تازہ ترین

سمبل سانحہ ناقابل برداشت اور مہذب سماج کیلئے تازیانہ عبرت

سرینگر//سمبل سوناواری میں3سالہ بچی کے ساتھ پیش آئے وحشیانہ اور دلخراش واقعہ پر متحدہ مجلس علماء ، نیشنل فرنٹ نے گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے سانحات کا آئے روز وقوع پذیر ہونا ایک مہذب سماج کے لیے تازیانہ عبرت ہے۔ادھر انجمن شرعی شیعیاں، اتحاد المسلمین کے وفود سمبل گئے اور متاثرہ کنبے سے ہمدردی کااظہار کرتے ہوئے ملوث شہری کو کڑی سے کڑی سزا دینے کی مانگ کی ہے۔  متحدہ مجلس علماء نے وحشی درندہ صفت نوجوان کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے معاشرہ میں تیزی سے بے راہ روی کے شکار ہوتے جارہے نوجوانوں کو عبرت حاصل ہوگی ۔بیان میں اس شرمناک سانحہ پر زبردست فکر و تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا کہ کس قدر افسوس کی بات ہے ہمارا کشمیری سماج آئے روز نت نئے اخلاقی زوال کی بھیانک تصویر پیش کررہا ہے جو ہر لحاظ سے افسوسناک  اور ہمارے لئے لمحہ فکریہ ہے ۔بیا

بارہمولہ میں بیشتر ہیلتھ سینٹروں میں طبی سہولیات کا فقدان

بارہمولہ // بارہمولہ کے دور دراز علاقوں میں طبی سہولیات کا فقدان ہے ،کہیںجگہوں پر سب سنٹرس بند پڑے ہیں تو کہیں طبی اور نیم طبی عملہ کی کمی ہے جس کے نتیجے میں مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ مقامی لوگوں کے مطابق ضلع میں کئی سب سنٹر جن میں درنگبل ،زہن پورہ  اورحاجی بل کے علاوہ بیشتر ہیلتھ سب سنٹرس اکثر بند ہوتے ہیں جس کے نتیجے میں ان دیہات کے مریضوں کوضلع اسپتال بارہمولہ کا رخ کرنا پڑتا ہے جس سے بیماروں اور تیماداروں کو سخت مشکلات درپیش ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ ضلع کیدیگرہیلتھ سینٹروں کا بھی حال بے حال ہے کیونکہ ان اسپتالوں میں بھی طبی اور نیم طبی عملہ کی سخت کمی ہے اور مریضوںکوضلع کے دیگر اسپتال کا رخ کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ مذکورہ ہیلتھ سینٹروں میں ڈاکٹروں کی کمی کے ساتھ ساتھ نیم طبی عملہ کی بھی قلت ہے جبکہ ان اسپتال میں مریضوں کی ضروری تشخیص ک

تھانہ میں والدہ کو بیٹے سے ملاقات نہ دینا انسانیت سوز: گیلانی

سرینگر//حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانی نے پولیس پوسٹ جنرل بس اسٹینڈ اسلام آباد (اننت ناگ) میں پولیس انتظامیہ کی طرف سے ایک قیدی کے ساتھ وحشیانہ سلوک روا رکھتے ہوئے مذکورہ قیدی کی ملاقات کے لئے آئی ماں کو لہو لہان کرنے کی مذمت کرتے ہوئے اس کو ظلم و ستم قرار دیا۔ حریت دفتر کو موصولہ اطلاع کے مطابق ڈسٹرکٹ جیل کٹھوعہ میں پی ایس اے کے تحت نظربند طالب علم عاقب گلزار کو 10؍مئی کو امتحان میں شریک ہونے کے لئے پولیس ایسکارٹ نے اسلام آباد میں پولیس پوسٹ میں پہنچا دیا۔ راستہ بند ہونے کی وجہ سے مذکورہ طالب علم امتحان میں شامل نہیں ہوسکا۔ اس حال میں عاقب گلزار کی ماں اپنے نظربند بیٹے کے ساتھ ملاقات کے لیے پہنچی، لیکن پولیس حکام نے عاقب کی ماں کے ساتھ تلخ کلامی کرتے ہوئے ملاقات نہ دینے پر مصر رہا یہاں تک کہ اس خاتون کو دھکا دے کر فرش پر گرادیا جس سے وہ مضروب ہوگئی اور اسی حالت میں اس خاتون کو اسپ

مارے گئے جنگجوئوں کو صحرائی کا خراج عقیدت

سرینگر//تحریک حریت چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے معرکہ شوپیان میں جاں بحق جنگجوئوںکو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان بھارت کے تسلط سے نجات حاصل کرنے کے لئے اپنا گرم گرم لہو بہارہے ہیں ۔ صحرائی نے بیان میں کہا کہ بھارت کا ریاست پر قبضہ تمام بین الاقوامی ضابطوں ،اخلاقی اصولوں ،قانونی ،سیاسی اور جمہوری تقاضوں کے برعکس ،صرف فوجی قبضہ ہے ۔جسے جموں کشمیر کے عوام نے کبھی بھی قبول نہیں کیا ہے اور یہاں عوام نے ہر دور میں سیاسی اور جمہوری سطح پر جبری قبضے کے خلاف آواز اٹھائی ،مگر بھارتی حکام نے ان سیاسی تحریکوں اور آواز کو بزور قوت کچلنے کی ہر ممکن کوشش کی ۔انھوں نے کہا کہ آج بھی بھارتی حکام یہاں کی سیاسی اور آزادی کی تحریکوں کو پوری قوت سے دبانے کے حربے آزمارہے ہیں ۔صحرائی نے کہا کہ بھارت کی ضد اور ہٹ دھرمی کا نتیجہ ہے کہ یہاں کے نوجوانوں کو اپنا سر ہتھیلی پر رکھ کر میدان میں آنا پڑا

وندہامہ میں مٹی نکالنے سے ٹرانسمشن ٹاور گرنے کا خطرہ

گاندربل//وندہامہ لار میں کئی کنال اراضی سے غیر قانونی طریقے سے مٹی نکالنے سے وسیع تر آبادی پینے کے پانی کی قلت ہونے کے ساتھ ساتھ ٹرانسمیشن لائن کے ٹاور کے گرنے کا خطرہ ہے۔ وندہامہ میں گزشتہ ایک ماہ سے غیر قانونی طریقے سے مٹی نکالنے کا کام کیا جارہے۔ وندہامہ ویلفیئر کمیٹی کے اراکین نے کشمیر عظمی کو بتایا جے سی بی مشینوں سے دن رات غیر قانونی طریقے سے مٹی اٹھائی جارہی ہے اورعالم یہ ہے کہ علاقہ کو پانی سپلائی فراہم کرنے والی پانی کی پائپ لائنوں کو بھی اکھاڑ دیا گیا جس سے پورے علاقے کو پانی کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔ویلفیئر کمیٹی کے اراکین نے کہا کہ ٹرانسمیشن لائن کے ٹاور کے کناروں سے بھی مٹی اٹھائی گئی جس سے ٹاور کے کنارے کمزور ہوگئے ہیں اوراگر کسی روز تیز رفتار سے ہوائیاں چلیں یا سردیوں کے موسم میں زیادہ برف باری ہوئی تو ٹاور گرجائے گا جس سے جانی اور مالی نقصان ہونے کا خدشہ ہے۔ انہوںنے کہاکہ

جاں بحق جنگجو کی کینسر میں مبتلا اہلیہ فوت

سرینگر//ہف شرمال شوپیان کے جاں بحق جنگجو کمانڈر بلال احمد عرف بلال مولوی کی کینسر میں مبتلا اہلیہ انتقال کر گئیں ۔ مرحومہ اپنے پیچھے 2 کمسن بچیوں کو چھوڑ گئیں ۔ہف شرمال میں بلال مولوی کی کینسر میں مبتلا اہلیہ اتوار کی صبح شوہر کی وفات کے ایک سال بعد انتقال کر گئیں ۔موصوفہ بلڈ کینسر کے موزی مرض میں مبتلا ء تھیں ۔مرحومہ اپنے پیچھے 2 معصوم بچیوں کو چھوڑ کر گئیں جن میں 5 سالہ عائشہ اور 3 سالہ آئمن شامل ہیں ۔ خیال رہے بلال مولوی گزشتہ برس7 مئی کو ایک جھڑپ میں جاںبحق ہوا تھا ۔   

معروف صحافی سمیر یاسر کی والدہ فوت

سرینگر//معروف صحافی سمیر یاسر کی والدہ اتوار کو بارہمولہ میں انتقال کر گئیں۔اہل خانہ کے ذرائع کے مطابق موصوفہ کافی وقت سے علیل تھی اور دہلی اور سرینگر میں ان کا علاج ومعالجہ چل رہا تھا۔ حال ہی میں سمیر یاسر کو کولمبیا یونیورسٹی میں فیلو شپ فراہم ہوئی ہے جبکہ وہ فرسٹ پوسٹ اور  نیویارک ٹائمز کیلئے لکھتے ہیں۔اس دوران متعدد صحافتی انجمنوں نے موصوفہ کے انتقال پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین سے تعزیت کا اظہار کیا۔انجمن اردو صحافت نے بھی سمیر یاسر کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے مرحومہ کے حق میں دعائے مغفرت کی ہے۔    

کجپارہ کنگن میں ناجائز تعمیرات کا سلسلہ جاری | نالہ سندھ کے وجود کو خطرات لاحق

کنگن//کجپارہ کنگن۔ کلن گنڈ میں غیر قانونی طور پر تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے جس پر عوامی حلقوں نے سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔ کشمیر عظمیٰ کو کجپارہ کنگن کے لوگوں نے بتایا کہ کجپارہ کنگن میں ڈمپنگ پارک کے متصل نالہ سندھ کے نزدیک تعمیرات کا کام جاری ہے۔  لوگوں کاکہنا ہے کہ اگر چہ عدالت کی طرف سے نالہ سندھ کے نزدیک تعمیرات پر مکمل پابندی عائد ہے لیکن اس کے برعکس کجپارہ کے مقام پر رات کے دوران تعمیرات کا کام جاری ہے۔ لوگوں کاکہنا ہے کہ اگر یہاں کے رہائش پذیر لوگ جن کی اراضی نالہ سندھ کے نزدیک ہے،وہ آشیانے تعمیر کرنا چاہتے ہیں توان کو اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ ان سے کہا جاتا ہے کہ نالہ سندھ کے نزدیک تعمیرات پر پابندی عائد ہے۔ لوگوں نے کہا کہ جن کے پاس اثر رسوخ ہے،ان کیلئے کوئی پابندی عائد نہیں ہے۔ اس دوران سرینگر لیہ شاہراہ کے کلن میں تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے اور متعلقہ محکمہ

یوسمرگ حکومت کی نظروں میں اوجھل: نذیر یتو

سرینگر//پیپلزڈیموکریٹک پارٹی رہنماانجینئرنذیراحمدیتونے الزام عائد کیا ہے کہ گورنر انتظامیہ مشہورسیاحتی مقام یوسمرگ کو نظرانداز کر رہی ہے۔ انہوں نے گورنر سے اپیل کی کہ وہ اس معاملے کو محکمہ سیاحت کے ساتھ اُٹھائیں کیوں کہ مقامی مرکبان اورسیاحت سے جڑے لوگ مشکلات سے دوچار ہیں ۔انجینئریتونے کہا کہ وادی کشمیر میں اَن چھیڑاسیاحتی مقام ہونے کے باوجودیوسمرگ حکام کی غفلت کی وجہ سے نظرانداز کیاجارہا ہے۔ سرینگرشہر سے زیادہ دور نہ ہونے کے باوجود محکمہ سیاحت اِس سیاحتی مقام کو پرکشش مقام کے طور پیش کرنے میں ناکام ہے۔انہوں نے کہا کہ’ میں نے علاقہ کادورہ کرکے دیکھا کہ وہاں کے مرکبان اور سیاحتی شعبے سے وابستہ دیگر مقامی لوگ مشکلات کاسامنا کررہے ہیں ۔جموں کشمیر ٹورازم ڈیولپمنٹ کارپوریشن کی ہٹیں خالی ہیں اوریہ سنگین معاملہ ہے،میں گورنر ستیہ پال ملک اور اُن کے مشیرخورشیداحمد گنائی سے اپیل کرتا ہوں ک

ہدی پورہ رفیع آباد کی وسیع آبادی پانی سے محروم

بارہمولہ//رفیع آباد کے ہدی پورہ اور پرے پورہ دو گائوں،جو20 ہزرا سے زیادہ نفوس پرمشتمل ہیں ،دور جدید میں پینے کے صاف پانی کیلئے ترس رہے ہیں ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ آج تک انہیںپینے کا صاف پانی میسر نہیں ہورہا ہے جس کے نتیجے میں لوگ بغیر فلٹریشن پانی پینے سے تنگ آچکے ہیں ۔ ہدی پورہ اور پرے پورہ کے لوگوں نے محکمہ پی ایچ ای پر پر الزام عائد کر تے ہوئے بتا یا کہ محکمہ کی عدم توجہی سے پانی کی سپلائی بُری طرح سے متاثر ہے اور لوگ ندی نالوں کاگندہ پانی پینے پر مجبور ہیں جس سے مہلک بیماریاں پھوٹ پڑنے کا خطر ہ لاحق ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پانی کی قلت نے لوگوں کی زندگی اجیرن بنا کے رکھ دی ہے ۔ایک مقامی شہری عبدالرزاق نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ہے کہ علاقے کو جو پانی سپلائی ہورہا ہے، نالہ حمل پر  ایک اریگیشن پمپ  ہے اور دہائیوں پہلے اُسی کے ساتھ جوڑا گیا ہے جس سے کافی گندہ پانی بستی تک پہنچا ہے ج

غیر یقینی صورتحال کیلئے بھارت ذمہ دار: گیلانی

سرینگر//حریت (گ)چیئرمین سید علی گیلانی نے اشفاق احمد صوفی، عادل بشیر وانی اور جاوید احمد بٹ کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کی ضد اور ہٹ دھرمی کی وجہ سے جموں کشمیر میں انسانی جانوں کا زیاں ہورہاہے ۔ انہوںنے کہاکہ جموں کشمیر میں جو بھی خون خرابہ ہورہا ہے اس کی تمام تر ذمہ داری بھارت کے حکمرانوں پر عائد ہوتی ہے جو مسئلہ کشمیر کو اس کے جمہوری اور تاریخی پسِ منظر کی روشنی میں حل کرنے کے بجائے فوجی طاقت کے ذریعے کچلنا چاہتے ہیں۔ گیلانی نے کہا کہ جموں کشمیر کی غیر یقینی سیاسی صورتحال اور عدمِ استحکام کی وجہ سے قیمتی انسانی زندگیاں بھینٹ چڑھ رہی ہیں اور اس کی تمام تر ذمہ داری بھارتی حکمرانوں پر عائد ہوجاتی ہے، جو کشمیری عوام کی خواہشات اور امنگوں کا احترام کرنے کے بجائے اپنی ضد اور ہٹ دھرمی پر اڑے ہوئے ہیں اور اس خطے پر طاقت کے زور پر اپنا قبضہ جاری رکھنا چاہتے ہے۔

ہائراسکنڈری سکول لری ڈورہ بارہمولہ

بارہمولہ //زون فتح گڈھ بارہمولہ کے لری ڈورہ نارواو علاقے میں گورنمنٹ ہائراسکنڈری اسکول میں پچھلے تین سال سے پرنسپل کی کرسی خالی  ہے جس کی وجہ سے طلاب اور اُساتذ ہ کوسخت مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔طالب علموں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ پرنسپل کو تین سال قبل تبدیل کیا گیا تاہم آج تک نئے پرنسپل کو تعینات نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے ہمیں معمولی کاغذات کو دستخط کرانے کیلئے کئی کلو میٹر دور ہائر اسکنڈری اسکول فتح گڈ ھ کے پرنسپل کے پاس جانا پڑ تا ہے جس کی وجہ سے طالب علموں کو کافی مشکلات کا سامنا کر نا پڑ تا ہے ۔ جبکہ یہی حال وہاں موجود اُساتذہ اور دیگر عملے کا بھی ہے ۔ایک مقامی اُستادنے بتایا کہ اسکول دس کلو میٹر دور فتح گڈھ میں موجود ہائر اسکنڈری اسکول کے پرنسپل کے زیر نگراں ہے جوکہ اُسا تذہ اور طلاب کیلئے باعث عذاب ہے ۔طلاب، اُساتذہ اور دیگر عملے نے سرکار سے مطالبہ کیا ہے کہ اسکول

رامپور راجپور میں چرواہوں پر حملہ | 20بھیڑ ہلاک کیں،درجنوں زخمی

سوپور//سوپور کے جنگلاتی علاقے رام پور راجپور کے بالائی علاقوں میں نامعلوم افراد کی طرف سے مبینہ طور پر چرواہوں پر حملے کے دوران20بھیڑ ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہونے کے علاوہ30کے قریب لاپتہ ہوئے ہیں۔چرواہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کے ایک گروہ نے ان پر حملہ کرکے انہیں درختوں سے باندھ لیا،جس کے نتیجے میں انہیں قریب5لاکھ روپے کا نقصان ہوا۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعے کی نسبت سے انہوں نے پولیس تھانہ وار پورہ سوپور میں شکایت درج کی،کہ نامعلوم افراد نے ان پر کلہاڑیوں سے حملہ کیا،جس دوران بھیڑوں کو ہلاک کیا گیا اور کئی ایک لاپتہ بھی ہوئے۔اس دوران پولیس ادسر نے کہا کہ اس سلسلے میں ایک کیس درج کر کے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں کی ایک ٹیم نے جائے واقع کا دورہ کیا اور بھیڑوں کو ہوئے زخم کی نوعیت کی جانچ کیلئے نمونے بھی حاصل کئے۔انہوں نے مزید کہا’’ہم اس بات کی

انگرالہ مہورمیں تیندوے کے حملوں کاسلسلہ جاری

مہور//مہورکے انگرالہ گائوں میں جنگلی جانوروں کے حملے کی وجہ سے مقامی لوگوں میں خوف وہراس پایاجارہاہے۔ذرائع کے مطابق گزشتہ دوماہ کے دوران انگرالہ میں جنگلی تیندوے نے حملہ کرکے 15سے زائد بھیڑبکریوں کوہلاک کردیاہے ۔جنگلی تیندوے نے گزشتہ روز پھرسے انگرالہ گاؤں کارخ کرکے گزشتہ رات علی الصبح لگ بھگ4 بجے ایک تیندوے نے محمد ایوب ولد غلام رسول کے گھر میں حملہ کر کے اس کی ایک بکری کو ہلاک کر دیا۔ذرائع کے مطابق انگرالہ میں رات کو 4 بجے کے قریب جب مکان مالک سحری کھانے میں مصروف تھے ،اتنے میں تیندوے نے ان کے گھر کے باہر ان کی ایک بکری کو ہلاک کر دیا ۔ بعدازاں مقامی لوگوں نے وائلڈ لائف بلاک آفیسر مہور محمد مبارک کو اطلاع دی جو موقعہ پر پہنچے اور نقصان کا جائزہ لیا۔مقامی سرپنچ محمد مشتاق نے کشمیر عظمیٰ کو بتایاکہ انگرالہ میں گزشتہ دو ماہ کے دوران 15 سے زائد بھیڑ بکریاں تیندوے کا نوالہ بن چکی ہیں لی

پلوامہ میں کوڑا کرکٹ ٹھکانے لگانے کی جگہ عدم دستیاب

پلوامہ//پلوامہ میں میونسپل کمیٹی کو 250کے قریب گائوں اور بازار سے صفائی کے دوران جمع شدہ کوڑے کو ٹھکانے لگانے کے لئے جگہ کی عدم دستیابی کے باعث ضلع میں صفائی ستھراوئی کا م متاثر ہونے کا خدشہ لاحق ہوا جس کے نتیجے میں ضلع کی عام آبادی کے ساتھ ساتھ میونسپل کمیٹی عملے کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ پلوامہ میں علاقے میں صفائی ستھراو کرنے والے میونسپل کمیٹی کو ضلع میں کسی بھی جگہ کوڑا کوکٹ ٹھکانہ لگانے کے لئے کوئی انتظام نہ ہونے کے نتیجے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس کے نتیجے میں علاقے کوڑے دان میں تبدیل ہونے کا امکان ہے۔ اس حوالے سے میونسپل کمیٹی پلوامہ کے ایگزیکٹو افسر مشتاق احمد وانی نے کشمیرعظمی کو بتایا کہ ضلع کے تمام میونسپل کمیٹیو ںکے لئے  لتہ پورہ میں200کنال کے قریب اراضی تھی جہاں ضلع پلوامہ کی کمیٹی بھی ضلع سے جمع کئے جانے والے کوڑا کرکٹ کو ٹھکانے لگایا جاتا تھا ت

پی سی سی ایف نے شمالی کشمیر کے فارسٹ ڈویثرنوں کا دورہ کر کے تحفظاتی منظر نامے کا جائیزہ لیا

کپواڑہ//پرنسپل چیف کنزرویٹر جنگلات سریش چُگ نے شمالی کشمیر کا دورہ کر کے ایک میٹنگ کے دوران بحالیاتی اور تحفظاتی کاموں کا جائیزہ لیا۔اس دوران انہوں نے گلنزرہ اور گلگام کپواڑہ میں قائم نرسریوں کا معائنہ کیا۔اس دوران انہیں بتایا گیا کہ شمالی کشمیر کی مختلف نرسریوں میں20 لاکھ پودے دستیاب ہیں اور یہ چھوٹے پودے شجرکاری کے لئے مختلف علاقوں کو بھیجے جاتے ہیں۔پی سی سی ایف نے اُن علاقوں کا بھی دورہ کیا جہاں کیمپا سکیم کے تحت جنگلی علاقوں کو بحال کیا جارہا ہے۔انہوں نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ لگائے گئے پودوں کی صحیح دیکھ ریکھ کریں۔بعد میں انہوں نے زانگلی کپواڑہ میں ایک میٹنگ کے دوران محکمہ کے ترقیاتی پروگراموں کا جائیزہ لیا۔پی سی سی ایف نے گلگام نرسری میں ایک چنار کا پودا بھی لگایا۔وسیم فاروق ڈی ایف او لنگیٹ، عابد نذیر ڈی ایف او کمراج، ڈی پی سی ڈی ایف او کہمل، عبدالرشید ڈی ایف او پہرو، محمد مقبو

یونانی میڈیکل کالج واکورہ گاندربل | عوام کے نام وقف کرنے کا مطالبہ

گاندربل//واکورہ گاندربل میں 78کنال اراضی پر تعمیرکیاگیایونانی میڈیکل کالج اور60بستروں والا اسپتال مکمل ہونے کے باوجود ابھی تک عوام کے نام وقف نہیں کیا گیا۔ضلع گاندربل میں سال 2008 میں سابق وزیر اعلی غلام نبی آزاد کی قیادت والی مخلوط پی ڈی پی کانگریس حکومت کے دوران یونانی میڈیکل کالج اور 60بستر والے ہسپتال کی سنگ بنیاد رکھی گئی۔دوبرس قبل کروڑوں روپے کی لاگت سے چار شاندار بڑی عمارات کی تعمیر مکمل ہوئی ،لیکن نامعلوم وجوہات کی بنا پر ابھی تک یہاں یونانی اسپتال یامیڈیکل کالج کوشروع نہیں کیاگیا۔اگرچہ سال2018میں .ستم ظریفی یہ ہے کہ جب جب ریاست میں انتخابات منعقد کئے گئے چاہیے وہ بلدیاتی ہو یا کہ پارلیمانی ،اس ہسپتال میں سیکورٹی فورسز کی کئی کمپنیوں کو رکھا گیا جنہوں نے ہسپتال کو کافی نقصان پہنچایا۔نواب باغ واکورہ سے مقامی شہری عبدالرحمان نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ پچھلے دس سال سے یونانی میڈیک

کیرن میں بنیادی سہولیات کی عدم دستیابی سے لوگوں کو مشکلات

کپوارہ// کپوارہ کا کیرن علاقہ گزشتہ70برس سے بنیادی سہولیات سے محروم ہیںدور جدید میں جہا ں سڑکو ں کو رگ حیات کی حیثیت حاصل ہے وہیں بجلی ،پانی ،تعلیم اور طبی سہولیات کے بغیر کسی بھی علاقہ کو ترقی یافتہ علاقہ نہیں کہاجاسکتا ہے ۔کپوارہ ضلع کا کیرن ایسا ہی ایک دور درازعلاقہ جو حد متارکہ پر 4پنچایتی حلقوں اور 15ہزار کے قریب آ بادی پرمشتمل علاقہ ہے ۔کیرن پاترو ں ،کنڈیا ں ،منڈیا ں ،کلس ،ناگا ،بنی ،ترنگڑیا ں ،منڈو ں کیرن بالا اور کیرن پائین دیہات پر مشتمل ہے اور اس کثیر آ بادی کے لئے ایک پرائمری ہیلتھ سینٹر اور ایک ہائر سیکنڈری سکول ہے جبکہ بجلی سپلائی صرف جنریٹر کے ذریعے چند گھنٹوں کے لئے فراہم کی جاتی ہے ۔کیرن کے کسی بھی گائو ں کے لئے کوئی پکی سڑک تعمیر نہیں کی گئی اور فرکیاں ٹاپ سے کیرن کو جو ڑ نے کے لئے واحد سڑک کی حالت بھی اس قدر ناگفتہ بہہ ہے کہ معمولی بارشو ں کے نتیجے میں یہ سڑک مٹی کے

پیر گلی سے ٹرک ڈرائیور کی نعش برآمد

سرنکوٹ //مغل شاہراہ پر پیر گلی کے نزدیک سانبہ ضلع سے تعلق رکھنے والے ایک ٹرک ڈرائیور کی نعش برآمد ہوئی ہے ۔پولیس کے ایک افسر نے بتایاکہ ٹرک زیر نمبر کا 33سالہ ڈرائیور بلویندر کمار ولد کرتار چند ساکن ہیرا نگر شوپیاں سے پونچھ کی جانب آرہاتھا اورراستے میں شام ہونے پر اس نے گاڑی پیر گلی کے نزدیک روک لی اور وہیں قیام کرنے کا فیصلہ لیا ۔پولیس افسر نے بتایاکہ مذکورہ ڈرائیور کو اتوار کی صبح گاڑی کے اندر مردہ پایاگیا اورگاڑی کے کنڈیکٹر کی طرف سے اس سلسلے میں اطلاع موصول ہونے پر پولیس کی ایک ٹیم سرنکوٹ تھانے سے پیر گلی پہنچی جس نے نعش کو اپنی تحویل میں لیکر سب ضلع ہسپتال سرنکوٹ منتقل کیا ۔ایس ایچ او سرنکوٹ نے بتایاکہ پیر گلی کے قریب دو افراد ٹرک میں سوگئے تھے تاہم ان میں سے صبح ایک ہی اٹھا اور دوسرے کی موت ہوگئی ۔ انہوں نے بتایاکہ ابھی تک موت کی اصل وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے لیکن پولیس اس سلسلے

پہاڑی بورڈ مالی تنگدستی کاشکار | پوسٹ میٹرک سکالر شپ کیلئے درکار 13کروڑ میں سے 2کروڑ29لاکھ ہی دستیاب

سرینگر //ریاستی سرکار کی طرف سے پہاڑی مشاورتی بورڈ کے طلبا کو پوسٹ میٹرک سکالر شپ کیلئے درکار 13کروڑ کی رقم میں سے محض 2کروڑ 29لاکھ فراہم کئے گئے ہیں اور بورڈ حکام نے بھی اس کا حل طلبا کو کئی گناہ کم سکالر شپ دے کر نکالا ہے ۔بورڈ کی طرف سے7630طلبا میں فی کس یکساں3000روپے اسکالرشپ تقسیم کیاگیاہے۔ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اس سے قبل ایسے طلاب کو فیس کے حساب سے سکالر شپ 10ہزار سے 30ہزار کے درمیان فراہم کیاجاتاتھالیکن اس سال طلاب کو سکالر شپ کے نام پر اتنے ہی پیسے دیئے گئے جتنا ان کا فارم داخل کرنے کے دوران خرچہ ہوا ۔معلوم رہے کہ بورڈ نے سال2017-18کے دوران 18کروڑ روپے اسکالرشپ تقسیم کیاتھا۔ وہیں سال 2016-17کے دوران 1لاکھ43ہزار پہاڑی طلبا کے حق میں16کروڑ20لاکھ روپے منظور کئے گئے لیکن اس سال بورڈ کے پاس پیسہ ہی دستیاب نہیں اور صرف 8ہزار طلاب کو فی کس 3000روپے دیا گیاہے ۔پہاڑی زبان سے ت