تازہ ترین

گلی کوچوں میں برف کی موجودگی اور نشیبی علاقے زیر آب

سرینگر//گلی کوچوں میں ابھی تک برف کی موجودگی اور نشیبی علاقے زیر آب ہونے سے انتظامیہ خصوصاً ایس ایم سی کے دعوئوں کی قلعی کھل جاتی ہے۔پائین شہر کے ساتھ ساتھ شہر کے کئی دیگر علاقوں میں گلی کوچوں سے ہنوز برف نہیں ہٹائی گئی ہے جبکہ کئی مقامات پر سڑکیں اور کوچے زیر آب ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کا عبور و مرور مشکل ہوگیا ہے ۔لوگ انتظامیہ سے مانگ کررہے ہیں کہ زیر آب آئے علاقوں میں نکاسی آب کے پمپ نصب کئے جائیں اور کوچوں میں برف ہٹانے کیلئے اقدامات کئے جائیں ۔ لعل نگر چھانہ پورہ ، نٹی پورہ ، شالہ ٹینگ کے علاوہ پائین شہر کے کئی علاقوںمیں لوگ شکایت کر رہے ہیں کہ وہاں گلی کوچوں سے برف نہیں ہٹائی گئی جس کی وجہ سے ان علاقوں میں پانی جمع ہوگیا ہے۔ لوگوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہاں نکاسی کیلئے فوری طور پمپ نصب کئے جائیں۔  

تنویر صادق کاشہر کے کئی علاقوں کا دورہ

سرینگر// نیشنل کانفرنس لیڈر تنویر صادق نے زڈی بل کے غازی ڈوری، گل کدل، عمر کالونی، بادام واری، حول اور دیگر علاقوں کے پیدل دورہ کیا۔ انہوں نے گل کدل میں آگ کی ہولناک ورادت میں خاکستر ہوئے مکان کا بھی جائزہ لیا اور انتظامیہ سے متاثرین کی فوری بازآبادکاری کی اپیل کی۔ انہوں نے پی ڈی پی کے چیف انجینئر کو علاقے میں نیا ٹرانسفامر نصب کرنے کی اپیل کی جو آگ کی واردات میں تباہ ہوا تھا۔ انہوں نے عمر کالونی (بی) کا بھی دورہ کیا ، جو پورا علاقہ زیر آب آگیا ہے۔ انہوں نے موقعے پر ہی معاملہ ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر کیساتھ اُٹھایا جنہوں نے بعد میں ڈی وارٹرنگ پمپ بھیج کر پانی کی نکاسی شروع کرائی۔دورے کے دوران انہوں نے لوگوں کے مسائل اور مشکلات بھی سنے اور ان کا سدباب کرانے کیلئے متعلقہ حکام کیساتھ رابطہ کیا۔ اُن کے ہمراہ نائب صدر بلاک عبدالقیوم آنچاری، سکریٹری بلاک غلام رسول ڈار ، یوتھ بلاک صدر ع

سانحہ زینہ کدل : 23 سال قبل جب فورسز نے 7 شہریوں کو دکانوں میں گولیوں سے بھون ڈالا

سرینگر// مسلم خواتین مرکز کے ایک وفدنے چیئرپرسن یاسمین راجا کی قیادت میں 10 فروری کو زینہ کدل جا کرمرحوم مشتاق احمد خان کے گھر جاکر انکے اہل خانہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کی جنہیں فورسز نے دیگر7 کشمیری نوجوانوں کے ہمراہ  10 فروری 1995 کودکانوں میں گولیاں مارکر جاں بحق کیا۔ یاسین راجا نے کہا شہداء کی عظیم قربانیوں کو رائیگاں نہیں ہونے دیا جائے گا اور انکے مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچا کر ہی دم لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا اس قتل نہ حق میں ملوث فورسز اہلکار ابھی بھی کھلے عام گھوم رہے ہیں اور جاں بحق افرادکے اہل خانہ ہنوز انصاف سے محروم ہیں۔  

کرناہ کے درماندہ مسافر پریس کالونی میں نمودار

 سرینگر //شہر کے کئی علاقوں میں درماندہ کرناہ کے مسافروں نے کل احتجاج کرتے ہوئے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں اپنے اپنے مقامات تک پہنچایا جائے ۔ شہر کے مختلف علاقوں میں درماندہ کرناہ کے لوگ سوموار کی صبح پریس کالونی پہنچے اور احتجاجی مظاہرے کرنے لگے ۔مظاہرین نے انتظامیہ کے خلاف نعرہ بازی کی ۔انہوںنے بتایا کہ کئی روز قبل کرناہ اور وادی میں درماندہ ہوئے مسافروں نے ہیلی کاپٹرکے ذریعے سرینگر سے کرناہ جانے کیلئے ٹکٹ بھی حاصل کئے مگر یہ سہولت سوموار کو بھی مسافروں کو فراہم نہیں کی گئی اور اس طرح یہ مسافر در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں ۔احتجاج کرنے والوں میں سرپنچ دلداد کرناہ راجہ عبدالحمید نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ایک ہفتے سے کرناہ کپوارہ شاہرہ بند ہے اور سڑک کھولنے میں بیکن حکام مکمل طور ناکام ہو چکی ہے ۔احتجاج کے بعدانہوں نے ڈویژنل کمشنر کشمیر بصیر احمد خان کو بھی ای

معذور بچے کے علاج و معالجہ میں مبینہ طورلیت و لعل

سرینگر// پریس کالونی میںکل اس وقت عجیب منظر پیش آیا،جب صدراسپتال میں مبینہ طور علاج نہ ملنے کے خلاف احتجاج کر رہے ایک کنبے کو پی ڈی پی لیڈر نے احتجاج کے بیچ میں ہی اپنی گاڑی میں سوار کر کے صدر اسپتال پہنچایا ۔سوموار کو بیروہ سے آئے ہوئے ایک کنبے نے انکے معذور بچے کو صدر اسپتال میںمبینہ طور علاج نہ ملنے کے خلاف پریس کالونی میںاحتجاج کیا۔ احتجاجی کنبہ اپنی روداد بیان ہی کر رہا تھا کہ اچانک پی ڈی پی صوبائی یوتھ صدر انجینئرنذیر یتویہاں ایک اخبار ی دفتر سے باہر آئے اور کنبے کی روداد سنی۔ مذکورہ یوتھ لیڈر نے موقعہ پر ہی پرنسپل میڈیکل کالج سے رابطہ قائم کیا اور پورے کنبے کو اپنی گاڑی میں سوار کر کے صدر اسپتال پہنچایا۔اس موقعہ پر میڈیا نمائندے بھی انکے تعاقب میں صدر اسپتال پہنچے،جہاں انجینئر نذیر یتو کنبے سمیت پرنسپل میڈیکل کالج کے دفتر میں داخل ہوااور پوری روداد سنائی۔ مذکورہ معذور بچے کو

جذام چھوت والی بیماری نہیں:ناظم صحت

سرینگر//ڈائریکٹوریٹ آ ف ہیلتھ سروسز کشمیر نے کل لپرسی ہسپتال بہرار لال بازار میں 2019-20ء کے تحت سپرش لپرسی جانکاری مہم کا اہتمام کیا۔اس موقعہ پر ڈائیریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر ڈاکٹر کُنیزس ڈولما،جو کہ اس موقعہ پر مہمانِ خصوصی کے طور موجود تھیں،نے کہا کہ سرکار کوڑھ کی بیماری اور اس کے اثرات کے مکمل خاتمے کی وعدہ بند ہے۔انہوں نے کہا کہ سرکار ہرسال کوڑھ کی بیماری کی روک تھام کے لئے پندرہ دنوں کے پروگرام کا اہتمام کرتی ہے تاکہ جس میںپہلے ہی اس کے اثرات کا پتہ چل سکے اور اس کے فوری علاج کے لئے اقدامات کئے جاسکیں۔ڈاکٹر ڈولما نے کہا کہ سرکار عوام کو پیغام دینا چاہتی ہے کہ کوڑھ کے بیماروں کے ساتھ ہمدردی کے ساتھ پیش آنا چاہیے اوریہ چھوت والی بیماری نہیں ہے۔اس دوران چیف میڈیکل آفیسر سرینگر ڈاکٹر طلعت جبین نے کورھ کی بیماری کا دن اورپروگراموں کے انعقاد کی اہمیت کو اجاگر کیا۔  

عرس ختلان کی تقریب آج: خانقاہ معلی میںمولانا ہمدانی اور مولانا قانونگوکا خطاب ہوگا

سرینگر//محسن کشمیر وبانی اسلام حضرت میر سید علی ہمدانیؒ کا عرس ختلان کی۶۴۹ واں تقریب آج یعنی ۶؍ ماہ جمادی الثانی مطابق 12فروری پوری وسط ایشیا ، برصغیر اور ریاست کے تینوں خطوں میں نہایت عقیدت واحترام کے ساتھ منایا جارہی ہے۔ اس سلسلے میں سب سے بڑی تقریب تاریخی خانقاہ معلی سرینگر میں منعقد ہوگی۔ جہاں وادی کے اطراف واکناف سے بڑی تعداد میں عقیدت مند شرکت کررہے ہیں۔ نمازِ ظہر سے قبل جمعیت ہمدانیہ کے سربراہ مولانا ریاض احمد ہمدانی حسب قدیم وعظ و تبلیغ اور عرس ختلان کی فضیلت بیان کریںگے۔نماز ظہر بعد ختمات المعظمات، درود ازکار اور اوراد خوانی کی مجلس آراستہ ہوگی۔اس دوران انجمن حمایت الاسلام کے صدر مولانا خورشید احمد قانونگو آج خانقاہ معلی میں اس دن کی اہمیت و روحانی پس منظر کے گوشوں پر روشنی ڈالینگے۔حضرت شاہ ہمدان ؒ کا پکھلی میں6ذی الحج کو وصال ہوا تھا۔ وصیت کے مطا بق حضرت شاہ ہمدانؒ کو ختلا