تازہ ترین

’سبھی کیلئے مکان‘ کا خواب پورا کریں گے :مودی

نئی دہلی//وزیراعظم نریندرمودی نے منگل کو کہا کہ سبھی خاندانوں کے لئے رہائش گاہ مہیا کرانے کے خواب کو پورا کرنے کے لئے ہر ممکن قدم اٹھائے جائیں گے ۔ مسٹر مودی نے 25جون2015کو شہری ہندوستان کی تصویر بدلنے کے لئے امروت پروجیکٹ،اسمارٹ سٹی مشن اور سبھی کے لئے مکان(شہری)پروگرام کی شروعات کی تھی۔ آج اس کی چوتھی سالگرہ پر انہوں نے ٹویٹ کیا کہ ان پروجیکٹوں میں بڑی سرمایہ کاری ہوئی ہے ۔کاموں کی رفتار،تکنیک کا استعمال اور لوگوں کی حصہ داری دیکھنے کو ملی ہے ۔انہوں نے کہا،‘‘شہری ڈھانچے میں اور بہتری لانے کے لئے ہم پرعزم ہیں۔سبھی کے لئے مکان کے خواب کو پورا کرنے کے لئے ہر ممکن قدم اٹھائے جائیں گے ۔اس منصوبے کے پورا ہونے سے سیکڑوں لوگوں کے خواب پورے ہوں گے ۔’’ انہوں نے کہا،‘‘ہم نے ملک کے دیہی ڈھانچے کو بدلنے کے مقصد سے چار سال پہلے امروت،اسمارٹ سٹی اور پردھان منتری

وزیر اعظم و وزیر داخلہ کی جانب سے ایمرجنسی کی مخالفت کرنے والوں کو خراج تحسین

نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امت شاہ نے منگل کو ایمرجنسی کی 44 ویں برسی کے موقع اس کی مخالفت کرنے والے تمام رہنماؤں اور شہریوں کو سیلوٹ کیا۔ مسٹر مودی نے ٹویٹ کیا‘‘ہندوستان ان تمام عظیم لوگوں کو سلام کرتا ہے جنہوں نے ایمرجنسی کی پرزور مخالفت کی۔ہندوستان کی جمہوریت نے ایک آمرانہ ذہنیت پر اہم فتح حاصل کی’’۔مرکزی وزیر داخلہ اور بی جے پی صدر امت شاہ نے ایمرجنسی کی مخالفت کرنے والوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ٹویٹ کیا‘‘1975 میں آج ہی کے دن صرف اپنے سیاسی مفادات کے لئے ملک کی جمہوریت کو قتل کیا ۔ ملک کے عوام سے ان کے بنیادی حقوق چھین لئے گئے ، اخبارات پر پابندی لگا دی گئی۔ لاکھوں محب وطنوں نے جمہوریت کے قیام کے لئے کئی طرح کے عذاب برداشت کئے ، میں ان تمام مجاہدین کو سلام کرتا ہوں’’۔ بی جے پی کے ایگزی

چمکی بخار سے بچوں کی موت کے خلاف مظاہرہ

مظفر پور :بہار کے مظفر پور اور ہری ونش پور میں چمکی بخار سے بچوں کی موت کے خلاف مظاہرہ کرنے والے 39 لوگوں کے خلاف کیس درج کیا گیا ہے۔ چمکی بخار سے مظفر پور میں 150 سے زائد بچوں کی موت ہو چکی ہے اور اسی سے ناراض لوگوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا تھا۔  

خطرے میں آئین ، ملک کو تقسیم کرنے کی کوشش: اپوزیشن

نئی دہلی// اپوزیشن نے مودی حکومت پر پرتشدد قوم پرستی پھیلا کر ملک کو تقسیم کرنے کی کوشش کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ آج آئین خطرے میں ہے ۔ صدر کے خطاب پر شکریہ کی تحریک پر مباحثے کے دوران لوک سبھا میں منگل کو ترنمول کانگریس کی مہوآ موئترا نے کہا کہ آج آئین خطرے میں ہے ۔ ملک کو تقسیم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ انہوں مرکزی حکومت پر پُر تشدد قوم پرستی اور ہجوم پر مشتمل نیشنلزم پھیلانے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ ملک کو ایک رکھنے کی بجائے تقسیم کی کوشش کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ 50 سال سے ملک میں رہ رہے ہیں ان سے ہندوستانی ہونے کی سرٹیفکیٹ کے طور پر ‘کاغذ کا ایک ٹکڑا’ مانگا جا رہا ہے ۔ سنہ 2014 کے مقابلے میں 2019 میں نفرت سے متاثر ہوکر جرائم کی تعداد میں 10 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ عام انتخابات جھوٹ اور ‘فیک نیوز’ کے دم پر لڑا

کیا وندے ماترم نہ کہنے والوں کو ہندوستان میں رہنے کا حق ہونا چاہیے: پرتاپ سارنگی کا سوال

 نئی دہلی//ایم ایس ایم ای اور مویشی پروری کے ریاستی وزیر پرتاپ چندر سارنگی نے سوموار کو پارلیامنٹ میں اپنی پہلی تقریر کرتے ہوئے سوال پوچھا کہ کیا وندے ماترم نہ کہنے والوں کو ملک میں رہنے کا حق ہونا چاہیے۔ قابل ذکر ہیکہ سارنگی اڑیسہ کے بالاسور سے پہلی بار رکن پارلیامان بنے ہیں۔اسکرال ڈاٹ ان کے مطابق، سارنگی نے سوال اٹھایا، ‘ کیا وندے ماترم نہیں کہنے والے لوگوں کو ملک میں رہنے کا حق ہونا چاہیے؟ ‘ انہوں نے کہا، ‘ ملک ٹکڑے ٹکڑے گینگ کو کبھی قبول نہیں کریگا۔ ملک وزیر اعظم کے ساتھ ہے۔ ‘اس کے ساتھ ہی انہوں نے پوچھا، ‘ کیا افضل گرو کی تعریف کرنے والوں کو ملک میں رہنے کا حق ہونا چاہیے۔ اس دوران حکومت کے لوگوں نے ان سوالوں کے جواب میں بنچ تھپتھپائی اور کہا کہ نہیں، کسی قیمت پر نہیں۔ ‘غور طلب ہے کہ، سارنگی کا یہ بیان اس واقعہ کے کچھ دن بعد آیا ہے جس میں س