راہِ نجات

یہ عذاب تُم پہ کیسا  مُجھے آج تو بتا دے تیرے روز و شب ہیں کیسے ذرا آج تو دِکھادے تیری جُستجو ہے گر یہ کہ عذاب ٹل کے جائے تو  خُدا کے در پہ آکے ذرا اپنا سر جُھکا دے  کبھی چھو نہ پاسکیںگی تُجھے اَن سُنی بلائیں  دل آشنائے احمد ؐ صبح و مسا کر ادے   تُجھے راحت و سُکوں کی مل جائیں گی بہاریں یہ نحیف رشتہ رب سے مضبوط تر بنادے تیرے دل کی یہ دُعائیں کبھی رد نہ ہوسکیں گی  اخلاص و عا جزی سے ذرا ہاتھ تو اُٹھادے  تو سہم گیا ہے کیونکر، تُجھے خوف ہے یہ کیسا شب غم میں روحِ مجروح کو قرآن تو سنادے کوئی بچ نہیں سکا ہے، کوئی بچ نہیں سکے گا   مانگ اپنے رب سے آجا ، مولا مُجھے بچادے    گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر موبائل نمبر؛6006081653

کرونا

ابن آدم بے آداب ہے کرونا خُدا کا عذاب ہے بہتر ہے کہ تُو راہِ خدا اپنالے ورنہ مصیبت تو بے حساب ہے   دِل کی نہ ماحول کی صفائی بندے کے لئے بند قصائی پھر آمدِ کرونا پہ شور کیسا یہ فقط اپنے ہاتھوں کی کمائی   عدُو چھوڑ، عداوت چھوڑ فطرت سے بغاوت چھوڑ عذابِ کرونا توٹل سکتا ہے نفس چھوڑ، نفس کی حمایت چھوڑ   بارُود کی بدبو بے نام کردے انساں کو میسر انسانیت کا جام کردے طوفانِ کرونا تو کچھ بھی نہیں تو محبت کی خوشبو عام کردے    موبائل نمبر؛9419166320  

اِک دُعا

مجھ کو یارب تُو شوقِ سفر بخش دے صبر الجھی ہوئی راہ پر بخش دے پَر کٹا ایک شاہین ہوں اے خدا پھر سے یا رب مجھے بال و پَر بخش دے جو تڑپتا رہے صرف تیرے لئے مجھ کو یا رب وہ قلب و جگر بخش دے عرش اور فرش کو جو ہلا کر رکھے مجھ کو یارب وہ آہِ سحر بخش دے میری آنکھوں کے دریا میں جو سیپ ہیں ہیں وہ خالی تُو ان کو گہر بخش دے جو چلے تو دلوں سے گذر کر چلے مجھ کو یارب وہ تیرِ نظر بخش دے ان میں آئے جو پتھر تو ہیرا بنے میرے ہاتھوں کو ایسا ہنر بخش دے غیر کے آگے جو جُھک نہ پائے کبھی یا الٰہی مجھے ایسا سر بخش دے ڈر سکوں نہ کسی سے میں تیرے سوا لا تخف بخش دے, لا تذر بخش دے جو لُٹاؤں تو بس تیرے ہی دین پر مجھ کو یارب تُو وہ مال و زر بخش دے محنتیں میری نہ ہوں کبھی رائیگاں محنتوں کا الٰہی ثمر بخش دے جو بدل دے حِجازی ؔ 

نعت

حُرمتِ نعت کی نغمگی آپؐ ہیں غنچۂ فکر کی تازگی آپؐ ہیں   ’ضامنِ شافیِ اُمتی آپؐ ہیں‘ محشری ہم ہیں تو کوثری آپؐ ہیں   چاندنی کی قسم روشنی آپؐ ہیں ان ستاروں کی بھی دلکشی آپؐ ہیں   بات قرآن ہے قولِ فرقان ہے دین و ایمان کی تازگی آپؐ ہیں   مصطفائی کی آمد مبارک ہمیں ایک اک اُمتی کی خوشی آپؐ ہیں   ہوگیا ختم پیغامِ حق آپؐ پر یا محمدؐ نبی آخری آپؐ ہیں   عشق کیا، فکر کیا، ذکرکیا، شوق کیا ساعتِ نور کی آگہی آپؐ ہیں   اشرف عادلؔ کشمیر یونیورسٹ، سرینگر موبائل نمبر؛7780806455

تازہ ترین