑیاں چلنے سے گندے پانی سے اٹھنے والی چھینٹوں سے طلاب کی وردیاںاور راہگیروں کے کپڑے گندے ہوجاتے ہیں۔ ریاض احمد شیخ نامی شہری کاکہنا ہے کہ ’فردوس کالونی اور آس پاس کے علاقوں کی رابطہ سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل ہوچکی ہیں جس کے سبب عبور و مرور میں مشکلات پیش آتی ہیں ‘۔ مذکورہ شہری نے کہاکہ برسوں سے ان سڑکوں کی مرمت اور میگڈم نہیں بچھایاگیا جس کا خمیازہ مقامی آبادی کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔  

رعناواری میں آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد باعث تشویش

سرینگر //رعناواری میں آوارہ کتوں سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے جبکہ شام کے بعد گھروں سے باہر نکلنا دشوار بن گیا ہے ۔ رعناواری میں آوارہ کتوں کے غول سے مکینوںمیں خوف و ہراس پایاجارہاہے ۔ مقامی لوگوں کاکہنا ہے کہ رعناواری کے کرالہ یار، کلوال محلہ، پوج محلہ ، نائد یار اورسرٹینگ کے علاقوں میں کتوں کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ لوگ سڑکوں پر چلنے میں خوف محسوس کررہے ہیں ۔ لوگوں کاکہنا ہے کہ ماہ رمضان کے ایام میں فجر، مغرب اور عشاء نمازوں کی ادائیگی کیلئے مسجد جانے میں سخت خوف ہوتا ہے کہ کہیں کتے حملہ نہ کریں۔ لوگوں کاکہنا ہے کہ سرینگر میونسپل کارپوریشن نے آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد پر قابو پانے کیلئے نس بندی کرنے کے بلند بانگ دعوے کئے جو وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ جھوٹ ثابت ہوئے۔ لوگوںنے گورنر انتظامیہ اور ایس ایم سی حکام سے اپیل کی کہ کتوں کی بڑھتی تعداد کو قابو کرنے کیلئے اور لوگ

تازہ ترین