گاندربل میں40 بجلی ٹرانسفارمرخراب | متعدد علاقے گذشتہ20روز سے گھپ اندھیرے میں

گاندربل// گاندربل ضلع کے مختلف علاقوں میں 40 بجلی ٹرانسفارمر گذشتہ بیس روز سے خراب ہیں اور محکمہ بجلی کے ورکشاپ میں پڑے ہوئے ہیںجن کی مرمت کیلئے کوئی کارروائی انجام نہیں دی جارہی ہے۔ محکمہ بجلی نے ضلع کو گاندربل،تولہ مولہ،منیگام اورکنگن سب ڈویژنوں میں بانٹ دیا ہے اور فی الوقت چاروں سب ڈویژنوں کے تحت آنے والے علاقوں میں 40 سے زائد بجلی ٹرانسفارمر خراب پڑے ہیں ۔سب ڈویژن کنگن میں 27، منیگام میں 10، تولہ مولہ 12اورسب ڈویژن گاندربل میں 5 ٹرانسفارمر خراب ہیںجن میں سے کچھ مارچ کے پہلے ہی ہفتے میں خراب ہوگئے تھے۔ان علاقوں کے صارفین گذشتہ20 روز سے مختلف مسائل سے دوچار ہیں۔محکمہ بجلی نے ضلع میں 40 بجلی ٹرانسفارمروں کے خراب ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈائون کی وجہ سے ان ٹرانسفارمروں کی مرمت نہیں ہوسکی ہے۔انہوں نے کہا کہ کئی ٹرانسفارمر ٹھیک کردکے متعلقہ علاقوں میں نصب کئے گئے ہیں لیکن تیل

رعناواری میں زمین کھسکنے سے 4مکان تباہ

سرینگر//پائین شہر کے رعناواری میں دوران شب زمین کھسکنے کے نتیجے میں4مکانات کو شدید نقصان پہنچا ۔ سکندر پورہ رعناواری میں مقامی لوگوں نے بتایا کہ اتوار اور سوموار کی درمیانی شب کو اچانک زمین کھسکنے سے مٹے کے بنے 4مکانات کو سخت نقصان پہنچا۔ زمین کھسکنے سے غلام محمد گلکار،مرحوم غلام قادر گلکار،نور محمد گلکار اور محمد یوسف گلکارکے پشتینی مکانات کو زبردست نقصان پہنچا ہے۔ واقع کی تصدیق کرتے ہوئے پولیس تھانہ رعناواری کے ایس ایچ او راشد خان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ اتوار اور سوموار کی درمیانی رات کو زمین کھسکنے سے چار پرانے مٹی کے مکانات کو نقصان پہنچا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ مکانات خالی تھے اسلئے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔  

غیر مقامی افراد کیلئے کھانے پینے کابندوبست | ڈورومیں رضاکار تنظیم نے لنگر قائم کرلیا

اننت ناگ//کوروناوائرس کے باعث لاک ڈائون کی صورتحال میں فلاحی ادارے اور مخیر حضرات ضرورتمند افراد کی مدد کیلئے آگے آرہے ہیں۔ ڈورو شاہ آباد میںانتظامیہ نے مختلف جگہوںپر کام کررہے سینکڑوں غیر مقامی افراد کو گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول میں منتقل کیاہے جن کے کھانے پینے کا بندوبست غیر سرکاری تنظیم شاہ آباد ڈیولپمنٹ فورم نے اپنے ذمہ لیا ہے ۔فورم نے اسکول میں باضابطہ لنگر قائم کیا ہے جہاں ان لوگوں کو چائے کے ساتھ ساتھ کھانا بھی فراہم کیا جارہا ہے ۔اسکول میں فی الوقت 150سے زائد غیر مقامی افراد جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیںقیام پذیرہیں ۔ شاہ آباد ڈیولپمنٹ فورم کے چیئرمین ظہور احمد ملک کا کہنا ہے کہ انہوں نے ان لوگوں کے طعام کی ذمہ داری لی ہے۔انہوں نے کہا کہ لنگر تب تک چالو رہے گا جب تک نہ یہ لوگ واپس اپنے اپنے گھروں کو پہنچ جائیں گے۔   

کرگل میں سکھ طبقہ سرگرم | ضلع انتظامیہ کو1لاکھ28ہزار کا چیک پیش کیا

کنگن//لاک ڈائون کے بیچ غیر سرکاری اور مذہبی تنظیمیں بھی اب امدادی سرگرمیوں میں جٹ گئی ہیں۔ گرووارہ سنگیت بلتی بازار کرگل نے سوموارکو ایک لاکھ 28ہزار روپے کا چیک ضلع انتظامیہ کرگل کوپیش کیا۔بلتی بازار کے صدرکرن سنگھ کی سربراہی میں ایک ٹیم نے ضلع ترقیاتی کمشنر کرگل بصیرالحق چودھری کو یہ چیک پیش کیا۔ترقیاتی کمشنر نے مقامی سکھ برادری کے اس اقدام کو سرہا اورشکریہ ادا کیا۔  

ٹنگمرگ کے کئی دیہات’ریڈزون‘ قرار

کنگن//لاک ڈائون کے بیچ غیر سرکاری اور مذہبی تنظیمیں بھی اب امدادی سرگرمیوں میں جٹ گئی ہیں۔ گرووارہ سنگیت بلتی بازار کرگل نے سوموارکو ایک لاکھ 28ہزار روپے کا چیک ضلع انتظامیہ کرگل کوپیش کیا۔بلتی بازار کے صدرکرن سنگھ کی سربراہی میں ایک ٹیم نے ضلع ترقیاتی کمشنر کرگل بصیرالحق چودھری کو یہ چیک پیش کیا۔ترقیاتی کمشنر نے مقامی سکھ برادری کے اس اقدام کو سرہا اورشکریہ ادا کیا۔  

پلوامہ میں 4600غیر مقامی افراد کیلئے قیام و طعام کا مکمل انتظام

پلوامہ// ضلع پلوامہ میںانتظامیہ نے غیر مقامی لوگوں کے لئے ایک درجن سے زیادہ مراکز قائم کئے ہیں جہاں4600سے زیادہ افرادکیلئے قیام طعام کا انتظام کیا گیا ہے۔ ان افراد میںکچھ مختلف کار خانوں میںکئی سال سے کام کررہے ہیں جبکہ کچھ مزدوری کے سلسلے میں یہاں ہر سال آتے رہتے ہیںجن کی تعداد4600سے زیادہ ہے جن میںیہاں مستقل کام کررہے افراد کی تعداد3600کے آس پاس ہے ۔ادھر ضلع کے فوڈ افسر شرجیل علی نے بتایا کہ ان تمام مراکز میں قیام و طعام کا بہتر انتظام کیا گیاہے ۔  

کورونا وائرس | حاجن میونسپل کمیٹی کی صفائی مہم جاری

سرینگر// لاک ڈائون کے بیچ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے سلسلے میں میونسپل کمیٹی حاجن نے زیا رت خواجہ ہلال نقشبندیؒ سمیت کئی  مساجد کی صفا ئی ستھرائی کے علاوہ ریڈ زون قرار دئے گئے علاقوں کوسینی ٹائز کیا۔ کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر ارشاد اکی قیاد ت میں ایگزیکٹیوافسر اوردیگر کونسلروں نے بھی شرکت کی۔ مہم کے دورا ن زیا رت خواجہ ہلال نقشبندی ؒ ،جامع مسجد اور کئی مساجدکوسینی ٹائز کیا  گیا۔ادھر حاجن میں ریڈ زون قرار دئے گئے علاقوں کوسم باغ ، ہاکبار ہ اور دیگر علاقوںمیں بھی کمیٹی کی طرف سے جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو کیا گیا۔  

کہنہ کھن ڈلگیٹ میں غیرقانونی تعمیرات منہدم

سرینگر//لیکس اینڈ واٹر ویز ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی انفورسمنٹ ونگ نے کہنہ کھن ڈلگیٹ،درگجن اور شاہدادباغ حبک میں دورہائشی مکانوں اور دو دکانوں جنہیں غیر قانون طور کھڑاکیاگیا تھاکو منہدم کیا۔ قابل ذکر ہے کہ کوروناوائرس کی عالمگیر وباء کی دہشت کے باوجود انفورسمنٹ ونگ نے یہ انہدامی کارروائی انجام دی۔بیان میںلاوڈانے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ کوروناوائرس کی عالمگیر وباء کے دوران جب وادی سمیت پوری دنیا کوخطرہ ہے،خلاف ورزی کرنے والے غیرقانونی تعمیرات کھڑاکرنے میں مشغول ہیں اور ان کا سماجی بائیکاٹ کیاجانا چاہئے ۔بیان میں کہاگیا ہے کہ ہائی کورٹ کی طرف سے ممنوع قراردئے گئے علاقوں میں غیرقانونی تعمیرات کی اجازت نہیں دی جائے گی۔  

پنڈت ملازمین نے 50ہزار ریلیف فنڈ میں جمع کئے

قاضی گنڈ//کشمیری پنڈتوں ملازمین کے ایک گروپ نے وزیراعظم ریلیف فنڈ میں50ہزار روپئے کا عطیہ جمع کیا ہے۔یہ ملازمین ویسو پنڈت کالونی میں مقیم ہیں ۔ایک بیان میں ویسو ویلفیئر کمیٹی کے صدر سنی رینا نے کہا ’’یہ ہمارا فرض ہے کہ کوروناوائرس کے خلاف مہم میں وزیراعظم ریلیف فنڈ میں ہم حتی المقدورعطیہ پیش کرسکیں‘‘۔  

شمناگ کے معروف دانشور اورمذہبی شخصیت فوت

کپوارہ//ترہگام کے شمناگ علاقہ سے تعلق رکھنے والے معروف دانشور اورمذہبی شخصیت غلام احمد میر پیر کو مختصر علالت کے بعد انتقال کرگئے۔غلام احمد میر نے محکمہ تعلیم میں 40سال تک اپنی خدمات انجام دیں۔ان کا شمار ضلع میں ایک معروف ماہر ین تعلیم میں کیا جاتا تھا۔موصوف نے مذہبی اور سماجی سطح پر بھی گرانقدر خدمات انجام دی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ اُن کی رحلت کی خبر سن کر ہی پورا علاقہ سوگوار ہوگیا۔لاک ڈائون کے نتیجے میں اگرچہ اُن کے عقیدتمند اورشاگرد تجہیز وتدفین میں شامل نہیں ہوسکے تاہم کئی مذہبی ،سماجی اورادبی تنظیمو ں نے اپنے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کیا اور لواحقین سے ہمدردی کا اظہار کیا ۔  

میڈیکل کالج کٹھوعہ کی نرسوں کونوکریوں سے برخاست نہ کیاجائے

سرینگر// جموں کشمیر میں کرئونا بحران کے بیچ نیم طبی عملے کے روزگار پر یلغار نہ کرنے کی وکالت کرتے ہوئے  جموں کشمیر اپنی  پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے لیفٹنٹ گورنر سے فوری طور پر نرسوں کی نوکریوں سے بے دخلی کے احکامات کو واپس لینے کا مطالبہ کیا۔جے کے این ایس کے مطابقجموںو کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے پیر کو جموں و کشمیر حکومت سے نیم طبی عملے کو روزی روٹی سے محروم نہ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا اس عملے کی فی الوقت صف اول پر اس مہلک بیماری سے لڑنے اور مزید پھیلائو کی روک تھام کیلئے سب سے زیادہ ضرورت ہے۔انہوں نے ایس آر او 24 کے تحت گزشتہ سال جنوری میں بھرتی کے بعد گورنمنٹ میڈیکل کالج کٹھوعہ کی جانب سے جونیئر اسٹاف نرسوں کو بے دخل کرنے پر شدید رد عمل کا اظہار کیا۔ بخاری نے لیفٹیننٹ گورنر جی ایس مرمو سے ذاتی طور پر اس معاملے میں مداخلت کرنے کی اپیل کی۔جے

سب ضلع اسپتال کپوارہ کورونا علاج کیلئے مخصوص

کپوارہ//کورنا وائرس میں آئے روز اضافہ اور کپوارہ کے 6مریضوں کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد ضلع انتظامیہ نے سب ضلع اسپتال کپوارہ کو کو وڈ 19سنٹر میں تبدیل کیاہے اور اسپتال میں او پی ڈی اور آئی پی ڈی شعبو ں کو مکمل طور عام مریضوں کے لئے بند کیا گیا اور ان کے لئے سب ضلع اسپتال سوگام ،ضلع اسپتال ہندوارہ اور پرائمری ہیلتھ سنٹر درگمولہ میں انتظانات کئے گئے ۔ضلع انتظامیہ نے سب ضلع اسپتال کے ارد گرد علاقہ کو’’ ریڈزون ‘‘قرار دیاہے  اور مذکورہ اسپتال صرف کو رنا وائرس میں مبتلا مریضوں کےعلاج کے لئے وقف رکھا گیا ۔اسپتال انتظامیہ کے مطابق اب اس مر ض میں مبتلا افراد کا ٹیسٹ جی ایم سی اسپتال بارہ مولہ کے بجائے سب ضلع اسپتال میں کیا جائے گا اور آج سے با ضابطہ طور مریضوں کے نمونہ جانچ کے لئے حاصل کئے جارہے ہیں اور ضلع سے تعلق رکھنے والے کسی بھی مریض کو بارہ مولہ منتقل نہیں کیا

ڈاکٹر اور نیم طبی عملہ | کام کاج کے دوران انفیکشن کاخطرہ:ڈاک

سرینگر//ڈاکٹروں،نرسوں اور دیگر نیم طبی عملے کے شدیدبیمار ہونے کاخطرہ ہے اگر انہیں کروناوائرس کی انفیکشن لگ گئی۔اس بات کااظہار ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کشمیرکے صدر ڈاکٹر نثارالحسن نے ایک بیان میں کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ لگتا ہے کہ کروناوائرس ڈاکٹروں اور صحت عامہ کے ورکروں کو شدید طور متاثر کرتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اٹلی میں کم سے کم 41ہیلتھ ورکر اس انفیکشن سے مرگئے اوراُس خطے میں اس بیماری کے پھوٹ پڑنے سے اب تک 5000ڈاکٹراور نیم طبی عملے کے دیگر اہلکاراس انفیکشن کاشکار ہوئے ہیں۔اس عالمگیروباء کے مرکز ووہان چین میں حکام کے مطابق 3400 ڈاکٹراورنیم طبی عملے کے اہلکار اس وائرس کاشکار ہوئے اور ان میں سے22کی موت ہوئی ۔ڈاکٹر نثار کے مطابق ہمیں یہ معلوم نہیں ہے کہ دیگر بیماروں کے مقابلے میں یہ کیوں زیادہ شدیدبیمار ہوتے ہیں۔شاید اس کی وجہ یہ ہوگی کہ انہیں وائرس کی زیادہ تعداد لگی ہو۔ڈاکٹر نثار نے کہا کہ

جی ایم سڈکو کا صنعتی بستیوں اور کورنٹین ہومز کا دورہ

سرینگر // جنرل منیجر ( جی ایم ) سڈکو آغا سید اعجاز نے یہاں کئی صنعتی بستیوں اور کورنٹین ہومز کا دورہ کیا جنہیں کورونا وائیرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے سلسلے میں اٹھائے جا رہے اقدامات کے ایک حصے کے طور پر قائم کیا گیا ہے ۔ جی ایم موصوف نے شالٹینگ ، رنگریٹھ اور کھنموہ میں قائم صنعتی بستیوں کے صنعتی ایسوسی ایشنوں کے صدور سے بات چیت کی ۔ جی ایم موصوف نے مختلف ایسوسی ایشنوں کے صدور کے مطالبات اور تجاویز بغور سُنے اور انہیں یقین دلایا کہ حکومت انہیں تمام ممکنہ امداد فراہم کرے گی ۔ اس موقعہ پر آغا سید اعجاز نے سڈکو کے ملازمین اور صنعتی یونٹوں کے ورکروں کے علاوہ دیگر لوگوں میں ماسک ، اشیائےخوردنی و دیگر چیزیں تقسیم کیں ۔ رنگریٹھ اور کھنموہ میں قائم سڈکو انڈسٹریل کمپلیکسوں کو بھی بطور کورنٹین ہوم قائم کیا گیا ہے ۔ جی ایم نے صنعتی یونٹوں میں کام کرنے والے ملازمین پر زور دیا کہ وہ اپنے و دیگر لوگو

ڈوروشاہ آباد کے رضار کار | طبی ملازمین کیلئے لباس کی تیاریوں میں مصروف

اننت ناگ //کرونا وائرس کے باعث جہاں پوری دنیا متاثر ہوئی ہے وہیں وادی کشمیر میں بھی اس بیماری میں مبتلا افراد کی تعداد ہر گذرتے دن کے ساتھ بڑھ رہی ہے،اس صورتحال میں غیر سرکاری تنظیموں کا رول ناقابل فراموش ہے ۔ڈورو شاہ آباد میں قائم فردوس چیرٹیبل سوسائٹی و ادبی مرکز شاہ آباد جموں و کشمیر سکل ڈیولپمنٹ مشن کے اشتراک سے محکمہ صحت میں کام کر رہے ملازمین کے لئے بغیر کسی معاوضہ کے پی پی سوٹ تیار کررہی ہے ۔سوسائٹی میںفی الوقت قریباََ15لڑکیاں رضاکار انہ طور سوٹ تیار کر رہی ہیں اور لڑکیوں میں اس کام کو کرنے میں کافی جوش اور ولولہ نظر آرہا ہے ۔ادفر جان نامی رضاکار لڑکی نے کشمیر عظمٰی کو بتایا کہ اُنہوں نے ٹیلرنگ کام جے کے سکل ڈیولپمنٹ مشن کی مدد سے سیکھا ہے ۔کرونا وائرس کے پھیلتے ہی ان کے دل میں سماج کے تئیں کچھ کرنے کا جذبہ پیدا ہوگیا۔ اس بیچ فردوس چیرٹیبل کی جانب سے اُنہیں طبی عملہ کے لئے&nb

کروناوائرس پھیلنے کاشاخسانہ | اندور میں کشمیری اسکالرپریشان،گھرپہنچانے کامطالبہ

سرینگر//اندور کی ایک بستی میں مہلک کورونا وائرس میں کئی افراد کے مبتلا ہونے کے بعد یہاں 53کشمیری پی ایچ ڈی سکالرس میں خوف وہراس پھیل گیا ہے ۔اس دوران سکالرس نے انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ انہیں یہاں سے فوری طور کشمیر منتقل کرنے کے لئے اقدامات اٹھائیں جائیں۔ اندور کی ایک یونیورسٹی) ڈی اے وی ای)میںمختلف مضامین میں پی ایچ کی ڈگریاں حاصل کر رہے،53کشمیری طلباء سخت پریشانیوںمیں مبتلا ہوئے ہیں ۔اندور سے کچھ طلبا نے کشمیر نیوز سروس کو بتایا کہ وہ یہاں تھجرانہ کے مقام پر عارضی طور رہائش پزیر ہیں ،جہاں 8سے 10افرادمہلک کورونا وائرس کی لپیٹ میں آچکے ہیںجس کے نتیجے میں مذکورہ طلبا ء کو سخت پریشانی اور خوف لاحق ہوا ہے ۔اس دوران ان سکالرس کا کہنا تھا کہ ان کے علاقے میںوائرس داخل ہونے کے نتیجے میں تمام کشمیری طلبا ء کمروں سے باہر نہیں نکلتے  ۔انہوں نے سرکاراور انتظامیہ سے پیل کی کہ ہمیں کسی چیز کی

ملک بھر میں درماندہ کشمیری طلاب کی حالت زار

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے رکن پارلیمان حسنین مسعودی نے ملک کی مختلف ریاستوں میں درماندہ کشمیری طالب علموں کو کشمیر واپس لانے کا مطالبہ دہرایا ہے۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ فی الوقت کشمیر کے بیسیوں طالب علم اندور،جیسلمیر، بنگلورواوردہلی میں پھنسے ہیں جہاں انہوں نے قرنطینہ کی مدت بھی مکمل کی ہے اور وہ اب کشمیر جانے کے انتظار میں ہیں ۔انہوں نے ان طالب علموں کی حالت زار پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ کی طرف سے ان طالب علموں کی حالت زار کو نظراندازکرنانازیبا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دیگرریاستوں کی حکومتیں اپنی ریاستوں کے طالب علموں کو واپس لانے کیلئے اقدام کررہی ہیں تاکہ وہ اپنے گھر والوں سے مل سکیں ،لیکن جموں کشمیرانتظامیہ نے ان طالب علموں کیلئے کیا کیا ہے؟جیسلمیرمیں 150طلاب نے قرنطینہ مکمل کیا ہے ۔اسی طرح ملک کے دیگرشہروں میں بھی طلاب نے قرنطین کی مدت مکمل کی ہے ۔ان کیلئے اب وہاں

سخت گیر پالیسی ملک کی جمہوریت کیلئے سم قاتل:محمداکبرلون

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر اور کن پارلیمان  محمد اکبر لون نے مرکزی وزارت داخلہ اور جموں و کشمیر انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ وہ عالمگیر وباء کروناوائرس کے پیش نظرتمام سیاسی قیدیوں اور نوجوانوں کوفوری طور رہا کرے ۔ایک بیان میں انہوں نے سیاسی قائدین اور نوجوانوں کی نظر بندی پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ جیلوں میں نظربندقائدین اور نوجوانوں کی صحت کافی خراب ہوچکی ہے ۔انہوں نے کہا نیشنل کانفرنس کے جنرل سیکریٹری علی محمد ساگر کی صحت بھی نظربندی کے دوران کافی متاثر ہوئی ہے ۔محمداکبر لون نے کہا کہ  سیاسی رہنمائوں کو طویل عرصے تک نظر بندرکھنا آئین اور جمہوری مزاج کے سراسر منافی ہے ۔انہوںنے کہا کہ یہ بدقسمتی کہ موجودہ مرکزی حکومت کشمیریوں کے ساتھ بالکل نا انصافی کر رہی ہے ۔لون نے کہا کہ حکومت کی سخت گیر پالیسی ملک کی جمہوریت کے لئے سم قاتل ہے ۔اسی دوران ضلع سرینگر کے صدر او

سوپور میں نامعلوم گاڑی کی ٹکر سے | بزرگ شہری لقمہ اجل

سوپور//سوپورقصبے میں ایک نامعلوم گاڑی کی ٹکرسے ایک بزرگ شہری لقمہ اجل بن گیا۔اطلاعات کے مطابق 60برس کے شہری کوبائی پاس سوپور پراپنے گھر کے باہر کسی نامعلوم گاڑی نے ٹکر مار کر ہلاک کرڈالاجبکہ ڈرائیور جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہوا۔مہلوک کی شناخت حاجی محمدصدیق میر ولدمحمدرمضان میر کے طور ہوئی ہے ۔ پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔  

ْْٓٓٓٓاقامتی احکامات میں ترمیم | کشمیرکے لوگوں کیلئے کوئی راحت نہیں:کشمیروائس انٹر نیشنل

سرینگر//کشمیرووئس انٹر نیشنل نے حالیہ اقامتی احکامات میں حکومت ہند کی طرف سے کی گئی ترمیم پرردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس میں  کشمیرکے لوگوں کیلئے کوئی راحت نہیں ہے۔لندن میں جاری ایک بیان کے مطابق کشمیرووئس انٹر نیشنل نے کہا کہ مرکزنے جموں وکشمیرکے اقامتی لوگوں کیلئے تمام نوکریوں کومخصوص رکھنے کے ضابطوں میں ترمیم کی ہے لیکن جموں کشمیرکے اقامتیوں کیلئے ضابطوں میں کوئی ترمیم نہیں کی گئی ہے۔اقامتی قانون کے ضابطے مقامی لوگوں کے روزگار کے مواقع کیلئے نہ صرف شدیدخطرہ ہے بلکہ جموں کشمیرکی آبادی کے تناسب کو بھی بگاڑ سکتے ہیں ۔ اقامتی احکامات کی رو سے مقامی باشندوں اور اُن لوگوں جو اقامتی درجہ حاصل کریں گے یااس کے پہلے ہی اہل ہیں،کے حقوق برابر ہوں گے۔اس سے جموں وکشمیرسے باہر کے لوگ روزگار کے مواقع کے کافی حصہ کولے سکتے ہیں اورجموں کشمیرکے اصلی باشندوں کے لئے اِسے کم کریں گے۔ بیان میں