تازہ ترین

ہر الیکشن پر سبز باغ دکھائے گئے ،بنیادی سہولیات بھی فراہم نہیں

گول//ملک میں ہر پانچ سال کے بعد عام انتخابات کے موقعوںپر سیاسی لیڈران عوام کے ساتھ بڑے بڑے وعدے کر کے اُن سے ووٹ حاصل تو کر لیتے ہیں لیکن بعد میں اُن وعدوں کو سرکار پوراکرنے میں کامیاب نہیں ہوتی اور پھر سے پانچ سال کے بعد آنے والے عام انتخابات کے موقعہ پر لوگوں کے ساتھ وعدے کئے جاتے ہیں ۔باربار کی وعدہ خلافی سے تنگ آکر سب ڈویژن گول کی کئی پنچایتوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے الیکشن بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے ۔ جہاںمہاکنڈ ، ٹھٹھارکہ اور چھچھواہ پنچایتوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بنیادی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے الیکشن بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے وہیں گول تتا پانی روڈ میں بیس سال قبل آئی اراضی مالکان نے بھی معاوضہ نہ ملنے پر الیکشن بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے ۔کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے ان پنچایتوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے کہا کہ یہاں پارلیمانی انتخابات کے دوران ووٹ حاصل کرنے والے ام

کرفیو میں ڈھیل کے دوران بھاری رش

کشتواڑ //کشتواڑ میں کرفیو میں ڈھیل ملتے ہی لوگوںنے اے ٹی ایمز کارخ کیا جہاں بھیڑ جمع ہونے کی وجہ سے طویل قطاریں لگ گئیں ۔ اسی طرح سے پیٹرول پمپوں کے باہر بھی لوگوں کا بھاری رش دیکھاگیا ۔جیسے ہی دن کے بارہ بجے کرفیو میں ڈھیل کا اعلان ہواتو ایک ہفتہ تک گھروں میں محصور رہنے والے لوگوںنے بازاراور اے ٹی ایمز کا رخ کیا اور انہوںنے اس دوران رقومات نکال کر اپنی ضرورت کا سامان خریدا۔ تاہم اے ٹی ایمز کے باہر انہیں بھاری رش کی وجہ سے طویل قطاروں میں کھڑا رہناپڑااور اپنی باری کا انتظار کرناپڑا۔کرفیو میں ڈھیل کے دوران بازار میں بھی کافی رش دیکھاگیا اور کئی دکانداروںکو خریداروں کو سنبھال پانا مشکل ہوگیا۔9اپریل کو آر ایس ایس لیڈر اوراس کے محافظ کی نامعلوم بندوق برداروں کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد کشتواڑ میں کرفیو نافذ کردیاگیاتھا جبکہ انٹرنیٹ خدمات بھی معطل کردی گئی تھیں تاہم حالات کو روبہ معمول دیکھ کرا

انتخابی عمل پر ضلع سطح کا کوئز مقابلہ منعقد

رام بن //سویپ پروگرام کے تحت محکمہ تعلیم کے تعاون سے ضلع انتظامیہ کی طرف سے رام بن میں انتخابی عمل پر ضلع سطح کا کوئز مقابلہ منعقد کیاگیا ۔یہ مقابلہ میترہ کے کانفرنس ہال میں منعقد ہواجس دوران ضلع الیکشن افسر رام بن شوکت اعجاز بٹ مہما ن خصوصی تھے جبکہ سویپ پروگرام کے نوڈل افسراے ایچ فانی نے صدارت کے فرائض انجام دیئے ۔ اس موقعہ پر اے سی ڈی نواز بانڈے ، ڈی پی او سنیل سنگھ و دیگر عملہ بھی موجو دتھا۔اس کوئز مقابلے میں گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول بٹوت نے پہلی پوزیشن حاصل کی جبکہ گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول دندروٹھ اور گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول سینہ بتھی نے بالترتیب دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کی ۔پروگرام سے خطاب میں ضلع الیکشن افسر نے جمہوری طرز حکومت پر روشنی ڈالتے ہوئے طلباء سے اپیل کی کہ وہ سویپ پروگرام کی جانکاری سماج کے ہر فرد تک پہنچائیں اور اپنے والدین و دیگر لوگوںکو رائے دہندگی کے عمل می

کشتواڑ میں بی جے پی و دیگر تنظیموں کا احتجاجی مظاہرہ

کشتواڑ //بھارتیہ جنتاپارٹی او ردیگر تنظیموں بشمول ویشو ہندو پریشد ، سناتن دھرم سبھا و اے بی وی پی نے سرکوٹ کشتواڑ میں پرامن احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی اور آر ایس ایس لیڈر و اس کے محافظ کے قتل میں ملوث افراد کوفوری طور پر گرفتاری اور قصبہ میں سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب کا مطالبہ کیا۔کرفیو میں ڈھیل کا اعلان ہونے کے بعد ان تنظیموں کے کارکنان نے سناتن دھرم سبھا کے بینر تلے احٹجاجی مظاہرہ کیا اور انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی ۔ اس موقعہ پر مظاہرین نے کہاکہ پولیس قصبہ و ملحقہ علاقوںمیں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے میں ناکام ہوئی ہے اور یہاں ہلاکتوں اور بندوقیں چھیننے کے واقعات معمول بن گئے ہیں ۔انہوںنے الزام عائد کیاکہ انتظامیہ کشتواڑ کے لوگوں کو تحفظ دینے کیلئے کوئی اقدام نہیں کررہی اور نہ ہی امن دشمن و سماج دشمن عناصر پر نگاہ رکھی جارہی ہے ۔مظاہرین نے کہاکہ آر

بھدرواہ میں 3روزہ بیساکھی میلہ اختتام پذیر

بھدرواہ //ناگ کلچر کی علامت کہلانے والا بھدرواہ میں تین روزہ بیساکھی میلہ اختتام پذیر ہوگیا ۔میلے کے پہلے روز ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مند قدیم سبر ناگ مندر میں جمع ہوئے جو سطح سمندر سے 12ہزارفٹ کی بلندی پر واقع ہے ۔اس مندر کو بیساکھی کے تہوار کے پیش نظر کھولاگیا۔ہزاروں کی تعداد میں عقیدتمندوں نے بھدرواہ قصبہ سے 30کلو میٹر دورسبر دھر علاقے میں واقع 700سالہ قدم سبر ناگ مندر کی طرف چلنا شروع کیا جس دوران انہیں برف کے بیچ 12کلو میٹر سفر پیدل طے کرناپڑا۔اس دوران بڑی تعداد میں بھیڑ وں کی قربانی لگائی گئی جو قدیم رسم ہے ۔اطلاعات کے مطابق مندر کے درشن کیلئے 15ہزارلوگ جمع ہوئے ہیں جن میں سے 8500خواتین جبکہ 6500مرد عقیدت مند تھے ۔میلے کے دوسرے روزقدیمی ناگنی ماتا مندر میں بھی 9ہزارکے قریب عقیدت مند جمع ہوئے۔ناگنی بھدرواہ سے آٹھ کلو میٹر دور گھنے جنگلات میں واقع ہے جہاں ہر سال ہزاروں کی تعداد

خواص کی پنچایت کیول میں بجلی کا نظام خستہ

کوٹرنکہ //تحصیل خواص کی پنچایت کیول میں بجلی نظام کی خستہ حالی کی وجہ سے صارفین کو شدیدمشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے متعلقہ محکمہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ پنچایت کے موڑہ کنگوٹا میں نصب ٹرانسفار مر کیساتھ ساتھ بجلی کے کھمبے اور ترسیلی لائنیں بوسیدہ ہو چکی ہیں لیکن محکمہ کے ملازمین صرف بجلی کے بل تقسیم کرنے کیلئے مذکورہ پنچایت کا رخ کر تے ہیں ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ بجلی نظام کی خستہ حالی کی وجہ سے کسی بھی وقت کو ئی بڑا حادثہ رونما ہو سکتا ہے ۔ایک مقامی شخص محمدانظرنے بتایا کہ ٹرانسفار مر لائین کے کھمبوں کو لکڑی کی سپورٹ سے کھڑا کیا گیا ہے لیکن مذکورہ لکڑیا ں بھی بوسیدہ ہوچکی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کئی مرتبہ متعلقہ محکمہ کے ملازمین اور آفیسران سے رجوع کیا گیاہے لیکن یقین دہانیوں کے باوجود اس طرف کو ئی توجہ نہیں دی گئی ۔مقامی لوگوں نے محکمہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ 6

مزید خبرں

شاہراہ پابندی پر این سی لیڈر برہم  رام بن //نیشنل کانفرنس لیڈر ایڈووکیٹ ارجن سنگھ راجو نے جموں سرینگر شاہراہ پر پابندی کے فیصلے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ غیر قانونی طرزاپناکر لوگوں کو پریشان کیاجارہاہے ۔ رام بن میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ پہاڑی ضلع رام بن کے لوگوں کی زندگی کو مشکل ڈال دیاگیاہے اور ان کی آمدورفت پر غیر قانونی طور پر پابندی عائد کی گئی ہے ۔انہوںنے الزام عائد کیاکہ انتظامیہ ایک مخصوص جماعت کے ورکروں کو مہم چلانے کی اجازت دے رہے ہیں اور بقیہ جماعتوں پر ایسا کرنے کی اجازت نہیں ۔ارجن راجو نے سوال اٹھایاکہ کیسے حکومت اور انتظامیہ ایک طرف سے پابندی عائد کرکے یہ کہہ سکتی ہے کہ یہ حلقہ پارلیمانی انتخابات کیلئے پوری طرح سے تیار ہے ۔ان کاکہناتھاکہ انتظامیہ ضلع کے لوگوں پر پابندی عائد کرکے انہیں اپنے حق رائے دہی سے دور رکھ رہی ہے ۔